01:34 pm
نشانِ وفا

نشانِ وفا

01:34 pm

 (گزشتہ سے پیوستہ)
مجھے یاد ہے کہ بچپن میں اسلامی مدرسے میں جب صبح سویرے اسمبلی ہوتی تھی توتمام امت مسلمہ کیلئے بالعموم اورپاکستان کیلئے بالخصوص دعائے خیربھی ہوتی تھی اورہرروزکوئی نہ کوئی استادکسی اسلامی موضوع پرخطاب بھی کرتے تھے۔یہی وجہ ہے کہ اس اسکول کے فارغ التحصیل طلبامیں دوسرے اسکولوں کے طلبا کی نسبت اسلامی محبت واخوت کچھ زیادہ ہوتی تھی اوراپنے مافی الضمیرکی ادائیگی میں بے خوفی اوربیباکی حدسے زیادہ ہوتی تھی۔اس کاعملی تجربہ کویت میں ہوا جب میں اورآپ ایران کے انقلاب سے متاثر ہوکران کی پہلی انقلابی سالگرہ میں شمولیت کیلئے دوستوں کی شدیدمخالفت کے باوجودروانہ ہوگئے تھے ۔واپسی پرکویت کے ائرپورٹ پرہی دھرلئے گئے تھے۔یہ توکبھی سوچانہ تھاکہ کویت کے جس جدید ہوائی اڈے کی تعمیرکی نگرانی میرے ذمہ تھی،چندسال بعداس کے ایک حصے حوالات میں مجھے آپ کی معیت میں چندگھنٹے بھی گزارنے ہوں گے۔ کچھ گھنٹے سلاخوں کے پیچھے جانے کی سنت یوسفی اوراسوہ حنبلی کی ادائیگی کابھی بھرپورموقع ملا۔ بالآخرہماری بے گناہی ہماراجرم قرارپائی اوریہ قیدوبندکے چند گھنٹے ازراہِ لطف ہمارے کھاتے میں محض اس لئے ڈال دیئے گئے کہ افسرمجازدوپہرکے کھانے کے بعداپنی ڈیوٹی کے دوران ہی قیلولہ فرمارہے تھے۔ہم حیران تھے کہ کیوں بند کردیئے گئے؟ اربابِ اقتدارخوش کہ طاقت کانشہ ابھی ہمیں ان کے پائوں پکڑنے پرمجبورکردے گا ۔
 ایک غیرمسلم اوروہ بھی ہندوجوکل تک میرا ماتحت تھااس کوفوری طورپرمجھ پرترقی دے کر اس کے ماتحت کام کرنے کاحکم صادر کر دیا گیا۔گویامجھ پریہ ثابت کرنے کی کوشش کی گئی کہ گویاتذلیل وتکذیب کا دوراب شروع ہوا چاہتا ہے اورمیرے احتجاج اوربے باکی نے جومجھے بچپن میں اسکول میں ملاتھا، عجب تماشہ کھڑاکردیا۔مجھے انتہائی معذرت اور افسوس کے ساتھ یہ تاثر دیا گیا کہ ’’اوپروالوں‘‘ کامنشایہی ہے کہ کچھ ہفتوں تک اس سلسلے کو برداشت کرناپڑے گا حالانکہ میں  تو ’’بہت اوپروالے‘‘ہی کی بندگی کا حق ادا کر رہا تھا۔ الزامات کے بارے میں دریافت کیا،ان کے سامنے ماضی کے واقعات جن میں ٹھیکیداروں کے انعامات کوٹھکرانے کاسب کوعلم تھا،سالوں کی کمائی دنوں میں حقارت سے ٹھکرادینے  سے سبھی آگاہ تھے لیکن انہوں نے شائدیہ فیصلہ کرلیاتھاکہ یہ میرے بچوں کومحض اس لئے محرومی وافلاس کاشکار بناناچاہتے ہیں کہ میں اس مملکت کی خدمت کو بھی عبادت سمجھتا ہوں۔ اسی لئے یہ خطہ میرے نزدیک ایک مسجد کی مانندمقدس ہے لیکن ’’اوپر والوں‘‘نے کچھ نہ سنااور مجھے جبراًاسی عہدے پرکام کرنے کوکہاگیا اورمیرے انکار پر مجھ کو الگ کرنے کی دھمکی سنادی گئی۔اس سے پیشتر کہ  ان کے چہروں پرباطل کی مسکراہٹ آتی میں نے اپنا استعفیٰ خود تحریر کرکے ان کے منہ پردے مارا اوراس میں صاف لکھ دیا:
میرارزق اوپروالوں سے نہیں بلکہ بہت اوپرسے آتاہے اورکوئی اسے راستے میں کاٹنے کی ہمت نہیں رکھتا۔ میرے اس استعفے کے بعد مجھے دوسری کئی کمپنیوں میں سے بلاوہ آیالیکن دل اب اس قدر پریشان  ہوچکاتھاکہ ایک عشرہ سے زائد جس ملک میں گزارا تھا وہاں کل کاسورج دیکھنے کی تمنابھی باقی نہیں رہی تھی۔پاکستان کے بارے میں جوحسین تانے بانے بنے ہوئے تھے وہ بھی سراب نظرآرہے تھے۔سوچاکہ اب مغرب کی طرف منہ کرکے رب کی بندگی کاجوعہددن میں کم ازکم پانچ مرتبہ کرتاہوں کیوں نہ دنیاکے مغرب میں جاکر اس کااظہارکروں۔آپ میرے استعفیٰ پر منہ پھلائے بیٹھے تھے ،آپ سے مشورہ کرنے کے لئے ابھی منہ کھولاہی تھا کہ گویاآپ پھٹ پڑے لیکن جب اصولوں کی بات ہوئی تو آپ مات کھا گئے۔ آپ نے اپنا تبادلہ بہ امرمجبوری اورمصلحت کے تحت قبول کرلیا لیکن مجھے آپ سے ’’ضدی‘‘اورنجانے اورکیاکیاالقاب سننے کوملے حالانکہ ارفع مقاصد کے لئے  بہت کچھ قربان کرنا پڑتاہے۔
مرحوم قائداعظم کے نام سے کون واقف نہیں جوہندوؤں اورانگریزوں کے مجموعی دباؤ اور لالچ کے مقابلے میں پہاڑ کی طرح ڈتے رہے، اپنا مقصد کسی قیمت پربیچنے کوتیارنہ ہوئے ۔ مسلمان کو چھوڑیئے یہ توتاریخ کے اندر بڑا جانباز کردار لے کرآیاہے ۔یہ توعلم دین شہید بن کر رسول اکرمﷺکے نام کی آبروپردیوانہ وار قربان ہو جاتا ہے۔مردِ مجاہدسیدعلی گیلانی کوہی دیکھ لیں کہ  باوجودضعیف العمری اورساری عمرمصائب میں مبتلا ہونے کے ان کے عزائم قابل رشک حدتک جواں رہے اوروہ اپنی ساری زندگی میں اپنے ملک وقوم کی آزادی کے لئے  ایک لمحہ غافل نہیں رہے اورآخری سانسوں میں اپنے رب کو  اپنا خالق، آقااورمالک اوررسول اکرمﷺکومحسن انسانیت کی گواہی کے بعد ’’پاکستان کی سلامتی‘‘ کا اعلان کرتے ہوئے اپنی جاں جانِ آفریں کے سپرد کردی۔ہے کوئی ایسی وفاکی مثال توسامنے لائیں۔خودہماراضمیرتنہائی میں ہمیں نہ صرف ملامت کرتاہے بلکہ ہمارے قول وفعل کا تضاد ہمیں شرمندہ کردیتاہے۔آپ کافروں کوہی لے لیں، بھگت سنگھ جوآزادی کی خاطر اپنی جان نچھاور کرگیا۔ ہزاروں کیمونسٹوں کودیکھ لیں جوزارِ روس کی بدترین سزائیں بھگتے رہے۔چینی اشترا کیوں کودیکھ لیں جوخاقان چین کی بیس سال تک بدترین  اذیتیں سہہ کربالآخر اسے پچھاڑگئے۔
 انسان کوتواللہ تعالیٰ نے بڑی ایٹمی قوت دی ہے۔وہ توجس چیز سے محبت کرتاہے اس کے لئے  سب کچھ کرڈالتاہے۔فرہادبنتاہے توجوئے شیرنکال لاتاہے،رانجھابنتاہے توتاریک جنگلوں میں بھینسوں کے گلے چراتاہے،ایک نازک اندام لڑکی کے روپ میں اپنے مقصد کی خاطر چناب کی تندوتیزلہروں سے لڑجاتاہے،میں نے توابھی صرف مغرب کارخ کیاتھا۔سعی مسلسل اورپیہم کوشش کاراستہ اختیار کرکے اس فرنگی ملک میں جو کہ ڈھائی صدیاں حکمرانی کرکے اب تک غلامی کے وہ اثرات چھوڑ کرآیاہے جس سے ہم ابھی تک نکل نہیں پائے لیکن کشمیر تومیرے دل ونگاہ سے کبھی ایک لمحے کے لئے  اوجھل نہیں ہوا۔ کشمیری قوم پچھلی سات دہائیوں سے کیسی لازوال قربانیاں دیتے چلے آرہے ہیں کہ دشمن ظلم کرنے کے باوجود بے بس ہوتاجارہا ہے۔
مجھے یادہے مجھے رخصت کرتے وقت بہت سے دوستوں کی موجودگی میں آپ اپنے جذبات پر قابونہ رکھ سکے تھے جبکہ میرے ذہنی وقلبی دکھ درد کو نظرشناس بھانپ گئے تھے لیکن ایک انگارہ تھا جسے برف کی دبیزتہوں میں ڈھانپ کررکھ دیا گیا تھالیکن اس کی حدت پھر بھی محسوس ہورہی تھی لیکن میں تواس وقت بھی پریشان نہیں تھا کیونکہ   ’’کرم شب کی قدروقیمت رات کی تاریکی سے ہی ہوتی ہے اور تاروں کے حسن کا جھومر   ظلمتِ شب کی سیاہ پیشانی پر ہی کھلتا ہے۔ چاند کاکنگن رات کی دلہن کوہی میسرآتاہے اور بارش کے قطرے کے لئے  تپتی ہوئی زمین کاپیاسا دامن ہی سمندرکے لبریز پیمانے سے زیادہ مستحق طالب اورشائق ہوتاہے‘‘۔اپنی کمیابی اور اجنبیت پرمیں کبھی بھی پریشان نہیں ہوا،ہرقیمتی شئے کمیاب اور نادر ہوتی ہے اورپھر یہ حدیث توآپ نے کئی مرتبہ پڑھی اورسنی ہوگی کہ’’ایک وقت مومن کا ایمان بچانااپنی مٹھی میں انگارہ تھامنے کے مترادف ہوگا‘‘۔
اس لئے میں سمجھتاہوں کہ عالمِ اسباب میں سانس کاایک تموج اورذرے کاایک حقیر وجود بھی تخلیقِ اسباب اورترتیبِ نتائج میں اپناحصہ اداکرتاہے۔جس طرح عمل بدکی ایک خراش آئینہ ہستی کودھندلاجاتی ہے اسی طرح کلمہ خیر کا ایک بول بھی عالم کے اجتماعی خیر کے ذخیرے میں اضافہ کردیتاہے اورلوحِ زمانہ میں ریکارڈ ہو کر کبھی نہ کبھی ضرورگونجتا اور میزانِ نتائج میں اپنا وزن دکھاتاہے۔بس ذرابدی کاشکنجہ ڈھیلا پڑنے کی دیرہے کہ خیرکی کھیتی لہلہااٹھے گی،نیکی کا  اگرایک ذرہ بھی معاشرے کے اجتماعی ضمیر میں موجود ہوگاتو وقت آنے پرضرورگلستانِ رعنابن کر نمودارہوگا۔ بس اک آرزوبدلنے کی دیرہے!
میری شدیدخواہش ہے کہ میں بھی کشمیرکے ان لالہ زار کو اپنی آنکھوں سے بوسے دوں جہاں میرے آباؤاجدادکئی مختلف قبرستانوں میں  آسودہ خاک ہیں بلکہ میری ہردم یہ دعااور آرزو ہے کہ سیدعلی گیلانی کی قبرپریہ پیغام لے کر جاؤں کہ آپ نے جوکشمیرکی آزادی کاراستہ چنا تھا، آپ کے سپاہیوں نے اللہ کی نصرت سے کشمیرکوآزادکرا لیاہے۔اب دیکھیں یہ آرزو کب  پوری ہوتی ہے۔
 

تازہ ترین خبریں

نوازشریف پاکستان واپس آئیں گے اور ملک کے چوتھی بار وزیراعظم بنیں گے، لائیو پروگرام میں بڑا دعویٰ کر دیا گیا

نوازشریف پاکستان واپس آئیں گے اور ملک کے چوتھی بار وزیراعظم بنیں گے، لائیو پروگرام میں بڑا دعویٰ کر دیا گیا

خطرناک ترین دفان نے سر اٹھا لیا ۔۔ بارشیں اور برفباری تو کچھ نہیں،آئندہ کچھ دنوں میں کیا  تباہ پھرنےوالی ہے؟محکمہ موسمیات نے خطرناک الرٹ جا

خطرناک ترین دفان نے سر اٹھا لیا ۔۔ بارشیں اور برفباری تو کچھ نہیں،آئندہ کچھ دنوں میں کیا تباہ پھرنےوالی ہے؟محکمہ موسمیات نے خطرناک الرٹ جا

نئی آفت نے پاکستان کو گھیر لیا۔۔ خبر دار گھروں سے باہر نہ نکلیں ،پاکستانیوں کیلئے الرٹ جاری کردیاگیا

نئی آفت نے پاکستان کو گھیر لیا۔۔ خبر دار گھروں سے باہر نہ نکلیں ،پاکستانیوں کیلئے الرٹ جاری کردیاگیا

انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی میں ہاسٹل میں مقیم طالبات کواجتماعی ز ی ا د ت ی  کا نشانہ بنا دیا گیا،رکن قومی سمبلی کے انکشافات نے پوری قوم کو لر

انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی میں ہاسٹل میں مقیم طالبات کواجتماعی ز ی ا د ت ی کا نشانہ بنا دیا گیا،رکن قومی سمبلی کے انکشافات نے پوری قوم کو لر

سوئی گیس کی قیمتوں میں اضافہ، سوئی سدرن نے عوام پر بجلیاں گر ادیں

سوئی گیس کی قیمتوں میں اضافہ، سوئی سدرن نے عوام پر بجلیاں گر ادیں

سموگ اور دُھند سے جان کب چھوٹے گی؟ محکمہ موسمیات نے پیشنگوئی کر دی

سموگ اور دُھند سے جان کب چھوٹے گی؟ محکمہ موسمیات نے پیشنگوئی کر دی

اسے کہتے ہیں ریلیف دینا،پیٹرول کی قیمتوں میں19 روپے کی بڑی کمی

اسے کہتے ہیں ریلیف دینا،پیٹرول کی قیمتوں میں19 روپے کی بڑی کمی

سرکاری ملازمین کی موجیں،گریڈ 1سے 4کی تنخواہوں میں 20جبکہ گریڈ 5 سے اوپر ملازمین کی تنخواہوں میں 10فیصد اضافے کا فیصلہ

سرکاری ملازمین کی موجیں،گریڈ 1سے 4کی تنخواہوں میں 20جبکہ گریڈ 5 سے اوپر ملازمین کی تنخواہوں میں 10فیصد اضافے کا فیصلہ

عمران خان ملک چھوڑنے والے ہیں،پیشنگوئی نے اقتدار کے ایوانوں میں ہلچل مچادی

عمران خان ملک چھوڑنے والے ہیں،پیشنگوئی نے اقتدار کے ایوانوں میں ہلچل مچادی

ایسا گائوں جہاں گھر میں جتنے بیٹے ہوں بہوایک ہی آتی ہے،حیران کن اور شرمناک تفصیلات آگئیں

ایسا گائوں جہاں گھر میں جتنے بیٹے ہوں بہوایک ہی آتی ہے،حیران کن اور شرمناک تفصیلات آگئیں

سرکاری آئل کمپنی نے پیٹرول اور ڈیزل بطور تحفہ دینے کا اعلان کر دیا،شہری سیخ پا ہو گئے

سرکاری آئل کمپنی نے پیٹرول اور ڈیزل بطور تحفہ دینے کا اعلان کر دیا،شہری سیخ پا ہو گئے

دعائیں قبول ،ابررحمت برسنے کو تیار۔۔رواں ہفتے کون کون سے علاقوں میں بارشیں برسنے والی ہیں ۔۔؟ پاکستانیوں کو دل خوش کر دینےوالی پیش گوئی

دعائیں قبول ،ابررحمت برسنے کو تیار۔۔رواں ہفتے کون کون سے علاقوں میں بارشیں برسنے والی ہیں ۔۔؟ پاکستانیوں کو دل خوش کر دینےوالی پیش گوئی

بغیر ڈرائیور ٹیکسیاں سڑکوں پر۔۔ ان ٹیکسیوں میں ایک وقت میں کتنے مسافر سوار ہو سکیں گے؟عوام کیلئے خوشخبری

بغیر ڈرائیور ٹیکسیاں سڑکوں پر۔۔ ان ٹیکسیوں میں ایک وقت میں کتنے مسافر سوار ہو سکیں گے؟عوام کیلئے خوشخبری

گاڑیوں کے شوقین افراد کیلئے بُری خبر،وہ گاڑیاں جن کی درآمد پر پابندی لگا دی گئی

گاڑیوں کے شوقین افراد کیلئے بُری خبر،وہ گاڑیاں جن کی درآمد پر پابندی لگا دی گئی