02:43 pm
قیمتوں میں اضافے کا نامعقول جواز

قیمتوں میں اضافے کا نامعقول جواز

02:43 pm

پاکستان میں حکومت نے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں ہر پندرہ دن بعد اضافہ کرنا شروع کیا ہے ۔آج ایک بار پھر پیٹرول مزید  10.49 روپے، ڈیزل 12.44  روپے مہنگا کردیا گیا۔مٹی کے تیل کی قیمت میں 10 روپے 95 پیسے فی لیٹر اور لائٹ ڈیزل آئل قیمت میں 8 روپے 84 پیسے فی لیٹر کا اضافہ بھی کیا گیا ہے۔عمران خان حکومت نے غربت ، بے روزگاری اورمہنگائی کی ستائی عوام کے لئے عالمی منڈی میں تیل کی قیمت بڑھنے کی آڑ میں پھر سے ایک اور مشکل کھڑی کرکے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کیا۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے وقت ملک میں ڈالر  171.20روپے اور 24کریٹ سونا ایک لاکھ18ہزار روپے تولہ پر پہنچ گیا تھا۔ اب ظاہر ہے کہ روپے کی قدر میں مزید گراوٹ آئے گی اور سونے کی قیمت مزید اوپر جائے گی۔ 
ملک کی وزارت خزانہ کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن میں عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمت 85 ڈالر فی بیرل تک پہنچنے کو پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ بتایا گیا ہے۔ نوٹی فکیشن کے مطابق آئندہ 16 روز یعنی یکم نومبرتک پیٹرول کی فی لیٹر قیمت میں 10 روپے 49 پیسے اور ڈیزل کی فی لیٹر قیمت میں 12 روپے 44 پیسے کا اضافہ کردیا گیا ۔قیمتوں میں اضافے کے بعد اب پیٹرول 137 روپے 79 پیسے فی لیٹر، ہائی اسپیڈ ڈیزل 134 روپے 48 پیسے فی لیٹر میں دستیاب ہو گا۔مٹی کا تیل 110 روپے 26 پیسے فی لیٹر جبکہ لائٹ ڈیزل آئل 108 روپے 35 پیسے فی لیٹر ہوگیا ہے۔اس سے پہلے آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی سمری میں حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 9 روپے تک اضافے کا امکان ظاہر کیا گیا تھا۔ اوگرا کو قیمتوں کی تجاویز خفیہ رکھنے کی سختی سے ہدایت کا کوئی اثر نہ ہوا تھا۔ قیمتوں میں اضافے سے قبل ہی پٹرول کی قلت پیدا کی گئی تھی تا کہ ذخیرہ اندوزوں کو کافی منافع حاصل ہو سکے۔ ملک میں تقریباً سبھی تیل کمپنیاں اور پٹرول پمپ سرمایہ داروں کے ہیں یا ان کی سرپرستی میں کام کر رہے ہیں۔ حکومت دعوئوں کے برعکس پیٹرولیم لیوی کو کم کرنے کی وجہ سے ہوئے آمدنی کے نقصان کو بتدریج پورا کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکی ہے۔مہنگائی کا سارا بوجھ غریب لوگ برداشت کرتے ہیں۔ عوام کے ٹیکسوں پر اشرافیہ اور سرمایہ دار عیش کرتے ہیں۔ بڑے سرکاری اور نیم سرکاری اداروں کے افسران لاکھوں میں تنخواہیں اور مراعات سے استفادہ کرتے ہیں مگر بے چارء چھوٹے ملازمین ایک طرح کے بیگاری بنا دیئے گئے ہیں۔ غریبوں سے بیگار لینے میں یہ افسران سکون محسوس کرتے ہیں۔ اپنے چھوٹے ملازمین کو جیسے کے اپنے زرخرید کے طور پر برتائو کیا جاتا ہے۔ 
 ٹیکس کی موجودہ شرح، درآمدی قیمت اور روپے کی قدر میں کمی کی بنیاد پر اوگرا نے تیل کی قیمتوں کے جو اندازے لگائے تھے، وہ سب کے سب غلط ثابت ہوئے۔عمران خان حکومت کے پاس قیمتوں میں اضافے کی بنیادی وجہ ایکسچینج ریٹ کا نقصان اور تیل کی بین الاقوامی قیمتوں کے اثرات ہیں۔مگر یہ سچ ہے کہ عمران خان کے وعدے کے برعکس حکومت عالمی بینک اور آئی ایم ایف کے سامنے لیٹ چکی ہے۔ لگتا ہے یہ ملک اب یہی عالمی ادارے چلا رہے ہیں۔ موجودہ حکومت تین سال گزرنے کے باوجود اپنی ناتجربہ کاری کا رونا رو رہی ہے۔  حکومت چھٹے جائزے کی کامیابی سے تکمیل چاہتی ہے اور تقریباً ایک ارب ڈالر کے حصول کے لیے آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کو یقینی بنانے کے لیے ٹیکس کی شرح میں اضافہ کرکے صارفین کے لئے قیمتوں میں زیادہ اضافہ کررہی ہے۔یہ عالمی ادارے چاہتے ہیں کہ حکومت عوام پر زیادہ ٹیکس لگا کر اس کے قرضے ادا کرے۔ عمران خان نے کہا تھا کہ وہ بھیک مانگیں گے مگر قرضہ نہیں لیں گے۔ اب وہ اپنی پیداوار اور برآمدات بڑھانے کے بجائے صرف ان قرضوں پر حکومت چلا رہے ہیں۔ ڈالر ایک روپے مہنگا ہو تو قرضوں کا بوجھ بھی مزید بڑھ جاتا ہے۔ کیوں کہ ادائیگیاں ڈالرز میں کی جاتی ہیں۔ اب پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں۔ یکم اکتوبر کو پٹرول، ڈیزل اور مٹی کے تیل کی قیمتوں میں اضافے کے بعد پاکستان میں ایک لیٹر پٹرول کی قیمت  127.30  روپے اور ہائی سپیڈ ڈیزل کی فی لیٹر قیمت  122.04  روپے اور مٹی کے تیل کی قیمت  99.31   فی لیٹر ہو چکی تھی۔پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل ہونے والے اضافے اور بڑھنے والی مہنگائی پر عوامی ہاہاکار کے ردعمل میں خود ملک کا وزیر اعظم پاکستان میں قیمتوں کا موازنہ دنیا کے ممالک سے کر رہا ہے۔ حکومت بار بار یہ دعویٰ کر رہی ہے کہ پاکستان میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمت ابھی بھی دنیا کے بہت سے ممالک اور خاص کر خطے کے ممالک سے کم ہے۔ انڈیا اور بنگلہ دیش کے حوالے دیئے جا رہے ہیں ۔پاکستان میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کے بعد وزیر توانائی حماد اظہرپیٹرول کی قیمت دنیا کے دیگر ترقی پذیر ممالک خاص کر خطے کے ممالک کے مقابلے میں ابھی بھی کم قرار دیتے رہتے ہیں۔حکومت اعتراف کرتی ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمت میں اضافہ ایک مشکل فیصلہ ہے لیکن اس کی وجہ عالمی منڈی کی بڑھتی ہوئی قیمتیں قرار دے کر جان چھڑا لیتی ہے۔ یہ بھی احسان کیا جاتا ہے کہ پاکستان میں اضافہ عالمی منڈی کے مقابلے میں کم کیا گیا ہے۔ یہ بھی کہا جاتا ہے کہ حکومت پٹرولیم مصنوعات پر ٹیکس کی شرح کو بتدریج کم کر رہی ہے اور آج بھی اکثر ممالک سے پاکستان میں تیل کی قیمت کم ہے۔(جاری ہے)

تازہ ترین خبریں

خاندان میں نیہا جیسی عورت آجائے تو گھر ٹوٹ جایا کرتے ہیں، صبا فیصل نے اپنے بیٹےاور بہو سے تعلق ختم کرنیکا اعلان کر دیا 

خاندان میں نیہا جیسی عورت آجائے تو گھر ٹوٹ جایا کرتے ہیں، صبا فیصل نے اپنے بیٹےاور بہو سے تعلق ختم کرنیکا اعلان کر دیا 

پاکستانیوں کی تو موجیں لگ گئیں ۔۔۔پٹرول 42 روپے فی لٹرسستا۔۔۔فی لیٹرقیمت کیا ہو گی ۔۔۔؟جانیں

پاکستانیوں کی تو موجیں لگ گئیں ۔۔۔پٹرول 42 روپے فی لٹرسستا۔۔۔فی لیٹرقیمت کیا ہو گی ۔۔۔؟جانیں

پی ٹی آئی رہنما شہبازگل کی طبعیت ناساز۔۔۔ فورا اسپتال منتقل کر دیا گیا 

پی ٹی آئی رہنما شہبازگل کی طبعیت ناساز۔۔۔ فورا اسپتال منتقل کر دیا گیا 

ایک ماہ میں دوسری بار انڈہ پھینکنے کی کوشش میںبرطانوی بادشاہ کوانڈہ کہاں جا لگا۔۔۔؟دیکھیں خبر میں

ایک ماہ میں دوسری بار انڈہ پھینکنے کی کوشش میںبرطانوی بادشاہ کوانڈہ کہاں جا لگا۔۔۔؟دیکھیں خبر میں

ہمارے بعض لوگ اسمبلیاں تحلیل ہونے سے گھبرا رہے ہیں۔۔۔ہماری مقبولیت کم نہیں ہو گی۔۔۔کپتان نے کارکنان کوتسلی دے دی 

ہمارے بعض لوگ اسمبلیاں تحلیل ہونے سے گھبرا رہے ہیں۔۔۔ہماری مقبولیت کم نہیں ہو گی۔۔۔کپتان نے کارکنان کوتسلی دے دی 

بھار تی ہٹ دھرمی۔۔۔ پاکستانی بلائنڈ کرکٹ ٹیم کو ویزےجاری نہ کیے۔۔۔کھیلوں میں تو سیاست نہ لا یا جائے۔۔۔ ترجمان دفتر خارجہ

بھار تی ہٹ دھرمی۔۔۔ پاکستانی بلائنڈ کرکٹ ٹیم کو ویزےجاری نہ کیے۔۔۔کھیلوں میں تو سیاست نہ لا یا جائے۔۔۔ ترجمان دفتر خارجہ

’اسمبلی نہ توڑیں، مشاورت سے ۔۔۔!!!سابق صدر آصف علی زرداری اورق لیگ کے سربراہ چوہدری شجاعت کی حالیہ ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

’اسمبلی نہ توڑیں، مشاورت سے ۔۔۔!!!سابق صدر آصف علی زرداری اورق لیگ کے سربراہ چوہدری شجاعت کی حالیہ ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

تمام تعلیمی اداروں میں ہفتہ وار تین چھٹیوں کا اعلان

تمام تعلیمی اداروں میں ہفتہ وار تین چھٹیوں کا اعلان

دل دل پاکستان سے دلوں میں گھرکرنے والے معروف گلوکار اور نعتیہ کلام پیش کرنے والےجنید جمشید کو ہم سے بچھڑے 6 سال بیت گئے 

دل دل پاکستان سے دلوں میں گھرکرنے والے معروف گلوکار اور نعتیہ کلام پیش کرنے والےجنید جمشید کو ہم سے بچھڑے 6 سال بیت گئے 

سینٹورس کوسیل کرنے کا مجھے یا وزیراعظم کو علم تھا یا نہیں ؟ وزیرداخلہ نے وضاحت کردی

سینٹورس کوسیل کرنے کا مجھے یا وزیراعظم کو علم تھا یا نہیں ؟ وزیرداخلہ نے وضاحت کردی

مراکش فیفا ورلڈکپ قطر کے کوارٹر فائنل میں پہنچنے والا واحد اسلامی ملک بن گیا

مراکش فیفا ورلڈکپ قطر کے کوارٹر فائنل میں پہنچنے والا واحد اسلامی ملک بن گیا

توہین عدالت کیس،پی ٹی آئی رہنما اسد عمر نے غیر مشروط معافی مانگ لی

توہین عدالت کیس،پی ٹی آئی رہنما اسد عمر نے غیر مشروط معافی مانگ لی

سعودی عرب کا سمندری سیاحت کے فروغ کیلیے بڑا اعلان

سعودی عرب کا سمندری سیاحت کے فروغ کیلیے بڑا اعلان

ملک کے سب سے بڑے شہر کی پراسرار خالی بستی، شہر کے مرکز میں موجود ایسا علاقہ جہاں کروڑوں کے گھر مگر رہنے والا کوئی نہیں

ملک کے سب سے بڑے شہر کی پراسرار خالی بستی، شہر کے مرکز میں موجود ایسا علاقہ جہاں کروڑوں کے گھر مگر رہنے والا کوئی نہیں