01:56 pm
مہنگائی کے خلاف ’’مولانا‘‘ ان ایکشن

مہنگائی کے خلاف ’’مولانا‘‘ ان ایکشن

01:56 pm

پیر کی صبح چینی خریدنے دوکان پر گیا تو 115روپے فی کلو ملی، میں نے بڑے سپر سٹور کے منیجر سے کہا کہ سنا ہے کہ چینی سو روپے کلو فروخت کرنے کا حکومتی آرڈر آیا ہے، اس کا جواب تھا کہ سنا تو ہم نے بھی یہی ہے لیکن جب تک وہ آرڈر ہم تک پہنچے گا، چینی کی قیمت دوبارہ سے بڑھ چکی ہوگی اور وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کی سنیے، فرماتے ہیں کہ چینی 43روپے کلو سستی ہوئی مجال ہے میڈیا پر خبر آئے؟
فواد چوہدری اس بازار، مارکیٹ، سپر سٹور، جنرل سٹور یا دوکان کا نام بھی بتا دیتے کہ جہاں چینی 43روپے کلو سستی بک رہی ہے تو پورے میڈیا کا تو پتہ نہیں لیکن یہ خاکسار  ان کی تعریف میں ایک آدھ جملہ لکھنے کی ہمت ضرور کرلیتا، یہ بات حقیقت ہے کہ اس نازک وقت میں حکومت یا اس کے وزیروں کی حمایت میں ایک آدھ جملہ بھی لکھنا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے اور پھر وزیر بھی فواد چوہدری جیسا ہو تو ان کی حمایت میں لکھنے سے بہتر ہے کہ یہ خاکسار اپنا قلم ہی توڑ ڈالے، موصوف نے اپنے بیان میں یہ بھی کہا کہ ’’مولانا فضل الرحمن کی حیثیت کیا ہے؟ انہوں نے ہمیشہ مانگے، تانگے کی سیاست کی ہے؟
جہاں تک مولانا فضل الرحمن کی حیثیت کا تعلق ہے ان کی حیثیت کو اک  زمانہ جانتا بھی ہے اور مانتا بھی ہے، ہفتہ کے دن کراچی کے ریگل چوک میں ملک میں جاری مہنگائی کے خلاف جو زبردست احتجاجی مظاہرہ ہوا، وہ واقعی عوام کی آزروں اور امیدوں کے عین مطابق تھا، گو کہ مظاہرہ پی ڈی ایم کے زیراہتمام تھا اور اس میں مسلم لیگ (ن) کے شاہد خاقان عباسی سمیت پی ڈی ایم میں شریک دیگر سیاسی جماعتوں کے لیڈران بھی شریک ہوئے، لیکن مولانا فضل الرحمن اور ان کی جماعت جمعیت علماء اسلام کے کارکنوں کی اکثریت اس بات کی گواہی کے لئے کافی تھی کہ ’’مولانا‘‘ نے وقت کی  نبضوں  پر ہاتھ رکھنے کا فیصلہ کرلیا ہے، بلامبالغہ مہنگائی کے سونامی کے خلاف دسیوں ہزار لوگ کراچی کی سڑکوں پر نکلے، ریگل چوک سے ایمپریس مارکیٹ تک ہزاروں مظاہرین میں ’’مولانا‘‘ کی پارٹی کے کارکنوں کی اکثریت تو اپنی جگہ پر تھی ہی مگر کمال یہ ہوا کہ  شائد پہلی مرتبہ  صدر اور ریگل چوک کے اطراف میں تاجر اپنی مرضی سے ایک ہزار کے قریب دوکانیں بند کرکے مظاہرے میں شریک ہوئے اور تاجر رہنمائوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے رضاکارانہ طور پر کچھ وقت کے لئے اپنے کاروبار اور دوکانیں بند کرکے مظاہرے میں شرکت کی ہے۔ مہنگائی کے خلاف جو بھی نکلے گا ہم اس کا ساتھ دیں گے، مہنگائی کے خلاف عوامی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ ’’یہ نااہل حکومت ہے، اس حکومت کو مزید وقت دینا ملک و قوم سے  زیادتی  ہوگی، عوام کی حقیقی نمائندہ حکومت آئے گی، انہوں نے کہا کہ مہنگائی کی وجہ سے غریب عوام نے بچے فروخت کرنا شروع کر دئیے ہیں، بچوں سمیت ماں، باپ غربت کی وجہ سے خودکشیاں کر رہے ہیں، موجودہ حالات میں صرف کاروباری حضرات ہی نہیں بلکہ ہر پاکستانی پر مایوسی کا عالم طاری ہے، حکمرانوں کی بدترین نااہلیوں اور بدترین گورنس کی وجہ سے عوام ملک سے مایوس ہوتے چلے جارہے ہیں۔
 اس بحران میں ہم  عوام کے ساتھ کھڑے ہوئے ہیں اور کھڑے رہیں گے، انہوں نے کہا کہ ہم اداروں سے بھی کہنا چاہتے ہیں کہ وہ حقائق کو سمجھیں اور اپنے کردار کا جائزہ لیں، ماضی میں جو غلطیاں ہوئی ہیں اس پر نظر ڈالیں، ادارے  اپنے کردار پر شرمندگی کا اظہار کریں، قوم سے معافی مانگیں‘‘ احتجاجی مظاہرے سے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی  نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’ وزیراعظم عمران خان کہتے ہیں کہ  دنیا بھر میں مہنگائی بڑھی ہے، وزیراعظم صاحب! ہم لندن میں نہیں پاکستان میں رہتے ہیں، آپ ہمیں بتائیں کہ 30روپے والا آٹا 80روپے کلو میں کیوں فروخت ہو رہا ہے، مظاہرے سے پختونخواہ ملی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی، ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ اور مولانا شاہ اویس نورانی نے بھی خطاب کیا۔
مولانا نے پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے کوئٹہ، لاہور، پشاور میں احتجاجی ریلیوں کے بعد پھر اسلام آباد میں احتجاجی مظاہرے کا اعلان بھی کر رکھا ہے، مہنگائی کے خلاف مولانا نے جس احتجاجی تحریک کو شروع کیا، اگر وہ کوئٹہ، لاہور اور پشاور سے ہوتی ہوئی عوامی سمندر لے کر  اسلام آباد  میں  داخل ہونے میں کامیاب ہوگئی، تو اس کے بعد حکومت کہاں کھڑی ہوگی؟ اس کا اندازہ بھی آنے والوں دنوں میں ہو جائے گا؟
یہ بات حقیقت ہے کہ عوام کو مہنگائی نے بے حال کرکے رکھ دیا ہے اور شنید یہ ہے کہ آئندہ چند دنوں میں پٹرول کی قیمتوں میں مزید اضافہ ہو جائے گا، وزیراعظم کے مشیر خزانہ شوکت ترین قوم کو نوید سنا رہے ہیں کہ آئی ایم ایف سے مذاکرات میں جلد خوشخبری ملے گی، آئی ایم ایف سے معاہدہ چند روز میں ہو جائے گا، ارے بھائی عوام کیا جانیں تمہارے آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کو، تم جانو اور آئی ایم ایف جانے، عوام کو تو ضرورت ہے کہ چینی، آٹا، کوکنگ آئل مصالحہ جات، ادویات انہیں سستی ترین ملنا شروع ہو جائیں، یہاں اشیاء خوردونوش کی قیمتوں کو آگ لگی ہوئی ہے اور شوکت ترین آئی ایم ایف کی ڈفلی بجانے میں مصروف ہیں۔
’’مولانا‘‘ نے پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کو ساتھ ملا کر مہنگائی کے طوفان کے خلاف جو سٹینڈ لیا ہے اگر وہ استقامت کے ساتھ آگے بڑھتے ہوئے اسلام آباد جا  پہنچتے ہیں تو پھر صرف فواد چوہدری نہیں بلکہ پوری حکومت کو ’’مولانا‘‘ کی حیثیت کا لگ پتہ جائے گا لیکن اگر اندرو اندری مفاہمت کے کھونٹے سے بندھنے  کے لئے ہر وقت آمادہ اور تیار جماعتیں راستے میں ہی  ’’مولانا‘‘ کی سیاسی گاڑی سے کھسک لیں گی تو پھر فواد چوہدری کے اس سوال کا جواب حافظ حمداللہ پہ قرض رہے گا۔
مولانا فضل الرحمن نے اداروں سے مطالبہ کیا ہے کہ انہوں نے ماضی میں جو غلطیاں کی ہیں وہ انہیں تسلیم کریں، آئندہ سے توبہ تائب  ہو جائیں اور قوم سے معافی مانگیں، ادارے بھی پاکستانی ہیں، اداروں کو چلانے والے بھی انسان ہی ہوتے ہیں، یقینا انسانوں سے غلطیاں سرزد ہوسکتی ہیں، اس لئے حکمران ہوں، سیاست دان ہوں یا اداروں کے سربراہان سب کو اپنی ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھنے کی ضرورت ہے، آج ملک جس خوفناک مہنگائی اور عدم استحکام کے مسائل سے دوچار ہے، اس میں عوام کا کوئی قصور ہے اورنہ عمل دخل، بلکہ اس کی ذمہ داری  حکمرانوں پر عائد ہوتی ہے، عوام بے چارے تو اپنی دال روٹی کے چکر میں گھن چکر بنے ہوئے ہیں، لیکن قومی خزانے سے گلچھرے تو  حکومتی وزیر، مشیر اڑاتے پھر رہے ہیں، چینی آج بھی کہیں ایک سو دس، کہیں 115 اور کہیں 120روپے کلو فروخت ہو رہی ہے اور وزیر بڑی ڈھٹائی سے دعویٰ کرتے ہیں کہ چینی کی قیمت میں 43 روپے فی کلو کمی واقع ہوگئی ہے، بس کر دیں ان وزیروں سے کوئی کہے کہ خدا را، اگر تم اور کچھ نہیں کر سکتے تو اپنی زبانیں تو بند کرلو تاکہ عوام کو کچھ تو سکون نصیب ہوسکے۔


تازہ ترین خبریں

سابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کے گریبان پرہاتھ ڈالیں گے، شاہدخاقان عباسی کی دھمکی

سابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کے گریبان پرہاتھ ڈالیں گے، شاہدخاقان عباسی کی دھمکی

بھارتی اداکارہ راکھی ساونت کے شوہر عادل درانی گرفتار

بھارتی اداکارہ راکھی ساونت کے شوہر عادل درانی گرفتار

لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ،  43پی ٹی آئی ا یم این ایز کے استعفےمنظور کرنے کا حکم معطل

لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ، 43پی ٹی آئی ا یم این ایز کے استعفےمنظور کرنے کا حکم معطل

ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلہ، اموات آٹھ ہزار کے قریب ، بارش کے باعث امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا

ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلہ، اموات آٹھ ہزار کے قریب ، بارش کے باعث امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا

آئی ایم ایف اور پی ڈی ایم حکمرانوں نے پاکستانی عوام کے حقوق پامال کرنے کی تیاری کرلی، ہیومن رائٹس واچ کا انکشاف

آئی ایم ایف اور پی ڈی ایم حکمرانوں نے پاکستانی عوام کے حقوق پامال کرنے کی تیاری کرلی، ہیومن رائٹس واچ کا انکشاف

پاکستان سے یومیہ 50لاکھ ڈالر افغانستان سمگل، بلوم برگ نے حکومتی کارکردگی کا پول کھول دیا

پاکستان سے یومیہ 50لاکھ ڈالر افغانستان سمگل، بلوم برگ نے حکومتی کارکردگی کا پول کھول دیا

وزیراعظم شہبازشریف کا دورہ ترکیہ ملتوی

وزیراعظم شہبازشریف کا دورہ ترکیہ ملتوی

سائنسدان2 ہزار  سال پرانی  نباتی خاتون کا چہربنانے میں کامیاب ہوگئے

سائنسدان2 ہزار سال پرانی نباتی خاتون کا چہربنانے میں کامیاب ہوگئے

ہزاروں لوگوں نے رجسٹریشن کرائی،ہم جیل بھرو تحریک شروع کر چکے ہیں، فواد چوہدری

ہزاروں لوگوں نے رجسٹریشن کرائی،ہم جیل بھرو تحریک شروع کر چکے ہیں، فواد چوہدری

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان   حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا