01:05 pm
کابل: مسجد میں دھماکہ،100 جاں بحق

کابل: مسجد میں دھماکہ،100 جاں بحق

01:05 pm

٭کابل، مسجد میں دھماکہ، 100 افراد جاں بحق، سینکڑوں زخمی، داعش نے ذمہ داری قبول کر لیO امریکی نائب وزیرخارجہ واپسO لاہورہائی کورٹ میچوں کے دوران سڑکیں بند نہ کرنے کا حکم!O ایئرانڈیا ایک کھرب80 ارب روپے میں ٹاٹا کو فروخت، 112 طیارے، ایک کھرب 20 ارب قرضہO مرغی: سبزیاں، پھل سرکاری نرخ سے 20 فیصد سے زیادہ مہنگےO شہباز شریف ایف آئی اے کے 35 سوالوں کا جواب دینے سے انکارO بلوچستان،9 وزیروں، مشیروں کے استعفے منظورO ساہیوال جیل،50 فٹ لمبی بلند دیوار اچانک گر گئی O قومی اسمبلی کے 21 ارکان سرکاری طور پر روضہ رسولؐ پر حاضر ہوں گےO بجلی، ایک ہفتہ میں دوسری بار 1.95 روپے یونٹ کا اضافہ، عوام پر 85 ارب کا نیا بوجھO ڈینگی زور پکڑ گیا، لاہور کے ہسپتال بھر گئےO کالم کی تحریر کے وقت گورنر ہائوس لاہور کے اندر گرائونڈ پر حکومت اور اپوزیشن کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان میچ جاری تھا۔
٭افغانستان کے شہر قندوز کی ایک جامع مسجد میں جمعہ کی نماز میں دھماکہ سے 100 افراد جاں بحق، سینکڑوں زخمی ہو گئے۔ شہر میں کہرام مچ گیا۔ داعش نے ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ ایران نے اس واقعہ کا سخت نوٹس لیا ہے۔ کابل پر طالبان کے قبضہ کے بعد جلال آباد اور دوسرے شہروں میں چھوٹی سطح پر دھماکوں کے بعد یہ سب سے بڑا واقعہ ہے۔ ’’داعش خراساں‘ نے مزید ایسی کارروائیوں کا بھی اعلان کیا ہے۔ طالبان نے دو ماہ گزرنے کے باوجود ابھی تک کسی خاص نظام حکومت کا اعلان نہیں کیا اور الل ٹپ حکومت چلائی جا رہی ہے۔ عالم یہ ہے کہ پاکستان کے بھرپور تعاون اور ہر قسم کی امداد کے باوجود طالبان کے حکومتی نمائندے پاکستان کو آنکھیں دکھانے لگے ہیںکہ وہ اپنی حدود اور اوقات میں رہے اور طالبان کو کوئی مشورہ نہ دے۔ پاکستان نے موقف اپنا رکھا ہے کہ امن و امان قائم کرنے اور دنیا میں اپنی حکومت تسلیم کرانے کے لئے طالبان کو افغانستان کے تمام اہم فریقوںکو حکومت میں شامل کرنا چاہئے۔ ابھی تک کسی بھی ملک نے افغانستان پر طالبان کی حکومت کوتسلیم نہیں کیا۔
٭لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے اس بات کا سخت نوٹس لیا ہے کہ لاہور اور دوسرے شہروں میں میچوں وغیرہ کے دوران بڑی بڑی سڑکیں دیر تک بند رکھی جاتی ہیں اس سے پورے شہر میں ٹریفک جام ہو جاتی اور لاکھوں شہری عذاب میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔ لاہور میں ان دنوں قذافی سٹیڈیم میں عام گلی کوچوں میں کھیلنے والے نوجوانوں کے کرکٹ میچ ہو رہے ہیں۔ انہیں اعلیٰ ترین فائیو سٹار ہوٹلوں میں رکھا گیا ہے اور ان کی سٹیڈیم تک آمد و رفت کے موقع پر طویل عرصہ تک سڑکیں مکمل طور پر بند کر دی جاتی ہیں۔ ان ٹیموں کو صدارتی پروٹوکول کے ساتھ سٹیڈیم تک لے جایا جاتا ہے۔ اس دوران دیر تک مال روڈ، کینال روڈجیسی بڑی سڑکیں بالکل بند کر دی جاتی ہیں۔ اور ہر طرف ٹریفک بری طرح جام ہو جاتی ہے۔ گزشتہ  روز اس قسم کے ٹریفک جام میں ایمبولینس اور ہائی کورٹ کے سینئر جج جسٹس شاہد کریم بھی دیر تک پھنسے رہے۔ انہوں نے عدالت میں پولیس کے اعلیٰ حکام کو طلب کر لیا۔ اس پر لاہور کے چیف پولیس افسر نے وضاحت کی کہ ہوم سیکرٹری نے پولیس کو ’’زیرو ٹریفک‘‘ (صدارتی پروٹوکول) کا حکم دے رکھا ہے۔ فاضل جج نے پیر کے روز ہوم سیکرٹری کو طلب کر لیا ہے۔ عدالت نے فوری طور پر یہ حکم منسوخ کر دیا اور اب پولیس نے فیصلہ کیا ہے کہ ٹیموں کی آمدورفت کے دوران صرف ایک پوائنٹ سے دوسرے پوائنٹ تک چند سیکنڈ کے لئے ٹریفک رکے گی اور ٹیم گزرنے کے ساتھ ہی کھول دی جائے گی! کیا ستم ہے کہ ان آسمان نشین افسروں کے لئے کھیل تماشوں کے مقابلے میں عوام کی کوئی حیثیت ہی نہیں۔
٭ہم پاکستان کی کبھی ’’باکمال لوگ، لاجواب پرواز‘‘ کے سلوگن والی ’عظیم‘ پی آئی اے کی شان و شوکت کے گن گایا کرتے تھے۔ مگر سیاست دانوں کے ہاتھوں ہزاروں غیر ضروری بھرتیوں اور بے شمار اعلیٰ افسروں کی بھرمار نے کبھی دنیا کی بڑی باوقار ایئرلائنز کا کباڑا کر دیا۔ آج یہ ایئرلائنز مکمل طور پر مفلوج اور اربوں کی مقروض ہو چکی ہے۔ مگر اہم بات کہ بھارت کی کبھی بہت مضبوط اور بہت مشہور ایئرانڈیا کا حال اس سے بھی گیا گزرا ہے۔ اس ایئر لائنز کے پاس 112 بڑے اور درمیانے طیارے ہیں۔ ملک کے اندر اور دنیا بھر میں 120 سے زیادہ مقامات تک پروازیں آتی جاتی ہیں۔ اس کی بھی سیاست دانوں کے ہاتھوں تباہی کا یہ عالم ہو چکا ہے کہ یہ ایک کھرب20 ارب روپے (پاکستان کے دوگنا سے بھی زیادہ) کی مقروض ہو چکی ہے۔ بھارتی حکومت نے چند ماہ پہلے ایئرانڈیا کو فروخت کرنے کا اعلان کیا۔ اس کی کم از کم قیمت فروخت ایک کھرب 20 ارب لگائی۔ سات کمپنیوں نے ٹینڈر داخل کئے۔ پانچ نااہل، ثابت ہوئیں۔ دو میں مقابلہ ہوا اور ٹاٹا کمپنی نے اس تباہ شدہ ایئرلائنز کو ایک کھرب80 ارب روپے میں خرید لیا ہے۔ اس میں ایک کھرب 20 ارب کے قرضے بھی شامل ہیں۔ ٹاٹا کمپنی کے مالک ’’رتن ٹاٹا‘‘ نے کہا ہے کہ ان کے دادا آرڈی ٹاٹا نے 1953ء میں یہ کمپنی قائم کی تھی اوریہ جلد ہی دنیا کی بڑی کمپنی بن گئی تھی، اب اسے پھر اس مقام پرپہنچایا جائے گا۔ بھارت میں تو حکومت نے جرأت کر کے اسے بیچ دیا اور ہمارے ہاں!؟
٭ایف آئی اے نے 25 ارب کی مبینہ منی لانڈرنگ کے سلسلے میں شہبازشریف کو35 سوالات بھیجے اور ان کے جوابات کے لئے انہیں طلب کیا۔ وہ ایف آئی اے کے دفتر گئے اور الگ الگ سوالات کا جواب دینے سے انکار کیا اور حسب سابق کہا کہ سارے سوالات بوگس ہیں۔ میرے بیوی بچے شوگر ملز وغیرہ کا کاروبار چلا رہے ہیں، میرا اس کاروبار سے کوئی تعلق نہیں۔ بعد میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایف آئی اے کے ڈائریکٹر نے ان سے بدسلوکی کی ہے۔
٭بلوچستان میں چار وزیروں، اور پانچ مشیروں و پارلیمانی سیکرٹریوں نے وزیراعلیٰ جام کمال کے رویہ کے خلاف استعفے دیئے، گورنر نے انہیں منظور کر لیا ہے۔ وزیراعلیٰ کو عدم اعتماد کی تحریک کا سامنا ہے جو کسی بھی وقت پیش ہو سکتی ہے۔ اس کے پیش ہونے کے سات روز کے بعد اور 14 دنوںکے اندر اس پر رائے شماری ہو گی۔ عدم اعتماد کی تحریک پر اپوزیشن کے 16 ارکان دستخط کر چکے ہیں۔ دونوں فریق اکثریت کے دعوے کر رہے ہیں۔
٭امریکہ کی نائب وزیرخارجہ ’وینڈی شرمین‘ نے بھارت میں بیان دیا کہ امریکہ پاکستان کے ساتھ کسی قسم کا تعاون یا شراکت نہیں کرنا چاہتا۔ پاکستان کا دورہ تو محض رسمی اور محدود مقاصد کے لئے ہے۔ جب کہ امریکہ اور بھارت ہمیشہ سے ایک دوسرے کے قریبی رفیق کار ہیں۔ اس کے بعد ’وینڈی‘ پاکستان آئی۔ وزیراعظم عمران خاں نے اس سے ملاقات سے انکار کر دیا اور وَینڈی وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، قومی سلامتی کے مشیر معید یوسف اور صحافیوں سے ملاقات کر کے واپس چلی گئی۔ ممبئی میں پاکستان کے خلاف بیان دینے کے برعکس اس نے پاکستان کے بارے میں بہت میٹھی باتیں کیں کہ پاکستان اور امریکہ کے تعلقات تو ہمیشہ بہت خوش گوار رہے ہیں، پاکستان نے افغانستان سے غیر ملکی افراد کو نکالنے میں بہت قابل تعریف کردار ادا کیا ہے وغیرہ وغیرہ! پہلے بھی لکھ چکا ہوں کہ امریکہ پہنچنے پر پاکستان کے دو وزراء کے کپڑے اور جوتے اتروا لئے گئے اور امریکہ کی نائب وزیرخارجہ کی پاکستان میں آمد پر کوئی چیکنگ نہیں ہوئی، کرونا کا کوئی ٹیسٹ نہیں، ہوائی اڈے سے سخت سکیورٹی کے ساتھ امریکی سفارت خانہ میں پہنچا دیا گیا!!
٭مصالحت، معاونت، موافقت، مفاہمت یا…!!! کہ ایک دوسرے کی شکل گوارا نہ کرنے والی حکومت اور اپوزیشن کی پارٹیوں کے درمیان تادم تحریر گورنر ہائوس کے وسیع لان میں کرکٹ میچ ہو رہا ہے۔ ایک دوسرے کے ساتھ جپھیاں، ہنسی مذاق اور گورنر ہائوس میں کھانا!! عوام تماشا دیکھ رہے ہیں!!
٭ایک خبر کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب سے فیاض الحسن کو اپنی ترجمانی سے ہٹانے کے بارے میں سوال کیا گیا تو وزیراعلیٰ نے الفاظ کی بجائے معنی خیز مسکراہٹ سے جواب دیا جس کا واضح مطلب تھا کہ ایک صوبے میں دو وزیراعلیٰ نہیں ہو سکتے!!

تازہ ترین خبریں

 فروری 2024قومی بچت بینک نے بہبود سیونگ سرٹیفکیٹس کے لیے منافع کی شرح کا اعلان کردیا گیا

 فروری 2024قومی بچت بینک نے بہبود سیونگ سرٹیفکیٹس کے لیے منافع کی شرح کا اعلان کردیا گیا

صدر مملکت  کی جانب سے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کی سمری مسترد ،دیکھیں 

صدر مملکت  کی جانب سے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کی سمری مسترد ،دیکھیں 

پنجاب کی نئی وزیراعلیٰ مریم نواز شریف کے بارے میں وہ سب تمام معلومات جو آپ نہیں جانتے ،دیکھیں

پنجاب کی نئی وزیراعلیٰ مریم نواز شریف کے بارے میں وہ سب تمام معلومات جو آپ نہیں جانتے ،دیکھیں

ن لیگ نے ایم کیو ایم کے مطالبوں سے اصولی اتفاق کر لیا ، دیکھیں تفصیل خبر میں

ن لیگ نے ایم کیو ایم کے مطالبوں سے اصولی اتفاق کر لیا ، دیکھیں تفصیل خبر میں

پاکستان کی آئی ایم ایف سے بنگلہ دیش طرز کے معاہدے کی کوشش، دیکھیں تفصیل 

پاکستان کی آئی ایم ایف سے بنگلہ دیش طرز کے معاہدے کی کوشش، دیکھیں تفصیل 

 2 فرشتوں کے بغیربانیٔ پی ٹی آئی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ، شیر افضل مروت کا بیان سامنے آ گیا 

 2 فرشتوں کے بغیربانیٔ پی ٹی آئی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ، شیر افضل مروت کا بیان سامنے آ گیا 

مرتضیٰ بھٹو قتل کیس میں 4 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری 

مرتضیٰ بھٹو قتل کیس میں 4 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری 

مریم نواز پنجاب کی پہلی خاتون  وزیر اعلیٰ منتخب،دیکھیں خبر

مریم نواز پنجاب کی پہلی خاتون وزیر اعلیٰ منتخب،دیکھیں خبر

سنی اتحاد کونسل ارکان کابائیکاٹ، مریم نواز بھی بول اٹھیں

سنی اتحاد کونسل ارکان کابائیکاٹ، مریم نواز بھی بول اٹھیں

وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے پنجاب اسمبلی کا اجلاس، سنی اتحاد کونسل اراکین احتجاجا واک آؤٹ کر گئے  

وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے پنجاب اسمبلی کا اجلاس، سنی اتحاد کونسل اراکین احتجاجا واک آؤٹ کر گئے  

تمام  مستند معلومات کے لیے بینظیر انکم سپورٹ  کا  واٹس ایپ چینل شروع، دیکھیں

تمام  مستند معلومات کے لیے بینظیر انکم سپورٹ کا واٹس ایپ چینل شروع، دیکھیں

اہم خبر ،اسد عمر لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس میں بری ہو گئے 

اہم خبر ،اسد عمر لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس میں بری ہو گئے 

وزیراعلیٰ پنجاب اور سندھ کا انتخاب آج،دیکھیں تفصیل 

وزیراعلیٰ پنجاب اور سندھ کا انتخاب آج،دیکھیں تفصیل 

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد