01:21 pm
 مسئلہ کشمیر ،پرامن حل !یا فیصلہ کن جنگ ؟

 مسئلہ کشمیر ،پرامن حل !یا فیصلہ کن جنگ ؟

01:21 pm

ساکھ کے لئے  ایک سوالیہ نشان بن چکے ہیں ۔یہ حقیقت بھی واضح ہوچکی ہے کہ کیا اقوام متحدہ جن
 مسئلہ فلسطین اور کشمیر اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل کی Crdibility ساکھ کے لئے  ایک سوالیہ نشان بن چکے ہیں ۔یہ حقیقت بھی واضح ہوچکی ہے کہ کیا اقوام متحدہ جن مقاصد کی تکمیل کے لئے  وجود میں آیا تھا انہیں پورے کرنے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے کہ نہیں ؟ یا یہ چند بڑی طاقتوں جنہیں ویٹو پاور حاصل ہے کا محتاج ہے ۔ ناجائز ریاست اسرائیل کے بیت المقدس پر حملے کے بعد فلسطینی ریاست پر پوری طاقت سے فوجی حملے جسے فرانس ،اور امریکہ کی بھر پور حمائت حاصل تھی جس کی پوری عالمی برادری نے سخت مذمت کی لیکن امریکہ نے دہشت گرد اسرائیلیوں کا ساتھ دیتے ہوئے ایک عجیب وغریب اور غیر سفارتی بیان دیا کہ  ’’ اسرائیل کو اپنے دفاع کا پور احق ہے ‘‘  امریکی صدر جوبائیڈن یہ جان بوجھ کر جھوٹ بولتے ہوئے کہ بھول گیا کہ حملہ فلسطینیوں نے نہیں اسرائیل نے کیا ہے اور دفاع کا حق صرف انہیں ہوتا ہے ۔جن پر حملہ کیا جائے ۔لیکن بھیڑیئے اور میمنے والی بات اسرائیل اور امریکہ پر درست ثابت ہوتی ہے ۔
ایک طرف فرانس اور امریکہ کا چہیتا اسرائیل جو خود کو دنیا کا سب سے بڑا طاقتور دہشت گرد سمجھتا ہے اور امریکہ ،فرانس سمیت اس کے حمائتی بھی اس کے فضائی دفاعی نظام ،  آئرن ڈوم  ، کو دنیا کا ناقابل تسخیر نظام جانتے تھے ، اس نے طاقت کے زعم میں غزہ کی پٹی کو عالمی دہشت گردی کا نشانہ بنا کر 67بچوں سمیت 230مرد وزن  کو  شہید کردیا ۔جب دنیا کے چند باضمیر میڈیا ہائوسزنے بنیادی انسانی حقوق کے خلاف اس کے جنگی جرائم کو بے نقاب کیا تو انہیں بھی فضائی حملے میں تباہ کردیا ۔ جرمنی کے انتخابات میں بھاری اکثریت سے منتخب ہونے والے چانسلر اڈولف ہٹلر نے شائد درست کہا تھا ، ’’جب تک ایک یہودی بھی اس دنیا میں موجود ہے امن کا قیام ناممکن ہے ‘‘ آج اس کی بات حرف بحرف درست ثابت ہورہی ہے ۔ انسانیت کے خلاف اتنے سنگین جنگی جرائم کے باوجود فرانس اورامریکہ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو یرغمال بناتے ہوئے بے بس کردیا اس کے اجلاس اس لئے بند کمرے میںہوئے تاکہ امریکہ کا ناجائر حمایت کا  نقطہ نظر دنیا کے سامنے نہ آئے ۔ پانچویں اجلاس میں امریکہ نے اسرائیل کے خلاف قرار داد پیش نہ ہونے دی۔ 
جنرل اسمبلی میں بحث کے دوران اسرائیلی سفیر بھاگ گیا ، اس کی قرارداد کے بعد بھی امریکہ نے مجرمانہ خاموشی اختیار کی اور غیر اعلانیہ طور پر اسرائیل کا ساتھ دیا ۔ امریکی صدر ٹرمپ نے مسئلہ کشمیرپر ثالثی کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی لیکن بھارت نے بڑی منڈی  ہونے کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے اس کی پس پردہ رضا مندی سے انکار کردیا ۔ 
پاکستانی عوام اور حکومت پاکستان کے لئے  اس کے دیرینہ دوست ترکی کے شہری اور اقوام متحدہ کے صدر   وولکن بوزکر کے دورہ پاکستان کے دوران بیان ،بہت ہی واضح اور چشم کشا ہے ۔ انہوں نے پاکستانی وزیر خارجہ کے مسئلہ فلسطین اور کشمیر پر بات کے جواب میں کہا ،  ’’  مسئلہ فلسطین کو دنیا میں بہت بھاری اکثریت سے حمائت حاصل ہے اور بڑی طاقتیں بھی اس کے حل کی اہمیت محسوس کرتی ہیں ،جبکہ مسئلہ کشمیر ہمارے پاس (اقوام متحدہ میں ) موجود ہے لیکن اسے دنیا میں اتنی حمائت حاصل نہیں پاکستانی وزارت خارجہ کو اس سلسلے میں بہت محنت کرنا ہوگی ،تاکہ دنیا میں اس بارے میں بہت زیادہ حمائت حاصل ہوسکے ‘‘ 
  مقبوضہ جموں وکشمیر پانچ اگست 2019ء کے بعد سے بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ مسلسل بھارتی فوجی محاصرے میں انتہائی مشکل حالات میں زندگی گزار نے پر مجبور ہیں ،اس کے ساتھ ہی کرونا کی وباء کی آڑ میں بھارتی حکومت کشمیری عوام کو مکمل طورپر کچل دینے پر تلی ہوئی ہے ۔ اس ڈبل لاک ڈائون کے باعث مقبوضہ جموں وکشمیر کی معیشت بری طرح تباہ ہوچکی ہے ،سیاحت تجارت، تعلیم اور زندگی کے تمام شعبے بری طرح متاثر ہوئے ہیں ۔ ان مشکل ترین حالات میں بھی کشمیری عوام حق خودا رادیت کے مطالبے پر چٹان کی طرح ڈٹے ہوئے ہیں اور بھارتی غلامی سے آزادی حاصل کرنے کی دیوانہ وار جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں ۔ 
یورپ میں فرانس سمیت بعض ممالک اور امریکہ جس نے 100سال پہلے ،سیا ہ فام باشندوں کے شہر تلسا میں نسل کشی کرکے لاکھوں سیاہ فام باشندوں کو ہلاک کردیاتھا ، اب معذرت کررہا ہے، مسئلہ کشمیر پر اپنے تجارتی مفادات کی خاطرکھل کر بھارت کاساتھ دے رہے ہیں ۔ پاکستان کی مسئلہ کشمیر پر سفارتی کاری کے بارے میں سابقہ پاکستانی سفیر، میڈیا اور پبلک بیانات میں یہ واضح کرچکے ہیں کہ نوازلیگ کی حکومت میں بھارت نواز پالیسی پر عمل کرنے اور کل جماعتی حریت کانفرنس سے دوری اختیار کرنے کا حکم دیا گیا   اور خود ان سے دور  رہ کر عملی ثبوت دیا ۔ جس کا ناقابل تردید ثبوت نریندر مودی کی حلف وفاداری میں سید علی شاہ گیلانی سے ملاقات نہ کرنا اور اپنے بچوں کو تجارت کی غرض سے جندال سے کئی گھنٹے کی ملاقاتیں کروانا ، روس کے شہر اوفاکی کانفرنس میں مسئلہ کشمیر کا ذکر تک گول کرجانا ، یہ پاکستانی حکمرانوں کی ناکام خارجہ پالیسی رہی ۔ اسی حکومت کے غیر اعلانیہ وزیر خارجہ سرتاج عزیز کی بیوی کو اپنی NGOاور سکول کے لئے  فنڈ بھارتیوں نے دیئے ،تو پھر خارجہ پالیسی بھی کشمیر کے لئے  نہیں بھارت نواز ہوگی ۔
(جاری ہے)
 

تازہ ترین خبریں

محرم الحرام میں مجالس اور جلوسوں کیلئے ایس او پیز جاری

محرم الحرام میں مجالس اور جلوسوں کیلئے ایس او پیز جاری

پاکستان کے اہم شہر میں 15 سے زائد شادیاں کرنے والافراڈیا ، پولیس حرکت میں آگئی

پاکستان کے اہم شہر میں 15 سے زائد شادیاں کرنے والافراڈیا ، پولیس حرکت میں آگئی

پینٹاگون کے نزدیک فائرنگ ، کئی افرادکے زخمی ہونے کی اطلاعات

پینٹاگون کے نزدیک فائرنگ ، کئی افرادکے زخمی ہونے کی اطلاعات

قومی اسمبلی ملازمین کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری ۔۔۔ کورونا ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کے بغیر پارلیمنٹ ہاؤس میں داخلہ ممنوع قرار

قومی اسمبلی ملازمین کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری ۔۔۔ کورونا ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کے بغیر پارلیمنٹ ہاؤس میں داخلہ ممنوع قرار

الیکشن کمیشن کی عمارت کے دوسرے فلور پر آگ لگ گئی 

الیکشن کمیشن کی عمارت کے دوسرے فلور پر آگ لگ گئی 

 قائد اعظم پورٹریٹ کے سامنے غیر اخلاقی تصاویر بنوانے کے واقعے پر مقدمہ در ج

قائد اعظم پورٹریٹ کے سامنے غیر اخلاقی تصاویر بنوانے کے واقعے پر مقدمہ در ج

15 سے زائد شادیاں کرنے والے فراڈئے کے بیٹے کو ساہیوال پولیس نے گرفتار کرلیا 

15 سے زائد شادیاں کرنے والے فراڈئے کے بیٹے کو ساہیوال پولیس نے گرفتار کرلیا 

قومی اسمبلی میں حکومتی جماعت کے دوارکان کے مابین شدید تلخ کلامی

قومی اسمبلی میں حکومتی جماعت کے دوارکان کے مابین شدید تلخ کلامی

شہبازشریف نےانٹرویودےدیالیکن ہمیں اب جواب دیناپڑتاہے۔ شاہد خاقان عباسی 

شہبازشریف نےانٹرویودےدیالیکن ہمیں اب جواب دیناپڑتاہے۔ شاہد خاقان عباسی 

عمران صاحب صبح اٹھتے ہی آپ کا کام صرف عوام کا آٹا چینی بجلی گیس دوائی مہنگی کرنا ہوتا ہے۔ مریم اورنگزیب

عمران صاحب صبح اٹھتے ہی آپ کا کام صرف عوام کا آٹا چینی بجلی گیس دوائی مہنگی کرنا ہوتا ہے۔ مریم اورنگزیب

عمران خان سیاسی بصیرت سے تاحال محروم ہیں اور جمہوریت سے نفرت کرنے والی سوچ کے مہرے کے سوا کچھ نہیں۔ فیصل کریم کنڈی

عمران خان سیاسی بصیرت سے تاحال محروم ہیں اور جمہوریت سے نفرت کرنے والی سوچ کے مہرے کے سوا کچھ نہیں۔ فیصل کریم کنڈی

 چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان

چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان

ن لیگی رکن پارلیمنٹ کے بیٹے کانیا کارنامہ ۔۔۔ اپنی جگہ دوسرے بندے کو امتحانی ہال میں بٹھا دیا

ن لیگی رکن پارلیمنٹ کے بیٹے کانیا کارنامہ ۔۔۔ اپنی جگہ دوسرے بندے کو امتحانی ہال میں بٹھا دیا

نوازشریف کوکرکٹ کاشوق تھاوہ بائی چانس وزیراعظم بن گئے۔ عمران خان 

نوازشریف کوکرکٹ کاشوق تھاوہ بائی چانس وزیراعظم بن گئے۔ عمران خان