12:59 pm
لیاقت باغ، گواہ رہنا

لیاقت باغ، گواہ رہنا

12:59 pm

جس طرح سے راولپنڈی کی تمام تاجر تنظیموں کے قائدین نے مقامی علماء کرام کے ساتھ مل کر 6ستمبر کو تاریخی لیاقت باغ میں عظیم الشان تحفظ ختم نبوتؐ کانفرنس کا اہتمام کیا اگر اسی طرح کراچی، لاہور، کوئٹہ، حیدر آباد، پشاور، ملتان، سکھر وغیرہ کی تاجر تنظیمیں اور وہاں کے علماء کرام ہر سال 6اور 7ستمبر کو ختم نبوتؐ کانفرنسوں کا اہتمام کیا کریں تو کوئی وجہ نہیں آج کی نوجوان نسل عقیدہ ختم نبوتؐ کی اہمیت اور مجلس تحفظ ختم نبوتؐ کے کاز سے روشناس نہ ہو پائے لیکن شرط یہ ہے کہ ان شہروں کے علماء میں شیخ الحدیث مولانا قاضی مشتاق اور تاجروں میں شرجیل میر، شاہد غفور پراچہ، زاہد بختاوری اور ڈاکٹر جمال ناصر جیسا اخلاص ہونا ضروری ہے، اس میں کوئی شک نہیں کہ آئین میں موجود ختم نبوتؐ کو تحفظ فراہم کرنے والی شقوں کو ختم کروانے کے لئے عالمی صیہونی طاقتیں پاکستان کی حکومتوں پر وقتاً، فوفتاً دبائو ڈالتی رہتی ہیں، قادیانیوں کو ’’مسلم احمدی‘‘ فرقہ منوانے کے لئے عالمی صیہونی طاقتیں ایڑی چوٹی کا زور لگا رہی ہیں لیکن ابھی تک وہ اپنے اس مکروہ ایجنڈے میں کامیاب نہیں ہوسکیں تو اس کی بنیادی وجہ پاکستانی علماء کرام اور مذہب سے محبت کرنے والے اہل دل عوام کی عقیدہ ختم نبوتؐ سے والہانہ محبت بھی ہے، عقیدہ ختم نبوتؐ کو قرآن پاک کی سورہ احزاب میں یوں بیان کیا گیا ہے۔ ترجمہ: ’’نہیں ہیں محمدﷺ (تمہارے مردوں میں سے) کسی کے باپ بلکہ وہ اللہ کے رسول اور خاتم النبیین(آخری نبی) ہیں۔‘‘ عقیدہ ختم نبوتؐ کے حوالے سے رسول اکرمﷺ کا ارشاد گرامی ہے۔ ’’میں اللہ کا آخری نبی ہوں میرے بعد کوئی نبی نہیں‘‘ حضرت ثوبانؓ روایت کرتے ہیں کہ ’’حضرت محمدﷺ نے فرمایا کہ قریب ہے کہ میری امت میں تیس کذاب پیدا ہوں گے جن میں سے ہر ایک یہی کہے گا کہ وہ نبی ہے حالانکہ میں خاتم النبیین ہوں، میرے بعد کوئی نبی نہیں۔‘‘
عقیدہ ختم نبوتؐ یہ ہے کہ حضرت محمدﷺ اللہ کے آخری نبی اور رسول ہیں، آپﷺ کے بعد کسی قسم کا کوئی تشریعی،ظلی، بروزی یا نیا نبی پیدا نہ ہوگا، آپﷺ کے بعد جو شخص بھی نبوت کا دعویٰ کرے گا، وہ کافر، مرتد، زندیق اور واجب القتل ہے، ایسے شخص کو سزائے موت دینا مسلم حکومت کی ذمہ داری ہے، قرآن مجید کی ایک سو سے زائد آیات مبارکہ اور دو سو  دس احادیث مبارکہ اس بات پر دلالت کرتی ہیں کہ حضور خاتم النبیینﷺ کے آخری نبی اور رسول ہیں، آپﷺ کی نبوت و رسالت قیامت تک  کے لئے ہے، جس طرح توحید کا اقرار کئے بغیرکوئی شخص مسلمان نہیں ہوسکتا، اسی طرح عقیدہ ختم نبوتؐ کا اقرار کئے بغیر بھی کوئی شخص مسلمان نہیں  ہوسکتا، عقیدہ ختم نبوتؐ پر پورے دین کا انحصار ہے اگر یہ عقیدہ محفوظ نہیں تو دین بھی محفوظ نہیں، اس قدر اہمیت کے حامل عقیدہ ختم نبوتؐ کو قادیانی اور عالمی صیہونی سازشوں سے تحفظ فراہم کرنے کے لئے ضروری ہے کہ پاکستان کے تاجروں، مسلمان وکلاء، مسلمان صحافیوں اور عام عوام کو اس حوالے سے متحرک کیا جائے، جہاں تک پرنٹ میڈیا کی بات ہے تو ہر سال  7ستمبر کو اخبارات  یوم ختم نبوتؐ کے حوالے سے خصوصی ایڈیشنز شائع کرتے ہیں لیکن الیکٹرانک میڈیا سے یہ سوال پوچھنا پاکستانی قوم کا حق ہے کہ ٹی وی چینلز 7ستمبر کو یوم ختم نبوتؐ کے حوالے سے عوام میں آگاہی پیدا کرنے کے لئے کتنے پروگرام ٹاک شوز کرتے ہیں؟ اور اگر نہیں توکیوں؟ کیا ٹی وی چینلز کے مالکان عقیدہ ختم نبوتؐ کی اہمیت اور افادیت سے ناواقف ہیں؟ کیا وہ نہیں جانتے کہ عقیدہ ختم نبوتؐ  تمام دنیا کے مسلمانوں کا اجماعی عقیدہ ہے؟ ایک طرف ’’میڈیا‘‘ اپنے آپ کو ریاست کا چوتھا ستون قرار دیتا ہے اور دوسری طرف الیکٹرانک چینلز عقیدہ ختم نبوتؐ کے حوالے سے قوم کو آگاہی فراہم کرنے میں انتہائی مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کرتے ہیں۔ یہ حالات دیکھ کر اگر عوام یہ کہتے ہیں کہ ریاست کا چوتھا ’’ستون’’ خود ہی  ریاست کو کمزور کر رہا ہے تو اس میں غلط کیا ہے؟ نجی چینلز کے سٹوڈیوز میں بیٹھ کر اگر انڈین اداکارائوں پہ پروگرام ہوسکتے ہیں، کرکٹ پہ پروگرام نشر کئے جاسکتے ہیں تو پھر  عقیدہ ختم نبوتؐ کے تحفظ پر، پروگرام کیوں نہیں ہوسکتے؟ حالانکہ عقید ختم نبوتؐ دین کا اساسی عقیدہ ہے، اسلامی جمہوریہ پاکستان ایک اسلامی ملک ہے، ایک اسلامی ملک کے ٹی وی چینلز اگر اپنے ٹاک شوز میں عقیدہ ختم نبوتؐ کو بیان کرنے  یا اس کے خلاف کی جانے والی مکروہ سازشوں کو بے نقاب کرنے سے گھبراتے ہیں تو اس سے بڑی منافقت اور کیا ہوسکتی ہے؟
یہی وجہ ہے کہ 6ستمبر کو یہ خاکسار اپنے دوست ممتاز عالم دین مفتی مجیب الرحمن کی ہمراہی میں پہلے عالمی مجلس تحفظ ختم نبوتؐ کے نومنتخب امیر مرکزیہ پیر طریقت حضرت مولانا ناصر الدین خاکوانی کی زیارت اور ملاقات کے لئے جامعہ فاروقیہ دھمیال کیمپ پہنچا، جہاں بزرگی میں بھی دینی کاموں کے لئے  ہر دم جوان نظر آنے والے مولانا قاضی عبدالرشید کی خصوصی شفقت سے عالمی مجلس تحفظ ختم نبوتؐ کے امیر مرکزیہ سے ملاقات کا شرف حاصل ہوا، وہاں سے سیدھے لیاقت باغ میں جاری ختم نبوتؐ کے جلسہ عام کے اسٹیج پر پہنچے تو نماز مغرب کا وقت ہوا چاہتا تھا، نماز مغرب اسٹیج کے بالکل سامنے لیاقت باغ گرائونڈ میں ہی ادا کی، کانفرنس شروع ہوچکی تھی، پنڈی تاجر تنظیموں کے تمام گروپوں کے قائدین اور تاجران کثیر تعداد میں پہنچ چکے تھے۔ علماء کرام اور مذہبی کارکن بھی ہزاروں کی تعداد میں جلسے میں شریک تھے۔ اسٹیج سے مختلف علماء کرام اور تاجر رہنما اپنی تقریروں میں عقیدہ ختم نبوتؐ کی ضرورت و اہمیت پر تقریریں کر رہے تھے۔ مقررین اتنی کثیر تعداد میں تھے کہ اسٹیج سیکرٹری کو  بار بار اپیل کرنا  پڑتی تھی کہ ہر مقرر اپنے مختص ٹائم یعنی ’’دومنٹ‘‘ کی پابندی کرے، میں اسٹیج کے بالکل سامنے علماء کرام کی معیت میں بیٹھا۔ یہ سب کچھ دیکھتے اور سنتے ہوئے سوچ رہا تھا کہ عقیدہ ختم نبوتؐ کے خلاف سازشیں کرنے والوں نے شائد کبھی اس بات پہ غور بھی نہ کیا ہو کہ مسلمان ان کی سازشوں کو ناکام بنانے کے لئے اس طرح سے بھی میدان عمل میں اتر سکتے ہیں، اسٹیج سے درجنوں مقررین نے تقریریں کیں، ان میں باریش بھی تھے اور کلین شیو بھی، ہر کوئی تحفظ ختم نبوتؐ کی خاطر جان قربان کرنے کے عزم کا اظہار کر رہا تھا۔
آخری خطاب قائد جمعیت مولانا فضل الرحمن کا تھا، مولانا کے خطاب کے دوران ایک صحافی دوست میری طرف آئے اور میرے کان میں کہا کہ ’’مولانا‘‘ کی وجہ سے جلسہ ’’سیاسی‘‘ ہوگیا، میں نے جواباً اس کے کان میں کہا کہ ’’مولانا‘‘ ختم نبوتؐ سے والہانہ محبت کی وجہ سے ختم نبوتؐ کے جلسے میں شریک ہوئے، ختم نبوتؐ کے جلسوں میں شریک ہونا ہر سیاست دان کی قسمت میں کہاں؟ وگرنہ شرجیل میر، شاہد غفور پراچہ اور شیخ الحدیث قاضی مشتاق سے کہو کہ وہ آئندہ سال6ستمبر کو ختم نبوتؐ کانفرنس میں بلاول زرداری، مریم نواز وغیرہ کو بھی خطاب کی دعوت دے کر دیکھ لیں، لگ پتہ جائے گا کہ آٹے، دال کا بہائو کیا ہے۔ (وماتوفیقی الاباللہ) 

تازہ ترین خبریں

`` ون ڈے اور ٹی ٹونٹی رینکنگ میں بابراعظم کونسی پوزیشن پر آگئے ؟آئی سی سی نے تازہ ترین رینکنگ جاری کر دی

`` ون ڈے اور ٹی ٹونٹی رینکنگ میں بابراعظم کونسی پوزیشن پر آگئے ؟آئی سی سی نے تازہ ترین رینکنگ جاری کر دی

واٹس ایپ نے صارفین کی سہولت کیلئے ایک اور شاندار فیچر متعارف کروا دیا

واٹس ایپ نے صارفین کی سہولت کیلئے ایک اور شاندار فیچر متعارف کروا دیا

آئندہ چوبیس گھنٹوں کا موسم کیسا رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

آئندہ چوبیس گھنٹوں کا موسم کیسا رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

یوکرین پر حملہ کیا تو ایک بھی روسی فوجی واپس اپنے ملک نہیں جائیگا، بڑے ملک نے روس کو وارننگ دیدی

یوکرین پر حملہ کیا تو ایک بھی روسی فوجی واپس اپنے ملک نہیں جائیگا، بڑے ملک نے روس کو وارننگ دیدی

شہزا د اکبر کی جگہ کس کو تعینات کیا جائیگا؟ پانچ اہم نام سامنے آگئے

شہزا د اکبر کی جگہ کس کو تعینات کیا جائیگا؟ پانچ اہم نام سامنے آگئے

گھر میں بچے اکیلے ہیں،شاہد آفریدی نے بائیو سیکیور ببل سے باہر نکلنے کی درخواست کردی

گھر میں بچے اکیلے ہیں،شاہد آفریدی نے بائیو سیکیور ببل سے باہر نکلنے کی درخواست کردی

مزیدکتنا عرصہ قیمتیں نیچے نہ آنے کاامکان ہے ؟  وزیر خزانہ شوکت ترین نے پریشان کن خبر سنا دی

مزیدکتنا عرصہ قیمتیں نیچے نہ آنے کاامکان ہے ؟ وزیر خزانہ شوکت ترین نے پریشان کن خبر سنا دی

جب ہم ملتان یا لاہور تک پہنچیں گے تو عمران خان اپنے وزن سے گر جائے گا، پی ڈی ایم رہنما کا دعویٰ

جب ہم ملتان یا لاہور تک پہنچیں گے تو عمران خان اپنے وزن سے گر جائے گا، پی ڈی ایم رہنما کا دعویٰ

ٹویٹر پر شہری کا طنز، جمائمہ خان نے کھری کھری سناتے ہوئےپاکستان زندہ باد کا نعرہ لگا دیا

ٹویٹر پر شہری کا طنز، جمائمہ خان نے کھری کھری سناتے ہوئےپاکستان زندہ باد کا نعرہ لگا دیا

غریب کیلئے دو وقت کی روٹی کا حصول بھی مشکل ہو گیا، آٹے کی فی کلو قیمت میں ہوشربا اضافہ

غریب کیلئے دو وقت کی روٹی کا حصول بھی مشکل ہو گیا، آٹے کی فی کلو قیمت میں ہوشربا اضافہ

میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات سے متعلق نئی پالیسی کا اعلان کر دیا گیا

میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات سے متعلق نئی پالیسی کا اعلان کر دیا گیا

کرپشن میں اضافہ ، ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان  سےاستعفے کا مطالبہ

کرپشن میں اضافہ ، ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان سےاستعفے کا مطالبہ

کتنے حکومتی اراکین ن لیگ میں شامل ہونے کو تیار ہیں؟ دعوے نے ہلچل مچادی

کتنے حکومتی اراکین ن لیگ میں شامل ہونے کو تیار ہیں؟ دعوے نے ہلچل مچادی

موبائل سگنل اور سڑکیں بند۔۔وفاقی وزیر داخلہ نے بڑا اعلان کر دیا

موبائل سگنل اور سڑکیں بند۔۔وفاقی وزیر داخلہ نے بڑا اعلان کر دیا