02:29 pm
جدیددوراورپرانی عینک

جدیددوراورپرانی عینک

02:29 pm

خلیجی ممالک کوافرادی قوت کی فراہمی میں پہلے ہی بھارت پاکستان کوپیچھے چھوڑ چکا ہے۔ بھارتی آرمی چیف کے خلیج کے دورے کی روشنی میں مستقبل قریب میں
(گزشتہ سے پیوستہ)
خلیجی ممالک کوافرادی قوت کی فراہمی میں پہلے ہی بھارت پاکستان کوپیچھے چھوڑ چکا ہے۔ بھارتی آرمی چیف کے خلیج کے دورے کی روشنی میں مستقبل قریب میں بھارت خلیجی ممالک کوفوجی تربیت بھی فراہم کرسکتاہے۔پاکستان کی خارجہ پالیسی میں تاحال خلیجی ممالک کے ساتھ معاشی تعلقات مضبوط بنانے کے لئے کچھ نہیں کیا گیا اور موجودہ جیوپولیٹیکل صورتحال ماضی کے مقابلے میں بالکل الٹ چکی ہے۔خلیج میں مسابقت کی جگہ تیزی سے ختم ہورہی ہے اورپاکستانی حکام کو اس کا ادراک کرنے کی ضرورت ہے۔ قطر اس وقت اپنے دفاع کے لئے زیادہ ترترکی پر انحصارکرتاہے اور پاکستان کوایک قابل اعتبار دفاعی حلیف سمجھتا ہے۔ قطرکے ساتھ بہتر تعلقات بھی پاکستان کو خلیج  میں وسیع ترکردارادا کرنے کاموقع فراہم کرسکتے ہیں اورپاکستان پھر سے خلیج میں سیکورٹی امورمیں اہم کردارحاصل کرسکتاہے۔ چین پاکستان اقتصادی راہداری اس سلسلے میں ایک زبردست  راستہ فراہم کرتی ہے۔
2019 ء میں قطرنے سی پیک میں منجمد کھانے کی صنعت میں سرمایہ کاری کرنے کی خواہش کااظہارکیاتھا۔سی پیک پاک قطر بہتر تعلقات کونئی طاقت فراہم کرسکتاہے۔قطری سرمایہ کاری سے دوسرے خلیجی ممالک کوبھی پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کااعتمادحاصل ہوگا جس کی موجودہ معاشی صورتحال میں پاکستان کو اشد ضرورت ہے۔ موجودہ بدلتی صورتحال میں خلیجی ممالک کی جانب سے پاکستان کوپرانی عینک سے دیکھنے کا امکان کم ہی ہے۔ بنیادی طورپران کے اپنے اسٹرٹیجک اورمعاشی مفادات ہیں اورخلیجی ممالک اس کوہی اہمیت دیں گے۔
دوسری طرف بڑی سرعت کے ساتھ  بھارت نے خلیجی ممالک سے اپنے تعلقات کو استوارکرکے پاکستان کی ناکام خارجہ پالیسی کی نشاندہی کردی ہے اورحیرت انگیز طورپردہلی نے پہلی مرتبہ کھل کرجہاں اسرائیل کے ساتھ بھی دفاعی تعلقات میں بھی بے پناہ اضافہ کیاہے وہاں انفرا سٹرکچرکی تعمیر کے لئے خلیجی ممالک کے حریف ایران کے ساتھ بھی تعاون کررہا ہے بلاشبہ یہ ناممکنات میں سے ہے یا یہ کہ بھارت بین الاقوامی برادری کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوشش کررہاہے مگراب ایران چین معاہدے بھارتی دوستی کے سرپرتلواربن کرلٹک گیا ہے۔ بیسویں  صدی کے اوائل میں یہ ممالک بھارت کو صرف سستی لیبر،گھریلوخدمات اورتعمیراتی خدمات کی وجہ سے جانتے تھے،بیسویں صدی کے اختتام پر بھارتی خارجہ پالیسی نے ڈرامائی اندازمیں اسے تبدیل کردیا۔
  بھارت عرب ممالک کے ساتھ طویل مدت کے سیکورٹی تعلقات بنانے کے لئے کوشاں ہے۔سنی مسلم مذہبی یکجہتی کے ساتھ پاکستان ہمیشہ سے بھارت کی سیاست کا مقابلہ کامیابی سے کرتا آیاہے۔1969ء میں اوآئی سی میں پاکستان نے بھارت کی شمولیت کوناکام بنایا،سعودی عرب کی افواج کوبنانے میں مکمل کرداراداکیا،حتی کہ سعودی عرب کی مددکے لئے عراق کے خلاف 1991ء  اور1979ء میں اپنی فوجیں بھیجیں لیکن متحدہ امارات میں گزشتہ اوآئی سی کے اجلاس میں پاکستان کی عدم شمولیت کی دھمکی اوراحتجاج کے باوجودبھارت کو شریک کرکے پاکستان کویمن جنگ میں فوجیں نہ بھیجنے کی سزادی گئی۔ 
بھارت سعودی عرب اورخلیجی ممالک کوپاکستان کے ساتھ دلی تعاون اورحمایت سے روکنے میں کس طرح کامیاب ہوا؟2016 ء کے اواخر تک مبصرین کی رائے یہی تھی کہ پاکستان کی ترقی صرف سعودی عرب کے ایک اہم شراکت دارکی حیثیت سے ہی ممکن ہوگی لیکن اصل صورت حال اس وقت سامنے آئی جب سعودی عرب نے امارات سے اتحاد کرتے ہوئے یمن میں مداخلت شروع کی۔سعودی عرب نے پاکستان سے یمن جنگ میں شرکت کے لئے ایئر کرافٹ، وارشپ اورفوجیوں کی درخواست کی تھی لیکن پاکستان نے یمن جنگ میں کسی بھی طرح کی شرکت یاتعاون سے معذرت کرلی۔ 
یمن جنگ میں اسلحے کی فراہمی اورفوجیوں کے ذریعے مددسے پاکستان کے صاف انکارنے خلیجی ممالک اورسعودی عرب کو یہ سوچنے پر مجبورکردیاکہ پاکستان کے ساتھ تعلقات فائدے سے زیادہ نقصان میں ہیں۔عرب ریاستوں نے پاکستان کے بجائے دوسرے ممالک سے فوجیوں کی خدمات اورجدید اسلحہ حاصل کیا،انہیں مزید پاکستان کی فوجی تربیت یا ٹیکنیکل تعاون کی ضرورت باقی نہیں رہی،اس کے برعکس بھارت نے  ناصرف معاشی مواقع فراہم کیے ہیں بلکہ مل کرکام کرنے کوبھی ترجیحات میں شامل کیا،بحیرہ عرب میں بحری اورفضائی افواج کی بڑھتی ہوئی تعداد اس بات کی نشاندہی کرتی ہے کہ بھارت اپنے مقاصد میں کامیاب ہوچکاہے۔
پاکستان کایہ خیال تھاکہ اس نے مقبوضہ کشمیرمیں ٹرمپ کارڈرکھاہواہے،تاریخی اعتبار سے کشمیربھارت کی واحد مسلم اکثریتی ریاست ہے  لیکن جب بھارت نے کشمیرکی مخصوص  حیثیت ختم  کرتے ہوئے اسے بھارت کاحصہ بناتے ہوئے بھارت کی ایک ریاست ظاہرکیاتو دوسرے مسلم ممالک یااوآئی سی کی طرف سے بھارت کے خلاف کوئی مذمتی بیان سامنے نہیں آیا،جبکہ دوسری طرف کشمیریوں کی آواز کودبانے کے لئے بھارت نے ظلم کاہرطریقہ استعمال کیااوربھاری اسلحے کوکشمیریوں کے خلاف ممکنہ تشددروکنے کے لئے استعمال کیا،اس ساری صورتحال پرمسلم ممالک کے حکمرانوں کی طرف سے بھارت کے خلاف کوئی ایک مذمتی بیان بھی سامنے نہیں آسکا۔ 
ابھی کل ہی کی توبات ہے کہ خلیج فارس اورپاکستان کے آپس میں بہت اچھے تعلقات تھے، تعاون کایہ عالم تھاکہ پاکستان کے نیوکلیئر پروگرام کے لئے ہمیں سعودی عرب کامکمل تعاون حاصل تھا۔اس بات پراتفاق رائے موجود ہے کہ پاکستان اپنے نیوکلیئر پروگرام کی وجہ سے ایک طاقتورملک بنااوراس نیوکلیئر پروگرام کو اسلامک بم یا مسلم بم کانام بھی دیاگیا،یہ سارا انتظام پاکستان نے1970ء کے اواخر سے بڑے پیمانے پرپھیلے بھارت اور اسرائیل کے جوہری ہتھیاروں کامقابلہ کرنے کے لئے کیاتھا،پوری مسلم دنیامیں اس وقت خوشی کی لہردوڑ گئی تھی جب 1998 ء  میں پاکستان نے ایٹمی دھماکا کیاجس کے فوری بعدپاکستان کوسزادینے کے لئے عالمی پابندیوں میں جکڑدیاگیااوران عالمی پابندیوں میں سعودی عرب ہی تھا جس نے پاکستان کی ہرقسم کی مددکی، لیکن  کیا وجہ ہے کہ ہم یمن کے مسئلے کواحسن طریقے سے حل کرنے میں ناکام رہے جس کا فائدہ بھارت نے ایسااٹھایاکہ ہماری برسوں کی محنت ضائع ہوگئی۔ہم اپنی سفارتی ناکامیوں کواب تک درست نہیں کرسکے اورابھی تک تھالی کے بینگن بنے ہوئے ہیں۔
 

تازہ ترین خبریں

اب ہر شہری اپنی گاڑی کا مالک بنے گا، پاکستان کی سستی ترین گاڑی متعارف کرا دی گئی

اب ہر شہری اپنی گاڑی کا مالک بنے گا، پاکستان کی سستی ترین گاڑی متعارف کرا دی گئی

کرائے کے گھروں میں رہنے والے سرکاری ملازمین کو بڑی خوشخبری سنا دی گئی

کرائے کے گھروں میں رہنے والے سرکاری ملازمین کو بڑی خوشخبری سنا دی گئی

آپ نے مجھ سے کیوں نہیں پوچھا؟ڈی جی آئی ایس آئی تقرری پر وزیراعظم نے آرمی چیف سے استفسار کیا تو انہوں نے کیا جواب دیا؟

آپ نے مجھ سے کیوں نہیں پوچھا؟ڈی جی آئی ایس آئی تقرری پر وزیراعظم نے آرمی چیف سے استفسار کیا تو انہوں نے کیا جواب دیا؟

نومبر میں حکومت ختم ہونےکی پیشنگوئی کے بعد پی ٹی آئی حکومت کو پہلا بڑا دھچکا لگ گیا،وزیراعظم کا انتہائی قریبی ساتھی مستعفی ہو گیا

نومبر میں حکومت ختم ہونےکی پیشنگوئی کے بعد پی ٹی آئی حکومت کو پہلا بڑا دھچکا لگ گیا،وزیراعظم کا انتہائی قریبی ساتھی مستعفی ہو گیا

پنجاب نے ٹھُکرا دیا اور سندھ نے اپنا لیا،ممتاز سرائیکی شاعر شاکر شجاع آبادی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سندھ حکومت نے بڑی پیشکش کر دی

پنجاب نے ٹھُکرا دیا اور سندھ نے اپنا لیا،ممتاز سرائیکی شاعر شاکر شجاع آبادی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سندھ حکومت نے بڑی پیشکش کر دی

ملک بھر میں پٹرولیم کی شدید بحران۔۔ آئندہ چند دنوں میں کیا ہونےوالاہے؟ایسی خبر جو پاکستانیوں کے ہوش اڑا دے گی

ملک بھر میں پٹرولیم کی شدید بحران۔۔ آئندہ چند دنوں میں کیا ہونےوالاہے؟ایسی خبر جو پاکستانیوں کے ہوش اڑا دے گی

فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے کا معاملہ،وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے بڑا اسٹینڈ لے لیا

فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے کا معاملہ،وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے بڑا اسٹینڈ لے لیا

اصل غصہ ہی ہمیں نیوزی لینڈ پر تھا، یہ انڈیا تو راستے میں آگیا" فواد چوہدری کا ایسا بیان کہ پاکستانیوں کے قہقہے رک نہیں رہے

اصل غصہ ہی ہمیں نیوزی لینڈ پر تھا، یہ انڈیا تو راستے میں آگیا" فواد چوہدری کا ایسا بیان کہ پاکستانیوں کے قہقہے رک نہیں رہے

طویل انتظار ختم ہوا، ن لیگی کارکنان تیاری پکڑ لیں ،سابق وزیراعظم کی واپسی کا اعلان کر دیا گیا

طویل انتظار ختم ہوا، ن لیگی کارکنان تیاری پکڑ لیں ،سابق وزیراعظم کی واپسی کا اعلان کر دیا گیا

میں کسی کو چھوڑوں گی نہیں، ثانیہ عاشق نے خود سے منسوب ویڈیوز سے متعلق کیا فیصلہ کر لیا؟ ہلچل مچ گئی

میں کسی کو چھوڑوں گی نہیں، ثانیہ عاشق نے خود سے منسوب ویڈیوز سے متعلق کیا فیصلہ کر لیا؟ ہلچل مچ گئی

نئے ڈ ی جی آئی ایس آئی کا فیصلہ انٹرویوز کے بعد ہوا۔۔۔وزیراعظم ہاؤس کا اعلامیہ

نئے ڈ ی جی آئی ایس آئی کا فیصلہ انٹرویوز کے بعد ہوا۔۔۔وزیراعظم ہاؤس کا اعلامیہ

نادرا نے پاکستانیوں کو بڑی خوشخبری سنا دی، کونسی سروس بالکل مفت ملے گی؟بڑی پریشانی ختم ہو گئی

نادرا نے پاکستانیوں کو بڑی خوشخبری سنا دی، کونسی سروس بالکل مفت ملے گی؟بڑی پریشانی ختم ہو گئی

پنشن و دیگر مراعات کا موجودہ نظام ختم ، حکومت کا سرکاری ملازمین کیلئے پنشن کا نیا سسٹم لانے کا فیصلہ

پنشن و دیگر مراعات کا موجودہ نظام ختم ، حکومت کا سرکاری ملازمین کیلئے پنشن کا نیا سسٹم لانے کا فیصلہ

نواز شریف سے لندن میں ملاقات کرنیوالی بااثر شخصیات کون نکلیں؟ن لیگ نے خود ہی تصدیق کر دی

نواز شریف سے لندن میں ملاقات کرنیوالی بااثر شخصیات کون نکلیں؟ن لیگ نے خود ہی تصدیق کر دی