02:03 pm
قرآن کی پکار اور سوچ کی تبدیلی

قرآن کی پکار اور سوچ کی تبدیلی

02:03 pm

نجانے کیوں اپنے ارد گرد ہونے والے قومی اور بین الاقوامی حالات کے تغیر کے باوجود قلم اٹھانے میں تذبذب کا شکار رہا … شائد اس کی وجہ یہ تھی کہ محض قبلہ اول  القدس الشریف کے حوالے سے امت کو درپیش امتحان پر بات کرنا زخموں پر نمک چھڑکنے کے مترادف ہو ، کیونکہ مرض کی تشخیص اور مسائل کا مستقل حل ہی  دراصل ایک بامقصد کوشش ہوسکتی ہے۔
 
ہم اپنے دور طالبعلمی میں اسلامیات کی کتاب میں اکثر ایک اصلاح پڑھتے تھے اور وہ تھی ’’قرآن  کا اعجاز‘‘ اس وقت یہ محض ایک موضوع تھا مگر وقت گزرنے اور زندگی کی ’’وادی عمل‘‘ میں قدم رکھنے کے بعد معلوم ہوا کہ یہ محض ایک کتابی سبق نہیں ہے بلکہ اگر اس کے عملی پہلو پر نظر دوڑائی جائے تو پتہ چلتا ہے کہ اس کتاب کی حفاظت اور قراء و حافظین کے علاوہ اس کے ہجروں میں سب سے بڑا کمال یہ ہے کہ یہ ایک انسان کے زندگی کی جانب دیکھنے کے اندر فکر اور اپروچ کو بدل سکتا ہے۔
قارئین کرام، اس سے قبل کہ میں مذکور ہ بالا پہلو کے حوالے سے آپ کو اپنے خیالات میں حصہ دار بنائوں … قرآن کے عملی معجزوں میں سے ایک واقعہ کاذکر کرتا چلوں … میں نے اپنے ساتھ کام کرنے والے ایک عزیز سے کہا کہ میرے موبائل کی سیٹنگ کسی ماہر سے کروا کر دے ،چنانچہ وہ موبائل کی ایک دکان پر گیا اور اس نے میرا موبائل اس دکاندار کو دکھایا جو اس نے اپنے 14 سالہ نوجوان ٹیکنیشن کے حوالے کر دیا … کچھ دیر کے بعد موبائل نے کام کرنا چھوڑ دیا جب واپس میرے پاس لایا تو مجھے بتایا گیا کہ موبائل کی سکرین ناکارہ ہوگئی ہے۔ میں نے اچانک جارحانہ اور ناراضگی کے لہجے میں سوال کیا کہ  جب میں نے یہ موبائل آپ کے حوالے کیا تھا تو ٹھیک تھا اب اسے کیا ہوگیا ہے … خیر میں اپنے بھائی مبشر کو ساتھ لے کر خود موبائل کی اس دکان پر پہنچا اور دکان کے مالک سے شکایت کی ، اس نے بلاتوقف میرا موبائل لیا اور کہاکہ میں اس کی نئی سکرین ڈلوا کر  دے دیتا ہوں اگرچہ یہ بہت قیمتی ہے مگر چونکہ یہ میرے ملازم کی غلطی ہے اس لئے میں آپ کا نقصان پورا کر دیتا ہوں یہ کہہ کر وہ دکان سے چلا گیا … اس کے جانے کے بعدہم نے دکان میں بیٹھے اس 14 سالہ بچے  سے پوچھا کہ تم کب سے اس دکان میں کام کررہے ہو۔ اس نے سہمے ہوئے انداز میں بتایا کہ والد کی وفات  کے بعد وہ اپنے خاندان کا واحد کفیل ہے ۔ دوران گفتگو ہمیں پتہ چلا کہ وہ ایک حافظ قرآن ہے … روایتی ’’شبے‘‘ کا اظہار کرتے ہوئے راقم نے اس بچے سے مختلف قرآنی آیات سنانے کو کہا  اس نے برجستہ قرآن بہت خوش الحانی سے سنایا ، میں اور میرا بھائی ایک دوسرے کی طرف حیرانگی سے دیکھنے لگے اور برجستہ اس کی تعریف کی … میں نے اپنی جیب سے انعام کی رقم نکالی اور بلاتوقف اس کے حوالے کی …  اس نے انکار کیا مگر میرے پراصرار لہجے کے سامنے بے بس ہوگیا … اسی اثناء میں دکاندار بھی آگیا اور اس نے کہا کہ آپ کے موبائل کی سکرین کی تبدیلی پر15 ہزار روپے کی رقم صرف ہوگی جو میں انپے پاس سے دوں گا کیونکہ یہ میرے اس ملازم کی غلطی سے ہوا ہے۔
میں نے یہ موبائل بغیر مرمت کروائے اسی خراب حالت میں اس کے ہاتھ سے واپس لے لیا اور ہم واپس چل دیئے… وہ حیرانگی سے میری طرف دیکھنے لگا میں نے کہا کہ آپ سے ہم سکرین نہیں بدلوائیں گے مگر شرط یہ ہے کہ آپ نے اپنے اس ملازم سے  اس موبائل کے بارے میں کوئی سرزنش نہیں کرنی… یہ کہہ کر جب ہم دکان سے باہر آئے تو میں حیرت زدہ ہوکر سوچنے پر مجبور ہوگیا کہ ہم  تو اس دکان پر اپنا نقصان پورا کرنے کے لئے رقم دکاندار سے لینے آئے تھے مگر ہم تو یہاں  پر رقم دے کر جارہے ہیں اور وہ بھی محض اس لئے کہ جس ملازم  کی غلطی سے موبائل خراب ہوا تھا اس نے ہمیں قرآن کی کچھ آیات سنا کر کمسن حافظ قرآن ہونے کا ثبوت دیا… برجستہ میرے بھائی نے کہا یہ قرآن کا معجزہ ہے۔
قارئین! اب آئیے قرآن کے عملی پہلو کی طرف تو جیسا کہ میں نے ابتدا میں ذکر کیا اس کتاب کے ’’افکار‘‘ زندگی کی طرف دیکھنے والے زاویئے کو ہی بدل کر رکھ دیتے ہیں … اس سے قبل بھی کئی تحریروں میں اس بات کا تذکرہ ہوچکا ہے کہ ہمارے ارد گرد افراتفری اور ذہنی انتشار کی  ایک بڑی وجہ ہماری سوچ اور انداز فکر ہے ۔ میرا تجربہ ہے کہ سو چ کے بدلنے سے ہی زندگی انفرادی اور اجتماعی سطح پر اپنا رخ تبدیل کرتی ہے۔ سوچ کے بدلنے سے ہی ایک نئی صبح کا آغاز ہوتا ہے، محض سورج کے نکلنے سے سویرا  نہیں ہوتا … بالکل اسی طرح محض قرآن کے اعجاز اور اس کے معجزوں کو بیان کرنے سے آگے بڑھ کر ، جو کہ بہرحال ہمارے ایمان کو تازگی کا ایک ذریعہ ہیں، ہمیں قرآن کے پیغام زندگی کو سمجھنا ہوگا… مثال کے طور پر یہ کتاب ہمیں بارہا یہ سبق اور تعلیم دیتی ہے کہ یہ دنیا ایک عارضی گزرگاہ یعنی (Transit Camp) ہے … زیادہ مذہبی رجحان نہ رکھنے والے دوست بھی میری اس بات سے اختلاف نہیں کریں گے کہ قرآن کا مذکورہ پیغام ایک ایسی حقیقت ہے جس کا مشاہدہ میں اور آپ روزانہ کرتے ہیں … مگر سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ اس پہلو کی پختگی کا انسان کی عملی زندگی سے کیا تعلق ہے۔
قارئین کرام! جس جارحانہ اور بے رحم انداز میں ہم اپنے ذاتی  مفادات کے تحفظ کے لئے ایک دوسرے کو پیچھے دھکیلتے ہوئے دکھائی دیتے ہیں وہ یقینا ایک انسانی صفت نہیں ہوسکتی … ذہنی درندگی  ہمارے اندر اس قدر رچ بس گئی ہے کہ معاشرتی اقدار ہمیں حسرت بھری نگاہوں سے اپنی طرف متوجہ کرتی دکھائی دیتی ہیں اور ہم ہیں کہ ان سے صرف نظر کرتے ہوئے پورے انہماک اور د لچسپی کے ساتھ ذاتی تشہیر اور مادی مفادات کے تحفظ میں مگن ہیں … اتفاق سے کچھ لمحے قبل میں ایک دانا کی گفتگو سے فیض یاب ہو رہا تھا وہ کہہ رہے تھے کہ میں سے نجی سکول کے ایک مالک سے پوچھا کہ تمہاری پڑھائی تو بہت اچھی ہے مگر کھیلنے کے لئے میدان نہیں ہے۔ جواب آیا کہ طلباء جسمانی وزش کے لئے جم جاتے ہیں … میں نے کہا کہ کھیل کو محض جسمانی قوت سے جوڑنا درست نہیں۔ کھیل کا مقصد تو دراصل طلباء کو ہارنے پر درپیش صورتحال سے آشنا کرنا ہے۔ ظاہر ہے کھیل کے میدان میں ایک کی ہار اور  دوسرے کی جیت ہوتی ہے مگر ہارنے والے کو کیسے React کرنا ہے یہ ہے دراصل وہ سبق جو کھیل کے میدان سے ایک طالبعلم حال کرتا ہے … دراصل ہار کے پروقار(Grace full reaction)  کے فقدان نے  ہی میں آج اس دوراہے پر لاکھڑا کردیا ہے۔
قارئین کرام! قرآن کے بیش بہا دیگر معجزوں اور فائدوں کے ساتھ ساتھ اگر ہم صرف ایک جز سے مستفید ہو جائیں اور وہ ہے ’’دنیا کی بے ثباتی کا تصور‘‘ یقینا جانیئے ایسا کرنے سے ہم  اپنی ایک سمت درست کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے اور نجانے کیوں ہمارے ’’ارباب اختیار‘‘ بھی اس حقیقت سے ناآشنا ہیں کہ
سروری زیبا فقط اس ذات بے ہمتا کو ہے
حکمران ہے اک وہی باقی بتان آذری
آئیے آج ہم سب مل کر اس بات کا عہد کریں کہ قرآن کو اس کی روح کے ساتھ سمجھ کر اس کو اپنے انداز فکر بدلنے کا ذریعہ بنائیں گے اور  اس کے پیغام کو سمجھیں گے کیونکہ قرآن ہم سے پکار پکار کر کہہ رہا ہے کہ۔
طاقوں میں سجایا جاتا ہوں
آنکھوں سے لگایا جاتا ہوں
تعویذ بنایا جاتا ہوں
دھو دھو کے پلایا جاتا ہوں
جزدان حریر و ریشم کے 
اور پھول ستارے چاندی کے
پھر عطر کی بارشیں ہوتی ہیں
خوشبو میں بسایا جاتا ہوں
جب قول و قسم لینے کے لئے 
تکرار کی نوبت آتی ہے
پھر میری ضرورت پڑتی ہے 
ہاتھوں میں اٹھایا جاتاہوں

 

تازہ ترین خبریں

اسلام آباد میٹرواسٹیشن سے ملنے والی بچی سے زیادتی ہوئی یا نہیں۔۔؟باپ نے قتل کیو کیوں،گرفتار ملزم باپ نے انکشافات نے تہلکہ مچادیا

اسلام آباد میٹرواسٹیشن سے ملنے والی بچی سے زیادتی ہوئی یا نہیں۔۔؟باپ نے قتل کیو کیوں،گرفتار ملزم باپ نے انکشافات نے تہلکہ مچادیا

سہاگ رات کو لڑائی۔۔۔؟ ۔۔شادی کے اگلے ہی دن دولہا دلہن کی لاشیں کہاں سے اور کس حالت میں ملیں ۔۔ انتہائی افسوسناک خبر

سہاگ رات کو لڑائی۔۔۔؟ ۔۔شادی کے اگلے ہی دن دولہا دلہن کی لاشیں کہاں سے اور کس حالت میں ملیں ۔۔ انتہائی افسوسناک خبر

تیز ہواؤں کا سلسلہ ملک میں داخل،شدید بارشوںکا الرٹ جاری کردیا گیا

تیز ہواؤں کا سلسلہ ملک میں داخل،شدید بارشوںکا الرٹ جاری کردیا گیا

ن لیگ اور پیپلزپارٹی کا سیاسی اتحاد ہوا تو وزیراعظم کون ہو گا؟بڑی خبر آگئی

ن لیگ اور پیپلزپارٹی کا سیاسی اتحاد ہوا تو وزیراعظم کون ہو گا؟بڑی خبر آگئی

گیس کی شدید بحران۔۔۔پورے سندھ میں گیس ڈھائی ماہ کیلئے بند ۔۔ پاکستانیوں کے ہوش اڑا دینےوالی خبر

گیس کی شدید بحران۔۔۔پورے سندھ میں گیس ڈھائی ماہ کیلئے بند ۔۔ پاکستانیوں کے ہوش اڑا دینےوالی خبر

سعودی عرب جانے ناممکن۔۔بڑی پابندی عائد ۔۔ سعودی عرب جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بری خبر

سعودی عرب جانے ناممکن۔۔بڑی پابندی عائد ۔۔ سعودی عرب جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بری خبر

دسمبر سے فروری کب اور کتنی بارشیں متوقع ہیں؟موسمیاتی ادارے نے رواں موسم سرماسے متعلق تفصیلی پیشنگوئی کر دی

دسمبر سے فروری کب اور کتنی بارشیں متوقع ہیں؟موسمیاتی ادارے نے رواں موسم سرماسے متعلق تفصیلی پیشنگوئی کر دی

پی ٹی آئی رہنما نے اپنے ہی ساتھیوں کے پول کھول دیئے ، قیادت نے سینئر رہنما کو شوکاز نوٹس جاری کر دیا،سنگین الزامات عائد

پی ٹی آئی رہنما نے اپنے ہی ساتھیوں کے پول کھول دیئے ، قیادت نے سینئر رہنما کو شوکاز نوٹس جاری کر دیا،سنگین الزامات عائد

کورونا وائرس کی خطرناک ترین قسم ’اومیکرون‘سے بچائوکیلئے شہریوں کو کیا کرنا ہو گا؟ این سی او سی نے نئی ہدایات جاری کردیں

کورونا وائرس کی خطرناک ترین قسم ’اومیکرون‘سے بچائوکیلئے شہریوں کو کیا کرنا ہو گا؟ این سی او سی نے نئی ہدایات جاری کردیں

پاکستانیوں کی جیبوں سے اربوں روپے نکالنے کا پروگرام۔۔ فون کال پر ٹیکس ۔۔۔۔ عوام کیلئے بری خبر۔۔

پاکستانیوں کی جیبوں سے اربوں روپے نکالنے کا پروگرام۔۔ فون کال پر ٹیکس ۔۔۔۔ عوام کیلئے بری خبر۔۔

بھارت سے پاکستان آنیوالی خاتون نے اسلام قبول کرکے لاہور کے شہری سے شادی کرلی،بھارتی واپسی پر اس کے ساتھ کیا ہوا۔۔ جانیے تفصیل

بھارت سے پاکستان آنیوالی خاتون نے اسلام قبول کرکے لاہور کے شہری سے شادی کرلی،بھارتی واپسی پر اس کے ساتھ کیا ہوا۔۔ جانیے تفصیل

تبدیلی۔۔۔۔ حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گئیں نیوزی لینڈ کی حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گ

تبدیلی۔۔۔۔ حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گئیں نیوزی لینڈ کی حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گ

سینیٹر ایوب آفریدی کے مستعفی ہونے کے بعد سینیٹ کی خالی نشست پر الیکشن کب ہو گا ؟ الیکشن کمیشن نےشیڈول جاری کر دیا

سینیٹر ایوب آفریدی کے مستعفی ہونے کے بعد سینیٹ کی خالی نشست پر الیکشن کب ہو گا ؟ الیکشن کمیشن نےشیڈول جاری کر دیا

5جی سے بھی زیادہ  سپیڈ ۔۔۔۔ معروف اداکارہ کے ہاں شادی کے5ماہ بعد ہی بچے کی پیدائش،نیا تنازعہ کھڑا ہو گیا

5جی سے بھی زیادہ سپیڈ ۔۔۔۔ معروف اداکارہ کے ہاں شادی کے5ماہ بعد ہی بچے کی پیدائش،نیا تنازعہ کھڑا ہو گیا