01:00 pm
امریکہ کو اڈے دیں نہ دیں کوئی فرق نہیں پڑتا

امریکہ کو اڈے دیں نہ دیں کوئی فرق نہیں پڑتا

01:00 pm

سابق آرمی چیف جنرل (ر) اسلم بیگ نے مطالبہ کیا ہے کہ ’’افغانستان میں امریکہ کے غاصبانہ قبضے میں مدد کے لئے پاکستان فوجی آمر پرویز مشرف کے دور میں کئے گئے معاہدے کو ختم کرے … یہ معاہدے پاکستان اور افغانستان دونوں کی خودمختاری کے خلاف ہیں … ایک معاصر اخبار میں چھپنے والے انٹرویو میں سابق آرمی چیف جنرل اسلم بیگ نے کہا کہ2001ء میں جنرل پرویز مشرف نے امریکہ کے دبائو پرڈھیرہوکر کولن پاول کی تمام شرائط تسلیم کرلی تھیں … جن میں گرائونڈ لائن آف کمیونیکیشن  جی ایل او سی اور ائر لائن آف کمیونیکیشن ا ے ایل او سی کی شرائط بھی شامل  تھیں ، ان شرائط کو تسلیم کرنے کے بعد امریکہ کو زمینی یافضائی اڈے دیں یا نہ دیں کوئی فرق نہیں پڑتا ، انہوں نے کہا کہ وزارت خارجہ نے یہ وضاحت جاری کی ہے کہ امریکہ کے ساتھ2001 ء میں کیا گیا معاہدہ ابھی تک برقرار ہے … وزارت خارجہ کا یہ اعتراف امریکہ کے ساتھ کئے گئے معاہدے کی توثیق کے مترادف ہے … گویا ہم آج بھی افغانستان میں امریکی قبضے کو برقرار رکھنے میں مددگارثابت ہو رہے ہیں … انہوں نے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ افغانستان سے امریکہ کی بے دخلی کے بعد اس معاہدے کو بھی ختم کر دیا جائے، کیونکہ اس کے تحت  امریکہ پاکستان کی فضائی حدود اور زمینی راستے افغانستان پر حملے کے لئے استعمال کرسکتا ہے … جبکہ ہمارا موقف یہ رہا ہے کہ ہماری سرزمین کسی دوسرے ملک کی خودمختاری اور آزادی کو متاثر یا ختم کرنے کرنے کے لئے نہیں استعمال ہوسکتی …لیکن امریکہ نے ہمارے اس موقف کی دھجیاں بکھیر دی ہیں۔
سابق آرمی چیف جنرل بیگ نے انکشاف کیا کہ جہاں تک  میرے علم میں ہے کہ پرویز مشرف اور اس کے بعد کے ادوار میں امریکہ کو یہ سہولت  تربیلا کے قریب حاصل رہی … اب جبکہ یہ موقع ہے کہ افغانستان میں ایک بار پھر طالبان کی حکومت قائم ہو جائے گی اور قابض امریکی اور دیگر افواج وہاں سے نکل جائیں گی ، تو امریکہ طالبان کی حکومت کو ناکام بنانے اور اپنی شکست کا انتقام لینے کے لئے افغانستان پر فضائی حملہ کرسکتاہے  اور اس کے لئے وہ پاکستان کی فضائی حدود کو استعمال کرسکتا ہے … چاہے اس کے اڈے خلیجی ممالک میں ہوں یا افغانستان کے کسی اور پڑوسی ملک میں ، پاکستان کو کسی بھی صورت میں ان معاہدوں کی توثیق نہیں کرنی چاہیے … انہوں نے کہا کہ  خطے میں امن اور اقتصادی ترقی کے لئے ضروری ہے کہ امریکہ کے خطے میں عسکری مداخلت کاخاتمہ کیا جائے اور امریکہ پر واضح کر دیا جائے کہ اب پاکستان کو اس معاہدے کی ضرورت نہیں، جنرل بیگ نے کہا کہ اگر امریکہ کو دی گئی سہولیات برقرار رہیں تو پاکستان میں نہ کبھی امن آئے گا اور نہ ہی پاکستان اقتصادی  ترقی کی راہ میں چل سکے گا، (ر) جنرل اسلم بیگ ، پاک فوج کے سربراہ رہ چکے ہیں انہوں نے پاک ،امریکہ معاہدوں کے حوالے سے اپنے انٹرویو میں جو گفتگو کی … جو انکشافات کئے وہ انتہائی پریشان کن ہیں اور قابل غور بھی، یعنی ’’پاکستان‘‘ اور اس کے 22 کروڑ عوام آج بھی رسوا کن ڈکٹیٹر کی قاتل پالیسیوں کے بندھن میں بندھے ہوئے ہیں، پرویز مشرف کے تاریک دور میں بنائی جانے والےیہی وہ قاتل معاہدے اور پالیسیاں تھیں کہ  جو ستر ہزار سے زائد پاکستانیوں کاخون پی گئیں … یہی وہ قاتل پالیسیاں اور معاہدے تھے کہ جن کی وجہ سے پاکستان کا سو ارب سے زائد کا نقصان ہوا ، نائن الیون کے بعد بھی ایک ڈکٹیٹر نے پاکستان کو امریکہ کی بھڑکائی ہوئی جنگ میں جھونک دیا تھا … مگر اب تو خیر سے عمران خان کہ جن کو کسی دور میں ’’طالبان خان‘‘ بھی کہا جاتا تھا …  کی حکومت ہے ، کیا وہ پرویز مشرف دور کی قاتل پالیسیوں اور معاہدوں کو پارلیمنٹ میں زیربحث لانے کی جرات کریں گے؟ کیا عمران خان ان خوفناک معاہدوں کے حوالے سے ’’ریاست مدینہ‘‘ کے عوام کو اعتمادمیں لیں گے؟
کیا وہ یہ جرات کریں گے کہ امریکہ کی آنکھ میں آنکھ ڈال کر انہیں یہ بتا دیں کہ اب نہ کوئی معاہدہ، نہ قاتل پالیسی، نہ افغانستان کی نگرانی، ہم ثانی ریاست مدینہ پاکستان کی ایک انچ زمین بھی کسی مسلمان ملک کے خلاف استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے، پرویز مشرف کے تاریک دور کے قاتل معاہدوں اور خونی پالیسیوں کی موجودگی میں وزیر خارجہ  شاہ محمود قریشی کے اس بیان کہ ’’ہم امریکہ کو فوجی اڈے نہیں دیں گے ‘‘ کی  کیاحیثیت رہ جاتی ہے؟ قومی اسمبلی کے فلور پر انکار اور رسوا کن ڈکٹیٹر کی خونی پالیسیاں برقرار،  یہ کھلا تضاد نہیں تو پھر کیا ہے؟
عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق، افغان طالبان نے بھی اس حوالے سے ایک بیان جاری کیا ہے … جس میں کہا گیا ہے کہ ’’پہلے بھی امریکی اڈوں کی خطے میں موجودگی  کی سخت مخالفت کی ہے … اور اگر اب بھی فوجی اڈے قائم کئے جاتے ہیں … تو یہ تاریخی غلطی اوربدنامی ہوگی، افغان طالبان کاکہنا تھا کہ ہم نے بار بار یقین دہانی کرائی  ہے کہ ہماری سرزمین دوسروں کی سلامتی کے خلاف استعمال نہیں ہوگی ، جواب میں ہم بھی یہ چاہتے ہیں کہ کوئی دوسری سرزمین بھی ہمارے خلاف استعمال نہ ہو، طالبان نے امید ظاہر کی کہ ہمسایہ ممالک ہم پر حملے کے لئے اپنی سرزمین اور فضائی حدود استعمال نہیں ہونے دیں گے ، تاہم ایسا ہوا تو اس کی ذمہ داری انہی پر عائد ہوگی اور انہیں ہی مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا، جو ایسی غلطیاں کرتے ہیں۔
سوال یہ ہے کہ طالبان ایسا بیان  کرنے پر مجبور کیوں ہوئے کہ جس میں دھمکی آمیز لب و لہجہ اختیار کیا گیا؟ جاننے والے جانتے ہیں کہ وہ روسیاہ ڈکٹیٹر ہی تھا کہ جس کی انسانیت کش پالیسیوں کی وجہ سے پاکستان کو امریکی ڈرون حملوں سے لے کر خودکش حملوں اورخوفناک دہشت گردی کا سامنا کرنا پڑا تھا، اب جبکہ امریکہ افغانستان  سے ذلیل و خوار ہوکر نکلنا چاہتا ہے … وہ جاتے جاتے بھی پاکستان اور افغانستان کو جنگ کے شعلوں کے حوالے کرنا چاہتا ہے، اللہ کرے کہ وہ ناکام رہے۔ آمین

تازہ ترین خبریں

ان دو خاندانوں کو این آر او دینا ملک سے سب سے بڑی غداری ہے، وزیراعظم پھٹ پڑے

ان دو خاندانوں کو این آر او دینا ملک سے سب سے بڑی غداری ہے، وزیراعظم پھٹ پڑے

جوتوں سے پہچانا گیا   اللہ تعالیٰ کا نظام بھی کیسا عجیب ہے‘  وہ جب کسی ظالم سے نفرت کرتا ہے  تو اس کی قبر کی بھی بخشش نہیں ہوتی...

جوتوں سے پہچانا گیا اللہ تعالیٰ کا نظام بھی کیسا عجیب ہے‘ وہ جب کسی ظالم سے نفرت کرتا ہے تو اس کی قبر کی بھی بخشش نہیں ہوتی...

ناریل کے گرم پانی کے معجزات، ماہرین نے حیران کن تحقیق بیان کر دی

ناریل کے گرم پانی کے معجزات، ماہرین نے حیران کن تحقیق بیان کر دی

محمد رضوان کو محنت کا صِلہ مل گیا، آئی سی سی نے بڑی خوشخبری سنا دی

محمد رضوان کو محنت کا صِلہ مل گیا، آئی سی سی نے بڑی خوشخبری سنا دی

ایک ہفتے میں ڈالر ، سعودی ریال اور برطانوی پائونڈ کی قدر میں کتنی کمی ہوئی؟ مکمل تفصیلات آگئیں

ایک ہفتے میں ڈالر ، سعودی ریال اور برطانوی پائونڈ کی قدر میں کتنی کمی ہوئی؟ مکمل تفصیلات آگئیں

بارشیں مزید کب تک جاری رہیں گی؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

بارشیں مزید کب تک جاری رہیں گی؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

نیوزی لینڈکی وزیراعظم جیسنڈرا آرڈرن کی شادی سے پہلے ہی خوشیاں خاک میں مل گئیں

نیوزی لینڈکی وزیراعظم جیسنڈرا آرڈرن کی شادی سے پہلے ہی خوشیاں خاک میں مل گئیں

عمران خان کی چھٹی ۔۔اگلا وزیراعظم کون ہو گا؟سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بڑا دعویٰ کر دیا

عمران خان کی چھٹی ۔۔اگلا وزیراعظم کون ہو گا؟سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بڑا دعویٰ کر دیا

بارشوں اور برفباری نے تباہی مچادی، اب تک کتنی ہلاکتیں ہو گئیں؟ افسوسناک تفصیلات جاری

بارشوں اور برفباری نے تباہی مچادی، اب تک کتنی ہلاکتیں ہو گئیں؟ افسوسناک تفصیلات جاری

سستےگھروں کی الاٹمنٹ کیلئے قرعہ اندازی شروع، ساڑھے 3 مرلہ گھر کی ماہانہ قسط کیا ہوگی؟ خوشخبری سنا دی گئی

سستےگھروں کی الاٹمنٹ کیلئے قرعہ اندازی شروع، ساڑھے 3 مرلہ گھر کی ماہانہ قسط کیا ہوگی؟ خوشخبری سنا دی گئی

خبردار!!احتیاط کیجئے  موٹروے پر سفر کرنے سے پہلے یہ خبر پڑھ لیں ، موٹروےپولیس نے ہدایات جاری کردیں

خبردار!!احتیاط کیجئے موٹروے پر سفر کرنے سے پہلے یہ خبر پڑھ لیں ، موٹروےپولیس نے ہدایات جاری کردیں

کورونا کیسز میں اضافہ ، کئی علاقوں میں لاک ڈائون نافذ کرنے کا فیصلہ

کورونا کیسز میں اضافہ ، کئی علاقوں میں لاک ڈائون نافذ کرنے کا فیصلہ

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کس تاریخی موقع پر پاکستان آئیں گے؟خوشخبری سنا دی گئی

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کس تاریخی موقع پر پاکستان آئیں گے؟خوشخبری سنا دی گئی

کورونا کیسز میں اضافہ ، صوبائی حکومت جس نے ان ڈور شادیوں اور پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی لگا دی

کورونا کیسز میں اضافہ ، صوبائی حکومت جس نے ان ڈور شادیوں اور پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی لگا دی