12:16 pm
مشینی ووٹنگ ممکن نہیں، الیکشن کمیشن کا انکار

مشینی ووٹنگ ممکن نہیں، الیکشن کمیشن کا انکار

12:16 pm

٭مشین کے ذریعے ووٹنگ ممکن نہیں، الیکشن کمیشنO مقبوضہ کشمیر:4 دنوں میں9 کشمیری شہیدO اپوزیشن کی شکست، حکومت5 سال پورے کرے گی: اعتزاز احسنO عرب امارات: پاکستان سے سات ارب روپے کا اسلحہ خریدے گاO گیس لوڈ شیڈنگ: گوجرانوالہ لکڑی 600 روپے سے بڑھ کر950 روپے منO موجودہ قوانین ’فوج‘ نے منظور کرائے ہیں : مولانا فضل الرحمنO کل بھوشن کے مقدمہ پر کوئی اثر نہیں پڑے گا:اٹارنی جنرلO سعد رضوی کی رہائی، پرجوش استقبالO پشاور، نوشہرہ میں جلسوں پر پابندی نامنظور، دما دم مست قلندر ہو گا‘‘ بلاولO کرتار پور، بھارتی پنجاب کے وزیراعلیٰ چرن جیت سنگھ و سینکڑوں سکھوں کی آمدO قادر مندوخیل کے اسمبلی احاطہ میں داخلہ پر ایک روزہ پابندی!!
٭الیکشن کمیشن نے 2023ء کے انتخابات میں مشینی ووٹنگ کو ناقابل عمل قرار دیا ہے۔ اخبارات میں الیکشن کمیشن کی تفصیل کے مطابق مشینی ووٹنگ کی ہزاروں افراد کی تربیت کے لئے 14 مرحلوں سے گزرنا ہو گا۔ ای پرسن کے لئے تین یا چار پائلٹ پروگرام کرنا ہوں گے۔ تقریباً دو کروڑ مشینیں درکار ہوں گی، 2023ء کے انتخابات تک کی مختصر مدت میں یہ سارا کام ممکن نہیں۔ الیکشن کمیشن کے سیکرٹری عمر رشید نے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں بتایا کہ بھارت میں 20 برس اور برازیل میں مشینی ووٹنگ کے تجربات میں 21 برس لگ گئے تھے مزید یہ کہ ان مشینوں کے لئے انٹرنیٹ کی موجودگی لازمی ہو گی، بلوچستان میں بیشتر مقامات پرانٹرنیٹ موجود ہی نہیں، وہاں مشینی ووٹنگ نہیں ہو سکتی۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ دنیا کے 37 ممالک میں مشینی ووٹنگ ہوتی ہے، وہاں بھی بعض علاقوں میں ووٹنگ کا پرانا طریقہ ہی استعمال ہوتا ہے۔
٭قارئین کرام: میں ہمیشہ مشینی ووٹنگ کے حق میں رہا ہوں۔ اس نظام میں عام طریقہ کار کے مقابلہ میں ووٹنگ کا کام بہت جلد انجام پا سکتا ہے۔ خاص بات یہ کہ صرف زندہ لوگ ہی اپنے شناختی کارڈوں کے ذریعے ووٹ ڈال سکتے ہیں، جعلی یا وفات پانے والے افراد کی ووٹنگ ناممکن ہو جاتی ہے۔ وزیراعظم عمران خاں کا کہنا درست ہے کہ 2018ء کے انتخابات میں 15 لاکھ ووٹ اس لئے ضائع ہو گئے کہ ووٹ جعلی یا ناقص تھے۔ یہاں تک تو بات ٹھیک ہے۔ میں لکھ چکا ہوں کہ لندن میں گاڑی میں میرے ساتھ سفر کرنے والا ایک دوست ایک عمارت کے سامنے اچانک گاڑی سے اترا۔ دفتر کے اندر گیا، پانچ سات منٹ میں واپس آ گیا۔ کسی کائونٹی وغیرہ کے الیکشن کے لئے ووٹ ڈالا تھا۔ باہر ووٹروں کی کوئی لمبی لائن وغیرہ نہیں تھی۔ اس نے ایک اور انوکھی بات بھی بتائی کہ شناختی کارڈ کے ذریعے کسی بھی حلقے سے اپنے حلقے کے لئے ووٹ ڈال سکتے ہیں۔ یہ ساری باتیں اپنی جگہ مگر پاکستان میں عملی طور پر فوری طور پر اس طریقے پر عمل ممکن نہیں۔ اس کی ایک سادہ وجہ تو ایک ٹیلی ویژن رپورٹ میں یہ بتائی گئی کہ پاکستان میں برقی ووٹنگ کے لئے کم از کم ایک لاکھ 90 ہزار مشین استعمال کرنا ہوں گی۔ قارئین یہاں دلچسپ معلومات دیکھیں۔ رپورٹ کے مطابق بھارت میں 2019ء میں ڈیڑھ کروڑ مشینیں استعمال ہوئیں ان پر ایک کھرب 26 ارب روپے خرچ ہوئے۔ (پاکستان میں 75 ارب کا اندازہ)۔ کسی پولنگ سٹیشن پر 64 کی تعداد تک امیدوار ہوں تو مشین زیادہ سے زیادہ 3840 ووٹ ریکارڈ کر سکتی ہے۔ امیدواروں کی تعداد64 سے بڑھ جائے تو پھر مشین کی بجائے وہی پرانا نظام اختیار کرنا ہو گا۔ بھارت میں اب تک تین پارلیمانی اور 107 ریاستی انتخابات مشینوں کے ذریعے کرائے جا چکے ہیں۔ وہاں آبادی اور رقبہ پاکستان سے پانچ گنا سے بھی زیادہ، اس لئے وہاں ایک ہی دن میں انتخابات ممکن نہیں ہو سکتے اور مختلف مرحلوں میں کرائے جاتے ہیں۔ کچھ دوسری باتیں:
٭پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں پیپلزپارٹی کے رکن عبدالقادر مندوخیل نے سپیکر کے بارے میں ناقابل بیان سخت الفاظ کہے اس پر سپیکر نے اسے ایوان سے نکال دیا۔ گزشتہ روز اسمبلی کے احاطہ میں ایک روز کے لئے داخلہ روک دیا۔ ایک ٹیلی ویژن پر قادر مندوخیل کا ردعمل پڑھئے: ’’اس ایوان میں ذوالفقار علی بھٹو کو گالیاں دی گئیں، شاہد خاقان عباسی نے سپیکر سے مخاطب ہو کر کہا کہ میں جوتا اتار کر تیرے سر پر ماروں گا۔  شیریں مزاری سیٹیاں بجاتی رہی، سپیکر نے نوٹس نہ لیا!‘‘اینکر پرسن نے کہا کہ شیریں مزاری کے تو منہ پر ماسک تھا۔ سیٹی کیسے بج سکتی تھی؟ قادر نے کہا کہ سیٹی ماسک کے نیچے رکھی ہوئی تھی۔ مجھے ایک دلچسپ سچا چشم دید واقعہ یاد آ گیا ہے۔ بہت عرصہ پہلے مشرق اخبار میں کھانے کی میز پر بھوپال سے تعلق رکھنے والے ایک صحافی نے بیان کیا کہ نواب آف بھوپال ہوائی جہاز میں سوار ہو کر اسے خود اڑاتے اور بھوپال کے بیچ میں بہنے والے دریا میں مچھلیاں شکار کیا کرتے تھے، دریا کے کنارے پردونوں طرف درباری ملازم بھاگتے ہوئے چلتے تھے۔ نواب صاحب طیارے سے دریا میں نیزہ پھینک کرمچھلی شکار کرتے، کناروں پر بھاگتے ہوئے درباری مچھلی نکال لیتے تھے۔ میں نے ان صاحب سے پوچھا کہ حضور! بھوپال تو پہاڑی علاقہ ہے، دریا پہاڑوں کے درمیان چکر کاٹتا ہوا چلتا ہے، جگہ جگہ موڑ آتے ہیں؟ طیارے کے سامنے اچانک کوئی پہاڑ آ جاتا تھا تو طیارہ آگے کیسے جاتا تھا؟ بڑے اطمینان سے بولے کہ ایسے میں نواب صاحب طیارے کو ریورس گیئر لگا دیتے تھے؟!!
٭پیپلزپارٹی کے سرکردہ ممتاز ماہر قانون چودھری اعتزاز نے ایک ٹیلی ویژن پر انٹرویو میں کہا ہے کہ پارلیمنٹ میں اپوزیشن کی شکست سے حکومتی پارٹی مستحکم ہو گئی ہے۔ اب عدم اعتماد کی باتیں بھی کم ہو جائیں گی اور حکومت آسانی کے ساتھ پانچ سال پورے کرے گی۔ اس سے پہلے ایک سوال کے جواب میں چودھری اعتزاز احسن نے کہا کہ رانا محمد شمیم نے لندن سے سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کے بارے میں جو حلفیہ بیان بھیجا ہے وہ قانونی طور پر بوگس ہے۔اس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں۔ ایسے حلف ناموں کو عدالتیں کوئی اہمیت نہیں دیتیں، حلف نامے کے لئے مدعی کو خود عدالت میں پیش ہونا پڑتا ہے۔‘‘ (ایک عزیز قاری اے ایم گوہر نے وضاحت کی ہے کہ رانا محمد شمیم گلگت بلتستان کی چیف کورٹ کے چیف جج نہیں بلکہ سپریم اپیلٹ کورٹ کے چیف جسٹس تھے)۔
٭مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں سارے قوانین انہی لوگوں نے منظور کرائے ہیں جو عمران خاں کو اقتدار میں لائے تھے۔ ظاہر ہے یہ اشارا واضح طور پر فوج کے بارے میں ہے۔ اس کا جواب تو فوج دے یا نہ دے مگر مولانا سے ایک ’ستم ظریف‘ قاری نے سوال کیا ہے کہ ’’مولانا! کیا فوج ہی آپ کے بھائی اور بیٹے اور آپ کی پارٹی کے 16 ارکان کو پارلیمنٹ میںلائی تھی؟ عجیب بات ہے کہ ہمارے تمام سیاست دان بار بار اپنی سیاست میں فوج کو لے آتے ہیں۔ عمران خاں نے اسلام آباد میں اپنے 126 دنوں کے دھرنے میں ایک روز سٹیج پر کھلا اعلان کیا کہ ’’نوازشریف کی حکومت ختم کرنے کے لئے دو دنوں بعد ہفتے کی رات امپائر کی انگلی اُٹھ جائے گی!‘‘ واضح طور پر فوج کو امپائر کا نام دیا۔ فوج خاموش رہی۔ بلاول اور مریم نواز نے ایک سے زیادہ بار فوج کو سلیکٹر اور عمران خاں کو سلیکٹڈ کہا، فوج پھر بھی خاموش رہی، ان لوگوں نے پھر مولانا نے کھلے عام فوج کا نام لیا ہے۔ لگتا ہے کہ اس بیان کو بھی اسی طرح اڑا دیا جائے گا، جیسے ناک پر سے مکھی اُڑائی جاتی ہے!
٭ایک اور قاری محمد سلیم نے مشترکہ اجلاس میں اپوزیشن کی شکست پر دلچسپ تبصرہ کیا ہے (راوی نامہ کا متفق ہونا ضروری نہیں) تبصرہ میں کہا ہے کہ ’’ایک میراثی کا بیٹا کسی طرح بی اے پاس کر گیا اس نے پہلی بار پتلون اور کوٹ پہنا۔ میراثی دیکھ کر بہت خوش ہوا اور نئے کپڑے پہن کر گائوں کے بڑے چودھری کے دربار میں جا پہنچا۔ کہنے لگا کہ چودھری جی! بیٹے نے بی اے کر لیا ہے، پینٹ کوٹ بھی پہنتا ہے۔ آپ کی بیٹی بھی جوان ہو چکی ہے۔ میری تجویز ہے کہ ان دونوں کی شادی کر دی جائے! چودھری کا پارا چڑھ گیا، سخت غصے میں اپنے ملاززوں سے کہا کہ اس کی طبیعت صاف کر دو! ملازموں نے میراثی کو زمین پر لٹا کر سخت ٹھکائی کر دی۔ ٹھکائی ختم ہوئی تو وہ کپڑے جھاڑتا ہوا اٹھا اور بولا کہ ’’چودھری جی! پھر آپ کی طرف سے انکار ہی سمجھوں؟؟‘‘

تازہ ترین خبریں

اسلام آباد ہائیکورٹ کیجانب سے عمران خان کی نااہلی کے خلاف جلد سماعت کی متفرق درخواست منظور

اسلام آباد ہائیکورٹ کیجانب سے عمران خان کی نااہلی کے خلاف جلد سماعت کی متفرق درخواست منظور

پی ٹی آئی کو چھیڑنا مہنگا پڑا ۔۔۔مولانافضل الرحما ن کو بڑادھچکا دے دیا گیا

پی ٹی آئی کو چھیڑنا مہنگا پڑا ۔۔۔مولانافضل الرحما ن کو بڑادھچکا دے دیا گیا

خواتین کو 14 سیکنڈ سے زائد گھورنا جرم قرار۔۔۔ قیدو جرمانہ کی سزابھی مقرر کر دی گئی

خواتین کو 14 سیکنڈ سے زائد گھورنا جرم قرار۔۔۔ قیدو جرمانہ کی سزابھی مقرر کر دی گئی

بچوں کی تو موجیں ہو گئیں ۔۔۔عدالت کیجانب سے نجی اور سرکاری اسکولوں کوہفتے میں تین دن چھٹیوں کا حکم آ گیا

بچوں کی تو موجیں ہو گئیں ۔۔۔عدالت کیجانب سے نجی اور سرکاری اسکولوں کوہفتے میں تین دن چھٹیوں کا حکم آ گیا

جج کی گاڑی روکی تو روکی کیوں۔۔۔ ؟اسی جرم کی بنا پر موٹر وے پولیس کے 2 سب انسپکٹر معطل کر دئیے گئے

جج کی گاڑی روکی تو روکی کیوں۔۔۔ ؟اسی جرم کی بنا پر موٹر وے پولیس کے 2 سب انسپکٹر معطل کر دئیے گئے

انا للہ و انا الیہ راجعون  شوبز انڈسٹری سےنہایت افسوسناک خبر ۔۔۔۔ لیجنڈری فنکارانتقال کر گئے

انا للہ و انا الیہ راجعون شوبز انڈسٹری سےنہایت افسوسناک خبر ۔۔۔۔ لیجنڈری فنکارانتقال کر گئے

پاکستان کے دو بڑے صوبوں میں گیس نا پید ہو گئی 

پاکستان کے دو بڑے صوبوں میں گیس نا پید ہو گئی 

آصف زرداری نے پہلے بھی بڑھک ماری ۔۔۔پھر چوہدری شجاعت کےپاؤں پڑکرخط لکھوایا، اور اب۔۔۔!

آصف زرداری نے پہلے بھی بڑھک ماری ۔۔۔پھر چوہدری شجاعت کےپاؤں پڑکرخط لکھوایا، اور اب۔۔۔!

بڑی  خبر۔۔۔پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ق میں اختلافات پیدا ہو گئے

بڑی خبر۔۔۔پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ق میں اختلافات پیدا ہو گئے

عمران خان کی گرفتار ی ۔۔۔آصف زرداری بھی میدان میں ۔۔۔ بڑابیان سامنے آگیا

عمران خان کی گرفتار ی ۔۔۔آصف زرداری بھی میدان میں ۔۔۔ بڑابیان سامنے آگیا

پولیس نےپی ٹی آئی سینیٹر اعظم سواتی کو گرفتار کر لیا۔۔۔ گرفتار کر  کے کہاں لے جایا جا رہا ہے۔۔۔؟ اہم خبر

پولیس نےپی ٹی آئی سینیٹر اعظم سواتی کو گرفتار کر لیا۔۔۔ گرفتار کر کے کہاں لے جایا جا رہا ہے۔۔۔؟ اہم خبر

اب یہ تجربہ بھی کر کے دیکھ لیتے ہیں ۔۔۔اسمبلیوں کی تحلیل روک نہ سکے تو الیکشن کرالیں گے۔۔۔ قمر زمان کائرہ نے لائحہ عمل بتا دیا

اب یہ تجربہ بھی کر کے دیکھ لیتے ہیں ۔۔۔اسمبلیوں کی تحلیل روک نہ سکے تو الیکشن کرالیں گے۔۔۔ قمر زمان کائرہ نے لائحہ عمل بتا دیا

وفاق کی جانب سے معطل سی سی پی او لاہور سپریم کورٹ سے بحال

وفاق کی جانب سے معطل سی سی پی او لاہور سپریم کورٹ سے بحال

پنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز: انگلینڈ کی پاکستان کیخلاف پہلی اننگز میں بیٹنگ جاری

پنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز: انگلینڈ کی پاکستان کیخلاف پہلی اننگز میں بیٹنگ جاری