01:23 pm
نکاح، جنازہ، مولانا اور چودھری

نکاح، جنازہ، مولانا اور چودھری

01:23 pm

مغربی آفت کی پڑیا ملالہ یوسفزئی کے بعد وزیراطلاعات فواد چودھری  بھی نکاح کے حوالے سے محو گفتگو ہوئے  ہیں، کہتے ہیں
مغربی آفت کی پڑیا ملالہ یوسفزئی کے بعد وزیراطلاعات فواد چودھری  بھی نکاح کے حوالے سے محو گفتگو ہوئے  ہیں، کہتے ہیں کہ مولانا کا اصل کام نکاح کرانا ہے، سیاست ان کے بس کی بات نہیں، ’’ملالہ‘‘ نے تو نکاح کی عظیم سنت پر حملہ آور ہوکر صرف پارٹنر رکھنے کی بات کی ہے … مگر فواد چودھری نہ صرف ’’نکاح‘‘ کو تسلیم کرتے ہیں … بلکہ انہیں پیپلز پارٹی اور ن لیگ  کے درمیان نکاح کی بھی فکر ہے … اب کیا کیا جائے پی ڈی ایم کے سیکرٹری اطلاعات حافظ حمد اللہ کا؟ کہ جنہوں نے فواد چودھری کو ’’سیاسی لوٹا قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمن صرف ’’نکاح‘‘ ہی نہیں بلکہ ’’جنازہ‘‘ بھی پڑھاتے ہیں، خواہ وہ جنازہ سیاسی ہی کیوں نہ ہو؟ انہوں نے کہا کہ فواد چودھری کی سیاسی تاریخ ایک لوٹے کے سوا کچھ بھی نہیں ، جن کا سیاسی قبلہ کبھی پنڈی، کبھی زرداری ہائوس رہا اور اب بنی گالہ ہے، کٹھ پتلی حکومت کا سیاسی جنازہ مولانا فضل الرحمن ہی پڑھائیں گے… حافظ حمد اللہ کے اس بیان کو پڑھنے کے بعد مجھے مسلک اہلحدیث  کے جید اور نامور علامہ احسان الٰہی ظہیر شہید بہت یاد آئے جنہوں نے غالباً جنرل ضیاء الحق کو للکارتے ہوئے کہا تھا کہ ’’تیرے مارشل لاء کا جنازہ میں نکالوں گا اور اسٹیج پر بیٹھے ہوئے مولانا فضل الرحمن کی طرف اشارہ کرکے کہا تھا کہ یہ جنازہ مولانا فضل الرحمن پڑھائیں گے‘‘ یعنی کئی دہائیاں قبل علامہ احسان الٰہی ظہیر شہید ہی نہیں … بلکہ2021 ء کے اس جدید دور میں بھی لوگوں کو یقین ہے کہ ڈکٹیٹروں، آمروں اور ان کے مالیشوں کی حکومت کا جنازہ مولانا فضل الرحمن ہی پڑھانے کی طاقت رکھتے ہیں۔
فواد چودھری اور حافظ حمد اللہ کے بیانات پڑھ کر اندازہ ہوا کہ حکومت ہو یا اپوزیشن ’’مولانا‘‘ کا جادو دونوں طرف سر چڑھ کر بول رہا ہے  … حکومت ’’مولانا‘‘ کے نکاح پڑھانے کی اہلیت تسلیم کرتی ہے، جبکہ اپوزیشن نکاح اور جنازہ پڑھانے کی اہلیت کی اقراری ہے … ر ہ گئی بات ’’مولانا کی ’’سیاست‘‘ کی، تو مسٹر فواد چودھری کو چاہیے کہ وہ اس حوالے سے  اپنے ’’ننھے‘‘ سے دماغ پر بوجھ مت ڈالیں …کیوں کہ نوابزادہ نصراللہ خانؒ سے لے کر مولانا شاہ احمد نورانیؒ اور قاضی حسین احمد تک سب کے سب مولانا کی ’’سیاست‘‘ کے قائل رہے ہیں، رہ گئے آصف علی زرداری اور میاں محمد نواز شریف وہ تو مولانا کی زیر صدارت پی ڈی ایم کے اجلاسوں میں مولانا کی سیاسی سربلندی کو تسلیم کرچکے ہیں، چودھری شجاعت حسین، چودھری پرویز الٰہی  اسفند یار ولی ، یہ سب بھی مولانا کی سیاست کے حق میں رطلب اللسان رہے ہیں … اگر اب بھی ’’مولانا‘‘ کو ’’سیاست‘‘ نہیں آتی تو پھر ملالہ کی طرح فواد چودھری کے اس بیان پر بھی انا اللہ ہی پڑھا جاسکتا ہے۔
اس خاکسار نے اپنے جمعتہ المبارک کے دن چھپنے والے کالم میں ’’صحافت‘‘ کے آزادی پسند مامے، چا چوں کو چیلنج دیا تھا کہ وہ ذرا … ملالہ یوسفزئی کے اس متنازعہ بیان کی مذمت کریں کہ نکاح کی سنت کی توہین کے جس بیان نے پوری پاکستانی قوم کو تڑپا کر رکھ دیا ہے آج چوتھا دن گزر رہا ہے کہ ان کی طرف سے ’’ملالہ‘‘ کے اس  متنازعہ بیان کی مذمت نہ پرنٹ، نہ الیکٹرانک اور نہ ہی سوشل میڈیا پر آئی، کیا انہیں ملالہ کی مذمت کرنے سے بھی فوجی جرنیلوں یا آئی ایس آئی نے روک رکھاہے؟ حقیقت یہ ہے کہ آج کل فوج یا آئی ایس آئی کے خلاف بولنا تو فیشن بن چکا ہے … ہاں البتہ ملالہ یوسفزئی کے خلاف بیان دینا انہیں اس لئے مشکل لگتا ہے کیونکہ دونوں کے عالمی سرپرست مشترک ہیں، کیا ان سیکولر شدت پسند اینکرینوں اور اینکرز میں جرات ہے کہ وہ ’’ملالہ‘‘ کے خلا ف کوئی پروگرام کرسکیں؟ ہرگز نہیں … جس ملک میں شاہد خاقان عباسی جیسا وزیراعظم مغربی آفت کی پڑیا ملالہ یوسفزئی کو پروٹوکول دینے پر مجبو ر ہو جائے، اس ملک کے ا ینکرز اور ا ینکرینوں کی پھر کیا حیثیت باقی رہ جاتی ہے؟ شاہد خاقان عباسی کو چاہیے کہ وہ قوم کو بتائیں کہ ان کی حکومت ’’ملالہ‘‘ جیسی متنازعہ لڑکی کو ’’تعلیم کی دیوی‘‘ اور نجانے کیا کیا قرار کیوں دیتی رہی؟ جس لڑکی نے اپنی کتاب میں نہ صرف ناموس رسالت بلکہ فوجی اداروں کو بھی نشانہ بنایا … اس لڑکی کو مسلم لیگ ن کی حکومت نے پروٹوکول کس کے اشارے پر دیا تھا؟ مسلم لیگ ن کے دامن پر جہاں ایک طرف غازی ممتاز قادری شہیدکے خون کے چھینٹے لگے ہوئے  ہیں … وہاں دوسری طرف ’’ملالہ‘‘ جیسی متنازعہ لڑکی اور مغربی ہتھیار کو پاکستان میں ’’رانیوں‘‘ والے پروٹوکول دینے کے بھی دھبے لگے ہوئے ہیں، جن کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ فلاں کے ٹاک شو کی ریٹنگ بہت زیاد ہ ہے … یا فلاں کے فالورز بہت زیادہ ہے۔
انہیں انڈیا کے اداکاروں اور یورپ کی رقاصائوں کا تو خیال رہتا ہے لیکن اسلام کے خلاف بھونکنے والوں کے جواب دینے کا انہیں کبھی خیال تک نہیں آیا تو کیوں؟ ’’ملالہ‘‘ جیسی لڑکیوں کی حوصلہ افزائی کرکے اسے گمراہی کے اس مقام تک پہنچانے میں ہمارے میڈیا کے ’’آزادی پسندوں‘‘  کا پورا پورا ہاتھ ہے … مولانا فضل الرحمن سے جب کسی صحافی نے ملالہ یوسفزئی کے اس متنازعہ بیان کے حوالے سے سوال کیا تو وہ طرح دے گئے، لیکن یہ بات واضح کر دی کہ دینی احکامات ان کے لئے ہیں کہ جو دین کو تسلیم کرنے والے ہوں، وزیر اطلاعات فواد چودھری اگر کہیں موجود ہوں تو انہیں چاہیے کہ وہ  ملالہ کو سمجھانے کی کوشش کریں کہ بچیوں کو ایسی شرمناک باتیں زیب نہیں دیتیں ’’نکاح‘‘ کیوں کیا جاتا ہے؟ اگر اس کے حوالے سے اس کے انگریز دماغ نے کچھ سوالات  پیدا کر دیئے تھے تو اسے چاہیے تھا کہ ان سوالوں کا جواب وہ اپنے امی، ابو سے لے لیتی، خوامخواہ پوری دنیا میں اپنی جگ ہنسائی کروا کر اسے ’’ڈالروں‘‘ اور یہودو نصاریٰ کی حمایت کے علاوہ اور کیا ملا؟ نکاح او ر جنازہ پڑھانا … دونوں ہی اعلیٰ اور اچھے کام ہیں، فواد چودھری کو چاہیے کہ وہ بھی ان اچھے کاموں کو سیکھنے کی کوشش کریں۔
 

تازہ ترین خبریں

محرم الحرام میں مجالس اور جلوسوں کیلئے ایس او پیز جاری

محرم الحرام میں مجالس اور جلوسوں کیلئے ایس او پیز جاری

پاکستان کے اہم شہر میں 15 سے زائد شادیاں کرنے والافراڈیا ، پولیس حرکت میں آگئی

پاکستان کے اہم شہر میں 15 سے زائد شادیاں کرنے والافراڈیا ، پولیس حرکت میں آگئی

پینٹاگون کے نزدیک فائرنگ ، کئی افرادکے زخمی ہونے کی اطلاعات

پینٹاگون کے نزدیک فائرنگ ، کئی افرادکے زخمی ہونے کی اطلاعات

قومی اسمبلی ملازمین کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری ۔۔۔ کورونا ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کے بغیر پارلیمنٹ ہاؤس میں داخلہ ممنوع قرار

قومی اسمبلی ملازمین کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری ۔۔۔ کورونا ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کے بغیر پارلیمنٹ ہاؤس میں داخلہ ممنوع قرار

الیکشن کمیشن کی عمارت کے دوسرے فلور پر آگ لگ گئی 

الیکشن کمیشن کی عمارت کے دوسرے فلور پر آگ لگ گئی 

 قائد اعظم پورٹریٹ کے سامنے غیر اخلاقی تصاویر بنوانے کے واقعے پر مقدمہ در ج

قائد اعظم پورٹریٹ کے سامنے غیر اخلاقی تصاویر بنوانے کے واقعے پر مقدمہ در ج

15 سے زائد شادیاں کرنے والے فراڈئے کے بیٹے کو ساہیوال پولیس نے گرفتار کرلیا 

15 سے زائد شادیاں کرنے والے فراڈئے کے بیٹے کو ساہیوال پولیس نے گرفتار کرلیا 

قومی اسمبلی میں حکومتی جماعت کے دوارکان کے مابین شدید تلخ کلامی

قومی اسمبلی میں حکومتی جماعت کے دوارکان کے مابین شدید تلخ کلامی

شہبازشریف نےانٹرویودےدیالیکن ہمیں اب جواب دیناپڑتاہے۔ شاہد خاقان عباسی 

شہبازشریف نےانٹرویودےدیالیکن ہمیں اب جواب دیناپڑتاہے۔ شاہد خاقان عباسی 

عمران صاحب صبح اٹھتے ہی آپ کا کام صرف عوام کا آٹا چینی بجلی گیس دوائی مہنگی کرنا ہوتا ہے۔ مریم اورنگزیب

عمران صاحب صبح اٹھتے ہی آپ کا کام صرف عوام کا آٹا چینی بجلی گیس دوائی مہنگی کرنا ہوتا ہے۔ مریم اورنگزیب

عمران خان سیاسی بصیرت سے تاحال محروم ہیں اور جمہوریت سے نفرت کرنے والی سوچ کے مہرے کے سوا کچھ نہیں۔ فیصل کریم کنڈی

عمران خان سیاسی بصیرت سے تاحال محروم ہیں اور جمہوریت سے نفرت کرنے والی سوچ کے مہرے کے سوا کچھ نہیں۔ فیصل کریم کنڈی

 چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان

چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان

ن لیگی رکن پارلیمنٹ کے بیٹے کانیا کارنامہ ۔۔۔ اپنی جگہ دوسرے بندے کو امتحانی ہال میں بٹھا دیا

ن لیگی رکن پارلیمنٹ کے بیٹے کانیا کارنامہ ۔۔۔ اپنی جگہ دوسرے بندے کو امتحانی ہال میں بٹھا دیا

نوازشریف کوکرکٹ کاشوق تھاوہ بائی چانس وزیراعظم بن گئے۔ عمران خان 

نوازشریف کوکرکٹ کاشوق تھاوہ بائی چانس وزیراعظم بن گئے۔ عمران خان