01:06 pm
امریکی شکست کا ماتم

امریکی شکست کا ماتم

01:06 pm

جنگوں میں شکست ہوتی رہتی ہے اور یہ امریکہ کی کسی جنگ میں پہلی شکست بھی نہیں ہے۔ ویت نام میں امریکہ بدترین شکست سے دوچار ہوا تھا۔ رہا افغانستان کا معاملہ تو عالمی سپرپاور سوویت یونین کو بھی یہاں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ بات جنگی شکست کی نہیں ہے، اس رسوائی کی ہے جو افغانستان سے نکلتے وقت امریکہ کے حصے میں آئی ہے۔ امریکی منصوبہ بندی کی دنیا میں دھاک تھی۔ عام گمان تھا کہ امریکی اگلے سو برس کی سوچتے ہیں۔ امریکی تھنک ٹینک اور امریکی منصوبہ بندی سے دنیا کی مرعوبیت کا ناقابل بیان عالم تھا کہ وہ ہوگیا جس کے متعلق کسی نے سوچا بھی نہ تھا۔ افغانستان کے طول و عرض پر طالبان کا 11دنوں میں قبضہ ہوگیا۔ وہ افغانستان جہاں امریکہ نے 20سال قبل غاصبانہ قبضہ جمایا اور اقوام عالم کو مژدہ  سنایا کہ اب ایک نئے ماڈرن جمہوری افغانستان کا قیام عمل میں لایا جائے گا وہاں سے  20سال بعد امریکہ نکلنے لگا تو اس کا بنایا ہوا حکومتی و ریاستی ڈھانچہ 20دن بھی نہ نکال سکا اور فقط گیارہ دنوں میں طالبان کے ہاتھوں ڈھیر ہوگیا۔ بغیر کسی خون ریزی کے، ایک گولی چلائے بغیر طالبان کی ہیبت کے سامنے امریکی سہارے پر کھڑا حکومتی بندوبست ملیا میٹ ہوا تو دنیا حیران رہ گئی۔ چند ہفتے قبل امریکی صدر جوبائیڈن قطعی انداز سے  اقوام عالم کو تسلی دے رہے تھے کہ افغانستان کی 3لاکھ مسلح افواج طالبان سے مقابلہ کرے گی اور یہ کہ طالبان کا افعانستان پر قبضے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ اس امریکی صدر کے بیان پر ان پر کون بھروسہ کرے گا۔ امریکی انٹیلی جنس کی اتنی بڑی ناکامی ہوئی ہے کہ امریکہ دنیا کو منہ دکھانے کے   لائق نہیں رہا۔ آج امریکہ کے اندر صف ماتم بچھی ہے۔ سینٹ کی رہائی پروفائل کمیٹی کے سامنے شکست خوردہ فوجی جرنیل پیش ہو رہے ہیں اور اپنی شکست کا احوال ریکارڈ کروا رہے ہیں۔ امریکہ صحیح معنوں میں افغانستان سے ذلیل ہو کر نکلا ہے۔ عزت اور ذلت بے شک اللہ تعالیٰ کے مکمل اختیار میں ہے، وہ جس کو چاہے عزت عطا فرمائے اور جس کو چاہے ذلیل کر دے۔

20سال قبل امریکہ نے طاقت کے نشے میں سرشار ہو کر افعانستان پر فوج کشی کی، بی 52بمبار طیاروں سے مظلوم افغانوں کو نشانہ بنایا۔ افغانستان پر طالبان کے اقتدار کا بزور طاقت  خاتمہ کیا گیا اور ایک سپرپاور نے اپنی پوری طاقت کو بروئے کار لاتے ہوئے طالبان کو تباہ و برباد کرنے میں کوئی کسر نہ چھوڑی۔ پورا افغانستان قید خانہ تو تھا ہی اس پر ظلم یہ کہ گوانتاناموبے جزیرے پر ایک ایسا قید خانہ بنایا گیا جہاں قیدیوں سے بدترین انسانی سلوک ہوتا اور کوئی پوچھنے والا نہ تھا۔ اکیسیویں صدی میں حیوانیت کا یہ مظاہرہ چشم فلک نے دیکھا نہ تھا اور وحشی حیوان بھی وہ بنے ہوئے تھے جو روئے زمین پر اپنے آپ کو سب سے زیادہ مہذب اور انسانی حقوق کا علمبردار سمجھتے ہیں۔
ملا عبدالسلام ضعیف جو پاکستان میں امریکہ کے سفیر تھے نے اپنی آپ بیتی میں گوانتاناموبے کے قید خانے کے روح فرسا مناظر اور بربریت کی کہانیاں لکھی ہیں جنہیں بڑھ کر رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں۔ طاقت کے اس اندھے استعمال کو تاریخ ہمیشہ یاد رکھے گی اور کل کا مئورخ سپرپاور کے زوال کی وجوہات لکھے گا تو اس بربریت اور وحشت کو زوال کی ایک بڑی وجہ قرار دے گا۔
طالبان اس ظلم و ستم کو سہتے رہے اور ہمت دکھا کر دنیا کی اکلوتی سپرپاور کے ساتھ 20سال برسرپیکار رہے۔ ان کے سینوں میں ایمان کی جو شمع فروزاں تھی وہ مصائب و ابتلا سے کب بجھنے والی تھی۔ علامہ اقبالؒ نے جب ملی ترانہ لکھا تو کیا خوب فرمایا۔
توحید کی امانت سینوں میں ہے ہمارے
آساں نہیں مٹانا نام و نشاں ہمارا
طالبان کا نام و نشاں مٹانے کی آرزو لے کر آنے والوں کے اپنے ارمان مٹی میں رل گئے، آج طالبان سرخرو ہیں جبکہ ان کے دشمن ناکام و نامراد ہیں۔ زخم خوردہ امریکی  اپنی ناکامی کا ملبہ پاکستان پر ڈال کر جہاں طالبان کی فتح کو کھوٹا کرنا چاہ رہے ہیں وہیں پاکستان کو اپنی نئی مہم کا نشانہ بنانا چاہتے ہیں۔ میں نے  طالبان کی فتح کو کھوٹا کرنے کی بات اس لئے کی ہے کہ ایسا کرنے سے بحیثیت سپر پاور ان کا بھرم باقی رہ جاتا ہے اور دوسری بات یہ کہ وہ ایک آئیڈیالوجی کے ہاتھوں دوسری آئیڈیالوجی کی شکست کے تاثر سے بچ جاتے ہیں۔ حقیقت میں تو یہی ہوا ہے کہ مغربی آئیڈیالوجی اور اس کے  پروردہ نظام نے اسلامی نظریات پر مبنی طالبان تحریک سے شکست کھائی ہے۔ یہ شکست صرف میدان جنگ میں  نہیں ہوئی، فکری اعتبار سے مغربی نظریے کی بنیاد پر کھڑا نظام بھی شکست سے دوچار ہوا ہے۔ امریکی انخلاء کا اعلان ہوتے ہی یہ نظام دھڑام سے نیچے آگرا۔ آج امریکہ کے اندر یہ سیاپا پڑا ہوا ہے کہ 20سالہ جنگ میں آپ نے پایا کیا ہے؟ کھربوں ڈالر کے اخراجات، پرائے وطن میں فوج کشی، حیوانیت کے مظاہرے، ظلم و بربریت، نظام کو تبدیل کرنے کے بلند و بانگ دعوے وغیرہ، لیکن افغانستان کو 20سال بعد چھوڑا تو وہی طالبان نئی قوت کے ساتھ تخت کابل پر آکر براجمان  ہوگئے جن کے قلع قمع کے لئے سات سمندر پار سے امریکہ کی قیادت میں عالمی طاقتوں نے افغانستان میں فوج کشی کی تھی۔ جنگوں میں شکست ہوتی رہتی ہے، روس نے بھی افغانستان میں شکست کھائی تھی لیکن طالبان کے دوبارہ برسراقتدار آنے اور امریکہ کے بنائے گئے ریاستی بندوبست کا دھڑن تختہ ہونے کی صورت میں  جو رسوائی امریکہ کے حصے میں آئی ہے اس سے امریکہ کے سپرپاور کی حیثیت کو نہ صرف شدید دھچکا لگا ہے بلکہ دنیا کے سامنے امریکی منصوبہ بندی کا کھوکھلا پن عیاں ہوگیا ہے۔افغانستان میں امریکہ کی شکست کی کئی جہتیں اور کئی پہلو ہیں۔ ہر جہت اور ہر پہلو دوسرے سے بڑھ کر امریکہ کے لئے شرمندگی کا باعث بنے گا جو بالآخر امریکہ کی سپرپاور حیثیت کے خاتمے کا سبب بنے گا۔

تازہ ترین خبریں

 فروری 2024قومی بچت بینک نے بہبود سیونگ سرٹیفکیٹس کے لیے منافع کی شرح کا اعلان کردیا گیا

 فروری 2024قومی بچت بینک نے بہبود سیونگ سرٹیفکیٹس کے لیے منافع کی شرح کا اعلان کردیا گیا

صدر مملکت  کی جانب سے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کی سمری مسترد ،دیکھیں 

صدر مملکت  کی جانب سے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کی سمری مسترد ،دیکھیں 

پنجاب کی نئی وزیراعلیٰ مریم نواز شریف کے بارے میں وہ سب تمام معلومات جو آپ نہیں جانتے ،دیکھیں

پنجاب کی نئی وزیراعلیٰ مریم نواز شریف کے بارے میں وہ سب تمام معلومات جو آپ نہیں جانتے ،دیکھیں

ن لیگ نے ایم کیو ایم کے مطالبوں سے اصولی اتفاق کر لیا ، دیکھیں تفصیل خبر میں

ن لیگ نے ایم کیو ایم کے مطالبوں سے اصولی اتفاق کر لیا ، دیکھیں تفصیل خبر میں

پاکستان کی آئی ایم ایف سے بنگلہ دیش طرز کے معاہدے کی کوشش، دیکھیں تفصیل 

پاکستان کی آئی ایم ایف سے بنگلہ دیش طرز کے معاہدے کی کوشش، دیکھیں تفصیل 

 2 فرشتوں کے بغیربانیٔ پی ٹی آئی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ، شیر افضل مروت کا بیان سامنے آ گیا 

 2 فرشتوں کے بغیربانیٔ پی ٹی آئی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ، شیر افضل مروت کا بیان سامنے آ گیا 

مرتضیٰ بھٹو قتل کیس میں 4 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری 

مرتضیٰ بھٹو قتل کیس میں 4 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری 

مریم نواز پنجاب کی پہلی خاتون  وزیر اعلیٰ منتخب،دیکھیں خبر

مریم نواز پنجاب کی پہلی خاتون وزیر اعلیٰ منتخب،دیکھیں خبر

سنی اتحاد کونسل ارکان کابائیکاٹ، مریم نواز بھی بول اٹھیں

سنی اتحاد کونسل ارکان کابائیکاٹ، مریم نواز بھی بول اٹھیں

وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے پنجاب اسمبلی کا اجلاس، سنی اتحاد کونسل اراکین احتجاجا واک آؤٹ کر گئے  

وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے پنجاب اسمبلی کا اجلاس، سنی اتحاد کونسل اراکین احتجاجا واک آؤٹ کر گئے  

تمام  مستند معلومات کے لیے بینظیر انکم سپورٹ  کا  واٹس ایپ چینل شروع، دیکھیں

تمام  مستند معلومات کے لیے بینظیر انکم سپورٹ کا واٹس ایپ چینل شروع، دیکھیں

اہم خبر ،اسد عمر لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس میں بری ہو گئے 

اہم خبر ،اسد عمر لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس میں بری ہو گئے 

وزیراعلیٰ پنجاب اور سندھ کا انتخاب آج،دیکھیں تفصیل 

وزیراعلیٰ پنجاب اور سندھ کا انتخاب آج،دیکھیں تفصیل 

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد