12:12 pm
منصفانہ حل

منصفانہ حل

12:12 pm

مسائل کی نشاندہی محض تشخیص ہوتی ہے اور کسی بھی تحریر کو بامقصد صرف اسی صورت میں بنایا جاسکتا ہے جب اس کا عملی حل بھی تجویز کیا جائے۔
راقم اپنے قانونی اور عدالتی تجربہ کی بنیاد پر پورے یقین اور ایمان کے ساتھ یہ کہہ سکتا ہے کہ قانون اور انصاف کے ساتھ جڑے تمام مسائل جن کا سامنا آج ہماری ریاست اور اس کے عوام کو درپیش ہے ان کا حل قابل عمل اور عین ممکن ہے۔ راقم  نے جب بھی اس موضوع پر بات کی تو یہ  تاثر دیکھنے کو ملا کہ شائد اب یہ نظام اس حد تک بگڑ چکا ہے کہ اس میں اصلاح کی گنجائش باقی نہیں رہی۔ قارئین کرام ایسا بالکل نہیں ہے! شرط صرف یہ ہے کہ ہمارے ریاستی ادارے اور ان کے سربراہان ، ارباب اقتدار اس بات کاعزم کرلیں کہ ان کی اولین ترجیح عام شہری  تک انصاف کی رسائی اور قانون کی عمل داری ہے۔
اس گھڑی آج جب میں آپ سے مخاطب ہوں، انصاف اور قانون کے حوالے سے ریاستی سطح پر ہم ایک غیر معمولی صورتحال سے دوچار ہیں ۔ ایسے میں حالات ہم سے ہنگامی حل کا فوری تقاضا کرتے  ہوئے دکھائی دیتے ہیں۔
راقم کی رائے میں نچلی سطح پر ہمارے جوڈیشل افسران جن میں سول حج اور ڈسٹرکٹ جج صاحبان شامل ہیں کوزیادہ پراعتماد بنایا جائے۔ ان جج صاحبان کا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ان کو مقدمات کے فیصلے کرنے کےلئے لمبے چوڑے فیصلے لکھنےپڑتےہیں،ان میں نہ صرف وقت ضائع ہوتاہے بلکہ لکھنے والےجج صاحب پریہ خوف بھی طاری رہتاہے کہ چونکہ یہ فیصلے اعلیٰ عدالتوں کی نظر سے گزریں گے تو کہیں ان میں کوئی ایسی غلطی نہ ہو تو Displeasure یا ناخوشی کا باعث بنے… حل یہ ہے کہ نچلی عدالتوں کو یہ احکامات جاری کر دیئے جائیں کہ فریقین کو سننے کے بعد فیصلہ میں محض اس مرکزی نقطہ کو مختصراً زیربحث لایا جائے جو تنازعہ سے Relvent یا متعلقہ ہے… قانونی موشگافیوں کو نہ تو مدنظر رکھا جائے اور نہ ان کو اپنے فیصلے کاموضوع بنایا جائے … ہاں تنازعہ سے متعلق براہ راست قانونی پہلو کو اجاگر محض اس لئے  کیا جائے کیونکہ وہ فیصلہ کرنے کے لئے ناگزیر ہے۔ غیرضروری یاقانون کی علمی بحث سے مکمل گریز کیاجائے … ایک جوڈیشل آفیسر یا سول جج، سیشن جج کی اولین ترجیح یہ ہونی چاہیے کہ وہ فریقین کے مقدمے کے واقعات اورحقائق کو سمجھیں،اس کی واقعاتی تہہ تک پہنچنے کے بعد اپنے عدالتی یعنیJudicial Concious کے مطابقSubstantial Justiceکے اصول پر فوری فیصلہ کر دیں۔
قارئین کرام ، را قم کو یہ کہنے میں کوئی عار نہیں ہے کہ مذکورہ تدابیر پر عمل پیرا ہونے کے لئے سب سے زیادہ ضروری عنصر بے خوفی ہے۔ ہماری اعلیٰ عدالتوں اور خاص طور پر صوبائی سطح پر ہائی کورٹس کے انتظامی سربراہان اور ملکی سطح پر عدالت عظمیٰ کو ماتحت عدالت کے جج صاحبان کو ایک اعتماد دینا ہوگا۔ کسی بھی ڈر اور خوف سے پاک اور مبرا اعتماد… اور اگر ایسا ہو جائے تو  پھر ہماری نچلی عدالتوں کو فوری اور انصاف پر مبنی فیصلے کرنے میں کوئی دشواری پیش نہیں آئے گی اور پھر یہ عمل ہمارے عام شہری پرعدلیہ کااعتماد بحال کردے گا۔ ریاست کا ایک اہم ستون فعال ہونے سے ہمارے ملک کی نظریاتی اساس کی آبیاری بھی ہوگی۔
سچ پوچھیے تو میں ذاتی طور پر حکومتوں کو غیر ضروری طور پر بے مقصد اور انتقامی تنقید کا نشانہ بنانے کے حق میں نہیں ہوں مگر جب ریاستی سطح پرکسی کوتاہی اورغفلت کو شدت سے محسوس کرتاہوں تو پھر میری قلم کی روانی میرے مزاج کا ساتھ چھوڑجاتی ہے … میرا سوال ہے عوام کے ان منتخب نمائندوں سے اور مسند اقتدار پر بیٹھے ارباب اختیار سے کہ بہت سے ایسے Areas میں جہاں آپ کابس نہیں چلتا ’’لاٹھی کی طاقت‘‘ آپ پر حاوی آجائے گی مگر جن کے ووٹ لے کر آپ ایوان اقتدار تک پہنچے ہیں وہ آپ سے یہ سوال کرنے میں حق بجانب ہیں کہ عدل و انصاف ، پولیس کے نظام، تعلیم اور صحت جیسے شعبوں میں قانونی اور انتظامی اصلاحات کرنے اور بہتری لانے میں وہ کون سی ’طاقت‘ اور ’مجبوری‘ یا ’رکاوٹ‘ حائل ہے جس نے آج تک ہمارے موجودہ حکمرانوں کے ہاتھ باندھ رکھے ہیں؟
راقم کی نظر میں اس کی وجہ ہے Lack Of  Will یا ارادے کا فقدان … اب بھی وقت ہے … انتقامی مزاج کی آگ سے نکل کر ایک متحمل، بردبار اور ٹھنڈے دل اور دماغ کے ساتھ اصل مسائل کوAdressکیا جائے … یہی بہترین انتقام ہے۔ آپ اپنے سیاسی مخالفین کی بداعمالیوں کو اپنے اچھے اعمال کے ساتھ ہی اجاگر کرکے اخلاقی اور عملی شکست سے دوچار کرسکتے ہیں… ملک کی بقا، سلامتی اور خوشحالی کو ذاتی اور اداراتی انا کی تسکین کی نذر کرنا کہاں کی عقل مندی ہے؟

تازہ ترین خبریں

اداکارہ اقرا عزیز کو شوٹنگ سے پہلے بسمہ اللہ نہ پڑھنے کا کیوں کہا گیا؟

اداکارہ اقرا عزیز کو شوٹنگ سے پہلے بسمہ اللہ نہ پڑھنے کا کیوں کہا گیا؟

مولی کھانے کے بعد یہ چیزیں ہر گز نہ کھائیں ورنہ خطرناک بیماری بھی ہوسکتی ہے۔۔ جانیں مولی کو کون سی 3 چیزوں کے ساتھ نہیں کھانا چاہیے؟

مولی کھانے کے بعد یہ چیزیں ہر گز نہ کھائیں ورنہ خطرناک بیماری بھی ہوسکتی ہے۔۔ جانیں مولی کو کون سی 3 چیزوں کے ساتھ نہیں کھانا چاہیے؟

آپ کا انگوٹھا ان میں سے کس شکل کا ہے ۔۔ سیدھے انگوٹھے والے ہو جائیں خبردار، جانیے آپ کی شخصیت کے بارے میں کون سے راز بتاتے ہیں

آپ کا انگوٹھا ان میں سے کس شکل کا ہے ۔۔ سیدھے انگوٹھے والے ہو جائیں خبردار، جانیے آپ کی شخصیت کے بارے میں کون سے راز بتاتے ہیں

محمد ﷺ کے شہر میں موجود انجن کی کہانی ۔۔ جانیں ان مختلف مقامات کے بارے میں، جن کی حقیقت آپ کو بھی حیران کر دے گی

محمد ﷺ کے شہر میں موجود انجن کی کہانی ۔۔ جانیں ان مختلف مقامات کے بارے میں، جن کی حقیقت آپ کو بھی حیران کر دے گی

جب والدہ کو دوبارہ زندہ دیکھا تو جان میں جان آئی ۔۔ وہ خوش قسمت بیٹا، جس نے اپنا جگر والدہ کو دے دیا

جب والدہ کو دوبارہ زندہ دیکھا تو جان میں جان آئی ۔۔ وہ خوش قسمت بیٹا، جس نے اپنا جگر والدہ کو دے دیا

آئی فون نے برف میں پھنس جانے والے ایک شخص کی زندگی بچالی

آئی فون نے برف میں پھنس جانے والے ایک شخص کی زندگی بچالی

والدہ کی بیماری میں مدد کرنے پر جڑواں بہنوں نے ایک ہی لڑکے سے شادی کرلی

والدہ کی بیماری میں مدد کرنے پر جڑواں بہنوں نے ایک ہی لڑکے سے شادی کرلی

کیا آپ کو معلوم ہے یہ کریم بالوں کے لئے ہوتی ہے؟ اگر آپ بھی اسے اب تک ہونٹوں یا جسم میں لگانے کے لئے استعمال کرتے ہیں

کیا آپ کو معلوم ہے یہ کریم بالوں کے لئے ہوتی ہے؟ اگر آپ بھی اسے اب تک ہونٹوں یا جسم میں لگانے کے لئے استعمال کرتے ہیں

کسی کو دیکھ کر اپنا کھیل تبدیل نہیں کرسکتے، ہمارا ریکارڈ ۔۔قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ محمد یوسف نے بڑی بات کہہ دی

کسی کو دیکھ کر اپنا کھیل تبدیل نہیں کرسکتے، ہمارا ریکارڈ ۔۔قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ محمد یوسف نے بڑی بات کہہ دی

حکمران تھے مگر بیٹی کی فیس لیٹ جمع کراتے تھے ۔۔ 2 مشہور سیاست دانوں کی اپنے بچوں سے محبت

حکمران تھے مگر بیٹی کی فیس لیٹ جمع کراتے تھے ۔۔ 2 مشہور سیاست دانوں کی اپنے بچوں سے محبت

بارش کب ہو گی ؟ محکمہ موسمیات نے اہم پیش گوئی کردی

بارش کب ہو گی ؟ محکمہ موسمیات نے اہم پیش گوئی کردی

خبردار،شہری ہوشیار رہیں،خطرے کی گھٹنی بج گئی  

خبردار،شہری ہوشیار رہیں،خطرے کی گھٹنی بج گئی  

کراچی پولیس نے اپنی کارکردگی دکھانے کے لیے کون سا کام کرناشروع کردیا،جان کرآپ کے ہوش اڑ جائیں گے

کراچی پولیس نے اپنی کارکردگی دکھانے کے لیے کون سا کام کرناشروع کردیا،جان کرآپ کے ہوش اڑ جائیں گے

پی پی رہنما نے بھی ملک کے دیوالیہ ہونے کا خدشہ ظاہر کردیا

پی پی رہنما نے بھی ملک کے دیوالیہ ہونے کا خدشہ ظاہر کردیا