02:08 pm
بھٹو ‘ ڈاکٹر عبدالقدیر اور ایٹمی دھماکہ

بھٹو ‘ ڈاکٹر عبدالقدیر اور ایٹمی دھماکہ

02:08 pm

پاکستان کے ایٹمی دھماکوں کو کئے ہوئے 23سال گزر چکے ہیں۔(28مئی1998) لیکن یہ تاریخ پاکستانیوں کے دلوں اور ذہنوں میں ہمیشہ گلاب کے پھولوں کی طرح مہکتی رہے گی اور اس کی خوشبو یہ یاد دلاتی رہے گی کہ پاکستان اب بیرونی خطروں خصوصیت کے ساتھ بھارتی یلغار سے محفو ظ ہوگیاہے۔ پاکستان کے ایٹمی پروگرام کاسہرا  بھٹو مرحوم کے سرجاتاہے‘ جنہوں نے ڈاکٹر عبدالقدیر کو ہالینڈ سے پاکستان بلاکر یہ اہم کام سونپا تھا۔ اس سے قبل بھارت نے 1974ء پھوکران (راجستھان)میں پہلا ایٹمی دھماکہ کیاتھا جس سے یہ ظاہر ہواتھا کہ بھارت بہت تیزی سے ایٹمی ہتھیار بنانے کی جانب رواں دواں ہے۔ جس وقت بھارت نے اپنا پہلا ایٹمی دھماکہ کیا‘ اس وقت ڈاکٹر قدیر ہالینڈ کے ایک انتہائی احساس ایٹمی ادارے میں کام کررہے تھے۔
انہوں نے اس ہی وقت فیصلہ کرلیا کہ وہ پاکستان جاکر وزیراعظم بھٹو سے ملاقات کریں گے اور انہیں یہ یقین دلائیں گے کہ وہ ایٹم بم بنانے کی صلاحیت حاصل کرسکتے ہیں اگر انہیں اس سلسلے میں ضروری سہولتیںفراہم کی جائیں۔چنانچہ بھٹو  نے ڈاکٹر قدیر کی شرائط منظور کرلیں تاکہ اس اہم پروجیکٹ  پر فوری کام شروع کیاجاسکے۔ اس سے قبل بھٹو نے ملتان میں ایک جلسہ عام میں تقریر کرتے ہوئے اعلان کیاتھا کہ ’’ہم گھاس کھائیںگے لیکن ایٹم بم ضرور بنائیں گے۔‘‘ چنانچہ ایٹم بم بنانے کے لئے کہوٹہ لیبارٹری میں کام شروع کیا گیا۔ اس کام کو انتہائی خفیہ رکھا گیا‘ کیونکہ اگر امریکہ کواس کا پتہ چل جاتا تو وہ اس کام کو روکوا دیتا بلکہ بہت کچھ کرسکتاتھا۔ لیکن اللہ کو کچھ اور منظور تھا۔ چنانچہ ڈاکٹر قدیر اور ان کی ٹیم نے شب وروز محنت کرنے کے بعد ایٹم بم بنالیا اس طرح 28مئی 1998 ء میں جب چاغی میں اس ایٹم بم کاتجربہ ہوا تو پوری دنیا حیرت میں ڈوب گئی کہ ایک ایسا ملک جو ترقی پذیر ہے‘ جس کے عوام کی اکثریت کے پاس مناسب تعلیم نہیں ہے‘ اس نے ایٹم بم کیسے بنالیا اور ترقی یافتہ ممالک کے ایٹمی کلب میں شامل ہوگیا۔ نیز پاکستان اسلامی دنیا کا وہ واحد ملک ہے جس کے پاس ایٹم بم ہے اور جس کی بنیاد صرف ملک وملت کی حفاظت کے لئے رکھی گئی ہے۔ کیونکہ اگر پاکستان یہ ایٹم بم نہیں بناتا تو بھارت پاکستان کوبہ آسانی حملہ کرکے اکھنڈ بھارت بناسکتاتھا‘ جس طرح اس نے 1971ء میں چندغدار پاکستانیوں کی مدد سے مشرقی پاکستان کو توڑ کر بنگلہ دیش بنایاتھا۔ آج بھی پاکستان خطرے میں گھراہوا ہے لیکن ایٹم بم کی موجودگی ‘ عوام اور فوج کے مابین غیر معمولی اتحاداور تعاون سے دشمن اپنے مذموم ارادوں میں کامیاب نہیں ہوسکاہے اور نہ ہوگا۔ انشاء اللہ
ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی ایٹم بم بنانے میں جن ارباب اختیار نے مدد کی ان میں مرحوم ضیا الحق اور غلام اسحاق خان  کانام سرفہرست ہیں۔ جبکہ نوازشریف نے ایٹمی دھماکہ روکنے کی بہت کوشش کی بلکہ بقول ڈاکٹر قدیر خان کے انہوں نے ٹال مٹول سے کام لیاا ور کوشش کی اس میں تاخیر پیدا کی جائے‘ لیکن  مجید نظامی‘گوہر ایوب ‘ فوج اور عوام کے غیر معمولی دبائو کی وجہ سے نوازشریف نے ایٹمی دھماکہ کرنے کی اجازت دی بلکہ شنید یہ ہے کہ وہ بھارت کے ساتھ خفیہ طور پر رابطے میں تھے اور ایٹمی دھماکے کوموخر کرانا چاہتے تھے (دروغ بہ گردن راوی ) بہرحال یہ حقیقت اپنی جگہ ناقابل تردید ہے کہ اگر ڈاکٹر قدیر کو اللہ کی خوشنودی حاصل نہیں ہوتی تو ایٹم بنانے کا یہ عظیم کارنامہ ممکن نہیں ہوسکتاتھا ۔ کیونکہ پاکستان کے اندر بھی ایسے شیطانی عناصر بدرجہ اتم موجود تھے‘ جواس پروجیکٹ کو ناکام بنانے کے سلسلے میں سازشیں کررہے تھے۔ ایٹمی دھماکے کے بعد بھی یہ عناصر مذموم پروپیگنڈا کرتے رہے‘ تاہم اب ایٹم بم بن جانے کے بعد پاکستان ایک مضبوط بنیادوں پر کھڑا ہے‘ لیکن ابھی بہت کچھ کرنا ہے‘ ملک کواقتصادی طور پر اپنے پیروں پرکھڑا کرنا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔ اس کے ساتھ ہی ملک سے کرپشن کی لعنت کو بھی ختم کرناہے‘ کیونکہ بعض سیاستدانوں نے بے پناہ کرپشن کاارتکاب کرکے اس ملک کو اندر سے کھوکھلا کردیاہے۔ وزیراعظم عمران خان ایسے ہی کرپٹ عناصر کو عوام کے کی نگاہوں میں عبرت کانشان بناناچاہتے ہیں۔ لیکن وہ تنہا اس کام کو انجام نہیں دے سکتے ہیں۔ پاکستان کے سارے کرپٹ عناصر اپنی کرپشن کو چھپانے اور بچانے کے لئے ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوگئے ہیں۔ عمران خان کو مختلف حیلے بہانوں سے بدنام کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔  لیکن عوام کی اکثریت پاکستان سے کرپشن کاخاتمہ چاہتی ہے کیونکہ کرپشن کی وجہ سے ہی پاکستان کی معاشی ترقی رکی ہے جبکہ ترقی کی مد میں خرچ ہونے والا پیسہ بعض کرپٹ سیاستدانوں کی جیبوں میں  چلاگیاہے۔ جن کے خلاف آج کل انکوائریاں ہورہی ہیں۔ عوام عدلیہ سے امیدرکھتے ہیں کہ کرپٹ سیاستدانوں کے خلاف صحیح فیصلہ کیاجائے گا تاکہ دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہوجائے۔
بہرحال پاکستان تمام تر رکاوٹوں کے باوجود ایک ایٹمی طاقت بن چکاہے‘ یہ ایٹم بم پاکستان نے اپنی سالمیت کے لئے بنایاہے‘ اس کا مقصد کسی کو ڈرانایا دھمکانا نہیں ہے۔ بلکہ پرامن بقائے باہمی کی بنیاد پر اقوام عالم میں اپنا مقام پیدا کرتے ہوئے عالمی امن کے کاز مزید آگے بڑھانا مقصود ہے۔یاد رکھیئے پاکستان ہے تو ہم ہیں۔

تازہ ترین خبریں

میرجعفر اورمیرصادق ،وہ آپ کولوگوں کوسپون فیڈ کرناہے ،عمران خان کی ایک اورمبینہ آڈیو سامنے آگئی

میرجعفر اورمیرصادق ،وہ آپ کولوگوں کوسپون فیڈ کرناہے ،عمران خان کی ایک اورمبینہ آڈیو سامنے آگئی

والد مسجد میں جھاڑو خود دیتے اور ۔۔ مشہور بھارتی کھلاڑی عرفان پٹھان کے والد مسجد میں کیوں رہتے ہیں؟

والد مسجد میں جھاڑو خود دیتے اور ۔۔ مشہور بھارتی کھلاڑی عرفان پٹھان کے والد مسجد میں کیوں رہتے ہیں؟

پاکستان میں بنی دنیا کی بلند ترین اے ٹی ایم جہاں پہنچنے کے لیے بادلوں سے گزرنا پڑتا ہے٬ کارڈ پھنس جائے تو کیا ہوگا؟

پاکستان میں بنی دنیا کی بلند ترین اے ٹی ایم جہاں پہنچنے کے لیے بادلوں سے گزرنا پڑتا ہے٬ کارڈ پھنس جائے تو کیا ہوگا؟

بڑے یورپی ملک نےپاکستان کے لیے خزانے کامنہ کھول دیا،کتنی امداددینے کااعلان کردیا،بڑی خبرآگئی

بڑے یورپی ملک نےپاکستان کے لیے خزانے کامنہ کھول دیا،کتنی امداددینے کااعلان کردیا،بڑی خبرآگئی

پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی اور وزیر معدنیات پنجاب لطیف نذر کا مستعفی ہونے کا فیصلہ

پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی اور وزیر معدنیات پنجاب لطیف نذر کا مستعفی ہونے کا فیصلہ

عمران خان کی ’مرغی پال سکیم‘دوبارہ شروع کرنے کی تیاریاں لیکن فی سیٹ  قیمت میں کتنا اضافہ کیاگیا؟ جانیں

عمران خان کی ’مرغی پال سکیم‘دوبارہ شروع کرنے کی تیاریاں لیکن فی سیٹ قیمت میں کتنا اضافہ کیاگیا؟ جانیں

علیحدگی کی خبروں کے بعد دپیکا اور رنویر نے بڑااقدام اٹھالیا

علیحدگی کی خبروں کے بعد دپیکا اور رنویر نے بڑااقدام اٹھالیا

ممنوعہ فنڈنگ کیس: عمران خان کیخلاف کیس کے اندراج کی اجازت دیدی گئی،نجی ٹی وی کادعویٰ

ممنوعہ فنڈنگ کیس: عمران خان کیخلاف کیس کے اندراج کی اجازت دیدی گئی،نجی ٹی وی کادعویٰ

78 سالہ بوڑھے کسان نے 18 سالہ لڑکی سے شادی کرلی۔۔ چھوٹی عمر کی لڑکی سے شادی کیوں کی؟

78 سالہ بوڑھے کسان نے 18 سالہ لڑکی سے شادی کرلی۔۔ چھوٹی عمر کی لڑکی سے شادی کیوں کی؟

عالمی مارکیٹ میں کمی کے باوجود مقامی صرافہ بازار میں سونے کی قیمت بڑھ گئی،فی تولہ قیمت کہاں تک جاپہنچی ،جانیں گےتوپریشان ہوجائیں گے

عالمی مارکیٹ میں کمی کے باوجود مقامی صرافہ بازار میں سونے کی قیمت بڑھ گئی،فی تولہ قیمت کہاں تک جاپہنچی ،جانیں گےتوپریشان ہوجائیں گے

میرا قد اتنا لمبا ہے کہ میں گاڑی میں بیٹھ بھی نہیں سکتا ۔۔ بڑے قد والے آدمی نے اپنی زندگی کی حیرت انگیز کہانی سنا دی

میرا قد اتنا لمبا ہے کہ میں گاڑی میں بیٹھ بھی نہیں سکتا ۔۔ بڑے قد والے آدمی نے اپنی زندگی کی حیرت انگیز کہانی سنا دی

آوازیں جوڑ کر آڈیوز بنائی جا رہی ہیں مگر ایسے کبھی بھی آپ این آر او ٹو کو جائز ثابت نہیں کر سکتے ۔۔۔فواد چوہدری نے بڑا چیلنج کر دیا

آوازیں جوڑ کر آڈیوز بنائی جا رہی ہیں مگر ایسے کبھی بھی آپ این آر او ٹو کو جائز ثابت نہیں کر سکتے ۔۔۔فواد چوہدری نے بڑا چیلنج کر دیا

میں نے بھارتی اداکاروں کے ساتھ اس لیے کام کیا کیونکہ ۔۔ پاکستانی اداکار سہیل احمد نے بھارتی فلم میں کیوں کام کیا اور فلم کی کیا خاص بات ہے؟

میں نے بھارتی اداکاروں کے ساتھ اس لیے کام کیا کیونکہ ۔۔ پاکستانی اداکار سہیل احمد نے بھارتی فلم میں کیوں کام کیا اور فلم کی کیا خاص بات ہے؟

بیٹا پڑھنے گیا لیکن پھر کبھی نہ لوٹا ۔۔ والدین کی دنیا اجڑ جانے کی افسوسناک کہانی جس میں وہ اپنے بیٹے سے ہمیشہ کے لیے محروم ہوگئے

بیٹا پڑھنے گیا لیکن پھر کبھی نہ لوٹا ۔۔ والدین کی دنیا اجڑ جانے کی افسوسناک کہانی جس میں وہ اپنے بیٹے سے ہمیشہ کے لیے محروم ہوگئے