01:00 pm
امریکہ کو اڈے دیں نہ دیں کوئی فرق نہیں پڑتا

امریکہ کو اڈے دیں نہ دیں کوئی فرق نہیں پڑتا

01:00 pm

سابق آرمی چیف جنرل (ر) اسلم بیگ نے مطالبہ کیا ہے کہ ’’افغانستان میں امریکہ کے غاصبانہ قبضے میں مدد کے لئے پاکستان فوجی آمر پرویز مشرف کے دور میں کئے گئے معاہدے کو ختم کرے … یہ معاہدے پاکستان اور افغانستان دونوں کی خودمختاری کے خلاف ہیں … ایک معاصر اخبار میں چھپنے والے انٹرویو میں سابق آرمی چیف جنرل اسلم بیگ نے کہا کہ2001ء میں جنرل پرویز مشرف نے امریکہ کے دبائو پرڈھیرہوکر کولن پاول کی تمام شرائط تسلیم کرلی تھیں … جن میں گرائونڈ لائن آف کمیونیکیشن  جی ایل او سی اور ائر لائن آف کمیونیکیشن ا ے ایل او سی کی شرائط بھی شامل  تھیں ، ان شرائط کو تسلیم کرنے کے بعد امریکہ کو زمینی یافضائی اڈے دیں یا نہ دیں کوئی فرق نہیں پڑتا ، انہوں نے کہا کہ وزارت خارجہ نے یہ وضاحت جاری کی ہے کہ امریکہ کے ساتھ2001 ء میں کیا گیا معاہدہ ابھی تک برقرار ہے … وزارت خارجہ کا یہ اعتراف امریکہ کے ساتھ کئے گئے معاہدے کی توثیق کے مترادف ہے … گویا ہم آج بھی افغانستان میں امریکی قبضے کو برقرار رکھنے میں مددگارثابت ہو رہے ہیں … انہوں نے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ افغانستان سے امریکہ کی بے دخلی کے بعد اس معاہدے کو بھی ختم کر دیا جائے، کیونکہ اس کے تحت  امریکہ پاکستان کی فضائی حدود اور زمینی راستے افغانستان پر حملے کے لئے استعمال کرسکتا ہے … جبکہ ہمارا موقف یہ رہا ہے کہ ہماری سرزمین کسی دوسرے ملک کی خودمختاری اور آزادی کو متاثر یا ختم کرنے کرنے کے لئے نہیں استعمال ہوسکتی …لیکن امریکہ نے ہمارے اس موقف کی دھجیاں بکھیر دی ہیں۔
سابق آرمی چیف جنرل بیگ نے انکشاف کیا کہ جہاں تک  میرے علم میں ہے کہ پرویز مشرف اور اس کے بعد کے ادوار میں امریکہ کو یہ سہولت  تربیلا کے قریب حاصل رہی … اب جبکہ یہ موقع ہے کہ افغانستان میں ایک بار پھر طالبان کی حکومت قائم ہو جائے گی اور قابض امریکی اور دیگر افواج وہاں سے نکل جائیں گی ، تو امریکہ طالبان کی حکومت کو ناکام بنانے اور اپنی شکست کا انتقام لینے کے لئے افغانستان پر فضائی حملہ کرسکتاہے  اور اس کے لئے وہ پاکستان کی فضائی حدود کو استعمال کرسکتا ہے … چاہے اس کے اڈے خلیجی ممالک میں ہوں یا افغانستان کے کسی اور پڑوسی ملک میں ، پاکستان کو کسی بھی صورت میں ان معاہدوں کی توثیق نہیں کرنی چاہیے … انہوں نے کہا کہ  خطے میں امن اور اقتصادی ترقی کے لئے ضروری ہے کہ امریکہ کے خطے میں عسکری مداخلت کاخاتمہ کیا جائے اور امریکہ پر واضح کر دیا جائے کہ اب پاکستان کو اس معاہدے کی ضرورت نہیں، جنرل بیگ نے کہا کہ اگر امریکہ کو دی گئی سہولیات برقرار رہیں تو پاکستان میں نہ کبھی امن آئے گا اور نہ ہی پاکستان اقتصادی  ترقی کی راہ میں چل سکے گا، (ر) جنرل اسلم بیگ ، پاک فوج کے سربراہ رہ چکے ہیں انہوں نے پاک ،امریکہ معاہدوں کے حوالے سے اپنے انٹرویو میں جو گفتگو کی … جو انکشافات کئے وہ انتہائی پریشان کن ہیں اور قابل غور بھی، یعنی ’’پاکستان‘‘ اور اس کے 22 کروڑ عوام آج بھی رسوا کن ڈکٹیٹر کی قاتل پالیسیوں کے بندھن میں بندھے ہوئے ہیں، پرویز مشرف کے تاریک دور میں بنائی جانے والےیہی وہ قاتل معاہدے اور پالیسیاں تھیں کہ  جو ستر ہزار سے زائد پاکستانیوں کاخون پی گئیں … یہی وہ قاتل پالیسیاں اور معاہدے تھے کہ جن کی وجہ سے پاکستان کا سو ارب سے زائد کا نقصان ہوا ، نائن الیون کے بعد بھی ایک ڈکٹیٹر نے پاکستان کو امریکہ کی بھڑکائی ہوئی جنگ میں جھونک دیا تھا … مگر اب تو خیر سے عمران خان کہ جن کو کسی دور میں ’’طالبان خان‘‘ بھی کہا جاتا تھا …  کی حکومت ہے ، کیا وہ پرویز مشرف دور کی قاتل پالیسیوں اور معاہدوں کو پارلیمنٹ میں زیربحث لانے کی جرات کریں گے؟ کیا عمران خان ان خوفناک معاہدوں کے حوالے سے ’’ریاست مدینہ‘‘ کے عوام کو اعتمادمیں لیں گے؟
کیا وہ یہ جرات کریں گے کہ امریکہ کی آنکھ میں آنکھ ڈال کر انہیں یہ بتا دیں کہ اب نہ کوئی معاہدہ، نہ قاتل پالیسی، نہ افغانستان کی نگرانی، ہم ثانی ریاست مدینہ پاکستان کی ایک انچ زمین بھی کسی مسلمان ملک کے خلاف استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے، پرویز مشرف کے تاریک دور کے قاتل معاہدوں اور خونی پالیسیوں کی موجودگی میں وزیر خارجہ  شاہ محمود قریشی کے اس بیان کہ ’’ہم امریکہ کو فوجی اڈے نہیں دیں گے ‘‘ کی  کیاحیثیت رہ جاتی ہے؟ قومی اسمبلی کے فلور پر انکار اور رسوا کن ڈکٹیٹر کی خونی پالیسیاں برقرار،  یہ کھلا تضاد نہیں تو پھر کیا ہے؟
عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق، افغان طالبان نے بھی اس حوالے سے ایک بیان جاری کیا ہے … جس میں کہا گیا ہے کہ ’’پہلے بھی امریکی اڈوں کی خطے میں موجودگی  کی سخت مخالفت کی ہے … اور اگر اب بھی فوجی اڈے قائم کئے جاتے ہیں … تو یہ تاریخی غلطی اوربدنامی ہوگی، افغان طالبان کاکہنا تھا کہ ہم نے بار بار یقین دہانی کرائی  ہے کہ ہماری سرزمین دوسروں کی سلامتی کے خلاف استعمال نہیں ہوگی ، جواب میں ہم بھی یہ چاہتے ہیں کہ کوئی دوسری سرزمین بھی ہمارے خلاف استعمال نہ ہو، طالبان نے امید ظاہر کی کہ ہمسایہ ممالک ہم پر حملے کے لئے اپنی سرزمین اور فضائی حدود استعمال نہیں ہونے دیں گے ، تاہم ایسا ہوا تو اس کی ذمہ داری انہی پر عائد ہوگی اور انہیں ہی مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا، جو ایسی غلطیاں کرتے ہیں۔
سوال یہ ہے کہ طالبان ایسا بیان  کرنے پر مجبور کیوں ہوئے کہ جس میں دھمکی آمیز لب و لہجہ اختیار کیا گیا؟ جاننے والے جانتے ہیں کہ وہ روسیاہ ڈکٹیٹر ہی تھا کہ جس کی انسانیت کش پالیسیوں کی وجہ سے پاکستان کو امریکی ڈرون حملوں سے لے کر خودکش حملوں اورخوفناک دہشت گردی کا سامنا کرنا پڑا تھا، اب جبکہ امریکہ افغانستان  سے ذلیل و خوار ہوکر نکلنا چاہتا ہے … وہ جاتے جاتے بھی پاکستان اور افغانستان کو جنگ کے شعلوں کے حوالے کرنا چاہتا ہے، اللہ کرے کہ وہ ناکام رہے۔ آمین


تازہ ترین خبریں

سابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کے گریبان پرہاتھ ڈالیں گے، شاہدخاقان عباسی کی دھمکی

سابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کے گریبان پرہاتھ ڈالیں گے، شاہدخاقان عباسی کی دھمکی

بھارتی اداکارہ راکھی ساونت کے شوہر عادل درانی گرفتار

بھارتی اداکارہ راکھی ساونت کے شوہر عادل درانی گرفتار

لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ،  43پی ٹی آئی ا یم این ایز کے استعفےمنظور کرنے کا حکم معطل

لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ، 43پی ٹی آئی ا یم این ایز کے استعفےمنظور کرنے کا حکم معطل

ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلہ، اموات آٹھ ہزار کے قریب ، بارش کے باعث امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا

ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلہ، اموات آٹھ ہزار کے قریب ، بارش کے باعث امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا

آئی ایم ایف اور پی ڈی ایم حکمرانوں نے پاکستانی عوام کے حقوق پامال کرنے کی تیاری کرلی، ہیومن رائٹس واچ کا انکشاف

آئی ایم ایف اور پی ڈی ایم حکمرانوں نے پاکستانی عوام کے حقوق پامال کرنے کی تیاری کرلی، ہیومن رائٹس واچ کا انکشاف

پاکستان سے یومیہ 50لاکھ ڈالر افغانستان سمگل، بلوم برگ نے حکومتی کارکردگی کا پول کھول دیا

پاکستان سے یومیہ 50لاکھ ڈالر افغانستان سمگل، بلوم برگ نے حکومتی کارکردگی کا پول کھول دیا

وزیراعظم شہبازشریف کا دورہ ترکیہ ملتوی

وزیراعظم شہبازشریف کا دورہ ترکیہ ملتوی

سائنسدان2 ہزار  سال پرانی  نباتی خاتون کا چہربنانے میں کامیاب ہوگئے

سائنسدان2 ہزار سال پرانی نباتی خاتون کا چہربنانے میں کامیاب ہوگئے

ہزاروں لوگوں نے رجسٹریشن کرائی،ہم جیل بھرو تحریک شروع کر چکے ہیں، فواد چوہدری

ہزاروں لوگوں نے رجسٹریشن کرائی،ہم جیل بھرو تحریک شروع کر چکے ہیں، فواد چوہدری

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان   حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا