02:26 pm
رسوائیوں کا سفر آخر کب تک؟

رسوائیوں کا سفر آخر کب تک؟

02:26 pm

مولانا فضل الرحمن کہتے ہیں کہ  اگر پاکستان نے امریکہ کو اڈے دیئے تو افغانستان سمیت چین اور ایران کا اعتماد کھو دیں گے‘‘ مولانا کا یہ بیان اس موقع پر سامنے
مولانا فضل الرحمن کہتے ہیں کہ  اگر پاکستان نے امریکہ کو اڈے دیئے تو افغانستان سمیت چین اور ایران کا اعتماد کھو دیں گے‘‘ مولانا کا یہ بیان اس موقع پر سامنے آیا کہ جب تقریباً گزشتہ ایک ہفتے سے پاکستان میں امریکہ کو اڈے دینے کی خبروں پر بحث چھڑی ہوئی ہے… یاد رہے کہ اس بحث کا آغاز امریکہ کے نائب وزیر دفاع ڈیوڈ ہیلوے کے اس بیان کے بعد ہوا کہ جو انہوں نے امریکی سینٹ کمیٹی  کو بتایا کہ ’’پاکستان، امریکہ کو زمینی اور فضائی تصرف فراہم کرتا رہے گا … انہوں نے افغانستان میں امن و امان کو ممکن بنانے کے حوالے سے پاکستان کے کردار کی تعریف کرتے ہوئے کہا تھا … پاکستان نے افغانستان میں اہم کردار ادا کیا ہے … پاکستان نے افغانستان میں امریکی عسکری مفادات کی اعانت کے لئے اپنی فضائی حدود اور زمینی سہولتیں استعمال کرنے کی اجازت بھی دی ہے‘‘۔
امریکی نائب وزیر دفاع ڈیوڈ ہیلوے کے اس بیان نے پوری پاکستانی قوم میں بے چینی کی فضا پیدا کر دی ہے ،  گو کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور وزرات خارجہ کے ترجمان نے امریکہ کو پاکستان میں اڈے دینے کی سختی سے تردید کی ہے … لیکن پاکستان کے عوام چونکہ ’’دودھ کے جلے ہوئے ہیں ، اسی لئے چھاچھ کو بھی  پھونک پھونک کر پینے کے عادی ہوچکے ہیں …  بیس سال پہلے پاکستان کے عوام ایک ’’کمانڈو‘‘ کو کولن پاول  کی ایک ٹیلی فون کال پر ڈھیر ہوتے  صرف دیکھ ہی نہیں چکے … بلکہ بھگت بھی چکے ہیں ، اگر اس وقت ’’رسوا کن ڈکٹیٹر‘‘ امریکی کولن پاول کی کال پر ڈھیر ہوکر پاکستان کی فضائی اور زمینی حدود امریکہ کے حوالے نہ کرتا تو ممکن ہے کہ ان ستر سے اسی ہزار پاکستانیوں کی جانیں بچ جاتیں کہ جو امریکی جنگ کے شعلوں کی نذر ہوگئے … ان اسی ہزار پاکستانیوں میں سیکورٹی فورسز کے اہلکار، جید علماء کرام، اسکالرز  اور عام پاکستانی بھی شامل ہیں … رسوا کن ڈکٹیٹر نے پاکستان کی زمین امریکہ کے حوالے کرتے ہوئے قوم کو جس خوش حالی اور اقتصادی ترقی کی خوشخبری سنائی تھی … آج20 سال بعد دیکھ لیجئے کہ امریکہ کو اپنے برادر اسلامی ملک افغانستان کے خلا ف اڈے فراہم کرنے والے پاکستان کی اقتصادی اور معاشی صورتحال  کس کسمپرسی اور بدحالی اور ابتری کا شکار ہے … کوئی دبئی میں مفرور رسوا رکن ڈکٹیٹر سے پوچھ کر قوم کو بتائے کہ نائن الیون کے بعد کولن پاول کی ٹیلی فون کال سے خوفزدہ ہوکر افغان طالبان کے خلاف امریکہ کو اڈے دینے کا ’’پاکستان‘‘ کو کیا فائدہ ہوا؟ ملا محمد عمر مجاہد کے طالبان … اگر نائن الیون سے پہلے افغانستان کی طاقت تھے تو آج بیس اکیس سال بعد بھی ملا محمد عمر مرحوم کے طالبان ہی افغانستان کی طاقت ہیں … رسوا کن ڈکٹیٹر نے بیس سال قبل امریکہ کو پاکستان میں اڈے فراہم کرکے رسوائیوں اور پسپائیوں کا جو سفر شروع کیا تھا … اگر عمران خان نے پرویز مشرف کی بنائی ہوئی قاتل اور خونی خارجہ پالیسیوں کو ختم نہ کیا تو پاکستان کے عوام یہ سمجھنے پر مجبور ہوں گے کہ رسوائیوں اور پسپائیوں کا وہ سفر بیس سال بعد بھی جاری ہے ، امریکہ   طالبان کے ہاتھوں جوتے کھا کر خود تو افغانستان سے فرار کے راستے پر گامزن ہے … لیکن اگر وہ جاتے جاتے ایک دفعہ پھر پاکستان کو آگ اور خون کے سمندر میں دھکیلنا چاہتا ہے ، کہا یہ جارہاہے کہ امریکہ پاکستان کو اربوں ڈالر دے گا… سوال  یہ ہے کہ رسوا کن ڈکٹیٹر کے دور میں بھی امریکہ نے پاکستان کو بڑے ’’ڈالرز‘‘ دیئے تھے لیکن ان ’’ڈالرز‘‘ کا پاکستان کے عوام کو تو کوئی فائدہ حاصل نہ ہوا بلکہ اس رسوا کن ڈکٹیٹر نے تو کراچی کی پاکباز بیٹی ڈاکٹر عافیہ صدیقی سمیت سینکڑوں مسلمان نوجوان امریکہ کو بیچ کر ڈالر کمائے تھے؟ امریکی پٹاری کا کوئی دانش فروش بتاسکتا ہے  کہ ان ڈالروں کا کیا ہوا ؟ صرف ’’ڈالروں‘‘ کا ہی نہیں … بلکہ پرائی آگ کے شعلے پاکستان میں منتقل کرنے والا رسوا کن ڈکٹیٹر آج کہاں ہے؟ جس نے خودغرضی پر مبنی سب سے پہلے پاکستان کا نعرہ لگایا تھا … آج اسے پاک سرزمین پر آنے  سے ہی ڈر کیوں لگتا ہے؟
ہمیں ان ڈالروں سے بچنا چاہیے کہ جن ڈالروں کے ساتھ انسانی لہو اور لاشوں کی داستانیں جڑی ہوئی ہوں، سابق آرمی چیف جنرل اسلم بیگ کے بعد جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کا یہ کہنا کہ امریکہ، افغانستان میں شکست کھاچکا ہے، مگر اب وہ پاکستان میں بیٹھنا چاہتا ہے… خطرے کی بہت بڑی گھنٹی ہے ، مولانا فضل الرحمن ’’کٹھ پتلی‘‘ نہیں بلکہ ’’ویژنری‘‘ سیاست دان ہیں … یہ وہ سیاست دان ہیں کہ جنہیں لندن اور واشنگٹن پر نہیں بلکہ مکہ اور مدینہ پر اعتماد ہے، حکومت اور بالادست قوتوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ (ر) جنرل اسلم بیگ اور مولانا فضل الرحمن جیسی شخصیات کی رائے کو مقدم جانے،  ان کی پکار پر کان دھرے، اب وطن عزیز مزید کسی دہشت گردی کا متحمل نہیں ہوسکتا، ہمارے حکمرانوں نے  گزشتہ20 سالوں میں ’’امریکہ‘‘ کے لئے بہت کچھ کیا ہے … لیکن حکمرانوں نے جتنی زیادہ امریکی ’’غلامی‘‘ میں فدویانہ پن کا اظہار کیا … پاکستان اور اس کی عوام کی مشکلات میں اتنا ہی زیادہ اضافہ ہوا ، ’’امریکہ‘‘ کی وجہ سے پاکستان کے مسائل میں کمی آنے کی بجائے ہمیشہ اضافہ ہی ہوا، اس لئے موجودہ حکومت کو ہوش کے  ناخن لینے چاہئیں اور امریکہ کو افغانستان کے خلاف پاکستانی  سرزمین استعمال کرنے کی قطعاً اجازت نہیں دینی چاہیے … تاکہ چین اور افغانستان کی بھی پاکستان پر بداعتمادی نہ ہو۔
 

تازہ ترین خبریں

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر اتنا رش کیوں رہتا ہے؟  جانیں محسن پاکستان کی قبر پر بسیرا کرنے والا یہ شخص کون ہے؟

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر اتنا رش کیوں رہتا ہے؟ جانیں محسن پاکستان کی قبر پر بسیرا کرنے والا یہ شخص کون ہے؟

وزیراعظم عمران خان 24 اکتوبر کو 3 روزہ دورے پر سعودی عرب جائیں گے

وزیراعظم عمران خان 24 اکتوبر کو 3 روزہ دورے پر سعودی عرب جائیں گے

فیصل آباد میں پی ڈی ایم جلسے میںنظر آنیوالی یہ بزرگ ہستی کون ہے؟  مریم نواز بھی جذباتی ہو گئیں، تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

فیصل آباد میں پی ڈی ایم جلسے میںنظر آنیوالی یہ بزرگ ہستی کون ہے؟ مریم نواز بھی جذباتی ہو گئیں، تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

مرنے کے بعد محسنِِ پاکستان کا مقام یاد آگیا، وفاقی حکومت ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر کیا کرنے جارہی ہے؟ بڑا اعلان کر دیا گیا

مرنے کے بعد محسنِِ پاکستان کا مقام یاد آگیا، وفاقی حکومت ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر کیا کرنے جارہی ہے؟ بڑا اعلان کر دیا گیا

پی ڈی ایم کا فیصل آباد میں جلسہ ، عظمیٰ بخاری نے اپنے ہی کارکن کو تھپڑ کیوں جھڑ دیا؟ وجہ سامنے آگئی

پی ڈی ایم کا فیصل آباد میں جلسہ ، عظمیٰ بخاری نے اپنے ہی کارکن کو تھپڑ کیوں جھڑ دیا؟ وجہ سامنے آگئی

ملک بھر کے بینک بند رہیں گے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا نوٹیفیکیشن جاری

ملک بھر کے بینک بند رہیں گے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا نوٹیفیکیشن جاری

پانچ سالوں میں دل نہیں بھرا؟ اگلی حکومت پھر تحریک انصاف کی ہو گی،غریب عوام کو ڈرائونا خواب دکھا دیا گیا

پانچ سالوں میں دل نہیں بھرا؟ اگلی حکومت پھر تحریک انصاف کی ہو گی،غریب عوام کو ڈرائونا خواب دکھا دیا گیا

حکومت کا تختہ الٹنے کی تیاریاں مکمل ، 12ربیع الاول کے بعد کیا ہونیوالاہے؟ناراض حکومتی اراکین بھی اپوزیشن کیساتھ جا مِلے

حکومت کا تختہ الٹنے کی تیاریاں مکمل ، 12ربیع الاول کے بعد کیا ہونیوالاہے؟ناراض حکومتی اراکین بھی اپوزیشن کیساتھ جا مِلے

ڈرون حملے میں بے گناہوں کی اموات، امریکی حکومت نے مرنے والوں کے اہلخانہ کیلئے کروڑوں روپے معاوضے کا اعلان کر دیا

ڈرون حملے میں بے گناہوں کی اموات، امریکی حکومت نے مرنے والوں کے اہلخانہ کیلئے کروڑوں روپے معاوضے کا اعلان کر دیا

مہنگائی کنٹرول سے باہر ہونے پر وزیراعظم عمران خان کا استعفیٰ؟ خبر نے ملک بھر میں تھر تھلی مچا دی

مہنگائی کنٹرول سے باہر ہونے پر وزیراعظم عمران خان کا استعفیٰ؟ خبر نے ملک بھر میں تھر تھلی مچا دی

گریڈ 1سے 15تک نوکریاں ہی نوکریاں! حکومت نے بیروزگاری جوانوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

گریڈ 1سے 15تک نوکریاں ہی نوکریاں! حکومت نے بیروزگاری جوانوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

کمر توڑ مہنگائی ، گھی اور تیل کے بعد آٹے کا تھیلا بھی 1500میں دستیاب،غریب دو وقت کی روٹی کھانے سے بھی مجبور

کمر توڑ مہنگائی ، گھی اور تیل کے بعد آٹے کا تھیلا بھی 1500میں دستیاب،غریب دو وقت کی روٹی کھانے سے بھی مجبور

تنخواہوں میں بھی مزید اضافہ کرنا ہو گا،  حکومت نے تنخواہ دار طبقے کیلئے بڑا اعلان کر دیا

تنخواہوں میں بھی مزید اضافہ کرنا ہو گا، حکومت نے تنخواہ دار طبقے کیلئے بڑا اعلان کر دیا

اگلے 48گھنٹوں میں کہاں کہاں بارش کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کو ٹھنڈی ٹھنڈی نوید سنا دی

اگلے 48گھنٹوں میں کہاں کہاں بارش کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کو ٹھنڈی ٹھنڈی نوید سنا دی