03:51 pm
سولہ ہزار افراد کی روزگار سے محرومی، وزیراعظم نوٹس لیں!

سولہ ہزار افراد کی روزگار سے محرومی، وزیراعظم نوٹس لیں!

03:51 pm

دنیا کے ہر سیاسی نظام کی بنیاد انسانی فلاح کا تصور رہا ہے۔ یہ تصور مفقود ہو جائے تو نظام اندر سے کھوکھلا ہونا شروع ہو جاتاہے اور تباہی اس کا مقدر بن جاتی ہے۔ بادشاہتیں جبر کا سہارا لیتی ہیں  لیکن ان کی بقاء اور دوام بھی رعایا کی فلاح کا مرہون منت ہوتا ہے۔ جہاں بہبود کا پہلو حکمران کی ترجیح نہ رہے وہاں بغاوت برپا ہوتی ہے اور اقتدار کی بلند و بالا عمارت دیکھتے ہی دیکھتے زمین بوس ہو جاتی ہے۔ آج دنیا کے نقشے پر وہی دوچار بادشاہتیں اپنا وجود برقرار رکھ پائی ہیں جو جمہوری حکومتوں سے زیادہ ’’بینوویلنٹ‘‘ ہیں۔ جمہوریت کا تصور درحقیقت ظالمانہ شاہی اقتدار کے متبادل فلاحی نظام کا تصور تھا لیکن مغربی جمہوریت کے بطن سے جس معاشی فلسفے نے جنم لیا اس نے امیر کو امیر تر اور غریب کو غریب تر کر دیا۔ طاقتور کی بقا اور کمزور کو فنا دینے والے کیپٹل ازم نے جمہوریت  سے لوگوں کو بددل کرنا شروع کر دیا تو اقبالؒ کی نگاہ تیز نے مغربی جمہوریت کے منطقی انجام کی یہ کہہ کر پیش گوئی کی۔
تمہاری تہذیب اپنے خنجر سے آپ خود کشی کرے گی
جو شاخ نازک پر بنے گا آشیانہ ناپائیدار ہوگا
مغربی جمہوریت کا تباہی سے د وچار ہونا آشکار تھا اگر کمیونزم سے مقابلے کی صورت نہ بنتی۔ کمیونزم کی راہ روکنے کے لئے مغربی جمہوریت کو فلاحی ریاست کے تصور میں پناہ لینی پڑی اور ایک نئے عہد کا آغاز ہوا۔ آج ریاست کا تصور ماں کے تصور جیسا ہے۔ ماں جس طرح بچوں کو اپنی آغوش میں لیتی ہے اور ان کی ضرورتوں کو بلاتفریق پورا کرتی ہے ریاست کا کردار بھی رفتہ رفتہ ویسا بنتا جارہاہے۔ ریاست ایک لمیٹڈ کمپنی یا کارپوریشن کی طرح کی منافع کمانے والی کمپنی نہیں ہے کیونکہ کیپٹل ازم کی  اپروچ اب بدل چکی ہے۔ آج ریاست اپنے شہریوں کے لئے بسا اوقات خسارہ بھی برداشت کرتی ہے لیکن انہیں سہولت دینے کی کوشش کرتی ہے۔ سبسڈی کا نظام دراصل اس سوچ کے تحت ہے کہ غریب شہریوں پر بوجھ نہ ڈالا جائے اور جہاں تک ممکن ہو انہیں سرکاری خزانے سے ریلیف فراہم کیا جائے۔ اسی طرح شہریوں کو روزگار کی فراہمی بھی ریاست کی اولین ذمہ داریوں میں سے ایک ہے۔ ریاست سرکاری سطح پر ایسے انتظامات کرتی ہے  تاکہ روزگار کے مواقع پیدا  ہوں اور اس مقصد کے لئے کاروباری سرگرمیوں کو فروغ بھی دیتی ہے۔ ریاست کا کام روزگار  فراہم کرنا ہے روزگار چھیننا قطعاً نہیں ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت ویسے بھی روزگار کی فراہمی کے نئے مواقع پیدا کرنے کاوعدہ کرکے قائم ہوئی تھی۔ عوام سے عہد کیا گیا تھا کہ ایک کروڑ ملازمتوں کے مواقع پیدا کئے جائیں  گے۔ وزیراعظم عمران خان اس ضمن میں پہلے کی طرح اب بھی پرعزم ہیں چنانچہ انہوں نے معاشی استحکام کے لئے اپنی پوری تگ و دو کی ہے۔ معیشت گزشتہ ادوار کی پالیسیوں کی وجہ سے جس بحران کا شکار تھی اس کو سنبھالنا  آسان کام نہ تھا لیکن وزیراعظم عمران خان نے نہایت جرات کے ساتھ فیصلے کئے جس کے ثمرات آج سامنے آنا شروع ہوگئے ہیں۔  صنعت کا پہیہ چل پڑا ہے اور دیگر کاروباری سرگرمیوں میں اضافہ ہونا شروع ہوگیاہے۔
امید پیدا ہونے لگی ہے کہ آنے والے ماہ و سال میں روزگار کے زبردست مواقع پیدا ہوں گے۔ تحریک انصاف کی حکومت نے سرکاری اداروں میں خواہ مخواہ کی بھرتیاں نہیں کی ہیں جیسا کہ پیپلز پارٹی اپنے ادوار میں کرتی آئی ہے ۔  ابھی حال ہی میں عدالت عظمیٰ کے ایک فیصلے نے اس ایکٹ کو کالعدم قرار دے دیا ہے جس کی وجہ سے وفاقی اداروں میں 16 ہزار ملازمین کی بحالی ہوئی تھی۔ یہ ملازمین پیپلز پارٹی کے 1993-96 ء کے دور میں بھرتی ہوئے تھے جنہیں مسلم لیگ ن نے1997 ء میں نکال دیا  تھا، بعد ازاں جب پیپلز پارٹی2008 ء میں برسر اقتدار آئی تو  اس نے ایک ایکٹ کے ذریعے ان تمام ملازمین کو اداروں میں بحال کر دیا  بلکہ ان کو بقایا جات بھی ادا کئے گئے۔2010 ء میں بحال کئے گئے  ان ملازمین کو آج گیارہ سال بعد پھر نکال دیا گیا ہے جس سے ایک انسانی المیے نے جنم لیا ہے۔ میرے خیال میں وفاقی حکومت کو عدالت کے فیصلے کے خلاف انسانی بنیادوں پر نظرثانی اپیل دائر کرنی چاہیے کیونکہ نکالے جانے والے ملازمین اب عمر کے اس حصے میں ہیں کہ وہ کوئی اور ملازمت اب نہیں کرسکتے۔ یہ 16 ہزار خاندانوں کا سنگین معاشی مسئلہ ہے جو بیک جنبش قلم روزگار سے محروم کر دیئے گئے ہیں۔ انہیں کوئی گولڈن ہینڈ شیک نہیں ملا اور نہ ہی رضاکارانہ علیحدگی کے تحت کوئی معاشی بینیفٹ دیا گیا ہے۔ ایک دن قبل تک وہ برسر روزگار تھے  اور دوسرے دن وہ سو کر اٹھے تو ان کو خبر ہوئی کہ وہ نوکری سے فارغ ہوگئے ہیں۔ دنیا کے کسی مذہب ملک یا فلاحی ریاست میں کیا لوگ اس طرح روزگار سے محروم کر دیئے جاتے ہیں؟ ان کا قصور یہ ہے کہ انہیں پیپلز پارٹی کے دور میں ملازمت ملی اور ان کے سلیکشن پراسس پر اعتراضا ت تھے مگر جب پیپلز پارٹی نے انہیں بحال کر دیا اور بعد میں مسلم لیگ ن کے دور میں بھی اس بحالی کو تسلیم کرلیا گیا اور اب تحریک انصاف کی حکومت کو بھی اس ضمن میں کوئی مسئلہ نہیں تھا تو اچانک اس بحالی ایکٹ کی منسوخی کی کیا وجہ بنی؟ اس فیصلے کے بعد16 ہزار خاندانوں کو دو وقت کی روٹی کے لالے پڑ گئے ہیں، کیا انصاف کا تقاضا نہ تھا کہ زمینی حقائق کو مدنظر رکھ کر کوئی ایسا فیصلہ کیا جاتا جس سے یہ انسانی المیہ جنم نہ لیتا اور لوگ  روزگار سے محروم نہ ہوتے۔ وزیراعظم عمران خان نے ہمیشہ عوام اور ریاست کے تعلق کے ضمن میں ہمدردی کی بات کی ہے، میراگمان ہے کہ وہ اس معاملے کو بھی اس تناظر میں دیکھیںگے اور حکومت پاکستان ان16 ہزار خاندانوں کی پریشانی کو محسوس کرتے ہوئے اپنامثبت کردار ادا کرے گی۔
 

تازہ ترین خبریں

اپوزیشن جتنے مرضی مارچ کر لے، ان ہاؤس تبدیلی آئیگی نہ حکومت ختم ہوگی:شاہ محمود قریشی

اپوزیشن جتنے مرضی مارچ کر لے، ان ہاؤس تبدیلی آئیگی نہ حکومت ختم ہوگی:شاہ محمود قریشی

شریف فیملی کے کتنے لوگوں کیلئے ڈیل مانگی جا رہی ہے،وزیراعظم کے مہمان خصوصی شہباز گل نے بڑادعویٰ کردیا

شریف فیملی کے کتنے لوگوں کیلئے ڈیل مانگی جا رہی ہے،وزیراعظم کے مہمان خصوصی شہباز گل نے بڑادعویٰ کردیا

مری میں ساحتی سرگرمیاں دوبارہ شروع، روزانہ کتنی گاڑیوں کو داخلے کی اجازت دی جائیگی؟

مری میں ساحتی سرگرمیاں دوبارہ شروع، روزانہ کتنی گاڑیوں کو داخلے کی اجازت دی جائیگی؟

سکول بند اور شادی بیاہ کی تقریبات پر پابندیاں۔۔؟؟کورونا کے بڑھتے کیسز کے بعد این سی او سی کا اہم فیصلہ

سکول بند اور شادی بیاہ کی تقریبات پر پابندیاں۔۔؟؟کورونا کے بڑھتے کیسز کے بعد این سی او سی کا اہم فیصلہ

سوموار کے روز ملک بھر کا موسم کیسا رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے بارشوں کی نوید سنا دی

سوموار کے روز ملک بھر کا موسم کیسا رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے بارشوں کی نوید سنا دی

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان کا شاندار اقدام ، ہرطرف سے بچے کے علاج میں مایوس والدکیلئے بڑا اعلان کر دیا

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان کا شاندار اقدام ، ہرطرف سے بچے کے علاج میں مایوس والدکیلئے بڑا اعلان کر دیا

ہلکی بارش اور پہاڑوں پر برفباری کا امکان ، محکمہ موسمیات نے پیشنگوئی کر دی

ہلکی بارش اور پہاڑوں پر برفباری کا امکان ، محکمہ موسمیات نے پیشنگوئی کر دی

ایک اور بڑا اقدام،وہ غیرملکی شہری جنہیں حکومتِ پاکستان نے شہریت دینے کا فیصلہ کرلیا

ایک اور بڑا اقدام،وہ غیرملکی شہری جنہیں حکومتِ پاکستان نے شہریت دینے کا فیصلہ کرلیا

پولیس کا فحاشی کے اڈے پر چھاپہ، کتنے لڑکے اور لڑکیاں گرفتار کر لئے گئے ؟ بڑے شہر سے شرمناک خبر آگئی

پولیس کا فحاشی کے اڈے پر چھاپہ، کتنے لڑکے اور لڑکیاں گرفتار کر لئے گئے ؟ بڑے شہر سے شرمناک خبر آگئی

سمندر کی تہہ میں آتش فشاں دھماکہ ، پاکستان میں بھی گہرا اثر ۔۔کن کن ممالک میں سونامی تباہی مچائے گا؟

سمندر کی تہہ میں آتش فشاں دھماکہ ، پاکستان میں بھی گہرا اثر ۔۔کن کن ممالک میں سونامی تباہی مچائے گا؟

شادی کی پہلی رات ہی دولہااوردلہن کیساتھ کیا ہوا؟ دلہن کی لاش برآمد جبکہ دولہا کس حالت میں تھا؟

شادی کی پہلی رات ہی دولہااوردلہن کیساتھ کیا ہوا؟ دلہن کی لاش برآمد جبکہ دولہا کس حالت میں تھا؟

پرویز خٹک کی پی ٹی آئی میں چھوڑنے کی خبروں پر خود میدان میں کود پڑے ، بڑا اعلان کر دیا

پرویز خٹک کی پی ٹی آئی میں چھوڑنے کی خبروں پر خود میدان میں کود پڑے ، بڑا اعلان کر دیا

پیٹرول قیمتوں میں ردو بدل ،وزیراعظم عمران خان نے اوگرا کی تجویز مسترد کر دی ، بڑا دعویٰ

پیٹرول قیمتوں میں ردو بدل ،وزیراعظم عمران خان نے اوگرا کی تجویز مسترد کر دی ، بڑا دعویٰ

نواز شریف کی بیماری کا پول کھل گیا، سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے لندن میں ملاقات کے بعد ساری حقیقت بیان کر دی

نواز شریف کی بیماری کا پول کھل گیا، سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے لندن میں ملاقات کے بعد ساری حقیقت بیان کر دی