12:59 pm
کورکمانڈرز کانفرنس، افغانستان کو انتباہ

کورکمانڈرز کانفرنس، افغانستان کو انتباہ

12:59 pm

٭کور کمانڈرز کانفرنس، افغانستان کو انتباہO ن لیگ اور پیپلزپارٹی کھل کر آمنے سامنے! ’’پیپلزپارٹی سے اتحاد نہیں ہو سکتا‘‘ فضل الرحمن، شاہد خاقان عباسی، مریم نوازO پنجاب، سندھ پانی کا تنازع مزید بڑھ گیا، ارسا میں جھگڑاO ریکوڈک کیس، پی آئی اے کے اثاثے بحالO پشاور ہائی کورٹ افغانستان کو مرغیاں اور گوشت کی برآمد بند کرنے کا حکم O سپریم کورٹ، شہباز شریف کی درخواست پر ہائی کورٹ کی جلدی!! ریکارڈ طلب، O ترین گروپ! پھر استعفے دینے کی دھمکیO ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگ زیب کی ہدائت، شہباز شریف کے عشائیہ پر کوئی خبر نہ دی جائےO 1500 ٹن زہریلے مواد والا جہاز گڈانی پہنچ گیاO بھارت سمندری طوفان، شدید تباہیO چودھری نثار علی خاں کا حلف بحال۔
٭راولپنڈی میں آرمی چیف آف سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی زیرصدارت افغانستان کی طرف سے پاکستان پر فائرنگ کی مذمت اور اس کی تشویش ظاہر کی گئی۔ گزشتہ روز وزیرستان علاقے میں افغانستان کی طرف سے پاکستان کے علاقوں پر فائرنگ کا سخت نوٹس لیا گیا اور افغانستان کی حکومت کو پیغام بھیجا گیا کہ پاکستان پر حملے بند کرائے جائیں۔ اجلاس میں تشویش ظاہر کی گئی کہ افغانستان میں دہشت گرد پھر ابھر رہے ہیں۔ افغانستان کا یہ طرز عمل نیا نہیں، 71 برسوں سے یہی کچھ ہو رہا ہے۔1947ء میں پاکستان قائم ہوا تو افغانستان دنیا بھر میں واحد ملک تھا جس نے پاکستان کے قیام کو تسلیم نہیں کیا اور اقوام متحدہ میں اس کے خلاف ووٹ دیا۔ پھر انگریزوں کے دور کی دو طرفہ معاہدے والی افغانستان اور متحدہ ہندوستان کے درمیان طے شدہ ڈیورنڈ لائن کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا۔ یہ تنازعہ اب تک چل رہا ہے۔ ضیاء الحق کے دور میں پاکستان کی حمائت سے قائم ہونے والی طالبان کی حکومت نے بھی اس سرحد کو قبول نہ کیا۔ افغانستان میں امریکہ اور بھارت کے زیر سایہ ان کی بھاری مالی و فوجی امدادکے ساتھ قائم ہونے والی نام نہاد جمہوری حکومت طالبان کے ہاتھوں سمٹ کر صرف کابل، بلکہ صرف صدارتی محل تک محدود ہو چکی ہے۔ صدارتی محل سے باہر نام نہاد صدر اشرف غنی کو کوئی اہمیت نہیں دی جاتی۔ اشرف غنی ہر دو چار ماہ کے بعد اسلام آباد آتا ہے، اعلیٰ شاندار ضیافتیں کھاتا ہے اور واپس جا کر پاکستان کے خلاف زہر اگلنے لگتاہے۔ چند روز قبل اس نے سخت بیان جاری کیا کہ پاکستان اس کی حکومت کو ختم کرنے کے لئے طالبان سے حملے کرا رہا ہے۔ اس بیان کے بعد مختلف واقعات شروع ہو گئے۔ چار روز قبل افغانستان کی طرف سے پاکستان کے سرحدی علاقے پر فائرنگ سے ایک اور پاکستانی فوجی شہید اور کچھ فوجی زخمی ہو گئے۔ چمن شہرمیں بم دھماکہ ہوا، پانچ شہری شہید، متعدد زخمی ہوئے اور دو روز قبل لندن میں افغانستان کے سفارت خانے سے آنے والے تقریباً 200 افغان باشندوں کا پاکستان کے ہائی کمیشن کے باہر مظاہرہ، پاکستان کے خلاف نعرے لگائے، توڑ پھوڑ کی اور پانی کی بوتلیں پھینکیں! پولیس آئی تو مظاہرین بھاگ کر افغان سفارت خانے میں چھپ گئے۔ ایک خبر کے مطابق ان ’مظاہرین‘ میں بہت سے افغان سفارت کار شامل تھے۔ اس واقعہ کو بھارت کا میڈیا بہت اچھال رہا ہے۔
٭کچھ گھرکی باتیں: ن لیگ کے ضمانت پر رہائی والے صدر میاں شہباز شریف نے وزیروں کی کالونی میں اپنے سرکاری بنگلے میں پی ڈی ایم کے پارلیمانی لیڈروں کو عشائیہ دیا۔ اس میں اپوزیشن پارٹیوں کو مل بیٹھ کر حکومت کے خلاف کارروائیوں کی تلقین کی۔ اس کا اُلٹا اثر ہوا اور ایک دوسرے کے خلاف سخت الزامات شروع ہو گئے۔ ان باتوں کو مکالماتی انداز میں پڑھئے: شہباز شریف: ’’تمام اپوزیشن کو اکٹھے ہو کر حکومت کے خلاف مہم چلانی چاہئے‘‘
O مولانا فضل الرحمان: ’’پیپلزپارٹی کو اپوزیشن کے اتحاد میں واپس لینے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ میں نے 29 مئی کو اتحاد کے سربراہی اجلاس میں پیپلزپارٹی اور اے این پی کو نہیں بلایا۔ یہ لوگ پہلے اتحاد سے الگ ہونے کی غلطی کا اعتراف کریں اور آئندہ اتحاد سے وفادار رہنے کا یقین دلائیں تو اتحاد میں ان کی واپسی کی درخواست منظور کی جا سکتی ہے۔‘‘
O شاہد خاقان عباسی ’’پیپلزپارٹی کو اتحاد میں لینے کا سوال ہی پیدا نہیں۔ ان لوگوں کو میں نے اتحاد کے سیکرٹری جنرل کے طور پر اظہار وجوہ کا نوٹس بھیجا، اسے پھاڑ کر ردی کی ٹوکری میں پھینک دیا گیا۔ یہ لوگ اتحاد میں آنا چاہتے ہیں تو ردی کی ٹوکری سے نوٹس کے ٹکڑے اٹھا کر انہیں جوڑیں، اسے پڑھیں، پھراتحاد میں واپسی کا معذرت نامہ پیش کریں۔ اس کے بغیر پیپلزپارٹی کو واپس لینے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ ایسا کئے بغیر یہ لوگ اتحاد میں آئے تو میں اتحاد کا سیکرٹری جنرل کا عہدہ چھوڑ دوں گا۔‘‘
O مریم نواز (طویل خاموشی کے بعد): ’’پیپلزپارٹی پہلے ہمارے بھیجے ہوئے نوٹس کے سوالات کا جواب دے، جواب آنے پر اس کی واپسی پر غور کریں گے!‘‘
O قارئین کرام! یہ اس اتحاد کاذکر ہے جس کے اجلاسوں میں دو نشستوں والے صوفے پر تین افراد (ایک خاتون) پھنس کر بیٹھتے تھے۔ ایک دوسرے سے وفاداری کے ایسے عہد کئے جاتے تھے جو صرف لوک داستانوں میں ہی ملتے ہیں۔ ان کے بارے میں مشہور شاعر ’احمد راہی‘ کی ایک مختصر دلچسپ نظم پڑھئے اور لطف اٹھایئے: احمد راہی نے کہا کہ’’تُوں (تُو) نئیں سُن دا…تُوں نئیں مُڑدا…تُوں نئیں ٹَل دا، لَے فیر ہتھ وَدھا (ہاتھ آگے کر) قول قرار ہویا، جِیاں (جنہیں) سَرَاں گے اکٹھے، ڈُبّاں تَراں گے اکٹھے‘‘ (اکٹھے ڈوبیں، اکٹھے تیریں گے!)‘‘
نیئرعلی، سیکرٹری جنرل پیپلزپارٹی: ’’بے و قوفوں کی بے و قوفیوں پر کیا تبصرہ کیا جائے۔‘‘
٭ پاکستان میں آج کل عشائیوںکا موسمم چل رہا ہے۔ تحریک انصاف کے باغی گروپ کو جہانگیر ترین کے عشائیے، گزشتہ روزلاہورمیں جہانگیر ترین کے اعزاز میں باغی صوبائی وزیر اجمل چیمہ کے گھر میں عشائیہ، اسلام آباد میں شہباز شریف کا عشائیہ۔ شہباز کے عشائیہ میں شاہد خاقان عباسی نے بڑی محبت اور گرم جوشی کے ساتھ بکرا پلائو، کڑاہی، مچھلی، تکے، بریانی کے ساتھ دو قسم کے حلوے کھائے اور پھر شہباز شریف کی تقریر کی ایسی تیسی کر دی اور فضل الرحمان و مریم نواز…’’تم سے بلایا نہ گیا، ہم سے آیا نہ گیا…!!‘‘
٭بھارت: بحری طوفان ’یامد‘ طوفانی بارش، 20 فٹ اونچی سمندری لہریں، مغربی بنگال اور بہار کی سینکڑوں ساحلی بستیاں ڈوب گئیں، مغربی بنگال کے ساحلی علاقوں سے 25 لاکھ باشندوں کا انخلا! 26 نومبر کو شروع ہونے والے کسانوں کے دہلی گھیرائو کے چھ ماہ پورے ہو گئے۔ 26 مئی کو ملک بھر کے کسانوں کا یوم سیاہ مظاہرے، گھروں پر سیاہ جھنڈے، مودی کے پُتلے نذرآتش۔
٭لندن: برطانیہ کی حکومت نے نوازشریف کی واپسی کے لئے حکومت پاکستان سے درخواست طلب کر لی۔
٭کراچی میں 1500 ٹن زہریلے تیل والا ناکارہ جہاز گڈانی پہنچ گیا۔ بنگلہ دیش و بھارت نے اپنے ساحلوں پر اس کی آمد روک دی تھی۔ وہ پاکستان کے ساحل پر جہاز توڑنے والے مقام گڈانی پر پہنچ گیا۔ حکومت پاکستان کو آگاہ کرنے کا کوئی اثر نہ ہوا۔ انٹرپول۔

تازہ ترین خبریں

وزارت اعلیٰ پنجاب کیلئے دوبارہ ووٹنگ، لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی

وزارت اعلیٰ پنجاب کیلئے دوبارہ ووٹنگ، لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی

چئیرمین نیب کی تعیناتی کے حوالے سے دو ناموں کی تجویز آگئی

چئیرمین نیب کی تعیناتی کے حوالے سے دو ناموں کی تجویز آگئی

 نمبر گیم تبدیل ہوگئی، حمزہ شہباز کی حکومت برقرار نہیں رہ پائے گی، ماہر قانون کا دعویٰ

 نمبر گیم تبدیل ہوگئی، حمزہ شہباز کی حکومت برقرار نہیں رہ پائے گی، ماہر قانون کا دعویٰ

حمزہ شہباز سے ملاقات کے بعد لوگ نظرانداز کرنے لگے:گولڈن مین کا شکوہ

حمزہ شہباز سے ملاقات کے بعد لوگ نظرانداز کرنے لگے:گولڈن مین کا شکوہ

گاڑی مالکان کے لیے خوشخبری، ٹیکس میں بڑی کمی کردی گئی

گاڑی مالکان کے لیے خوشخبری، ٹیکس میں بڑی کمی کردی گئی

اہم شخصیت کا استعفیٰ منظور، بڑی خبر آگئی

اہم شخصیت کا استعفیٰ منظور، بڑی خبر آگئی

سونے کی قیمت میں بڑا اضافہ۔ صارفین پریشان

سونے کی قیمت میں بڑا اضافہ۔ صارفین پریشان

وفاقی وزیر خورشید شاہ عالمی وبا کورونا وائرس کا شکار ،حالت کیسی ہے ،تفصیلات جانیں اس خبرمیں

وفاقی وزیر خورشید شاہ عالمی وبا کورونا وائرس کا شکار ،حالت کیسی ہے ،تفصیلات جانیں اس خبرمیں

2 گروہوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ،کتنے افرادجان سے ہاتھ دھوبیٹھے ،پنجاب کے بڑے شہر سے انتہائی افسوسناک خبرآگئی

2 گروہوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ،کتنے افرادجان سے ہاتھ دھوبیٹھے ،پنجاب کے بڑے شہر سے انتہائی افسوسناک خبرآگئی

اسرائیل نے دنیابھرکے امن پسند ممالک کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی ،خوفناک ہتھیار تیار

اسرائیل نے دنیابھرکے امن پسند ممالک کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی ،خوفناک ہتھیار تیار

عمران خان نفرت کا سوداگر، اداروں کو مخالفین کیخلاف استعمال کیا، خواجہ آصف

عمران خان نفرت کا سوداگر، اداروں کو مخالفین کیخلاف استعمال کیا، خواجہ آصف

پہلے ہمارے پاس تبدیلی کے لئے بڑے چکر لگتے تھے، اور ہماری شکلیں بھی اچھی لگتی تھیں

پہلے ہمارے پاس تبدیلی کے لئے بڑے چکر لگتے تھے، اور ہماری شکلیں بھی اچھی لگتی تھیں

جے یو آئی (ف) کا ’زرداری بھگاؤ سندھ بچاؤ‘ تحریک شروع کرنے کا اعلان

جے یو آئی (ف) کا ’زرداری بھگاؤ سندھ بچاؤ‘ تحریک شروع کرنے کا اعلان

پاکستان تحریک انصاف کا ایسااقدام جس سے حکومت کےلیے خطرے کی گھنٹی بج گئی

پاکستان تحریک انصاف کا ایسااقدام جس سے حکومت کےلیے خطرے کی گھنٹی بج گئی