12:56 pm
کیا اسلام قبول کرنا جرم بنا دیا جائے گا؟

کیا اسلام قبول کرنا جرم بنا دیا جائے گا؟

12:56 pm

کیا واقعی پاکستان میں دین اسلام قبول کرنے کو جرم بنانے کی تیاریاں ہو رہی ہیں؟ ملک میں جبری تبدیلی مذہب کا دعویٰ کرنے والے صیہونی ایجنٹ آ ج تک اپنے اس دعوے کو ملک کی کسی عدالت میں ثابت نہیں کرسکے، جبری تبدیلی مذہب کاپروپیگنڈہ تو نہایت منظم انداز میں کیا جاتا رہا، اس جھوٹے پروپیگنڈے کو لادین عناصر ، دجالی میڈیا اور سیکولر شدت پسندوں کا گروہ آگے بڑھاتا رہا، یہ خاکسار گزشتہ بیس سالوں سے انہی صفحات پر اپنے کالموں میں سیکولر شدت پسندوں کے اس گروہ کو چیلنج دیتا چلا آرہا ہے کہ سیکولر شدت پسند، موم بتی مافیا، میرا جسم میری مرضی اینڈ کمپنی ، ’’جبری تبدیلی مذہب‘‘ کا کوئی ایک واقعہ کسی بھی عدالت میں ثابت کر دکھائے تو بات بنے، مگر الحمدللہ  ایڑی چوٹی کا زور لگانے کے باوجود یہ سارے  مل کر بھی صرف ان 20 سالوں میں نہیں بلکہ 74 سالوں سے کسی بھی عدالتی فورم پر جبری تبدیلی مذہب کا کوئی ایک واقعہ بھی ثابت کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکے؟ اندرون سندھ … جن ہندو لڑکیوں کے قبول اسلام کے واقعات کو دجالی میڈیا نے بھارتی پروپیگنڈے کو دوا م بخشتے ہوئے ، جبری تبدیلی مذہب کے ساتھ جوڑنے کی کوشش کی ، ان نو مسلم لڑکیوں کو جب کراچی ہائیکورٹ یا اسلام آباد سپریم کورٹ میں چیف جسٹس کے سامنے پیش کیا گیا تو ان نومسلم لڑکیوں نے دجالی میڈیا کے ’’جبری تبدیلی مذہب‘‘ کے غلط پروپیگنڈے پر لعنت بھیجتے ہوئے ،
عدالت کے کٹہرے میں کھڑے ہوکر کہا کہ جج صاحب! ہم نے اپنی مرضی، برضا اور خوشی  سے دین اسلام کو حق کو سمجھتے ہوئے  اسلام قبول کیا ہے، ہمیں نہ کسی نے ورغلایا ہے ، نہ ڈرایا ہے … اور نہ ہی لالچ دیا ہے  ، کئی دفعہ ان نو مسلم لڑکیوں کو عدالت سے دارالامان منتقل کرکے وہاں ان لڑکیوں کی ان کے والدین اور دیگر رشتہ داروں سے ملاقاتوں کا اہتمام بھی کیا گیا ، جنہوں نے اسلام قبول کرنے والی اپنی بیٹیوں کو سمجھانے اور منانے کی بے حد کوششیں بھی کیں ، لیکن اس کے باوجود وہ بچیاں اپنے ’’اسلام‘‘ پہ ثابت قدمی کے ساتھ ڈٹی رہیں … ایک دو نہیں ، ایسے درجنوں واقعات میڈیا  میں رپورٹ ہوئے … جو آج بھی ریکارڈ پر موجود ہیں مگر اس کے باوجود بھارت اور اس کے ہمنوائوں کا ٹولا جبری تبدیلی مذہب کا جھوٹا راگ الاپتا رہا، بلاول زرداری کی سندھ اسمبلی نے دو ہزار سولہ میں18 سال سے کم عمر نوجوانوں کو اسلام قبول کرنے سے روکنے کے لئے بل تو پاس کروالیا، لیکن سندھ اسمبلی کے اس اسلام دشمن بل کو گورنر سندھ نے واپس کر دیا … جس کی وجہ سے اسلام سے متصادم بل قانون بنتے بنتے رہ گیا اس خاکسار نے 2016 ء میں بھی انہی صفحات پر لکھے گئے اپنے کالموں میں عرض کیا تھا کہ اگر سندھ حکومت اس قسم کے متنازعہ اور امتیازی قانون لائے گی تو یہ اسلام اور مسلمانوں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے کے مترادف ہوگا ،  یہ خبر نہایت تشویش ناک ہے کہ پاکستان میں اسلام قبول کرنے کو جرم بنانے کے لئے قانون سازی پر کام ہو رہا ہے ، شیخ الاسلام مفتی تقی عثمانی کے اس حوالے سے خط کا ذکر تو بعد میں کریں گے ، پہلے معروف صحافی اور اچھی شہرت کے حامل انصار عباسی کے تیرہ ستمبر والے کالم کی طرف آتے ہیں، وہ لکھتے ہیں کہ  ’’حکومتی ذرائع سے رابطے کے بعد پتہ چلا کہ مذہبی اقلیتوں کی جبری مذہب کی تبدیلی کے نام پر ایک بل بنایا گیا ہے جو اس وقت اسلامی نظریاتی کونسل  اور وزات مذہبی امور کے زیر غور ہے اور جسے پڑھ کر معلوم ہوتا ہے کہ اگر اس بل کو قانون بنا دیا گیا تو اسلام قبول کرنے پر پاکستان میں پابندی لگ جائے گی اور اسلام کی تبلیغ کرنے والے مجرم ٹھہریںگے ، انصار عباسی لکھتے ہیں کہ میں نے بل کی کاپی منگوا کر اس کا مطالعہ کیا تو اس نتیجے پر پہنچا کہ اگر اس مجوزہ قانون کو نافذ کیا گیا تو ایک تو کوئی بھی اٹھارہ سال سے کم عمر نوجوان اسلام قبول نہیں کرسکے گا ، اور دوسرا اٹھارہ سال سے بڑی عمر کا شخص بھی ’’آسانی‘‘ سے اسلام قبول نہیں کرسکے گا، کیونکہ اس کے ساتھ کچھ ایسی کڑی شرائط لگا دی گئی ہیں کہ اگر اسلام قبول کرنا ناممکن نہیں تو مشکل ترین ضرور ہو جائے گا، انہوں نے بل کے بعض نکات بھی اپنے کالم میں درج کئے  ہیں ، جن کے مطابق ’’کوئی بھی غیر مسلم، جو بچہ نہیں ہے (18 سال سے زیادہ عمر والا شخص) اگر دوسرے مذہب کو قبول کرنا چاہتا ہے ، اس علاقہ کے ایڈیشنل سیشن جج کو مذہب کی تبدیلی کے سرٹیفکیٹ کے لئے درخواست دے گا، جہاں عام طور پر غیر مسلم فرد رہتا ہے ، یا اپنا کاروبار کرتا ہے… ایڈیشنل سیشن جج مذہب کی تبدیلی کی درخواست  موصول ہونے کے سات دن کے اندر انٹرویو کی تاریخ مقرر کرے گا، فراہم کردہ تاریخ پر ’’فرد‘‘ ایڈیشنل سیشن جج کے سامنے پیش ہوگا، جو اس بات کو  یقینی بنائے گا کہ مذہب کی تبدیلی کسی دبائو کے تحت تو نہیں؟ اور نہ ہی کسی دھوکا دہی یا غلط بیانی کی وجہ سے ہے؟ ایڈیشنل سیشن جج  غیر مسلم کی درخواست پر اس شخص کی مذہبی اسکالر سے ملاقات کا اہتمام کرے گا، جو مذہب وہ تبدیل کرنا چاہتاہے، ایڈیشنل سیشن جج مذاہب کا تقابلی مطالبہ کرنے اور ایڈیشنل سیشن جج کے دفتر واپس آنے کے لئے نوے دن کا وقت دے سکتا ہے، ایڈیشنل سیشن جج اس بات کو یقینی بنانے کے بعد  مذہب کی تبدیلی کا سرٹیفکیٹ جاری کرے گا، جج کی زیر نگرانی تقابل ادیان کورس کرنے او ر انٹرویو کے کسی مرحلے پر وہ اسلام قبول کرنے پر آمادہ نہ ہوا تو اسے ’’دعوت‘‘ دینے والے شخص کے خلاف ایف آئی آر ہوگی، اور اسے جبری مذہب تبدیل کروانے کا مجرم گردانا جائے گا، جسے کم از کم پانچ اور زیادہ سے زیادہ دس سال تک  قید کی سزا اور جرمانہ ہوگا۔‘‘
ریاست مدینہ میں غیر مسلموں کو اسلام قبول کرنے سے روکنے کے لئے   اس قسم کی متنازعہ  قانون سازی کے لئے پاپڑ بیلے جارہے ہیں؟ سوال یہ ہے کہ جب آج تک جبری تبدیلی مذہب کا کوئی ایک واقعہ بھی پیش نہیں آیا تو پھر حکمران ٹولہ صرف خالی خولی ’’اندیشوں‘‘ کی بنیاد پر اس قسم کے لچر قوانین کس غیر ملکی طاقت کے ایماء پر بنا رہا ہے ؟ ایک طرف وزراء کا یہ کہتے کہتے منہ سوکھ جاتا ہے کہ  ’’ڈومور‘‘ کا باب ہمیشہ کے لئے بند کر دیا گیا، اگر ’’ڈومور‘‘ کا باب بند ہوچکا ہے ، اگر حکومت امریکہ، برطانیہ، یورپی یونین، ایف اے ٹی ایف سمیت کسی بھی غیر ملکی طاقت سے ڈکٹیشن لینے کے لئے تیار نہیں ہے تو پھر اس قسم کے اسلام دشمن قوانین کس کو راضی کرنے کے لئے بنانے کی تیاریاں عروج پکڑ رہی ہیں؟ حکمرانوں کو چاہیے کہ وہ ہوش کے ناخن لیں، اس قسم کی متنازعہ قانون سازی کے خلاف قوم پوری قوت سے سڑکوں پر نکلے گی  ، جس سے ملک انتشار کا شکار ہوگا۔

 

تازہ ترین خبریں

نئے مون سون سسٹم کی پاکستان میں دھماکے دار انٹری۔۔ کراچی سے خیبر تک بارشیں ہی بارشیں ؟محکمہ موسمیات نے الرٹ جاری کردیا 

نئے مون سون سسٹم کی پاکستان میں دھماکے دار انٹری۔۔ کراچی سے خیبر تک بارشیں ہی بارشیں ؟محکمہ موسمیات نے الرٹ جاری کردیا 

بچوں کے مستقبل سے کھلواڑ۔۔پاکستان کی بڑی سرکاری یونیورسٹی نے جعلی ڈگریاں جاری کردیں، گندے دھندے میں کون کون ملوث ہے؟والدین اور طلبا یہ ضرور

بچوں کے مستقبل سے کھلواڑ۔۔پاکستان کی بڑی سرکاری یونیورسٹی نے جعلی ڈگریاں جاری کردیں، گندے دھندے میں کون کون ملوث ہے؟والدین اور طلبا یہ ضرور

ہمیں دور دراز علاقوں میں پٹرول پمپ کی فراہمی  کو یقینی بنانا چاہیے۔عارف علوی

ہمیں دور دراز علاقوں میں پٹرول پمپ کی فراہمی کو یقینی بنانا چاہیے۔عارف علوی

 ماسک صحیح طریقے سے نہ پہننے کامعاملہ ۔۔۔ پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کو امریکی ائیرلائن  اتاردیاگیا 

 ماسک صحیح طریقے سے نہ پہننے کامعاملہ ۔۔۔ پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کو امریکی ائیرلائن  اتاردیاگیا 

ویلکم ۔۔خوش آمدید۔۔ڈاکٹر ذاکر نائیک کب پاکستان آ رہے ہیں۔۔؟ دشمنوں کی نیندیں حرام کردینےوالی خبر

ویلکم ۔۔خوش آمدید۔۔ڈاکٹر ذاکر نائیک کب پاکستان آ رہے ہیں۔۔؟ دشمنوں کی نیندیں حرام کردینےوالی خبر

ظلم کی انتہائی ، بااثرملزمان نے لڑکی کا نازک اعضا کات دیا، افسوسناک واقعہ پاکستان کے کون سے شہر میں پیش آیا؟جانیے

ظلم کی انتہائی ، بااثرملزمان نے لڑکی کا نازک اعضا کات دیا، افسوسناک واقعہ پاکستان کے کون سے شہر میں پیش آیا؟جانیے

شہباز شریف اور بلاول بھٹو ٹھپہ مافیا کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں، فرخ حبیب

شہباز شریف اور بلاول بھٹو ٹھپہ مافیا کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں، فرخ حبیب

 سندھ میں کورونا ویکسینیشن نہ کروانے والوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

سندھ میں کورونا ویکسینیشن نہ کروانے والوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

 لاہور  ایئرپورٹ سے اڑان بھرنے والے جہاز پر نا معلوم شخص کی جانب سے  لیزر لائٹ  مارنے کا واقعہ،  مقدمہ درج

لاہور ایئرپورٹ سے اڑان بھرنے والے جہاز پر نا معلوم شخص کی جانب سے لیزر لائٹ مارنے کا واقعہ، مقدمہ درج

صوابی یونیورسٹی سے جعلی ڈگریاں جاری ہونے کا انکشاف،یونیورسٹی کے چار اہلکاروں کے ملوث ہونے کی تصدیق

صوابی یونیورسٹی سے جعلی ڈگریاں جاری ہونے کا انکشاف،یونیورسٹی کے چار اہلکاروں کے ملوث ہونے کی تصدیق

خیبر پختونخوامیں کل شام سے بارشوں اور تیز ہواؤں کا نیاسلسلہ شروع ہونے کاامکان

خیبر پختونخوامیں کل شام سے بارشوں اور تیز ہواؤں کا نیاسلسلہ شروع ہونے کاامکان

تحریک انصاف سے لوٹے اور آزاد امیدوار نکا ل دیں توباقی کون بچتاہے؟عظمیٰ بخاری نے ایسی بات کہہ دی جس سے کھلاڑی غصے سے آگ بگولہ ہوگئے

تحریک انصاف سے لوٹے اور آزاد امیدوار نکا ل دیں توباقی کون بچتاہے؟عظمیٰ بخاری نے ایسی بات کہہ دی جس سے کھلاڑی غصے سے آگ بگولہ ہوگئے

 مسلم لیگ (ن) نے  الیکشن کمیشن سے وفاقی وزراء کو سزا دینے کا مطالبہ کر دیا

مسلم لیگ (ن) نے الیکشن کمیشن سے وفاقی وزراء کو سزا دینے کا مطالبہ کر دیا

 انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کا استعمال ناگزیر ہے کوئی ‏بھی الیکشن ہوں دھاندلی کےالزامات لگائےجاتےہیں۔سینیٹر فیصل جاوید 

 انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کا استعمال ناگزیر ہے کوئی ‏بھی الیکشن ہوں دھاندلی کےالزامات لگائےجاتےہیں۔سینیٹر فیصل جاوید