12:53 pm
مسجداقصیٰ کی تاریخی گواہی

مسجداقصیٰ کی تاریخی گواہی

12:53 pm

(گزشتہ سے پیوستہ)
لین پول نے لکھا ہے:’’جنگ مقدس خاتمہ کوپہنچی،پانچ برس کی مسلسل لڑائیاں ختم ہوئیں، جولائی1187میں مطیق پرمسلمانوں کی فتح سے قبل دریائے اردن کے مغرب میں مسلمانوں کے پاس ایک انچ زمین نہ تھی۔ستمبر1192میں جب رملہ پرصلح ہوئی توصور سے لے کر یافہ کے ساحل تک بجز ایک پتلی سی پٹی کے ساراملک مسلمانوں کے قبضہ میں تھا‘‘۔
صلیبیوں نے اپنی فتوحات کے موقعہ پر مسلمانوں کے ساتھ ظالمانہ سلوک کیے تھے۔بیت المقدس جب نصرانیوں نے لیاہے توصرف مسجد صخرا میں70ہزار مسلمان قتل کیے تھے مگر جب بیت المقدس کوصلاح الدین نے فتح کیاتوعیسائیوں کومعمولی فدیہ لے کر عزت واحترام سے نکلنے کاحکم دیااوران کے لئے  زیارت کی عام اجازت مرحمت کی۔غرض یہ کہ سلطان نے اپنی فوج کوآرام کرنے کے لئے  ان کے وطن واپس کر دیا۔ چند ماہ بیت المقدس میں قیام کیا۔شہرپناہ کی  مرمت کرائی۔خندق کھدوائی،شفاخانہ تعمیر کرایا۔ انتظام شہرامیرعزیزالدین جردیک کے سپرد کرکے شوال 588ھ میں حج کے ارادہ سے دمشق چلا گیا۔سلطان کے اہل وعیال دمشق میں موجودتھے،وہیں اس کے بھائی ملک عادل کرک سے آگئے تھے۔ سارا خاندان نہایت امن وآرام کے ساتھ رہنے سہنے لگا۔سلطان کودمشق اس قدر پسند تھاکہ مصرجانے کاخیال بھی نہ کیا ۔
کئی سال سے سلطان کی صحت بگڑ گئی تھی، جہاد کی مساعی میں اس نے کچھ خیال نہ کیا۔ رمضان کے روزے قضا ہوگئے تھے ان کو پورا کرنے لگا جو مزاج کے موافق نہ پڑے۔ طبیب نے روکا کہ صحت کے لیے اس وقت ملتوی کردیجیے۔ سلطان نے کہا: معلوم نہیں آئندہ کیا پیش آئے؟ اور کل روزے پورے کیے۔ جس سے صحت جواب دے گئی۔ وسط صفر 589ھ میں حالت بگڑنے لگی، مرض بڑھ گیا، غشی طاری ہوگئی۔ شیخ ابو جعفر نے قرآن مجید کی تلاوت کی۔ 27تاریخ دو شنبہ کے دن فجر کے وقت مجاہد اعظم نے  داعی اجل کولبیک کہہ دیا۔
 1918میں سب کچھ تبدیل ہوگیاجب ہ برطانوی حکومت نے یروشلم واسلامی حکومت سے چھین کراپنے قبضے میں لے لیااورمکمل فلسطین کواپنے زیرقبضہ لیناشروع کردیا۔برطانوی قبضے کے بعدیہودی دنیابھرسے یروشلم میں آکررہائش پذیرہوناشروع ہوگئے کیونکہ دنیابھرمیں انہیں ظلم واذیت کاسامنا تھا۔چند سالوں بعدہزاروں کی تعداد میں یہودی لوگ فلسطین میں داخل ہوئے اورفلسطین میں انہوں نے اپنے لیے جگہیں خریدنا شروع کردیں،جبکہ فلسطینی مسلمان جوکہ اس سرزمین سے پراناتعلق رکھتے تھے،اورسینکڑوں سالوں سے اس جگہ بسے ہوئے تھے اس لیے انہوں نے  اپنی سرزمین کوچھوڑنے سے انکار کر دیا۔ چنانچہ اس معاملے میں لڑائیاں شروع ہوگئیں، فلسطینی اپنی زمین چھوڑنے پرتیارنہیں تھے جبکہ یہودی ان کی زمین کوزورزبردستی ہتھیاناچاہتے تھے،چونکہ یہودیوں کی فوج مسلمانوں سے بہت زیادہ طاقت ورتھی اس لیے1948ء میں فلسطین کی زیادہ ترزمین پریہودیوں نے قبضہ کرکے آزاد اسرائیل کااعلان کردیا۔1967ء میں امریکہ  ومغرب کی مددسے بھرپورجنگ کے ذریعے یہودیوں نے مسجد اقصیٰ پراورمکمل یروشلم کواپنے قبضہ میں لے لیا۔ یہودی طاقت کے زورپریروشلم اورمسجداقصیٰ پر اپناحق جتاتے ہیں اورمسجد اقصیٰ ومنہدم کرکے وہاں  اپناعبادت خانہ ہیکل سلیمانی(سولومن ٹیمپل) تعمیر کرناچاہتے ہیں۔ان کاکہناہے کہ ہمارے نبی داؤدعلیہ السلام اورسلیمان علیہ السلام نے یہاں یہودی عبادت خانہ تعمیرکیاتھالہٰذاآج بھی ہم ہی اس کے زیادہ حق دارہیں کہ اس جگہ اپناعبادت خانہ تعمیرکریں۔اس وقت وہ اپنی عبادات دیوار براق کے پاس کھڑے ہو کر کر تے ہیں۔
 لیکن ان کی یہ بات تاریخی لحاظ سے بھی صریحاً غلط ہے۔فلسطین پرعربوں کاحق ثابت کرنے کے لئے  درج ذیل نکات تاریخی حیثیت رکھتے  ہیں۔ یہ نکات اس تقریرکاحصہ ہیں جوعالم اسلام کے نیک دل حکمران شاہ فیصل مرحوم نے ایک بین الاقوامی سیمینارمیں کی تھی:یہودی فلسطین ے اصل باشندے نہیں ہیں۔-یہودی یروشلم کے باہرسے آکر یروشلم پرقابض ہوئے تھے جو  فلسطین پرطاقت سے مسلط ہونے کے بعدکچھ عرصہ فلسطین میں رہے اور اس کے بعدنکال دیے گئے۔ فلسطین میں ان کی ناجائزموجودگی کاعرصہ نہایت مختصررہاہے۔ فلسطین میں حضرت سلیمان علیہ السلام کے زمانے سے لے کر  اب تک بھی خالص یہودی حکومت قائم نہیں ہوئی۔حضرت سلیمان علیہ السلام نے کوئی یہودی عبادت خانہ یروشلم میں تعمیر نہیں فرمایاتھابلکہ آپ اورآپ کے والدحضرت داؤدعلیہ السلام نے مل کراسی مسجدکی تعمیرکی تھی جوحضرت آدم علیہ السلام کے دورمیں وہاں تعمیرہوچکی تھی،جسے بعدازاں ابراہیم خلیل اللہ نے بھی واپس اس کی بنیادوں پراستوار کیا تھا۔یہ کوئی نئی تعمیرنہیں تھی بلکہ پرانی تعمیرکودوبارہ کھڑا کیا تھا۔فلسطین میں یہودیوں کی کبھی اکثریت نہیں رہی۔ جب فلسطین سے یہودیوں کونکال دیا گیا تو یہاں صرف اس کے اصل باشندے ہی رہ گئے جوشروع سے لے کر آج تک وہیں رہ رہے ہیں۔ تاریخ گواہ ہے کہ 1600سال کی طویل مدت ے دوران فلسطین میں کبھی کوئی یہودی آباد نہیں رہا۔عربوں کی حکومت تقریباًساتویں صدی سے فلسطین میں رہی۔آج وہاں سینکڑوں تاریخی عمارات موجود ہیں جوعرب طرزتعمیرکانمونہ ہیں لیکن ایک بھی عمارت یہودی طرزتعمیرکی نہیں ہے۔اس لیے تاریخی حقائق سے بھی یہ بات واضح ہوجاتی ہے کہ یروشلم یعنی فلسطین پرمسلمانوں ہی کاحق ہے،یہودی لوگ اس پراپنا حق جو جتلاتے ہیں  وہ سراسردھوکہ اورفریب ہے یوںہ یروشلم میں  حضرت آدم  علیہ اسلام نے جو مسجد صرف اللہ کی  عبادت کے لئے  تعمیر کی تھی،وہ مسجد آج بھی اسی جگہ موجود ہے اوروہاں صرف اللہ ہی کی عبادت ہوتی ہے۔یہ الگ بات ہے کہ مختلف زمانوں میں یہ مسجد گرتی رہی اور اس کی تعمیرنو ہوتی  رہی۔سب سے  بڑی گواہی تومیرے رب نے قرآن میں اس کومسجداقصی کہہ کرمہرلگادی ہے،اس کو یہودیوںکامعبدیا عیسائیوں کاچرچ نہیں کہا۔

 

تازہ ترین خبریں

ان دو خاندانوں کو این آر او دینا ملک سے سب سے بڑی غداری ہے، وزیراعظم پھٹ پڑے

ان دو خاندانوں کو این آر او دینا ملک سے سب سے بڑی غداری ہے، وزیراعظم پھٹ پڑے

جوتوں سے پہچانا گیا   اللہ تعالیٰ کا نظام بھی کیسا عجیب ہے‘  وہ جب کسی ظالم سے نفرت کرتا ہے  تو اس کی قبر کی بھی بخشش نہیں ہوتی...

جوتوں سے پہچانا گیا اللہ تعالیٰ کا نظام بھی کیسا عجیب ہے‘ وہ جب کسی ظالم سے نفرت کرتا ہے تو اس کی قبر کی بھی بخشش نہیں ہوتی...

ناریل کے گرم پانی کے معجزات، ماہرین نے حیران کن تحقیق بیان کر دی

ناریل کے گرم پانی کے معجزات، ماہرین نے حیران کن تحقیق بیان کر دی

محمد رضوان کو محنت کا صِلہ مل گیا، آئی سی سی نے بڑی خوشخبری سنا دی

محمد رضوان کو محنت کا صِلہ مل گیا، آئی سی سی نے بڑی خوشخبری سنا دی

ایک ہفتے میں ڈالر ، سعودی ریال اور برطانوی پائونڈ کی قدر میں کتنی کمی ہوئی؟ مکمل تفصیلات آگئیں

ایک ہفتے میں ڈالر ، سعودی ریال اور برطانوی پائونڈ کی قدر میں کتنی کمی ہوئی؟ مکمل تفصیلات آگئیں

بارشیں مزید کب تک جاری رہیں گی؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

بارشیں مزید کب تک جاری رہیں گی؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

نیوزی لینڈکی وزیراعظم جیسنڈرا آرڈرن کی شادی سے پہلے ہی خوشیاں خاک میں مل گئیں

نیوزی لینڈکی وزیراعظم جیسنڈرا آرڈرن کی شادی سے پہلے ہی خوشیاں خاک میں مل گئیں

عمران خان کی چھٹی ۔۔اگلا وزیراعظم کون ہو گا؟سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بڑا دعویٰ کر دیا

عمران خان کی چھٹی ۔۔اگلا وزیراعظم کون ہو گا؟سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بڑا دعویٰ کر دیا

بارشوں اور برفباری نے تباہی مچادی، اب تک کتنی ہلاکتیں ہو گئیں؟ افسوسناک تفصیلات جاری

بارشوں اور برفباری نے تباہی مچادی، اب تک کتنی ہلاکتیں ہو گئیں؟ افسوسناک تفصیلات جاری

سستےگھروں کی الاٹمنٹ کیلئے قرعہ اندازی شروع، ساڑھے 3 مرلہ گھر کی ماہانہ قسط کیا ہوگی؟ خوشخبری سنا دی گئی

سستےگھروں کی الاٹمنٹ کیلئے قرعہ اندازی شروع، ساڑھے 3 مرلہ گھر کی ماہانہ قسط کیا ہوگی؟ خوشخبری سنا دی گئی

خبردار!!احتیاط کیجئے  موٹروے پر سفر کرنے سے پہلے یہ خبر پڑھ لیں ، موٹروےپولیس نے ہدایات جاری کردیں

خبردار!!احتیاط کیجئے موٹروے پر سفر کرنے سے پہلے یہ خبر پڑھ لیں ، موٹروےپولیس نے ہدایات جاری کردیں

کورونا کیسز میں اضافہ ، کئی علاقوں میں لاک ڈائون نافذ کرنے کا فیصلہ

کورونا کیسز میں اضافہ ، کئی علاقوں میں لاک ڈائون نافذ کرنے کا فیصلہ

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کس تاریخی موقع پر پاکستان آئیں گے؟خوشخبری سنا دی گئی

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کس تاریخی موقع پر پاکستان آئیں گے؟خوشخبری سنا دی گئی

کورونا کیسز میں اضافہ ، صوبائی حکومت جس نے ان ڈور شادیوں اور پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی لگا دی

کورونا کیسز میں اضافہ ، صوبائی حکومت جس نے ان ڈور شادیوں اور پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی لگا دی