12:55 pm
آزاد کشمیر کے انتخابات، شکوک و شبہات

آزاد کشمیر کے انتخابات، شکوک و شبہات

12:55 pm

(گزشتہ سے یوستہ)
ایک طرف وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر این سی او سی کا خط میڈیا کو دکھارہے تھے جس میں انتخابات ملتوی کرنے کی تجویز دی گئی ۔ دوسری طرف الیکشن کمیشن کسی خط کو موصول ہونے سے انکاری ہے۔یہ خط 21 مئی کو این سی او سی کے اجلاس میں آزادکشمیر کے انتخابات سے متعلق بحث میں اس اتفاق کے بعد جاری ہوا کہ انتخابی مہم کے دوران سیاسی اجتماعات اور بڑے پیمانے پر میل جول سے کرونا وائرس پھیل سکتاہے۔آزاد کشمیر  کے چار اضلاع میں گزشتہ ہفتوں میں کرونا وائرس کے مثبت کیسوں کی شرح بلند رہی۔اس خط کے بعد آزاد کشمیر کے وزیر اعظم راجہ فارق حیدر اور پاکستان کے سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے الگ الگ پریس کانفرنسیں کیں اور اس تجویز کو مسترد کردیا۔ التوا کو وفاق کی طرف سے انتخابات چرانے کی ایک کوشش قرار دیا۔
یہی نہیں بلکہ راجہ فاروق حیدر وفاق پر کشمیر کو صوبہ بنانے کا الزام لگا رہے ہیں کہ من پسند نتائج کے بعد ایسا کرنا عمران خان حکومت کے لئے آسان ہو جائے گا۔ کشمیر کو صوبہ بنانے کی سازش پر پے درپے بات کی جا رہی ہے۔فاروق حیدر کا الزام ہے کہ انتخابات کے حوالے سے عمران خان کو قوانین کا علم نہیں۔ وہ ہمارے قوانین سے واقف نہیں،ہمارا اپنا مکمل بااختیار الیکشن کمیشن ہے۔وہ وفاق کے خلاف مزاحمت کرنے اور منصفانہ انتخابات میں جو بھی جیتا،اسے تسلیم کرنے کا اعلان کر رہے ہیں۔’’سیز فائر لائن پر حالات پر امن ہیں،آئین میں انتخابات کو ملتوی کرنے کی کوئی گنجائش نہیں۔ اگر ہم پر غیر آئینی اقدام کے لیے دباؤ ڈالا گیا تو کسی کا لحاظ نہیں کریں گے۔‘‘کسی کا لحاظ نہ کرنے کا انتباہ کسی اور طرف بھی اشارہ تصور کیا جا سکتا ہے۔ پیپلزپارٹی بھی انتخابات ملتوی کرنے کی کوشش کا ہر سطح پر مقابلہ کرنے کا اعلان کر رہی ہے۔اس کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کے پاس مختلف حلقوں میں امیدوار ہی نہیں ہیں، جوڑ توڑ میں کامیابی نہیں ہو رہی ہے اس لئے وہ انتحابات ملتوی کروانا چاہتی ہے تاکہ وفاداریاں تبدیل کرنے کے لئے اسے زیادہ وقت مل سکے۔اپوزیشن کہتی ہے کہ عمران خان کا کرونا بہانہ ہے،الیکشن چرانا ہی اصل نشانہ ہے۔
آزاد کشمیر میں اس وقت بھی الیکشن ملتوی نہیں ہوئے جب  2005ء کا شدید زلزلہ آیا جس نے بستیوں کی بستیاں تباہ کر دیں۔ آزادکشمیر کے عبوری آئین 1974ء میں اسمبلی کی مدت پانچ سال ہے۔انتخابات جنگ یا قدرتی آفات کی وجہ سے ملتوی ہو سکتے ہیں۔گزشتہ سال گلگت بلتستان میں ہونے والے قانون ساز اسمبلی کے انتخابات کو تین ماہ کے لیے ملتوی کر دیا گیا تھا۔ یہ انتخابات اگست میں منعقد ہونے تھے۔ کرونا وائرس کی وجہ سے تین ماہ کا التوا ہوا۔ اس دوران حکمران جماعت مسلم لیگ ن کے کئی اہم امیدواروں نے وفاداریاں تبدیل کیں۔ وہ پارٹی چھوڑ کر پی ٹی آئی میں شامل ہو گئے۔ اسی وجہ سے این سی او سی کے خط نے شفاف انتخابات کے انعقاد سے متعلق شکوک و شبہات پیدا کر دیئے ہیں۔کیا پی ٹی آئی آزاد کشمیر میں بھی گلگت بلتستان کی تاریخ دہرانا چاہتی ہے ۔ اس سوال کا جواب یہ ہے کہ آزاد کشمیر میں کوئی قانون صرف آئینی ترمیم سے ہی نافذ کرنا ممکن ہے۔ گلگت بلتستان میں صدارتی آرڈیننس کسی قانون کے نفاذ کے لئے کافی ہوتا ہے۔ عمران خان حکومت کو مزید وقت درکار ہے۔ ن لیگ سے وابستہ لوگوں نے اپنے کام نکال لئے ہیں۔ وہ مفادات حاصل کر چکے ہیں۔ اب اڑان بھرنا ان کے لئے آسان ہے۔ دیکھنا ہے کہ پی ٹی آئی وفاداریاں تبدیل کرنے کی قیمت کیا لگاتی ہے اور معروف پارٹیاں الیکٹیبلز کو اڑان بھرنے سے روکنے کے لئے کیا کرتب دکھاتی ہیں۔

تازہ ترین خبریں

حکومت کی موثر اقتصادی پالیسیوں کے باعث ملکی معیشت استحکام کی جانب گامزن ہے، شفقت محمود

حکومت کی موثر اقتصادی پالیسیوں کے باعث ملکی معیشت استحکام کی جانب گامزن ہے، شفقت محمود

 حاملہ خواتین بھی کورونا ویکسین لگواسکتی ہیں۔ڈاکٹر فیصل سلطان

حاملہ خواتین بھی کورونا ویکسین لگواسکتی ہیں۔ڈاکٹر فیصل سلطان

انسداد دہشتگردی عدالت نے رکن قومی اسمبلی  علی وزیر پر فرد جرم عائد کردی۔

انسداد دہشتگردی عدالت نے رکن قومی اسمبلی  علی وزیر پر فرد جرم عائد کردی۔

انگلینڈ کا دورہ پاکستان کے انکار پر دکھ ہوا. چئیرمین پی سی بی رمیز راجہ 

انگلینڈ کا دورہ پاکستان کے انکار پر دکھ ہوا. چئیرمین پی سی بی رمیز راجہ 

 ملکی سربراہ کو ملنے والے تحائف ماضی کی طرح غائب نہیں ہوتےبلکہ توشہ خانہ میں جمع کروائے جاتے ہیں۔ شہباز گل

ملکی سربراہ کو ملنے والے تحائف ماضی کی طرح غائب نہیں ہوتےبلکہ توشہ خانہ میں جمع کروائے جاتے ہیں۔ شہباز گل

چہلم امام حسینؓ کے موقع پر موبائل فون سروس بند کرنے کا فیصلہ

چہلم امام حسینؓ کے موقع پر موبائل فون سروس بند کرنے کا فیصلہ

قومی کرکٹ ٹیم  کے کھلاڑی 23 ستمبر سے نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ میں جلوہ گر ہوں گے

قومی کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی 23 ستمبر سے نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ میں جلوہ گر ہوں گے

پی ٹی آئی،مسلم لیگ ن اورپاکستان پیپلز پارٹی کاتصادم صرف دکھاوے کی سیاست ہے۔سراج الحق 

پی ٹی آئی،مسلم لیگ ن اورپاکستان پیپلز پارٹی کاتصادم صرف دکھاوے کی سیاست ہے۔سراج الحق 

ڈرائیونگ لائسنس بنوانے والوں کیلئے ایک اور سہولت کا اعلان

ڈرائیونگ لائسنس بنوانے والوں کیلئے ایک اور سہولت کا اعلان

 سواتی صاحب الیکشن کمشنر کس کی گھڑی کس کی چھڑی ہے اس سے ہمیں مطلب نہیں۔ ناصر حسین شاہ

سواتی صاحب الیکشن کمشنر کس کی گھڑی کس کی چھڑی ہے اس سے ہمیں مطلب نہیں۔ ناصر حسین شاہ

ملک کے مختلف شہروں میں تیز بارش ۔۔۔۔ بجلی فراہم کرنے والے متعدد فیڈرز پر فالٹ اور ٹرپنگ جاری

ملک کے مختلف شہروں میں تیز بارش ۔۔۔۔ بجلی فراہم کرنے والے متعدد فیڈرز پر فالٹ اور ٹرپنگ جاری

 اپوزیشن جماعتیں صرف ذاتی مفادات کا تحفظ چاہتی ہیں۔عثمان بزدار

اپوزیشن جماعتیں صرف ذاتی مفادات کا تحفظ چاہتی ہیں۔عثمان بزدار

مریم نواز نے جاتی امرااراضی انتقال منسوخی کیس میں دوبارہ فریق بنانے کی درخواست دائر کردی

مریم نواز نے جاتی امرااراضی انتقال منسوخی کیس میں دوبارہ فریق بنانے کی درخواست دائر کردی

 بی آر ٹی میں سفر کرونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ سے مشروط کر دیا گیا ہے۔

بی آر ٹی میں سفر کرونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ سے مشروط کر دیا گیا ہے۔