12:57 pm
 افغانستان۔۔۔۔۔۔عالمی طاقتوں کاقبرستان

افغانستان۔۔۔۔۔۔عالمی طاقتوں کاقبرستان

12:57 pm

اقوام عالم کے بیشتردانشوروں کی متفقہ رائے ہے کہ اب ہمیں افغانستان کے بارے میں تمام تحفظات اورپریشانیوں کوکنارے کر دینا چاہیے۔  اب ان باتوں سے کوئی بیوقوف نہیں بن سکتا۔ امریکہ ،برطانیہ،نیٹواوران کے حامیوں کے پاس افغانستان کواپنے پیروں پرکھڑا کرنے، انسانی حقوق فراہم کرنے،جنسی مساوات اور بدعنوانی سے پاک جمہوری حکومت قائم کرنے کے لئے 20سال تھے،مگروہ ناکام ہوگئے۔2002 میں فنڈکی ترسیل دوبارہ شروع ہونے اوراس کے بعدکروڑوں ڈالرمزید فراہم کرنے کے باوجود عورتوں کے حقوق کے بل کے علاوہ بمشکل کچھ  ہی بہتر ہوسکا۔اس بات میں کوئی شک نہیں کہ کابل دنیاکی بدعنوان ترین حکومت کا گھر بنا رہاجوکہ اس وجہ سے ترقی نہیں کرپایاکہ وہاں کے لالچی سیاست دان اور ’’وارلارڈز‘‘ افغانستان کی تعمیرو ترقی سے زیادہ اپنی جیبیں بھرنے کے فکرمند تھے۔اس میں کوئی حیران کن بات نہیں کہ طالبان نے دوبارہ ملک بھرمیں غلبہ حاصل کرلیااور انہوں نے اتنی تیزی سے کنٹرول حاصل کیاکہ اس نے بہت سے فوجی وسیاسی مدبروں بالخصوص امریکہ اوراس کے اتحادیوں کوحیرت میں ڈال دیا۔ بیشترصوبوں میں طالبان واپسی پرپرجوش خیر مقدم  کیا گیااوران علاقوں میں بھی انہیں کسی قسم کی مزاحمت کاسامنانہ کرناپڑاجن علاقوں پران کے پہلے دورحکومت میں رسائی نہ مل سکی تھی اور اب پنج شیروادی پر کنٹرول حاصل کرنے کے بعد مکمل افغانستان کواپنی گرفت میں لے چکے ہیں۔
20سال تک طالبان کودہشت گرد اور شیطان صفت مشہورکرنے کے بعدبھی افغانستان میں ان کی پذیرائی نے یقینامغربی حکومتوں اوران کے زیرِاثرمیڈیاکونہ صرف شرمندگی میں مبتلا کردیاہے بلکہ اب ان کے سچ بولنے کی ساکھ کابھی دھڑن  تختہ ہوگیاہے۔میڈیانے بڑے سنسنی خیز انداز  میں 9/11 کے روزبتایاتھاکہ طالبان کی حکومت بے حدظالم اوربے رحم ہے مگردرحقیقت 9/11  کے حادثہ میں طالبان کاکوئی ہاتھ نہیں تھا۔یہ صرف اس وقت کے امریکی صدرجارج بش اوراس کے محبوب چیلے،برطانوی وزیرِاعظم ٹونی بلئیرکابیانیہ تھا۔
وہ کہتے تھے کہ افغانستان میں بچیوں کے اسکولوں کوبندکردیاگیاہے اوربچوں کوپتنگیں اڑانے تک پرپابندی لگ گئی ہے۔آج وقت نے یہ ثابت کردیاکہ یہ باتیں محض کہانی کوڈراؤنا بنانے کے لئے  تھیں ورنہ اس میں ذرہ برابرصداقت ثابت نہیں ہوسکی۔درحقیقت اگرصحافی معاملے کی چھان بین کرتے تووہ باآسانی جان لیتے کہ اسکول ویران اورکھنڈرصرف اس لیے ہوگئے تھے کہ طالبان کے پاس پیسے نہیں تھے، ملک کے بیشترحصوں میں قحط پڑ گیا تھااوریہ سب ملک میں اس خوفناک جنگ کا نتیجہ تھاجس نے امریکہ کو واحد سپر پاور تو بنا دیا لیکن افغانوں اوراس کے ہمسایہ اورمددگارپاکستان کو اس کی بھاری قیمت چکانی پڑی لیکن جواب میں امریکہ اوراس کے اتحادی اپنے مفادات کی تکمیل پرجشن مناتے ہوئے اپنے تمام وعدے بھول گئے اور تاریخی بے وفائی اورچشم پوشی کے مرتکب ہوئے۔  
پتنگیں اڑانے پربڑے شہروں اورقصبوں میں بلاشبہ پابندی تھی کیونکہ اس کی پتلی اور تیز دھارڈوروں سے نہ صرف یہ کہ بجلی کے تار کٹ رہے تھے جس سے علاقوں کوبجلی کی فراہمی معطل ہو جاتی بلکہ لوگوں کی اموات بھی واقع ہو رہی  تھیں۔ سوچیں کہ آپ لندن کی آکسفورڈ اسٹریٹ  یانیویارک کی 42سٹریٹ میں پتنگ اڑا رہے ہیں پھرآپ کوسمجھ آجائے گاکہ افغانستان میں پتنگ اڑانے پرپابندی کیوں تھی۔
فروری2002 ء میں اس وقت میڈیامیں اس بات کابہت چرچاتھاکہ طالبان کی شکست کے بعد کابل یونیورسٹی دوبارہ کھل رہی ہے اوراب لڑکیاں دوبارہ اسکول جاسکیں گی۔بہت سے لوگوں کاخیال تھاکہ اب جنگ ختم ہوچکی ہے اورمستقبل روشن ہے۔یقیناایساہی لگتاتھامگر جب ایک پریس کانفرنس میں سوال پوچھاگیاکہ اگر طالبان کے دورمیں لڑکیوں کوتعلیم سے روکا جاتا تھا تواب لڑکوں کے مقابلے میں کتنی زیادہ لڑکیوں نے داخلہ امتحان پاس کیاہے تووہاں برف کی خاموشی چھاگئی اورمغربی میڈیاکاجھوٹ بھی آشکار ہوگیا۔سٹاک ہوم میں جاری پریس کانفرنس میں سوال کرنے والی بہادرخاتون ’’ایوان رڈلے‘‘ کوجواب دینے کی بجائے اس کی بیخ  کنی کرکے اسے کنارے لگانے میں عافیت سمجھی گئی اوراپنی ندامت کوچھپانے کے لئے  یہ زہریلا پروپیگنڈہ کیاگیاکہ موصوفہ طالبان کی دس دن قید میں خوفناک آزمائش میں گزری ہیں جس کے بعدیہ ایک نفسیاتی بیماری کاشکارہوچکی ہیں جبکہ بقول ایوان رڈلے’’اپنے قیدکرنے والوں کی فرمانبرداری یاکسی قسم کا کوئی لگاؤتودورمیں توان کے لئے  ایک دردِسرتھی۔درحقیقت مجھے نہیں معلوم کہ رہائی پاکر بخیروعافیت میرے برطانیہ بھیجے جانے پرکون زیادہ خوش تھا،میں یاطالبان جبکہ میری رہائی کے اعلان کے وقت ایک پریس کانفرنس میں ملا عبدالسلام ضعیف نے کہاکہ یہ ایک بہت بری اور بدزبان خاتون ہے۔ مجھے طالبان نہیں پسندتھے اوریقیناانہیں بھی میں بالکل ناپسندتھی لیکن بحیثیت صحافی،میں نے سچائی کی اشاعت کوہمیشہ اپنی ذمہ داری سمجھاہے اورسچائی یہ ہے کہ میرے قید کرنے  والے میرے ساتھ جس محبت واحترام سے پیش آئے اس کی مجھے توقع نہ تھی مزیدیہ کہ میں دیکھ سکتی تھی کہ وہ اپنے ملک سے محبت کرتے تھے اور امریکہ اوراس کے حواریوں سے اپنے ملک کوواپس حاصل کرنے کی جنگ میں ہمت ہارنے کو تیار نہ تھے‘‘۔
امریکہ ،مغربی اتحادی اوران کے حواری،چیلے چانٹے اس بات کوپسندکریں یانہیں مگرطالبان نہ کبھی اپنے مقاصدسے ڈگمگائے اورنہ ہی کبھی انہوں نے اپناکوئی خفیہ ایجنڈارکھا۔ امریکہ  اوراس کے مغربی اتحادی شایدطالبان کے نقطہ نظراوران کے عقائدونظریات کوپسندنہ کریں اورطالبان کے طریقہ حکومت کوبھی ناپسند قرار  دیتے ہوئے کبھی بھی اپنے ممالک میں نافذ کرنے کے خیال سے بھی کترائیں اوراس کی بے شماردلیلیں ہوسکتی ہیں مگرایمانداری سے اپنے دل پرہاتھ رکھ کریہ سوچیں کہ انہیں بھی یہ حق نہیں اورنہ ہی یہ توقع کرنی چاہئے کہ طالبان اوران کے حامی امریکی ومغربی کلچر،عقائداورمغربی عادات کواپنائیں جنہیں وہ ناقابلِ برداشت سمجھتے ہیں؟
امریکہ اوراس کے اتحادیوں کے قول وفعل  کااس سےبڑ کراورکیاتضادہوسکتاہے کہ ساری دنیاکے سامنے دوحہ میں باقاعدہ امن معاہدہ کی شرائط کااعلان ہوا،اس پردستخط ہونے کے بعد معاہدہ  کی روسے مئی میں تمام غیرملکی افواج کاانخلا ہونا ضروری تھالیکن معاہدہ امن کی پاسداری کی بجائے امریکہ اپنے اتحادیوں کی مددسے طالبان کے  ٹھکانوں پربمباری کرتارہااورنہ صرف انخلا کی تاریخ میں بھی 3ماہ کی تاخیرکرکے اس معاہدے کے پرخچے اڑادیئے بلکہ اس معاہدے کی 1526 مرتبہ  خلاف ورزیاں اپنے ریکارڈپرچھوڑ گیا۔اس دوران مغربی میڈیاکی طرف سے داعش کے ہسپتال اوردیگرعوامی مقام پرخودکش حملوں کو طالبان کے ساتھ جوڑکردنیابھربدنام کرنے کا سلسلہ شروع کردیاگیاجبکہ خودداعش ان حملوں کی ذمہ داری قبول کرتی رہی۔ بعدازاں طالبان نے  ان علاقوں سے داعش کاخاتمہ کیا۔ کوئی ان سے یہ توپوچھے کہ اپنے مفادکے لئے  افغانستان میں داعش کوکون لایاتھا؟    ( جاری ہے )

تازہ ترین خبریں

نئے مون سون سسٹم کی پاکستان میں دھماکے دار انٹری۔۔ کراچی سے خیبر تک بارشیں ہی بارشیں ؟محکمہ موسمیات نے الرٹ جاری کردیا 

نئے مون سون سسٹم کی پاکستان میں دھماکے دار انٹری۔۔ کراچی سے خیبر تک بارشیں ہی بارشیں ؟محکمہ موسمیات نے الرٹ جاری کردیا 

بچوں کے مستقبل سے کھلواڑ۔۔پاکستان کی بڑی سرکاری یونیورسٹی نے جعلی ڈگریاں جاری کردیں، گندے دھندے میں کون کون ملوث ہے؟والدین اور طلبا یہ ضرور

بچوں کے مستقبل سے کھلواڑ۔۔پاکستان کی بڑی سرکاری یونیورسٹی نے جعلی ڈگریاں جاری کردیں، گندے دھندے میں کون کون ملوث ہے؟والدین اور طلبا یہ ضرور

ہمیں دور دراز علاقوں میں پٹرول پمپ کی فراہمی  کو یقینی بنانا چاہیے۔عارف علوی

ہمیں دور دراز علاقوں میں پٹرول پمپ کی فراہمی کو یقینی بنانا چاہیے۔عارف علوی

 ماسک صحیح طریقے سے نہ پہننے کامعاملہ ۔۔۔ پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کو امریکی ائیرلائن  اتاردیاگیا 

 ماسک صحیح طریقے سے نہ پہننے کامعاملہ ۔۔۔ پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کو امریکی ائیرلائن  اتاردیاگیا 

ویلکم ۔۔خوش آمدید۔۔ڈاکٹر ذاکر نائیک کب پاکستان آ رہے ہیں۔۔؟ دشمنوں کی نیندیں حرام کردینےوالی خبر

ویلکم ۔۔خوش آمدید۔۔ڈاکٹر ذاکر نائیک کب پاکستان آ رہے ہیں۔۔؟ دشمنوں کی نیندیں حرام کردینےوالی خبر

ظلم کی انتہائی ، بااثرملزمان نے لڑکی کا نازک اعضا کات دیا، افسوسناک واقعہ پاکستان کے کون سے شہر میں پیش آیا؟جانیے

ظلم کی انتہائی ، بااثرملزمان نے لڑکی کا نازک اعضا کات دیا، افسوسناک واقعہ پاکستان کے کون سے شہر میں پیش آیا؟جانیے

شہباز شریف اور بلاول بھٹو ٹھپہ مافیا کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں، فرخ حبیب

شہباز شریف اور بلاول بھٹو ٹھپہ مافیا کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں، فرخ حبیب

 سندھ میں کورونا ویکسینیشن نہ کروانے والوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

سندھ میں کورونا ویکسینیشن نہ کروانے والوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

 لاہور  ایئرپورٹ سے اڑان بھرنے والے جہاز پر نا معلوم شخص کی جانب سے  لیزر لائٹ  مارنے کا واقعہ،  مقدمہ درج

لاہور ایئرپورٹ سے اڑان بھرنے والے جہاز پر نا معلوم شخص کی جانب سے لیزر لائٹ مارنے کا واقعہ، مقدمہ درج

صوابی یونیورسٹی سے جعلی ڈگریاں جاری ہونے کا انکشاف،یونیورسٹی کے چار اہلکاروں کے ملوث ہونے کی تصدیق

صوابی یونیورسٹی سے جعلی ڈگریاں جاری ہونے کا انکشاف،یونیورسٹی کے چار اہلکاروں کے ملوث ہونے کی تصدیق

خیبر پختونخوامیں کل شام سے بارشوں اور تیز ہواؤں کا نیاسلسلہ شروع ہونے کاامکان

خیبر پختونخوامیں کل شام سے بارشوں اور تیز ہواؤں کا نیاسلسلہ شروع ہونے کاامکان

تحریک انصاف سے لوٹے اور آزاد امیدوار نکا ل دیں توباقی کون بچتاہے؟عظمیٰ بخاری نے ایسی بات کہہ دی جس سے کھلاڑی غصے سے آگ بگولہ ہوگئے

تحریک انصاف سے لوٹے اور آزاد امیدوار نکا ل دیں توباقی کون بچتاہے؟عظمیٰ بخاری نے ایسی بات کہہ دی جس سے کھلاڑی غصے سے آگ بگولہ ہوگئے

 مسلم لیگ (ن) نے  الیکشن کمیشن سے وفاقی وزراء کو سزا دینے کا مطالبہ کر دیا

مسلم لیگ (ن) نے الیکشن کمیشن سے وفاقی وزراء کو سزا دینے کا مطالبہ کر دیا

 انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کا استعمال ناگزیر ہے کوئی ‏بھی الیکشن ہوں دھاندلی کےالزامات لگائےجاتےہیں۔سینیٹر فیصل جاوید 

 انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ مشین کا استعمال ناگزیر ہے کوئی ‏بھی الیکشن ہوں دھاندلی کےالزامات لگائےجاتےہیں۔سینیٹر فیصل جاوید