11:59 am
حب الوطنی اور قوم پرستی

حب الوطنی اور قوم پرستی

11:59 am

  جب کہ پاکستان کو ترقی کی اشد ضرورت ہے، مذہبی اور نسلی قوم پرستی ملک کو تقسیم کرتی ہے اور ترقی کو روکتی ہے۔ ملک 1971 ء میں غلط تصور شدہ قوم پرستی کی وجہ سے ٹوٹ گیا جہاں نسلی تعصبات نے ملک کے دونوں حصوں کو ایک دوسرے کے خلاف کھڑا کر دیا اور آخر کار پاکستان کی وحدت کو توڑ دیا۔ کسی کو اس قسم کی قوم پرستی پر مزید غور کرنے کی ضرورت ہے جو پاکستان کو ایک قوم بنانے میں مددگار ثابت ہوگی۔ ہماری حکومت، سیاسی نظام، تعلیم اور میڈیا نے اس خیال کو برقرار رکھا ہے کہ پاکستان کو ایک واحد قومی زبان اردو - اور اسلام کو ایک مشترکہ مذہب کے طور پر متحد کرنے کی ضرورت ہے - یہ نہیں سمجھتے کہ متحد ہونے کے بجائے ایسا مطالبہ دوبارہ تقسیم کا باعث بن سکتا ہے۔ لوگ اپنی مادری زبان کو ترک کرنے سے گریزاں ہیں جو انہیں ان کے ثقافتی ورثے تک رسائی فراہم کرتی ہے جس میں پریوں کی کہانیاں، شاعری، مقامی تاریخ وغیرہ شامل ہیں۔ بنگالی زبان کی تحریک پاکستان کے ٹوٹنے کی بڑی وجہ تھی،  جس کی ایک وجہ یہ تھی۔ یورپ میں جنگ اور علیحدگی پیدا کرنا نسلی روسی شہریوں کو یوکرین میں روسی بولنے سے روکنا ہے۔ ہمارے دادا دادی کے لیے انگریزوں کے استعماری تسلط کے خلاف لڑنے اور ایک علیحدہ مسلم وطن کے لیے اسلام ضروری تھا کیونکہ جارحانہ مسلم مخالف ہندو اکثریت نے مسلمانوں کی زندگی اجیرن کر دی تھی۔ بھارت میں کئی دہائیوں سے بے دردی سے نظر آرہا ہے، اب مودی کی بی جے پی کے تحت کھلے عام مسلمانوں کو دوسرے درجے کا شہری سمجھا جاتا ہے۔ مثال کے طور پر آسام میں بنگلہ دیشی تارکین وطن کو’’کیڑے‘‘ کہا جاتا ہے  ۔ پاکستان میں قوم پرستی کے حوالے سے ہمارا نقطہ نظر حب الوطنی کو جنم دینے کے لیے کثیر جہتی ہونا چاہیے، یہ بہت مختلف ہے کیونکہ ہمارے علاقے میں صدیوں سے مختلف قبائل، نسلیں اور مذہبی گروہ ہیں۔ جب کہ پاکستان کا قیام ہندوستانی مسلمانوں کے لیے سیاسی ہندو راج اور معاشی تسلط سے نکلنے کے لیے قریب سے اور بالکل درست ضرورت تھی، اس بات کو ذہن میں رکھنا چاہیے۔
 پاکستان میں رہنے والے غیر مسلموں کی جڑیں یہاں پر موجود ہیں۔ نہ صرف ان کی شناخت رکھنے کا حق ہے؛ ان شناختوں کو ’’تنوع میں اتحاد‘‘ کے طور پر پالا جانا چاہیے۔ اتحاد کو زندہ رہنے کے لیے یکسانیت کی ضرورت نہیں! اسلام سکھاتا ہے کہ غیر مسلموں کو معاشرے میں ضم ہونے کی ضرورت ہے، اپنے مذہب کا دعویٰ کرنے اور اپنی عبادت گاہوں میں جانے کی ضرورت ہے جن کی حفاظت کی جانی چاہیے۔ اسلام کے اس پہلو کو اجاگر کرنے اور اس پر عمل کرنے سے پاکستان میں غیر مسلموں کو دور نہیں کیا جائے گا۔ زبانوں اور ثقافتوں کا بھی یہی حال ہے۔ صرف ایک قومی زبان کیوں؟ کینیڈا میں انگریزی اور فرانسیسی ہیں، سوئٹزرلینڈ میں جرمن، فرانسیسی اور اطالوی سرکاری زبانیں ہیں! قوم پرستی ایک نظریہ کے طور پر جو 18ویں اور 19ویں صدی کے یورپ میں تیار ہوئی اور وہاں سے نوآبادیوں تک پھیل گئی۔ ایسی قوم پرستی کے لیے پیشگی شرائط، خاص طور پر سیکولرائزیشن (جس کا مطلب عوامی ڈومین سے مذہب اور مذہبی علامتوں کا خاتمہ) نہ تو پاکستان میں موجود ہے اور نہ ہی دیگر سابقہ  کالونیوں میں۔ یہاں تک کہ یورپ میں نہ تو مذہب اور نسل کو مکمل طور پر ختم کیا گیا ہے۔ یورپ سے باہر مذہب لوگوں کی سوچ اور روزمرہ کی زندگی میں مرکزی کردار ادا کرتا رہا ہے۔ اسی لیے برطانوی خیال کو ایڈجسٹ کرنے کے لیے، مذہب کو شامل کرنا تھا۔ اس لیے ہندوستانی مسلمانوں نے برطانوی راج کے خلاف لڑنے کے لیے قوم پرستی کا استعمال کرتے ہوئے اسلام کو قوم اور قومی ریاست کے بارے میں اپنی سمجھ کے مرکزی عنصر کے طور پر رکھنے کی ضرورت محسوس کی۔ ہماری گلوبلائزڈ دنیا میں اسلام ایک مضبوط عالمی رجحان رکھتا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے نہ صرف مسلمانوں بلکہ تمام انسانیت کو پیدا کیا ہے اور اس کا دائرہ کار پوری دنیا یا حتیٰ کہ کائنات کے لیے ہے (الامین) یہ حقیقت پاکستان اور مسلم ممالک کے لیے اس عالمگیریت کی دنیا میں آسانی پیدا کرتی ہے۔ 
عالمگیریت کے پہلو کے مضبوط ہونے کے ساتھ، فطری آپشن یہ ہوگا کہ حب الوطنی، محبت، عقیدت، اور اپنے علاقے یا علاقے سے وابستگی کے احساس کو شامل کیا جائے جہاں سے کوئی تعلق رکھتا ہے ہمارا قومی تعمیر کا فارمولا ہونا چاہیے۔ یہاں تک کہ جب آپ کے آبائی ملک سے نکال دیا جائے یا آپ خاندان کو چھوڑ دیں، اگلے شہر جانے کے لیے معاشی یا دیگر وجوہات کی بناء پر  ،  اس جگہ سے محبت جہاں آپ پیدا ہوئے تھے کبھی نہیں مرتے۔ اگرچہ قوم پرستی کی تعریف ایک قومی ریاست اور اس کی قومی سرحدوں سے ہوتی ہے، حب الوطنی کا تعلق اس مذہب سے ہے جس میں آپ پیدا ہوئے، بشمول علاقہ یا محلہ، گاؤں یا آبائی شہر، اس کا تعلق خاندان، پڑوسیوں سے ہے جن کے ساتھ آپ پلے بڑھے اور جن دوستوں کو آپ نے حب الوطنی بنایا۔ وسطی ایشیا کے چھوٹے شہروں کی تاریخ عربوں کی فتح تک شاعروں کے ذریعہ نظم میں لکھی گئی تھی لیکن جیسا کہ ڈاکٹر فریڈرک سٹار (واضح طور پر وسطی ایشیا پر سب سے اہم اتھارٹی) کی شاندار تصنیف ''  گمشدہ روشن خیالی'' کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ ''کوئی کوشش نہیں کی گئی۔ اس کے بعد جب تک کہ انہیں ادائیگی نہ کی جائے۔ یہ    ایسا ہونا چاہیے جو غریب ترین غریب کی خوشی کو ہماری ملک گیر ترقی کے اشاریہ کے طور پر تلاش کرے جو کہ ہمارے ساتھی انسانوں کی دیکھ بھال کے لیے ایک لازمی اسلامی عقیدہ ہے۔ اس حب الوطنی کو سب سے چھوٹی اقلیتوں کی آزادی کو ہماری سماجی ترقی کے اشاریہ کے طور پر دیکھنا چاہیے۔ یہ حب الوطنی کا جذبہ ہونا چاہیے جو ہمارے شہریوں کے ضمیر کے ذریعے ہر روز عمل میں آتا ہے جو صارفین سے جھوٹ بولنے، مزدوروں کا استحصال کرنے، ٹیکسوں میں دھوکہ دہی، رشوت دینے، سیمنٹ میں ریت ڈالنے، غریبوں پر ظلم کرنے، طاقتور کو سجدہ کرنے جیسی چیزوں سے پرہیز کرے۔ عوام کے ساتھ غداری کی یہ تمام روزمرہ کی کارروائیاں غداری کے طور پر۔ اسکول کی تعلیم، اداروں کے بجائے افراد سے غلط وفاداریاں، اور ایک میڈیا جو ان کی روزی روٹی کے طور پر جھوٹ پھیلاتا ہے، تشویش کے خاص شعبے ہیں۔
 نئی کمیونٹی  تعمیر کی جا سکتی ہے  جو  زیادہ تر نوجوان مذہب اور ذات پات کی حدوں کو پار کرے۔ اس کمیونٹی میں  مذہب اور نسل  یک جا  ہوں ، تقسیم کرنے والے عناصر نہیں ہوں  ۔ اسلام میں مشترکہ اقدار جو عیسائیوں اور یہودیوں کو اہل کتاب میں مشترکہ  ہیں ،  معاشرے میں تقسیم کرنے والے عناصر کے طور پر نہیں بلکہ متحد ہونے کا کام کرے۔ ہمیں ایک ایسی سرزمین بنانے کی کوشش کرنے اور بنانے کے لیے اپنی زندگی کے تجربے پر نظر ثانی کرنی چاہیے جہاں قوم پرست کو غدار، کے خلاف لڑنے دیں،  یا  وہ  جو  خدا کے نام پر ایک شخص کو مارتا ہے،  اور جہاں محب وطن وہ ہے جو کسی نامعلوم اجنبی کی حفاظت کرتے ہوے  اپنی جان کو خطرے میں ڈالتا ہے۔ 

                                                          
 

تازہ ترین خبریں

آڈیو لیکس معاملہ ۔۔۔پی ٹی آئی نے الزامات سے دلبرداشتہ ہو کر بہت بڑا قدم اٹھا نے کا فیصلہ کر لیا

آڈیو لیکس معاملہ ۔۔۔پی ٹی آئی نے الزامات سے دلبرداشتہ ہو کر بہت بڑا قدم اٹھا نے کا فیصلہ کر لیا

کھویا ہوا سائفر ن لیگ کو کہاں سے ملے گا ۔۔۔؟شہباز گل نے طنزیہ اندازمیںبڑاانکشاف کر دیا

کھویا ہوا سائفر ن لیگ کو کہاں سے ملے گا ۔۔۔؟شہباز گل نے طنزیہ اندازمیںبڑاانکشاف کر دیا

وزیر اعظم ہاؤس سے غائب ہونیوالا سائفر چلتا چلتا کہاں پہنچ گیا ۔۔۔۔ بڑ ا سراغ مل گیا

وزیر اعظم ہاؤس سے غائب ہونیوالا سائفر چلتا چلتا کہاں پہنچ گیا ۔۔۔۔ بڑ ا سراغ مل گیا

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی ، مریم نواز کا نیا بیان فورا ہی سامنے آ گیا

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی ، مریم نواز کا نیا بیان فورا ہی سامنے آ گیا

قائم مقام سیکرٹری خارجہ کس کو مقرر کیا گیا ۔۔۔؟خبرا ٓ گئی

قائم مقام سیکرٹری خارجہ کس کو مقرر کیا گیا ۔۔۔؟خبرا ٓ گئی

ہر کیس کے پیچھے بڑا فیس ۔۔۔شیخ رشید کا ایسا نیا بیان کہ جس نے ہلچل مچا دی

ہر کیس کے پیچھے بڑا فیس ۔۔۔شیخ رشید کا ایسا نیا بیان کہ جس نے ہلچل مچا دی

امریکی صدر جوبائیڈن کی بڑی دھمکی اور ساتھ ساتھ وارننگز بھی دے ڈالیں

امریکی صدر جوبائیڈن کی بڑی دھمکی اور ساتھ ساتھ وارننگز بھی دے ڈالیں

سرعام گاڑی پر فائرنگ کرنے والا جوان کس اہم اور بڑی شخصیت کا بیٹا نکلا ۔۔۔؟بڑا راز کھل گیا

سرعام گاڑی پر فائرنگ کرنے والا جوان کس اہم اور بڑی شخصیت کا بیٹا نکلا ۔۔۔؟بڑا راز کھل گیا

پاکستان نے انگلینڈ کوجیت کےلیےکتنےرنز کاہدف دیدیا ،کھیل کے میدان سے شائقین کرکٹ کےلیے بڑی خبرآگئی

پاکستان نے انگلینڈ کوجیت کےلیےکتنےرنز کاہدف دیدیا ،کھیل کے میدان سے شائقین کرکٹ کےلیے بڑی خبرآگئی

مریم نواز نے عمران خان کو ملک کا بدترین دشمن قرار دے دیا

مریم نواز نے عمران خان کو ملک کا بدترین دشمن قرار دے دیا

سعودی عرب سے درجنوں پاکستانی ڈی پورٹ، ممکنہ وجہ بھی سامنے آگئی

سعودی عرب سے درجنوں پاکستانی ڈی پورٹ، ممکنہ وجہ بھی سامنے آگئی

بھرتی ،ٹرانسفراورپوسٹنگ۔۔وفاقی وزیرخواجہ سعد رفیق نے بڑااعلان کردیا

بھرتی ،ٹرانسفراورپوسٹنگ۔۔وفاقی وزیرخواجہ سعد رفیق نے بڑااعلان کردیا

دالیں، پیاز، ٹماٹر، دودھ، چائے کی پتی، چاول، انڈے، ڈبل روٹی اور صابن سمیت کتنی اشیا مہنگی ہو گئیں،ہوش اڑا دینے والی خبرآگئی

دالیں، پیاز، ٹماٹر، دودھ، چائے کی پتی، چاول، انڈے، ڈبل روٹی اور صابن سمیت کتنی اشیا مہنگی ہو گئیں،ہوش اڑا دینے والی خبرآگئی

خدشہ ہے سپریم کورٹ غیر فعال نہ ہوجائے، جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے چیف جسٹس کو خط لکھ دیا، ججز کی تقرری کا مطالبہ

خدشہ ہے سپریم کورٹ غیر فعال نہ ہوجائے، جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے چیف جسٹس کو خط لکھ دیا، ججز کی تقرری کا مطالبہ