01:16 pm
قادیانی پراسیکیوٹر، عالمی فوجداری عدالت، امریکی جنگی جرائم

قادیانی پراسیکیوٹر، عالمی فوجداری عدالت، امریکی جنگی جرائم

01:16 pm

کیا قادیانیوں نے کبھی سوچا کہ آخر مسلمان ان سے ہر وقت چوکنا اور الرٹ کیوں رہتے ہیں؟ مسلمانوں کو یہ دھڑکا کیوں لگا رہتا ہے کہ قادیانی کسی
کیا قادیانیوں نے کبھی سوچا کہ آخر مسلمان ان سے ہر وقت چوکنا اور الرٹ کیوں رہتے ہیں؟ مسلمانوں کو یہ دھڑکا کیوں لگا رہتا ہے کہ قادیانی کسی وقت، کہیں پہ بھی مسلمانوں کو نقصان پہنچا سکتے ہیں؟ قادیانی گروہ دین اسلام اور مسلمانوں کے خلاف سازشوں سے باز آنے کے لئے تیار کیوں نہیں ہے؟
یہ خاکسار اس سے قبل بھی انہیں صفحات پر دین اسلام اور ملت اسلامیہ کے خلاف قادیانی سازشوں کو بے نقاب کرتا رہا، آج کے کالم میں افغانستان کے حوالے سے ایک قادیانی پراسیکیوٹر کی ناانصافی کو قارئین کے سامنے اس نیت سے بے نقاب کروں گا تاکہ وہ بھی یہ جان سکیں کہ قادیانیوں کی مسلمانوں کے خلاف ناانصافیوں اور زیادتیوں کی جو سو سالہ تاریخ چلی آرہی ہے وہ تاحال بھی جاری و ساری ہے، روزنامہ اوصاف میں چھپنے والی رپورٹ کے مطابق ’’اقوام متحدہ کی سربراہی میں قائم عالمی فوجداری عدالت کے نئے چیف پراسیکیوٹر نے افغانستان میں داعش اور افغان طالبان کے عسکریت پسندوں کے ہاتھوں رونما ہونے والے جنگی جرائم کی تحقیقات شروع کرنے کا اعلان کر دیا ہے، انٹرنیشنل کریمنل کورٹ کے لئے پراسیکیوٹر احمد کریم خان نے کہا ہے کہ ان کی سربراہی میں عالمی عدالت عنقریب افغانستان میں داعش اور افغان طالبان کے انسانیت کے خلاف جرائم کی تحقیقات شروع کرے گی، اس تحقیق کا دائرہ صرف افغان طالبان اور انتہا  پسند عسکری تنظیم داعش تک محدود رہے گا جبکہ افغانستان پر 20سال تک قبضہ جما کر وہاں انسانیت کش جرائم کرنے والے امریکی فورسز کے جرائم کو تحقیقات کا حصہ نہیں بنایا جائے گا۔
رپورٹ کے مطابق عالمی عدالت کے تفتیش کار اس سے قبل افغانستان میں امریکی فورسز کے انسانیت دشمن اقدامات کے بارے میں ثبوتوں کے ساتھ طویل ہوم ورک کر چکے تھے لیکن چھ ماہ قبل عالمی عدالت کے نئے پراسیکیوٹر احمد کریم خان نے انہیں سائیڈ لائن کر دیا ہے،51سالہ برطانوی شہری احمد کریم خان نے رواں برس جون میں ہالینڈ میں واقع عالمی فوجداری عدالت کے نئے چیف پراسیکیوٹر کے طور پر اپنے عہدے کا حلف اٹھایا، رپورٹ کے مطابق عالمی عدالت کے پراسیکیوٹر احمد کریم خان قادیانیوں کے سابق سربراہ مرزا طاہر ملعون کے داماد ہیں۔2002ء میں تشکیل پانے والی عالمی فوجداری عدالت کے قیام کا مقصد ان ممالک میں انسانی و جنگی جرائم اور نسل کشی کی تحقیقات کرنا ہے۔ جو ان جرائم کی تحقیقات کرنے سے  قاصر ہوں، اس وقت عالمی سطح پر 123ممالک اس فوجداری عدالت کے ممبرز ہیں، عالمی عدالت انسانیت کے خلاف جرائم کے مرتکب ثابت ہونے والے مجرموں کو زیادہ سے زیادہ عمر قید کی سزا دے سکتی ہے۔
عالمی عدالت میں اس وقت جن ممالک کے مقدمات زیر غور ہیں ان میں افغانستان، بنگلہ دیش، میانمار اور جارجیا کے نام شامل ہیں، قادیانی پراسیکیوٹر احمد کریم خان کے چارج سنبھالنے سے قبل عالمی عدالت نے سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دور میں افغانستا ن میں امریکی فوجیوں پر انسانیت کے خلاف جرائم کی تحقیقات کا مقدمہ چلانے کی کوشش کی تھی، جس پر ستمبر2018ء میں امریکہ کے قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے دھمکی دیتے ہوئے کہا تھا کہ عالمی عدالت انصاف نے افغانستان میں جنگی جرائم پر مقدمہ چلایا  تو ججوں کے امریکہ داخلے پر پابندی عائد کر دی جائے گی۔ امریکی دھمکیوں کے ردعمل میں عالمی عدالت انصاف نے کہا تھا کہ آئی سی، سی 123ممالک کی حمایت والی آزاد اور خودمختار عدالت ہے اور یہ عدالت اپنا کام جاری رکھے گی۔ لیکن ’’انصاف‘‘ کے ’’مامے‘‘ واشنگٹن نے ستمبر 2020ء میں افغانستان میں  امریکی فوج کے جنگی جرائم میں ملوث ہونے کی تحقیقات کرنے پر عالمی عدالت انصاف کی اس وقت کی پراسیکیوٹر ’’فاتو بتیسودا‘‘ پر  پابندیاں عائد کر دی تھیں، امریکی حکومت نے انہیں بلیک لسٹ کرنے کے ساتھ ساتھ ان کے اثاثے منجمند کر دئیے اوران پر سفری پابندیاں بھی عائد کر دی تھیں، اس کے بعد عالمی عدالت انصاف کا پراسیکیوٹر مرزا طاہر ملعون کے داماد احمد کریم خان کو بنایا گیا، جس نے آتے ہی افغانستان میں امریکی فوجیوں کے جنگی جرائم کا معاملہ ترجیحات سے ہٹا کر اس کی جگہ داعش اور افغان طالبان کے خلاف جنگی جرائم کی تحقیقات کا اعلان کر دیا۔ رپورٹ کے مطابق قادیانی پراسیکیوٹر احمد کریم خان کی طرف سے افغانستان میں امریکی جنگی جرائم کی تحقیقاتی رپورٹ کو نظرانداز کرکے افغان طالبان کے خلاف ’’فرمائشی‘‘ تحقیقات کا اعلان کرنے پر افغان عوام میں سخت مایوسی پھیل گئی ہے، امریکہ کے ظالم فوجی بیس سالوں تک جن افغانوں کے رشتہ داروں کو انتہائی ظالمانہ انداز میں تشدد کرکے قتل کرتے رہے، وہ افغان عوام سوال اٹھا رہے ہیں کہ ختم نبوتؐ کا غدار قادیانی پراسیکیوٹر افغان مسلمانوں کو ’’انصاف‘‘ کیسے دے سکتا ہے؟ اگر عالمی فوجداری عدالت کے پراسیکیوٹر احمد کریم خان کے دماغ پر قادیانیت کی چربی  نہ چڑھی ہوتی تو اسے چاہیے تھا کہ وہ پہلے افغانستان میں امریکی جنگی جرائم کی تحقیقات کو مکمل کرکے اس کے نتائج سے دنیا کو آگاہ کرتے، یاد رہے کہ انٹرنیشنل کریمنل کورٹ کی چیف پراسیکیوٹر افریقی ملک گیمبیا سے تعلق رکھنے والی خاتون ماہر قانون  ’’فاتو بتیسودا‘‘  افغانستان میں امریکی جنگی جرائم پر کافی حد تک تحقیقات مکمل کر چکی تھیں، جس کی امریکہ نے انہیں سزا بھی دی، احمد کریم خان سے تو وہ افریقی خاتون پراسیکیوٹر ہزار گنا زیادہ بہادر، جرات مند اور انسان دوست ثابت ہوئی کہ جس نے امریکی پابندیاں برداشت کرلیں لیکن افغانستان میں انسانوں کے خلاف امریکی جنگی جرائم کی تحقیقات سے پیچھے ہٹنا گوارا نہ کیا۔
مجھے نہیں پتہ کہ پراسیکیوٹر احمد کریم خان پیدائشی قادیانی ہے یا پھر اس نے مرزا طاہر ملعون کا داماد بننے کے لئے قادیانی ارتداد قبول کیا، لیکن قادیانی جماعت کا اگر کوئی ترجمان عوام کے ذہنوں  میں پیدا ہونے والے سوالات کا جواب ان سے پوچھ کر دینا چاہے تو ضرور دے کہ ساری  دنیا افغانستان میں امریکی فوج کے جنگی جرائم سے خوب واقف ہے، شادی ہالوں سکولوں، کالجوں، یونیورسٹیوں، مدرسوں، مسجدوں، جنازوں پر بمباری کرکے بے گناہ انسانوں کے خون سے ہولی کھیلنا، امریکہ نے اپنا  مشغلہ   بنا رکھا تھا ، امریکی فوجیوں نے   ہزاروں معصوم بچے مار ڈالے۔
ایک مرتبہ نہیں، متعدد بار ڈرون حملوں کے ذریعے بے گناہ انسانوں کا قتل عام کرکے پھر اس پر معذرت کرلینا، امریکہ نے اپنا وطیرہ بنا رکھا تھا بگرام ائیربیس کے قید خانوں سے انسانیت کی نکلنے والی ’’چیخیں‘‘ آج بھی ’’انسانیت‘‘ کی پشت پر تازیانے برسا رہی ہیں، افغان عورتوں پر ڈھائے جانے والے امریکی مظالم کو بیان کرتے ہوئے کلیجہ منہ کو آتا ہے، کیا ’’انسانیت‘‘ کے خلاف کئے جانے والے امریکی فوج کے یہ جنگی جرارئم عالمی فوجداری عدالت کے پراسیکیوٹر کی نظروں سے اوجھل ہیں؟ یا پھر انہوں نے اپنی آنکھوں پر قادیانیت کا چشمہ لگا رکھا ہے؟ عوام کا یہ سوال بھی اپنی جگہ اہم ہے کہ کیا قادیانی گروہ کے نزدیک ’’انگریز‘‘ سے کبھی کوئی جرم سرزد ہو ہی نہیں سکتا؟ سارے جرائم اور گناہ صرف مسلمان ہی کر سکتے ہیں؟ اور ان میں بھی خاص پاکستان اور افغانستان کے مسلمان؟ مجھے ذاتی  طور پر قادیانی گروہ سے ’’ہمدردی‘‘ اس تناظر میں ہے کیونکہ میں چاہتا ہوں کہ ’’قادیانی‘‘ ختم نبوتؐ کے عقیدے پر ایمان لے آئیں اور مرزا غلام قادیانی پر لعنت بھیج کر اپنی  آخرت سنوار لیں، لیکن بالفرض اگر وہ ’’قادیانی‘‘ ہی رہنا چاہتے ہیں تو کیا یہ ضروری ہے کہ وہ اپنے ہاتھوں سے ’’انصاف‘‘ کا بھی گلا گھونٹ ڈالیں؟ سادہ سا سوال یہ بھی بنتا ہے کہ انٹرنیشنل کریمنل کورٹ کے پراسیکیوٹر قادیانی احمد کریم خان نے کیا سوچ کر افغانستان میں امریکی جنگی جرائم کے خلاف جاری تحقیقات کو پس پشت ڈال کر افغان طالبان کے خلاف تحقیقات شروع کرنے کا اعلان کر دیا؟ میں یہ نہیں لکھ رہا کہ افغان طالبان کے خلاف تحقیقات نہ کی جائیں، بالکل کی جائیں لیکن پہلے امریکی جنگی جرائم کے مقدمے کا فیصلہ تو سنایا جائے، امریکی جنگی جرائم کے مقدمے کو فائلوں کی قبر میں دفن کرکے افغان طالبان کے خلاف مقدمے کا اعلان، یہ بات واضح کر رہا ہے کہ قادیانی پراسیکیوٹر امریکیوں ہی کی طرح انسانیت کے خلاف جنگی جرائم کی سوچ رکھتا ہے۔ (وماتوفیقی الاباللہ)
 

تازہ ترین خبریں

 فروری 2024قومی بچت بینک نے بہبود سیونگ سرٹیفکیٹس کے لیے منافع کی شرح کا اعلان کردیا گیا

 فروری 2024قومی بچت بینک نے بہبود سیونگ سرٹیفکیٹس کے لیے منافع کی شرح کا اعلان کردیا گیا

صدر مملکت  کی جانب سے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کی سمری مسترد ،دیکھیں 

صدر مملکت  کی جانب سے قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے کی سمری مسترد ،دیکھیں 

پنجاب کی نئی وزیراعلیٰ مریم نواز شریف کے بارے میں وہ سب تمام معلومات جو آپ نہیں جانتے ،دیکھیں

پنجاب کی نئی وزیراعلیٰ مریم نواز شریف کے بارے میں وہ سب تمام معلومات جو آپ نہیں جانتے ،دیکھیں

ن لیگ نے ایم کیو ایم کے مطالبوں سے اصولی اتفاق کر لیا ، دیکھیں تفصیل خبر میں

ن لیگ نے ایم کیو ایم کے مطالبوں سے اصولی اتفاق کر لیا ، دیکھیں تفصیل خبر میں

پاکستان کی آئی ایم ایف سے بنگلہ دیش طرز کے معاہدے کی کوشش، دیکھیں تفصیل 

پاکستان کی آئی ایم ایف سے بنگلہ دیش طرز کے معاہدے کی کوشش، دیکھیں تفصیل 

 2 فرشتوں کے بغیربانیٔ پی ٹی آئی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ، شیر افضل مروت کا بیان سامنے آ گیا 

 2 فرشتوں کے بغیربانیٔ پی ٹی آئی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ، شیر افضل مروت کا بیان سامنے آ گیا 

مرتضیٰ بھٹو قتل کیس میں 4 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری 

مرتضیٰ بھٹو قتل کیس میں 4 ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری 

مریم نواز پنجاب کی پہلی خاتون  وزیر اعلیٰ منتخب،دیکھیں خبر

مریم نواز پنجاب کی پہلی خاتون وزیر اعلیٰ منتخب،دیکھیں خبر

سنی اتحاد کونسل ارکان کابائیکاٹ، مریم نواز بھی بول اٹھیں

سنی اتحاد کونسل ارکان کابائیکاٹ، مریم نواز بھی بول اٹھیں

وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے پنجاب اسمبلی کا اجلاس، سنی اتحاد کونسل اراکین احتجاجا واک آؤٹ کر گئے  

وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے پنجاب اسمبلی کا اجلاس، سنی اتحاد کونسل اراکین احتجاجا واک آؤٹ کر گئے  

تمام  مستند معلومات کے لیے بینظیر انکم سپورٹ  کا  واٹس ایپ چینل شروع، دیکھیں

تمام  مستند معلومات کے لیے بینظیر انکم سپورٹ کا واٹس ایپ چینل شروع، دیکھیں

اہم خبر ،اسد عمر لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس میں بری ہو گئے 

اہم خبر ،اسد عمر لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس میں بری ہو گئے 

وزیراعلیٰ پنجاب اور سندھ کا انتخاب آج،دیکھیں تفصیل 

وزیراعلیٰ پنجاب اور سندھ کا انتخاب آج،دیکھیں تفصیل 

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد