12:52 pm
آزادکشمیر:زلزلہ سے تباہ تعلیمی اداروں کی داستان

آزادکشمیر:زلزلہ سے تباہ تعلیمی اداروں کی داستان

12:52 pm

٭ سیاسی فضولیات سے پہلے عوامی مسائل: آزادکشمیر کے ضلع نیلم کے ایک شہری ’چودھری عبدالشکور طیبی‘ نے مراسلہ بھیجا ہے کہ ’’ضلع نیلم کی یونین کونسل باڑیاں کے گائوں چولاہی میں 2005ء کے زلزلہ میں پرائمری سکول تباہ ہو گیا تھا۔ اسے کسی حکومت نے بحال نہیں کیا۔ 16 سال ہو گئے، بچے آج بھی چھت کے بغیر کھلے آسمان تلے پڑھ رہے ہیں۔ مراسلہ کے مطابق پیپلزپارٹی کے دور میں میاں عبدالوحید آزاد کشمیر اسمبلی کے رکن اور وزیر تعلیم بنے۔ الیکشن سے پہلے اس علاقہ میں آئے، سکول کو بحال کرنے اور چھت فراہم کرنے کا حلفیہ وعدہ کیا مگر کامیاب ہونے کے بعد کبھی ادھر کا پھیرا بھی نہ لگایا۔ پیپلزپارٹی کی حکومت کھا پی کر فارغ ہو گئی تو ن لیگ کا دور آ گیا۔ موجودہ اسمبلی کے سپیکر شاہ غلام قادر نے بھی سکول بحال کرنے کا حلفیہ وعدہ کیا۔ انہیں عوام نے 42000 ووٹ دے کر کامیاب کرادیا۔ انہوں نے بھی وعدہ تو کیا پورا کرنا تھا، 5 سال میں کچھ بھی نہ کیا۔ سکول کو اجڑے 16 سال ہو گئے۔ ستم یہ ہے کہ یہ لوگ اب پھر عوام سے ووٹ مانگنے آ رہے ہیں۔‘‘
٭قارئین کرام نوٹ کریں کہ شاہ غلام قادر اور مراسلہ نگار عبدالشکور، دونوں کا تعلق ن لیگ سے ہے۔ مراسلے میں صرف ایک سکول کا ذکر کیا گیا ہے مگر میری اطلاع کے مطابق تو آزاد کشمیر میں بے شمار پرائمری و ہائی سکول اسی حالت میں ہیں۔ مجھے پیپلزپارٹی کے دور میں ایک بار راولہ کوٹ میں ڈاکٹر محمد صغیر صاحب کی ایک کتاب کی تقریب میں شرکت کا موقع ملا۔ سٹیج پراس وقت کے صدر محمد یعقوب خاں اور میں اکٹھے بیٹھے تھے۔ میں نے یعقوب خاں صاحب سے پوچھا کہ زلزلہ کو 10 سال سے زیادہ عرصہ ہو گیا، میں نے اپنی آنکھوں سے بے شمار اجڑے ہوئے سکول دیکھے ہیں جو چھت کے بغیر ہیں اور بچے بچیاں شدید سردی میں کھلے آسمان تلے پڑھ رہی ہیں۔ آزاد کشمیر کو زلزلہ زدگان کی بحالی کے لئے اربوں ڈالر ملے تھے، وہ کہاں گئے؟ یعقوب خاں صاحب کو یہ سوال بہت ناگوار گزرا۔ جواب دیا کہ ’’کام شروع کرایا تھا، ٹھیکیدار بھاگ گئے!‘‘ ظاہر ہے ٹھیکیداروں کو ان کا معاوضہ نہیں ملا تو انہوں نے بھاگنا ہی تھا۔ صدر آزادکشمیرنے مزیدسوال کا جواب دینا پسند نہ کیا کہ اربوں کے فنڈز کہاں کہاں تقسیم ہوئے؟ انہوں نے میری طرف سے، منہ موڑ لیا! پھر ایک شادی کی تقریب میں موجودہ وزیراعظم راجہ فاروق حیدر سے بھی میں نے یہی سوال کیا۔ ان کا بھی موڈ خراب ہو گیا! میں بہت دفعہ آزاد کشمیر گیا ہوں، ہر بار پہلے سے زیادہ مایوس ہو کر آتا ہوں۔ ایک بار مظفر آباد میں بتایا گیا کہ وہاں کے سول ہسپتال میں کوئی دوا موجود نہیں۔ ڈاکٹر نسخہ لکھ دیتے ہیں۔ دوائیں بازار سے خریدنا پڑتی ہیں۔ کوئی معمولی آپریشن بھی ہو تو اسلام آباد بھیج دیتے ہیں…اور…اور یہ کہ رات کے وقت ہسپتال بند ہوتا ہے!! یہ چند سال پہلے کی بات ہے، ممکن ہے اب صورت حال بہتر ہو! بات لمبی ہو رہی ہے۔ اس وقت حالت یہ ہے کہ آزاد کشمیر کی 20 فیصد آبادی یورپ اور امریکہ وغیرہ میں آباد ہو چکی ہے۔ وہ اپنے لواحقین کو بھاری رقمیں بھیجتے ہیں، اس سہولت کے باعث ان کے نوجوانوں نے تعلیم کو خیرباد کہہ کر ’دوسرے کام‘ سنبھال لئے ہیں۔ ان کی چشم دید تفصیل پھر کسی وقت بیان کروں گا!
٭سندھ اور وفاق میں پانی اور فنڈز کی تقسیم پر دونوں طرف سے ایک دوسرے کے خلاف سخت بیانات کا لاٹھی چارج کیا جا رہا ہے یوں لگتا ہے کہ اب دونوں طرف سے ہتھیار بھی نکل آئیں گے۔ سندھ و الے کہہ رہے ہیں کہ ان کے حصے کا پانی اور فنڈز پنجاب کو دے دیئے گئے ہیں۔ پنجاب والے چیخ رہے ہیں کہ پنجاب کا پانی تو سندھ کو دے دیا گیا ہے اور پنجاب کے کسان تباہ ہو رہے ہیں۔ وفاقی حکومت کے چوبدار چلا رہے ہیں کہ سندھ کو اس کے حصے سے زیادہ فنڈز دیئے گئے ہیں پھر بھی شور مچایا جا رہا ہے! یہ سارا شور شرابا اس لئے ہو رہا ہے کہ 11 جون کو وفاقی بجٹ آ رہا ہے اسے نوچنے کھسوٹنے کے لئے ہاتھوں میں لاٹھیاں اٹھائی گئی ہیں۔ ویسے ایک بات سمجھ میں نہیں آ رہی کہ پنجاب کی حکومت کس بنا پر اپنے حکومتی ارکان میں تین کھرب 50 ارب (350 ارب) روپے تقسیم کر رہی ہے؟ یہ فنڈز ضلعی ترقیاتی کاموں کی آڑ میں دیئے جائیںگے۔ عثمان بزدار صاحب! کیا صرف حکومتی حاشیہ بردار ارکان کے علاقوں میں ترقی ہو گی؟ اپوزیشن کے ارکان کے ضلعوں کو نظر انداز کرنا کون سی قومی خدمت ہے؟ سرکاری خزانہ عوام کی ملکیت ہے، آپ نے اسے ذاتی ملکیت بنا لیا ہے!!
٭سکھوں نے دنیا بھر میں 6 جون کو امرتسر کے قدیم مرکزی گوردوارہ ’’گولڈن ٹمپل‘‘ پر بھارتی فوج کے حملے سے تقریباً آٹھ ہزار سکھوں کے ہلاک کئے جانے کا سوگ منایا۔ بھارتی حکومت نے سرکاری طور پر 554 افراد کی ہلاکت بتائی تھی۔ ملک و قوم اس بڑے خونریز سانحہ کو بھلا نہیں سکی۔ تفصیل تو بہت لمبی چوڑی ہے، مختصر یہ کہ 1984ء میں خالصتان کی تحریک بہت زور پکڑ گئی تھی۔ گولڈن ٹمپل باقاعدہ اس تحریک کا مرکز بن گیا تھا۔ وزیراعظم اندراگاندھی نے فوج کو اس تحریک کو کچلنے کا حکم دیا۔ فوج نے یکم جون سے کارروائی شروع کر دی۔ شہر میں کرفیو شروع ہو گیا۔ 6 جون کو گوردوارہ میں ایک خاص تقریب کے لئے ہزاروں سکھ جمع تھے۔ فوج کو خدشہ ہوا کہ یہ ہجوم فوج پر حملہ کرنے والا ہے۔ تقریباً 11 ہزار فوجیوں نے ٹینکوں اور بکتر بند گاڑیوں سے گوردوارہ پر زبردست گولہ باری کی۔ سکھوں کے مطابق گوردوارہ کے اندر 105 باہر تقریباً آٹھ ہزار سکھ مارے گئے (سکھ انہیں شہید کہتے ہیں!) سرکاری بیان کے مطابق جوابی فائرنگ سے 57 فوجی بھی ہلاک ہوئے۔ فوج کی گولہ باری سے گوردوارہ کی مرکزی عمارت اور دوسری عمارتیں ملبہ کے ڈھیر بن گئیں۔ بعد میں سرکاری طور پر مرکزی ’’ہرمندر‘‘ عمارت کو تعمیر کیا گیا مگر سکھوں نے اسے قبول نہ کیا اور اسے گرا کر پھر نئی عمارت بنائی۔ میں اس نئی عمارت میں دوبار جا چکا ہوں۔ اس میں دن رات ’’گوروگرنتھ صاحب‘‘ کا پاٹھ ہوتا ہے۔ اسے شروع کرنے سے پہلے رات کے وقت اس سارے حصے کو دودھ سے دوھویا جاتا ہے۔ گوردوارہ میں روزانہ 10 ہزار افراد کو دو وقت کھانا دیا جاتا ہے۔ یہ سارا کام رضاکارانہ طور پر کیا جاتاہے۔
٭جِس ’صحافی‘ کو اس کے اخبار نے فوج کے خلاف گالیاں دینے اور عوام کو بغاوت پر اکسانے کے الزام میں ملازمت سے فارغ کیا ہے، اس نے بھارت کے پاکستان خاص طور پر پاک فوج کے دشمن بھارتی ڈیجی ٹل چینل اور اخبار "The Print" میں کالم لکھنے شروع کر دیئے ہیں۔ ظاہر ہے بھاری معاوضہ ملے گا۔ اس چینل اور اخبار میں پاکستان اور فوج کے خلاف حسین حقانی، الطاف حسین، بابر غوری وغیرہ کے مستقل کالم نشر اور شائع ہوتے ہیں۔ اسے بھارت کا مقبول ترین چینل قرار دیا جا رہا ہے۔ اس میں پاکستان کی ایک خاص ’مشہور‘ اینکر پرسن خاتون اور دوسرے مادرپدر آزادی کے علمبردار پاکستان کے ’خیرخواہ‘ صحافیوں اور اینکر پرسنوں کے بھی باقاعدہ مضامین اور کالم آ رہے ہیں۔ ملازمت سے فارغ ہونے والے اس صحافی نے ایک کالم اور انٹرویو میں کہا ہے کہ ’’ماحول کچھ ایسا بن چکا تھا کہ میں فوج کے بارے میں کچھ زیادہ بول گیا تھا۔ مجھے کوئی پروا نہیں کہ مجھے اخبار نے فارغ کر دیا ہے!‘‘ ظاہر ہے بہتر سرپرست مل جائیں تو کس بات کی پروا ہو سکتی ہے؟
٭ایک دلچسپ خبر: بھارت کے صوبہ اترپردیش (آبادی پاکستان کے برابر) کے گائوں ’’نوِنڈا‘‘ میں ایک دلہن ’موہنی‘ کے گھر پر بیک وقت دو باراتیں پہنچ گئیں۔ لڑکی ایک نوجوان اجیت سے شادی کرنا چاہتی تھی، والدین نے زبردستی دوسرے نوجوان ببلو کی بارات بلا لی۔ اجیت پہلے بارات لے کر آ گیا۔ لڑکی نے بھاگنے کی تیاری کر رکھی تھی، بارات پہنچتے ہی اجازت کے ساتھ بھاگ گئی۔ببلو کی بارات آئی تو ہنگامہ شروع ہو گیا۔ اس وقت اجیت، ببلو، دلہن ’موہنی‘ اور دونوںکے ماں باپ تھانے کی حوالات میں بند ایک دوسرے کا منہ دیکھ رہے ہیں!
٭کسی نے پنجاب کی وزیرصحت یاسمین راشد کو بتایا کہ چچا شہبازشریف کی نوازشریف کی پالیسیوں کے برعکس آزادانہ سرگرمیوں اور تقریروں سے مریم نواز کی طبیعت بہت خراب ہو گئی ہے۔ وزیرصحت نے مریم نواز کو بہترین علاج کی پیش کش کی ہے اور کہا ہے کہ پاکستان میں ہر قسم کے علاج کی بہترین سہولتیں موجود ہیں، مریم نواز سیاست کو الگ رکھ کر علاج کروا لیں!
٭میں نے ایک سال خارش کی ایک دوا 165, Fucid روپے میں خریدی۔ آج 451روپے میں منگوائی ہے!! کیا تبصرہ کروں؟
 

تازہ ترین خبریں

بھارت کو ایک ماہ کے لیے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی صدارت کی ذمہ داری۔۔۔دفتر خارجہ کا ردعمل سامنے آگیا

بھارت کو ایک ماہ کے لیے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی صدارت کی ذمہ داری۔۔۔دفتر خارجہ کا ردعمل سامنے آگیا

بلاول بھٹو زرداری اور ایمل ولی خان کی ملاقات۔۔۔۔۔سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال

بلاول بھٹو زرداری اور ایمل ولی خان کی ملاقات۔۔۔۔۔سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال

 پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو جیت کیلئے 158 رنز کا ہدف دیدیا۔

پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو جیت کیلئے 158 رنز کا ہدف دیدیا۔

وزیراعظم عمران خان کل عوام سے براہ راست مخاطب ہونگے 

وزیراعظم عمران خان کل عوام سے براہ راست مخاطب ہونگے 

موت تعاقب میں تھی ، پاکستان کے اہم شہر میں امتحان دینے نکلی نویں جماعت کی طالبہ کی افسوسناک موت

موت تعاقب میں تھی ، پاکستان کے اہم شہر میں امتحان دینے نکلی نویں جماعت کی طالبہ کی افسوسناک موت

پاکستان کے اس شہر کے عوام سپر احتیاط کریں، ہفتے کے روز ہونے والی موسلادھار بارش صرف شروعات تھی

پاکستان کے اس شہر کے عوام سپر احتیاط کریں، ہفتے کے روز ہونے والی موسلادھار بارش صرف شروعات تھی

مسٹر زرداری آپ کیا چاہتے ہیں لاک ڈاؤن، لاک ڈاؤن، لاک ڈاؤن۔اسد عمر کا بلاول کو جواب

مسٹر زرداری آپ کیا چاہتے ہیں لاک ڈاؤن، لاک ڈاؤن، لاک ڈاؤن۔اسد عمر کا بلاول کو جواب

پاکستان ٹیم کے نام ایک اور عزاز ۔۔۔۔محمد رضوان نے ٹی ٹوئنٹی میں ورلڈ ریکارڈ بنادیا

پاکستان ٹیم کے نام ایک اور عزاز ۔۔۔۔محمد رضوان نے ٹی ٹوئنٹی میں ورلڈ ریکارڈ بنادیا

 تحریک انصاف کے رکن اسمبلی نذیرچوہان کے پروڈکشن آرڈرز۔۔۔ ن لیگ نے بھی سپیکر اسمبلی پرویزالٰہی کی حمایت کافیصلہ کرلیا

 تحریک انصاف کے رکن اسمبلی نذیرچوہان کے پروڈکشن آرڈرز۔۔۔ ن لیگ نے بھی سپیکر اسمبلی پرویزالٰہی کی حمایت کافیصلہ کرلیا

افغانستان سے علاج کیلئے آنے والی خاتون کی ٹانگ سے ایسی چیز برآمد کہ بارڈر پر موجود سیکیورٹی اہلکار بھی ہکا بکا رہ گئے

افغانستان سے علاج کیلئے آنے والی خاتون کی ٹانگ سے ایسی چیز برآمد کہ بارڈر پر موجود سیکیورٹی اہلکار بھی ہکا بکا رہ گئے

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں اضافہ ۔۔۔ وزارت خزانہ کی جانب سے نوٹیفیکشن جاری

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں اضافہ ۔۔۔ وزارت خزانہ کی جانب سے نوٹیفیکشن جاری

 کراچی میں بھارت جیسی صورتحال ہوئی تو وزیراعظم اور ان کے وزرا ذمہ دار ہوں گے۔بلاول بھٹو 

 کراچی میں بھارت جیسی صورتحال ہوئی تو وزیراعظم اور ان کے وزرا ذمہ دار ہوں گے۔بلاول بھٹو 

اوگرانے اگست کیلئے ایل پی جی کی قیمت میں اضافہ کر دیا۔

اوگرانے اگست کیلئے ایل پی جی کی قیمت میں اضافہ کر دیا۔

بھارت میں مون سون بارشوں نے تباہی مچادی، 230 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے 

بھارت میں مون سون بارشوں نے تباہی مچادی، 230 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے