12:19 pm
کیاڈالرڈوب رہاہے؟

کیاڈالرڈوب رہاہے؟

12:19 pm

پچھلے کئی برسوں سے سننے میں آرہاتھاکہ دنیابدل رہی ہے لیکن ہرکوئی اس کی تشریح سمجھنے سے قاصرتھالیکن افغانستان سے امریکی انخلا کے بعددنیامیں اس تبدیلی کے آثارمحسوس ہونا شروع ہوگئے
پچھلے کئی برسوں سے سننے میں آرہاتھاکہ دنیابدل رہی ہے لیکن ہرکوئی اس کی تشریح سمجھنے سے قاصرتھالیکن افغانستان سے امریکی انخلا کے بعددنیامیں اس تبدیلی کے آثارمحسوس ہونا شروع ہوگئے۔عالمی مالیاتی اداروں میں ڈالرکی گرفت ڈھیلی پڑتی گئی اوردنیاکے کئی ممالک نے ڈالر پر انحصارکی پالیسی سے منہ موڑناشروع کر دیا اور دنیاکے کئی ممالک نے آئندہ تجارتی لین دین میں صرف ڈالرپرانحصارپربتدریج کمی کاعندیہ دیتے ہوئے تجارتی لین دین کیلئے دوسرے ذرائع کو استعمال کرناشروع کردیااوریہ واضح ہوگیاکہ یہ دنیا کاکام ہی بدلتے رہناہے اوروسیع تراندازمیں عالمی مالیاتی ماہرین کامانناہے کہ ایک بہت بڑی تبدیلی وقوع پذیرعمل میں آچکی ہے۔ مختلف ادوار میں دنیاکوچلانے کی ذمہ داری قدرت نے مختلف اقوام کوسونپی ہے اوریہ ذمہ داری اسی قوم یامعاشرے کو ملتی ہے جو وقتی تقاضوں کواپنے حق میں بہتراندازمیں استعمال کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اورجوقوت اپنے حصے کا کام پوری ایمانداری اوردیانتداری سے نہیں کرپائی،تووقت تبدیلی کافیصلہ صادرکردیتاہے اورپھراس تبدیلی کو  روکناممکن نہیں رہتا۔
ظہورِاسلام کے وقت دنیاپرمسیحی اورمجوسی راج کررہے تھے۔روم اورفارس کی سلطنتوں نے دنیا کو آپس میں بانٹ رکھاتھا۔ان دونوں عالمی طاقتوں کیلئے قدرت نے مسلمانوں کے ہاتھوں شکست  وہزیمت لکھ دی۔مسلمانوں کے عروج کے دورمیں یورپ جہالت اورپس ماندگی کے گڑھے میں گراہواتھا۔پھرجب مسلمانوں سے دنیاکی امامت واپس لی گئی تب یورپ کی باری آئی۔گزشتہ پانچ صدیوں کے دوران یورپ اورامریکہ نے مل کردنیاپرحکومت کی ہے اورتمام ہی شعبوں میں حتمی نوعیت کی ایجادات واختراعات ممکن بنائی ہیں۔  امریکہ  اوریورپ ہی نے مل کرعالمی نظام تیارکیاہے جس کے تمام اجزاان کے ہاتھ میں ہیں۔عالمی نظام کے تحت کام کرنے والے اداروں سے امریکہ ویورپ کے مفادات کوزیادہ سے زیادہ مستحکم کرنے کاکام لیاجاتارہاہے۔
بیسویں صدی کے اوائل ہی سے عالمی سیاست ومعیشت میں امریکہ کاکردارکلیدی ہوچکا تھا۔یورپی طاقتیں کم وبیش ساڑھے تین سوسال تک دورونزدیک کے خطوں کوجی بھرکر لوٹنے کے بعدتھک چکی تھیں،ان میں مزیدکچھ مدت تک انتہائی کھچاؤکی حالت میں رہنے کی سکت بھی باقی نہیں رہی تھی۔یورپی اقوام رقبے اورآبادی کی کمی کے باعث کسی ایسے پارٹنرکی تلاش میں تھیں جس کے ساتھ مل کروہ دنیاکواپنی مٹھی میں لے سکیں،یہ کمی امریکہ نے پوری کردی۔
امریکہ نے عالمی مالیاتی نظام کواپنی مرضی کے مطابق ترتیب دیااورعالمی سطح پرکی جانے والی سرمایہ کاری اورتجارت پرایسا تصرف حاصل کرلیاکہ اب بہت کمزورپڑجانے پربھی وہ اس کے ثمرات بٹوررہاہے۔امریکی کرنسی ’’ڈالر‘‘ کو ایک  صدی کے دوران اس قدرمضبوط کیاگیاہے کہ باقی تمام کرنسیاں ایک طرف رہ گئی ہیں۔ برطانوی پاؤنڈ،یورپی یونین کایورو، چین کا یوآن،جاپان کاین اورتیل کی دولت سے مالامال عرب ریاستوںکی کرنسیاں بھی ڈالرکی اجارہ داری ختم کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکیں۔ ہاں! اب کچھ مدت سے چین، روس اوردوسری ابھرتی ہوئی  معیشتیں اس بات کی کوشش کررہی ہیں کہ ڈالر کی اجارہ داری ختم کرنے کیلئے اپنی اپنی کرنسیوں کوزیادہ مقبولیت سے ہمکنارکریں اور تجارت  بھی اپنی اپنی کرنسی میں کریں۔
ڈالرکی اجارہ داری ختم کرنے میں راتوں رات کامیابی حاصل نہیں ہوسکتی،اس کابنیادی سبب یہ ہے کہ امریکہ نے عالمی مالیاتی نظام کے کم وبیش ہرمعاملے میں اپنی کرنسی کوپھنسار کھا ہے۔ ڈالرکومستحکم کرنے کیلئے کئی عشروں تک توجہ دی گئی ہے۔اس کے نتیجے میں ڈالرکومضبوط تو ہونا ہی تھا،اب ڈالرکے پنجے عالمی مالیاتی نظام میں گڑے ہوئے ہیں۔عالمی مالیاتی نظام کوڈھنگ سے چلانے کیلئے مضبوط کرنسیوں کی ضرورت پڑتی ہے اوریہ کرنسیاں انتہائی مضبوط ممالک ہی کی ہوسکتی ہیں، جن  پرباقی دنیاکو بھروسہ ہواورجوکسی بھی بحرانی کیفیت کے تمام اثرات کابخوبی سامناکرسکتی ہوں۔ امریکہ ،برطانیہ، جرمنی، فرانس، جاپان، چین اور سعودی عرب کی کرنسی کوغیرمعمولی اعتبار حاصل ہے۔مضبوط کرنسیوں کے ذریعے چلایا جانے والاعالمی مالیاتی نظام بہترنتائج ممکن بناتا ہے مگراب معاملہ یہ ہے کہ واحدسپرپاورہونے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے امریکہ عالمی مالیاتی نظام کے تمام فوائدبٹوررہاہے۔ معاشی اعتبار سے کمزور ہو جانے پربھی وہ نظام پرمتصرف ہونے کی بدولت بہت سے ممالک سے امتیازی سلوک یقینی بنا رہا ہے۔ چین غیر معمولی حدتک مضبوط ہے مگرعالمی مالیاتی وتجارتی نظام میں اس کی پوزیشن ابھی تک بہت کمزور ہے۔ یورپ کے ساتھ مل کر امریکہ اس کی راہ میں دیواریں کھڑی کرتاآرہاہے۔
یہ بات تواب طے ہے کہ یوکرین پر روسی لشکرکشی سے عالمی سیاسی ومعاشی نظام پر دور رس اثرات مرتب ہورہے ہیں۔بہت کچھ بدل چکا ہے  اورمزیدبہت کچھ بدلنے جارہاہے۔ بین الاقوامی تعلقات پربھی اس کے اثرات مرتب ہورہے ہیں، جنگ دوملکوں کے درمیان ہے مگردنیابھرمیں فوڈ سیکورٹی  کامسئلہ پیداہوگیاہے،توانائی کابحران بھی جنم  لے چکاہے ۔
 اس کابنیادی سبب یہ ہے کہ جنگ تو دو ملکوں کے درمیان ہے لیکن دنیااس کی وجہ سے تقسیم ہوچکی ہے۔امریکہ ،برطانیہ اوریورپ نے روس  کے سامنے ایک مضبوط محاذکھڑا کردیاہے اور باقی دنیاکوبھی مجبورکیاجارہاہے کہ تمام زمینی حقائق کوبھول بھال کران کاساتھ دیں۔ترکی اور ایران بھی محتاط ہیں،وہ کسی بھی زمینی حقائق کو نظر اندازنہیں کرسکتے،پاکستان کیلئے بھی یہ بہت مشکل وقت ہے۔امریکہ ویورپ کی طرف سے ہم پر بھی دباؤہے کہ یوکرین کے بحران میں واضح مؤقف اپناتے ہوئے روس کاساتھ نہ دینے کا اعلان کریں،اورہمارامعاملہ یہ ہے کہ روس اور یوکرین کے درمیان سردجنگ کے آخری لمحات میں سابقہ وزیراعظم عمران خان نے روس کادورہ کیا جو  امریکہ ویورپ کوپاکستان کا یہ عمل پسندنہیں آیا۔
یوکرین پرروس کی لشکرکشی کے بعدجب توانائی کابحران پیداہواتب امریکی صدرجوبائیڈن نے عرب اورخلیجی ممالک کے سربراہان مملکت وحکومت سے رابطہ کرنے پرتوجہ دی مگر متعدد ممالک نے ان کی کال وصول کرنے سے انکار کرنے کوترجیح دی،یہ امریکہ  کیلئے خطرے کی گھنٹی ہے۔وہ اب بھی واحدسپرپاورہے مگر دنیا بھر میں یہ تاثرعام ہے کہ امریکہ میں اب وہ پہلاساطنطنہ نہیں رہا۔ یوکرین کے تنازعہ پرامریکہ ومغرب نے جوطرزِعمل اختیارکیا،اس سے باقی دنیاکومعلوم ہوگیاکہ ان تِلوں میں اب تیل نہیں۔متعددممالک میں اقتدار کی کشمکش بھی شروع ہوچکی ہے،حکومتیں کمزورپڑتی جارہی ہیں اوراپوزیشن والے زورلگاکران کوہٹانے کی کوششوں میں مصروف ہیں اوراب یہ لڑائی محض عسکری نہیں بلکہ معاشی بھی ہوچکی ہے۔
امریکہ کی خواہش ہے کہ یوکرین پرحملہ کرنے کی سزاکے طورپرروس بربادہوجائے،چین کااپنا پوشیدہ ایجنڈہ ہے۔چین اس صورت حال سے فائدہ اٹھاکرعالمی مالیاتی نظام میں ڈالر کو نیچا دکھانے اور اپنے آپ کوحقیقی سپرپاورکے طور پر منوانے کی راہ پرگامزن ہے۔یوکرین پرروس کی لشکرکشی سے سفارتی،سیاسی اورمعاشی سطح پر غیر معمولی تبدیلیاں دکھائی دے رہی ہیں۔ایسالگتاہے کہ  ایک نیا نظام ابھر رہاہے،امریکہ کی بے بسی بھی دکھائی دے رہی ہے کہ اس نے روس پرپابندیاں تو  عائد کر دیں لیکن یوکرین کیلئے فوجی نہیں بھیج سکا۔(جاری ہے)
 

تازہ ترین خبریں

آنٹی سنا ہے آپ کی بیٹی شعر بہت اچھے پڑ ھتی ہے۔ میں بھی سننا چاہتا ہوں

آنٹی سنا ہے آپ کی بیٹی شعر بہت اچھے پڑ ھتی ہے۔ میں بھی سننا چاہتا ہوں

پاکستانیوں کیلئے اچھی خبر ، ملک سے لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ، حکومت نے بڑا قدام اٹھا لیا

پاکستانیوں کیلئے اچھی خبر ، ملک سے لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ، حکومت نے بڑا قدام اٹھا لیا

مسافروں کا بڑا جھٹکا ، پاکستان پبلک ٹرانسپورٹ اونرز فیڈریشن نے پٹرول کی قیمت بڑھنے پر پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کر دیا

مسافروں کا بڑا جھٹکا ، پاکستان پبلک ٹرانسپورٹ اونرز فیڈریشن نے پٹرول کی قیمت بڑھنے پر پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کر دیا

ہاتھ دھوتے ہوئے بس ایک بار یہ کہ دیں لاکھوں کاقرض دنوں میں اُترجائے گا،ایک بڑے محدث کا آزمایا ہوا عمل

ہاتھ دھوتے ہوئے بس ایک بار یہ کہ دیں لاکھوں کاقرض دنوں میں اُترجائے گا،ایک بڑے محدث کا آزمایا ہوا عمل

پاکستانی تیاری کر لیں ، اگلے تین روز مسلسل موسلا دھار بارشوں کی پیش گوئی ، کہاں کہاں بادل برسیں گے ؟ جانیں 

پاکستانی تیاری کر لیں ، اگلے تین روز مسلسل موسلا دھار بارشوں کی پیش گوئی ، کہاں کہاں بادل برسیں گے ؟ جانیں 

یا اللہ خیر ، اگلے 3دن خطرناک ، پاکستان میں کیا ہونے والا ہے ؟ ہنگامی الرٹ جا ری کر دیا گیا

یا اللہ خیر ، اگلے 3دن خطرناک ، پاکستان میں کیا ہونے والا ہے ؟ ہنگامی الرٹ جا ری کر دیا گیا

پاکستانی فلم ساز محمد علی نقوی بطوررکن آسکرمیں مدعو شاندارکارگردگی دستاویزی فلموں کو عالمی سطح پرپزیرائی کی بدولت فلم سازکورکنیت دی گئی

پاکستانی فلم ساز محمد علی نقوی بطوررکن آسکرمیں مدعو شاندارکارگردگی دستاویزی فلموں کو عالمی سطح پرپزیرائی کی بدولت فلم سازکورکنیت دی گئی

سورہ اخلاص کا خاص وظیفہ رزق کے 300دروزاے کھلتے ہیں 7نسلوں تک رزق کی کمی نہیں ہوگی

سورہ اخلاص کا خاص وظیفہ رزق کے 300دروزاے کھلتے ہیں 7نسلوں تک رزق کی کمی نہیں ہوگی

فرح گوگی کے خلاف گھیرا تنگ،10 ایکڑ پلاٹ کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے معاملے پر 2 افراد گرفتار

فرح گوگی کے خلاف گھیرا تنگ،10 ایکڑ پلاٹ کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے معاملے پر 2 افراد گرفتار

پنجاب میں 300یونٹ بجلی مفت دینے کا اعلان کر دیا گیا

پنجاب میں 300یونٹ بجلی مفت دینے کا اعلان کر دیا گیا

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں واپس۔۔۔ لاہورہائی کورٹ سے بڑی خبر

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں واپس۔۔۔ لاہورہائی کورٹ سے بڑی خبر

افغانستان کے بعد ایران بھی لرز اٹھا، شدیدزلزلہ 3 افراد جاں بحق، 22 زخمی

افغانستان کے بعد ایران بھی لرز اٹھا، شدیدزلزلہ 3 افراد جاں بحق، 22 زخمی

دعا زہرہ ایک بار پھر تحویل میں ،لاہور سے کراچی منتقل کر دیا گیا

دعا زہرہ ایک بار پھر تحویل میں ،لاہور سے کراچی منتقل کر دیا گیا

ایک دن پہلے ہی کپتان کڑی تنقید کرنے والے ایاز امیر پر حملہ کس نے کیا ؟ عمران خان میدان میں آگئے ، بڑا انکشاف کر ڈالا

ایک دن پہلے ہی کپتان کڑی تنقید کرنے والے ایاز امیر پر حملہ کس نے کیا ؟ عمران خان میدان میں آگئے ، بڑا انکشاف کر ڈالا