01:17 pm
افغان عوام کی مدد کیجئے!

افغان عوام کی مدد کیجئے!

01:17 pm

آئی بی اے (کراچی یونیورسٹی) کی 22نومبر کی شام ایک یادگار شام تھی۔ سردیوں کی دھوپ درختوں سے چھن چھن کر نیچے اتررہی تھی۔ پرندے چہچہاتے ہوئے اپنے گھونسلوں کی طرف جارہے تھے۔ حاضرین کی ایک بڑی تعداد پاکستان افغانستان تعلقات سے متعلق کتاب (Pakistan-Afghanistan Relations: Pitfalls and the way Farward))کی تقریب پذیرائی میں موجود تھی۔ کتاب کی مصنفہ ڈاکٹر ہما بقائی اور ڈاکٹر نوشین مسکراتے ہوئے ہرشخص کا خیرمقدم کررہی تھیں۔ یہ دونوں خواتین اپنی جگہ پاکستان کے دانشور حلقوں میں اپنا نمایاں بلکہ منفرد مقام رکھتی ہیں۔ اس تقریب کی صدارت سابق سیکرٹری خارجہ  نجم الدین شیخ کررہے تھے۔ اس کے علاوہ سابق سفیر نغمانہ ہاشمی مہمان خصوصی کی حیثیت سے تقریب میں شریک تھیں۔ نجم الدین شیخ نے اپنی گفتگو میں کہا کہ اس وقت عالمی کمیونٹی کو افغانستان کے عوام کی فوری مالی مدد کرنی چاہیے۔ کیونکہ اس وقت90فیصد عوام بھوک وافلاس کاشکار ہیں۔ جبکہ سردیاں شروع ہوچکی ہیں۔ ان کے پاس اشیائے خوردونوش کی شدید قلت ہے ‘ سردیوں سے بچنے کے لئے مناسب کپڑے نہیں ہیں۔خصوصیت کے ساتھ بچوں کے لئے دودھ‘ گرم کپڑے ‘ وغیرہ۔ سابق سیکرٹری خارجہ نے عالمی کمیونٹی سے اپیل کی کہ وہ اس انسانی مسئلہ کے پیش نظر افغان عوام کے 9بلین ڈالر فوراً ریلیز کردیں تاکہ وہ اپنے عوام کی معاشی ضروریات پوری کرسکیں۔
اس موقع پر سابق سفیر نغمانہ ہاشمی نے اپنے خیالات کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ افغان طالبان امریکہ کے ساتھ ایک سمجھوتے کے تحت افغانستان میں حکمراں کی حیثیت سے وارد ہوئے ہیں‘ تاہم اس حقیقت سے کوئی انکارنہیں کرسکتا ہے کہ افغان طالبان نے گزشتہ بیس سالوں کے دوران اپنے ملک کو غیر ملکی فوجوں سے خالی کرانے میں بڑی قربانیاں دی ہیں۔ اب جبکہ پورے افغانستان پر وہ حکومت کررہے ہیں ‘ ان کا فرض بنتاہے کہ افغانستان کی تمام بڑی اکائیوں یعنی تاجک‘ ازبک‘ ہزارہ وغیرہ کو اپنے ساتھ لے کر چلیں۔ اس ہی صورت میں افغانستان میں داخلی استحکام پیدا ہو سکتا ہے۔ انہوں نے سابق سیکرٹری خارجہ کے اس خیال سے اتفاق کیا کہ اس وقت افغان حکومت کو اپنے ملک کے نظم ونسق کو چلانے کے لئے مالی امداد کی ضرورت ہے‘ اگر ان کے امریکہ اور جرمنی میں پھنسے ہوئے پیسے فوراً مل جاتے ہیں تو کسی حد تک موجودہ صورتحال کاازالہ ہوسکتاہے‘ ورنہ افغانستان ٹوٹ پھوٹ کاشکار  بھی ہوسکتاہے‘ جو پڑوسی ممالک کے حق میں مناسب صورتحال نہیں ہوگی۔
افغانستان کی حکومت کو اس وقت مالی امداد اور خوراک کامسئلہ ہی درپیش نہیں ہے بلکہ گورننس کامسئلہ بھی اپنی جگہ بڑی اہمیت کا حامل ہے۔ طالبان کی حکومت کو فوری طور پر پاکستان سمیت سینٹرل ایشیائی ممالک سے حکومتی امور سے اچھی طرح واقف حضرات کو بلاکر اپنے ملک کو جدید عہد کے تقاضوں سے اپنی حکومت چلانے کی کوشش کرنی چاہیے‘ ورنہ طالبان تیزی سے بدلتی ہوئی دنیا کا مقابلہ نہیں کرسکیں گے  اور نہ ہی اس صورتحال کے پیش نظر ان کی حکومت کو کوئی ٹھیک سے تسلیم کرے گا ۔ اس ضمن میں چین کا بھی رول زیربحث آیا۔ سابق سفیر نغمانہ ہاشمی نے کہا  کہ گزشتہ بیس سالوں کے دوران افغان طالبان کے ساتھ چین کا رویہ اعتدال پر مبنی تھا۔ بلکہ اس نے کامیاب سفارت کاری کرکے افغان طالبان کے علاوہ اس ملک کے دیگر ممالک کااعتماد بھی حاصل کرلیا ہے۔  چین نے افغانستان میں بھارت سے زیادہ سرمایہ کاری کی ہے ‘ خصویت کے ساتھ زیرزمین معدنیات کے تلاش کے شعبے میں۔ چین اب بھی وہاں موجود ہے‘ طالبان کے ساتھ اس کے خوشگوار تعلقا ت ہیں۔
 ایک سوال کے جواب میں سابق سیکرٹری خارجہ نے کہا کہ پاکستان کی پالیسی بہت عمدہ ہے‘ وزیراعظم عمران خان افغانستان کی حکومت کے لئے نیک جذبات رکھتے ہیں اور طالبان کی حکومت کو مستحکم دیکھناچاہتے ہیں ۔ وہ مسلسل عالمی کمیونٹی سے درخواست کررہے ہیں‘ ان کی فی الفور مالی مدد کرنی چاہیے تاکہ افغان عوام بھوک اور سردی سے ہلاک نہ ہونے پائیں۔ اس موقع پر سابق سفیر نغمانہ ہاشمی نے کہا کہ امریکہ طالبان کی حکومت کوختم نہیں کرناچاہتاہے‘ اور نہ ہی زیادہ مستحکم بناناچاہتاہے۔ فی الحال وہ طالبان کی حکومت کاجائزہ لے رہاہے‘ اگر طالبان امریکہ سے کئے گئے وعدے پر قائم رہتے ہیں تو افغان حکومت مستحکم ہوسکتی ہے اور عوام کی زندگیوں میں معاشی اور سماجی حالات میں بھی بہتری آسکتی ہے۔ بہرحال شرکا نے مقررین کی اس بات سے اتفاق کیا کہ افغانستان اس وقت انتہائی  نازک اور حساس دور سے گزررہاہے۔ ایک طرف افغان عوام کی اکثریت بھوک وافلاس کاشکار ہے‘ تو دوسری طرف عالمی سطح پر ابھی تک طالبان کی حکومت کو تسلیم نہیں کیا گیاہے۔ حالانکہ پاکستان اور چین تہہ دل سے چاہتے ہیں کہ افغانستان جلد اپنے پیروں پرکھڑا ہوجائے تاکہ افغان عوام پائیدارامن کی صورت میں ایک آسودہ حال معاشی وسماجی زندگی بسرکرسکیں۔ تاہم اس حقیقت سے انکار نہیں کیاجاسکتا ہے کہ طالبان کی حکومت کو مالی امداد کے علاوہ کئی اہم مسائل درپیش ہیں۔ افغان مخالف قوتیں ابھی تک افغانستان کی سرزمین پر موجود ہیں جن کو غیر ملکی طاقتوں کی حمایت حاصل ہے‘بھارت اس میں پیش پیش ہے۔ اگرطالبان آئندہ مہینوں میں حکومت کو تسلیم کرنے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو وہاں سے افغان عوام کا پاکستان کی جانب آنا بھی رک سکتاہے‘ نیز تقریباً 20لاکھ افغانی جوکئی دہائیوں سے پاکستان میں قیام پذیر ہیں ۔ آہستہ آہستہ اپنے ملک واپس جاسکتے ہیں۔ مزید برآں پاکستان کو چاہیے کہ وہ افغانستان کے ساتھ تجارت کو فروغ دے تاکہ دوطرفہ معاشی تعلقات میں اضافہ ہوسکے۔ اس وقت افغانستان میں بینک کام نہیں کررہے ہیں‘ پاکستان ان بینکوں کو فعال کرکے افغانستان کی معیشت کو بحال کرنے کے علاوہ اس کو عالمی معاشی نظام میں شامل کراسکتاہے۔

تازہ ترین خبریں

اسلام آباد میٹرواسٹیشن سے ملنے والی بچی سے زیادتی ہوئی یا نہیں۔۔؟باپ نے قتل کیو کیوں،گرفتار ملزم باپ نے انکشافات نے تہلکہ مچادیا

اسلام آباد میٹرواسٹیشن سے ملنے والی بچی سے زیادتی ہوئی یا نہیں۔۔؟باپ نے قتل کیو کیوں،گرفتار ملزم باپ نے انکشافات نے تہلکہ مچادیا

سہاگ رات کو لڑائی۔۔۔؟ ۔۔شادی کے اگلے ہی دن دولہا دلہن کی لاشیں کہاں سے اور کس حالت میں ملیں ۔۔ انتہائی افسوسناک خبر

سہاگ رات کو لڑائی۔۔۔؟ ۔۔شادی کے اگلے ہی دن دولہا دلہن کی لاشیں کہاں سے اور کس حالت میں ملیں ۔۔ انتہائی افسوسناک خبر

تیز ہواؤں کا سلسلہ ملک میں داخل،شدید بارشوںکا الرٹ جاری کردیا گیا

تیز ہواؤں کا سلسلہ ملک میں داخل،شدید بارشوںکا الرٹ جاری کردیا گیا

ن لیگ اور پیپلزپارٹی کا سیاسی اتحاد ہوا تو وزیراعظم کون ہو گا؟بڑی خبر آگئی

ن لیگ اور پیپلزپارٹی کا سیاسی اتحاد ہوا تو وزیراعظم کون ہو گا؟بڑی خبر آگئی

گیس کی شدید بحران۔۔۔پورے سندھ میں گیس ڈھائی ماہ کیلئے بند ۔۔ پاکستانیوں کے ہوش اڑا دینےوالی خبر

گیس کی شدید بحران۔۔۔پورے سندھ میں گیس ڈھائی ماہ کیلئے بند ۔۔ پاکستانیوں کے ہوش اڑا دینےوالی خبر

سعودی عرب جانے ناممکن۔۔بڑی پابندی عائد ۔۔ سعودی عرب جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بری خبر

سعودی عرب جانے ناممکن۔۔بڑی پابندی عائد ۔۔ سعودی عرب جانے کے خواہشمند افراد کیلئے بری خبر

دسمبر سے فروری کب اور کتنی بارشیں متوقع ہیں؟موسمیاتی ادارے نے رواں موسم سرماسے متعلق تفصیلی پیشنگوئی کر دی

دسمبر سے فروری کب اور کتنی بارشیں متوقع ہیں؟موسمیاتی ادارے نے رواں موسم سرماسے متعلق تفصیلی پیشنگوئی کر دی

پی ٹی آئی رہنما نے اپنے ہی ساتھیوں کے پول کھول دیئے ، قیادت نے سینئر رہنما کو شوکاز نوٹس جاری کر دیا،سنگین الزامات عائد

پی ٹی آئی رہنما نے اپنے ہی ساتھیوں کے پول کھول دیئے ، قیادت نے سینئر رہنما کو شوکاز نوٹس جاری کر دیا،سنگین الزامات عائد

کورونا وائرس کی خطرناک ترین قسم ’اومیکرون‘سے بچائوکیلئے شہریوں کو کیا کرنا ہو گا؟ این سی او سی نے نئی ہدایات جاری کردیں

کورونا وائرس کی خطرناک ترین قسم ’اومیکرون‘سے بچائوکیلئے شہریوں کو کیا کرنا ہو گا؟ این سی او سی نے نئی ہدایات جاری کردیں

پاکستانیوں کی جیبوں سے اربوں روپے نکالنے کا پروگرام۔۔ فون کال پر ٹیکس ۔۔۔۔ عوام کیلئے بری خبر۔۔

پاکستانیوں کی جیبوں سے اربوں روپے نکالنے کا پروگرام۔۔ فون کال پر ٹیکس ۔۔۔۔ عوام کیلئے بری خبر۔۔

بھارت سے پاکستان آنیوالی خاتون نے اسلام قبول کرکے لاہور کے شہری سے شادی کرلی،بھارتی واپسی پر اس کے ساتھ کیا ہوا۔۔ جانیے تفصیل

بھارت سے پاکستان آنیوالی خاتون نے اسلام قبول کرکے لاہور کے شہری سے شادی کرلی،بھارتی واپسی پر اس کے ساتھ کیا ہوا۔۔ جانیے تفصیل

تبدیلی۔۔۔۔ حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گئیں نیوزی لینڈ کی حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گ

تبدیلی۔۔۔۔ حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گئیں نیوزی لینڈ کی حاملہ رکن اسمبلی بچے کو جنم دینے سائیکل پر اسپتال پہنچ گ

سینیٹر ایوب آفریدی کے مستعفی ہونے کے بعد سینیٹ کی خالی نشست پر الیکشن کب ہو گا ؟ الیکشن کمیشن نےشیڈول جاری کر دیا

سینیٹر ایوب آفریدی کے مستعفی ہونے کے بعد سینیٹ کی خالی نشست پر الیکشن کب ہو گا ؟ الیکشن کمیشن نےشیڈول جاری کر دیا

5جی سے بھی زیادہ  سپیڈ ۔۔۔۔ معروف اداکارہ کے ہاں شادی کے5ماہ بعد ہی بچے کی پیدائش،نیا تنازعہ کھڑا ہو گیا

5جی سے بھی زیادہ سپیڈ ۔۔۔۔ معروف اداکارہ کے ہاں شادی کے5ماہ بعد ہی بچے کی پیدائش،نیا تنازعہ کھڑا ہو گیا