02:58 pm
سندھ حکومت بلدیاتی انتخابات نہیں کرائے گی؟

سندھ حکومت بلدیاتی انتخابات نہیں کرائے گی؟

02:58 pm

صوبائی الیکشن کمیشن نے عندیہ دیاہے کہ سندھ کی حکومت بلدیاتی انتخابات کرانے میں دلچسپی نہیں رکھتی ہے بلکہ ٹال مٹول سے کام لے رہی ہے۔ اس سلسلے میں صوبائی الیکشن کمیشن کے سامنے   ناصر حسین شاہ اور مرتضیٰ وہاب پیش ہوئے جن کی بلدیاتی انتخابات کرانے سے متعلق دلائل انتہائی کمزور اور بو دے تھے۔ جس کو صوبائی الیکشن کمیشن نے تسلیم کرنے سے انکار کردیاہے۔ ان دونوں حضرات نے کہا کہ ہوسکتاہے کہ ہم آئندہ سال مارچ اپریل میں بلدیاتی انتخابات کراسکتے ہیں۔ ان کے خیال کے مطابق مردم شماری بلدیاتی الیکشن کی راہ میں رکاوٹ ہے۔ حالانکہ موجودہ مردم شماری ہی کی بنیاد پر عام انتخابات لڑے گئے تھے۔ مختلف سیاسی جماعتوں کی جانب سے مرد م شماری سے متعلق اعتراض اٹھائے گئے ہیں ۔ لیکن حکومت وقت نے اس پر خلوص دل سے دھیان نہیں دیاہے۔ کراچی کی آبادی کم ظاہرکی گئی تھی صورتحال اب بھی ایسی ہے جس کو بنیاد بناکر سندھ کی حکومت بلدیاتی انتخابات کو موخر کررہی ہے۔
 حالانکہ جہاں جہاں پارلیمانی جمہوری نظام رائج ہے وہاں بلدیاتی نظام جمہوریت کو مضبوط کرتاہے اور جمہوریت کی بنیاد اس ہی نظام سے وابستہ ہے اس کے ذریعے عوام کے مسائل ان کے دہلیزپرحل کئے جاتے ہیں۔ ماضی میں سابق صدر مشرف کے زمانے میں میں ایک فعال بلدیاتی نظام تشکیل دیا گیا تھا جس کی بنیاد پر کراچی کو اٹھارہ ٹائون میں تقسیم کرکے عوام کے بیشتر مسائل حل کردیئے گئے تھے۔ کراچی کے علاوہ ملک کے دیگر شہروں میں بھی اس ہی نظام کو عوام نے پسند کیاتھا اور بڑی دل جمعی کے ساتھ عوامی مسائل کو حل کرنے کی کوشش کی گئی تھی‘ لیکن موجودہ حکومت نے خصوصیت سندھ کی حکومت نے سابق صدر کے بلدیاتی نظام کی جگہ بیورو کریسی کے نظام کو عوام کے سروں پر مسلط کردیاہے۔ جس کی وجہ سے کراچی سمیت اندرون سندھ کے مسائل حل نہیں ہورہے ہیں۔ بلکہ مسائل کاانبار لگ گیاہے۔ کراچی جو پاکستان کاکمرشل حب ہے‘ مرکز کو 65فیصد ریونیو دیتاہے جبکہ پورے سندھ سے صرف ایک فیصد ریونیو ملتاہے۔ لیکن اس کے باوجود کراچی کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جارہا ہے۔ یہ پی پی پی کی ایک سوچی سمجھی پالیسی ہے‘ جولسانیت اوررجعت پسندانہ قوم پرستی پرمبنی ہے۔ حالانکہ ناقابل تردید حقیقت یہ ہے کہ سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013ء کے تحت بھی120دن کے اندر بلدیاتی انتخابات کرانا ضروری ہوتا ہے۔ 120دن کا عرصہ بھی گزر گیا ہے اور اس کی جگہ کراچی کے لئے ایک ایڈمنسٹریٹر کومقرر کردیا ہے جس کے پاس اتنے بڑے شہر اور اس کی آبادی کے مسائل کو حل کرنے کا کوئی تجربہ نہیں ہے۔ سپریم کورٹ نے 2015ء میں سندھ حکومت کو حکم دیا تھا کہ وہ بلدیاتی انتخابات کرائے تاکہ عوا م کے نمائندے عوام کے مسائل حل کرسکیں۔ لیکن سندھ حکومت نے سپریم کورٹ کے احکامات کوبھی ہوا میں اڑا دیایہ قابل مذمت اور عوام دشمن رویہ ہے۔ مزید برآں سیکرٹری الیکشن کمیشن ظفر اقبال نے کہا ہے کہ آرٹیکل218 اور 212 کے تحت بلدیاتی انتخابات کرانا الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے۔ سندھ حکومت آئین کے تحت اپنی ذمہ داری پوری نہیں کررہی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ کراچی کے عوام ہر قسم کی اذیتوں سے دوچار ہیں۔جس کا ازالہ کرنے کے لئے کسی جانب سے دست تعاون نہیں بڑھ رہاہے۔ ایسا محسوس ہورہاہے کہ پی پی پی کی حکومت (جوگائوں والوں پر مشتمل ہے) مزید اٹھارہ ماہ تک انتخابات کرانے کے لئے تیار نہیں ہے جوکہ آئین اور قانون کی کھلی خلاف ورزی ہے۔ نیز یہ بھی لکھنا بہت ضروری ہے کہ آرٹیکل 132 اور 140  بھی بلدیاتی اداروں کی مضبوطی کی بات کرتا ہے لیکن جان بوجھ کر اس نظام کے وجود کی نفی کی جارہی ہے۔ اس گھمبیر صورتحال کے پیش نظر کراچی کے باسیوں میں اندر ہی اندرغصے کا لاوا پک رہاہے جوکسی بھی دن سیل رواں کی مانند ہرخشک وتر کو بہا کر لے جائے گا۔ پی پی پی کے بعض عقلمند جیالے میرے اس تجزیے سے اتفاق کرتے ہیں لیکن ’’ بڑے صاحب ‘‘کے خوف سے اس مسئلہ پر بات کرنے سے گریز کرتے ہیں۔ حکومت سندھ کے اس منفی رویے سے ظاہر ہورہاہے اس کو کراچی والوں دکھوں اور تکلیفوں کااحساس نہیں ہے۔ بقول جماعت اسلامی ’’یہ ایک کرپٹ حکومت ہے ‘‘۔ جس نے1100 ارب روپے ہڑپ کرلئے ہیں۔ اور کام بھی نہیں کیاہےK-4 کا منصوبہ ابھی تک نامکمل ہے‘ حالانکہ اس پر اب تک اربوں روپے خرچ کئے جاچکے ہیں۔ اس ہی طرح سرکلر ریلوے کامنصوبہ بھی غیر فعال ہے۔ جس کواب تک فعال ہوجاناچاہیے تھا‘گرین بس کامنصوبہ ابھی تک غیر فعال ہے۔ 
سڑکوں کا براحال ہے۔ دوماہ قبل بعض علاقوں میں سڑکوں پر استر کاری کی گئی ہے جو سڑکوں کی تعمیر کامتبادل نہیں ہے جبکہ ناقابل تردید حقیقت یہ ہے کہ کراچی کے بیشتر علاقوں میں نا تو سڑکیں بن رہی تھی اور نہ ہی پینے کا صاف پانی بعض جگہ لوگ گٹر کا پانی پینے پرمجبور ہیں ۔ میں نے خود اس طرح کا پانی پیاتھا جس کے سبب بیمار ہوگیاتھا۔ گرین بس کامنصوبہ جس میں صوبائی حکومت شراکت دار ہے‘ ابھی تک مکمل نہیں ہواہے‘ عوام پر انی منی بسوں پر سفر کرنے پرمجبور ہوچکے ہیں‘ جس کے سبب آئے دن سنگین نوعیت کے حادثات ہوتے رہتے ہیں۔ رکشہ والے منہ مانگے کرایہ وصول کررہے ہیں‘ ان کی بھی سرزنش کرنے والا کوئی نہیں ہے۔کالم کوختم کرتے وقت یہ  لکھنا لازم ہے کہ بلاول زداری کا دعویٰ ہے (جس کی کوئی بنیاد نہیں ہے) کہ آئندہ وفاق میں حکومت پی پی پی بنائے گی لیکن سوال یہ پیدا ہوتاہے کہ جو سندھ کو بہتر طور پر نہیں چلاسکتی ہے‘ وہ وفاق کو کس طرح چلاسکے گی؟
ہم نے مانا کہ تغافل نہ کروگے لیکن
خاک ہوجائیں گے تم کو خبر ہونے تک

تازہ ترین خبریں

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر اتنا رش کیوں رہتا ہے؟  جانیں محسن پاکستان کی قبر پر بسیرا کرنے والا یہ شخص کون ہے؟

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر اتنا رش کیوں رہتا ہے؟ جانیں محسن پاکستان کی قبر پر بسیرا کرنے والا یہ شخص کون ہے؟

وزیراعظم عمران خان 24 اکتوبر کو 3 روزہ دورے پر سعودی عرب جائیں گے

وزیراعظم عمران خان 24 اکتوبر کو 3 روزہ دورے پر سعودی عرب جائیں گے

فیصل آباد میں پی ڈی ایم جلسے میںنظر آنیوالی یہ بزرگ ہستی کون ہے؟  مریم نواز بھی جذباتی ہو گئیں، تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

فیصل آباد میں پی ڈی ایم جلسے میںنظر آنیوالی یہ بزرگ ہستی کون ہے؟ مریم نواز بھی جذباتی ہو گئیں، تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

مرنے کے بعد محسنِِ پاکستان کا مقام یاد آگیا، وفاقی حکومت ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر کیا کرنے جارہی ہے؟ بڑا اعلان کر دیا گیا

مرنے کے بعد محسنِِ پاکستان کا مقام یاد آگیا، وفاقی حکومت ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر کیا کرنے جارہی ہے؟ بڑا اعلان کر دیا گیا

پی ڈی ایم کا فیصل آباد میں جلسہ ، عظمیٰ بخاری نے اپنے ہی کارکن کو تھپڑ کیوں جھڑ دیا؟ وجہ سامنے آگئی

پی ڈی ایم کا فیصل آباد میں جلسہ ، عظمیٰ بخاری نے اپنے ہی کارکن کو تھپڑ کیوں جھڑ دیا؟ وجہ سامنے آگئی

ملک بھر کے بینک بند رہیں گے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا نوٹیفیکیشن جاری

ملک بھر کے بینک بند رہیں گے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا نوٹیفیکیشن جاری

پانچ سالوں میں دل نہیں بھرا؟ اگلی حکومت پھر تحریک انصاف کی ہو گی،غریب عوام کو ڈرائونا خواب دکھا دیا گیا

پانچ سالوں میں دل نہیں بھرا؟ اگلی حکومت پھر تحریک انصاف کی ہو گی،غریب عوام کو ڈرائونا خواب دکھا دیا گیا

حکومت کا تختہ الٹنے کی تیاریاں مکمل ، 12ربیع الاول کے بعد کیا ہونیوالاہے؟ناراض حکومتی اراکین بھی اپوزیشن کیساتھ جا مِلے

حکومت کا تختہ الٹنے کی تیاریاں مکمل ، 12ربیع الاول کے بعد کیا ہونیوالاہے؟ناراض حکومتی اراکین بھی اپوزیشن کیساتھ جا مِلے

ڈرون حملے میں بے گناہوں کی اموات، امریکی حکومت نے مرنے والوں کے اہلخانہ کیلئے کروڑوں روپے معاوضے کا اعلان کر دیا

ڈرون حملے میں بے گناہوں کی اموات، امریکی حکومت نے مرنے والوں کے اہلخانہ کیلئے کروڑوں روپے معاوضے کا اعلان کر دیا

مہنگائی کنٹرول سے باہر ہونے پر وزیراعظم عمران خان کا استعفیٰ؟ خبر نے ملک بھر میں تھر تھلی مچا دی

مہنگائی کنٹرول سے باہر ہونے پر وزیراعظم عمران خان کا استعفیٰ؟ خبر نے ملک بھر میں تھر تھلی مچا دی

گریڈ 1سے 15تک نوکریاں ہی نوکریاں! حکومت نے بیروزگاری جوانوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

گریڈ 1سے 15تک نوکریاں ہی نوکریاں! حکومت نے بیروزگاری جوانوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

کمر توڑ مہنگائی ، گھی اور تیل کے بعد آٹے کا تھیلا بھی 1500میں دستیاب،غریب دو وقت کی روٹی کھانے سے بھی مجبور

کمر توڑ مہنگائی ، گھی اور تیل کے بعد آٹے کا تھیلا بھی 1500میں دستیاب،غریب دو وقت کی روٹی کھانے سے بھی مجبور

تنخواہوں میں بھی مزید اضافہ کرنا ہو گا،  حکومت نے تنخواہ دار طبقے کیلئے بڑا اعلان کر دیا

تنخواہوں میں بھی مزید اضافہ کرنا ہو گا، حکومت نے تنخواہ دار طبقے کیلئے بڑا اعلان کر دیا

اگلے 48گھنٹوں میں کہاں کہاں بارش کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کو ٹھنڈی ٹھنڈی نوید سنا دی

اگلے 48گھنٹوں میں کہاں کہاں بارش کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کو ٹھنڈی ٹھنڈی نوید سنا دی