12:40 pm
شہزادہ ترکی، الفصیل کے حضور چند تلخ باتیں

شہزادہ ترکی، الفصیل کے حضور چند تلخ باتیں

12:40 pm

تاریخ نے غیر روایتی حکمرانوں کی آمد دیکھ رکھی ہے۔ امریکہ میں ٹرمپ کا صدر بننا، سعودیہ میں محمد بن سلمان کا ولی عہد حکمران بننا،پاکستان میں عمران خان کا وزیراعظم بننا غیر روایتی سلسلے کی کڑیاں ہیں۔ ٹرمپ کو امریکی قوم نے واپس کر دیا، عمران خان کو لانے والوں نے خارج کر دیا، اب باقی محمد بن سلمان بچے ہیں۔ دیکھیں ان کے مقدر میں کیا ہے؟ وہ کب تک حکمران رہتے ہیں؟
اس میں شبہ نہیں کہ میں آل سعود بادشاہتوں کا عاشق، مددگار، مزید فکری و تحریری طور پر تین عشروں سے مجھے خاص لگائو رہا ہے۔ ایم اے عربی( 1982ء ) کے ساتھ میں نے شاہ فیصل پر تقریباً90صفحات پر مشتمل عربی میں کتاب لکھی تھی جس کا موضع تھا ’’شاہ فیصل اور پین اسلام ازم‘‘ (الملک فیصل و التضامن الاسلامیی) لہٰذا فیصل کے بیٹوں سے مجھے زیادہ پیار رہا ہے۔ شہزادہ ترکی الفیصل، طویل مدت تک سعودی انٹیلی جنس کے سربراہ، پھر امریکہ و برطانیہ میں سعودیہ کے سفیر رہے ہیں اور اب شاہ فیصل فائونڈیشن کے سربراہ ہیں۔ حال ہی میں عرب نیوز کے پروگرام فرینکلی سپیکنگ میں انہوں نے یمنی حوثیوں میں ایرانی دلچسپی، سعودیہ مخالف صدر جوبائیڈن کی سیاست و حکمرانی، سعودیہ و امریکہ تلخ ہوچکے معاملات پر کھل کر بات کی ہے، اس کا کچھ حصہ پاکستانی میڈیا میں بھی شائع ہو چکا ہے، انہوں نے کھل کر تسلیم کیا کہ سعودی عرب اور امریکہ کے باہمی تعلقات تنزلی کا شکار ہیں، انہوں نے صدر جوبائیڈن کو مخاطب کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ ہم (عرب) کوئی سکول کے بچے نہیں ہیں کہ ہمیں سزا اور انعام دیا جائے، ہم خودمختار ملک ہیں، ہمارے ساتھ منصفانہ اور شفاف سلوک کیا جاتا ہے تو ہم اس کا اسی انداز میں جواب دیتے ہیں۔ عرب میڈیا سے بات چیت میں شہزادہ ترکی الفصیل نے کہا کہ صدر جوبائیڈن نے حوثیوں کو دہشت گردوں کی فہرست سے نکال دیا۔ انہوں نے حوثیوں کا یوں حوصلہ بڑھایا اور ان کے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات پر حملوں کو مزید جارحانہ بنا دیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ امریکہ کے ساتھ تعلقات کو سعودی عرب نے ہمیشہ اسٹریٹجک سمجھا ہے۔ شائد اب یہ تعلقات اچھے کی بجائے نشیب والے ہیں۔ صدر جوبائیڈن نے سعودی عرب کو تنہا کرنے کے جو اعلانات انتخابی مہم میں کئے تھے، بلاشبہ انہوں نے کہی ہوئی اپنی بات کو عملی شکل دینا شروع کر دیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ بظاہر واشنگٹن فون کالز اور حکام کے دوروں کی شکل میں ریاض سے رابطے قائم رکھنا چاہتا ہے، لیکن یہ محض ایک معاملہ نہیں ہے،دونوں قیادتوں کے درمیان تعلقات کے معاملے کو ہمیں مزید دیکھنے کی ضرورت ہے، ناچیز شہزادہ ترکی کے موقف کے درست ہونے کی تائید اور تصدیق کرتا ہے، امریکہ نے سعودیہ اور عربوں میں قدم قدم پر دھوکہ  اور بے وفائی کر رکھی ہے۔
افغان جہاد میں جو عظیم سعودی کردار تھا اس کی ظاہری، خفیہ ادائیگی پاکستان کے ہمراہ مل کر شہزادہ ترکی الفیصل کیا کرتے تھے، یہ شہزادہ ترکی ہی تھے جن سے امریکہ و مغرب اپنے مطالبات منواتا اور عمل کرواتھا تھا۔ مگر دوسری طرف وزیر داخلہ شہزادہ نایف بن عبدالعزیز ان مطالبات اور ایجنڈوں کو کبھی کبھی نظرانداز کر دیا کرتے تھے۔ میں اسی شہزادہ نایف (ولی عہد و وزیر داخلہ) سے میدان عرفات کی میڈیا کانفرنس میں مل چکا ہوں، وہ ایران کے حوالے سے بہت مدبرانہ رویہ رکھتے تھے البتہ بہت محتاط بھی تھے۔
یمن میں حوثیوں کے معاملہ میں ، میںنے ماضی بعید میں کھل کر سعودی و اماراتی اتحاد کی بھرپور حمایت کی ہے، میں اس پرانے اپنے موقف پر آج بھی قائم ہوں، مگر میرا استدراک اور مطالعہ ہے کہ یہ صرف انقلابی ایران ہی نہیں بلکہ شاہ کے سیکولر ایران نے بھی  جنرل جمال عبدالناصر کی وساطت سے یمن میں زیدی بادشاہت کا خاتمہ کرکے جنرل عبداللہ السلال کی عسکری کمیونسٹ حکومت قائم کی تھی، موجودہ انقلابی ایران نے صرف سیکولر شاہ ایران کی خواہش اور ایجنڈے کو فروغ دیا اور یمن میں کافی کامیابیاں حاصل کی ہیں بالکل اسی طرح جیسے لبنان  و شام و عراق میں کی ہیں۔  یہ اصلاح کار ایرانی مدبرین کی کامیابیاں ہے۔ ایرانی عربوں سے زیادہ ہوشیار نکلے،  مرگ بر امریکہ کے نعرے  بھی لگاتے رہے اور اصلاح کاروں کے ذریعے خاموش اسٹریٹجک معاہدے و ایجنڈے طے کرتے رہے، ایرانی اس کامیاب حکمت عملی کو قبول کرتا ہوں، مجھے اعتراف ہے کہ میرے بہت محبوب عرب ’’اعرابیت‘‘ اور سادہ لوح ’’بدویت‘‘ کا مظہر بنے رہے ہیں۔
شہزادہ ترکی کو قلم کے ذریعے متوجہ اسی طرح کرنا چاہتا ہوں جس طرح انہوں نے صدر جوبائیڈن اور امریکہ کو میڈیا کے ذریعے کیا ہے۔ حضور، شہزادہ محمد بن سلمان میں بھی تو  امریکہ والی کچھ ذاتی خرابیاں موجود ہیں، کیا یہ حقیقت نہیں کہ شہزادہ محمد بن نایف کو ولی عہد منصب سے انتہائی سازشی اور غیر اخلاقی انداز میں الگ کیا گیا تھا۔ ناتجربہ محمد بن سلمان حکمران بنے ہیں، کرپشن کے نام پر آل سعود اور نامور مالدار سعودیوں کو اقتدار کی کشمکش کی سزا دی گئی تھی۔
محمد بن سلمان نے لبنانی وزیراعظم حریری کو ریاض میں نظر بند کرکے توہین کی ،مستعفی ہونے پر مجبور کیا تھا، صرف اس لئے کہ اس کے مالی مفادات سعودیہ سے وابستہ رہے ہیں، پاکستانی وزیراعظم عمران خان کو ذاتی طیارہ امریکہ جانے کے لئے دیا اور دوران سفر ہی پھر یہ طیارہ واپس لے کر پاکستان کی توہین کی تھی، ٹھیک ہے عمران خان بھی کافی غیر سنجیدہ تھا اور نادان و ناتجربہ کار بھی۔اسے پاک سعودی تاریخی اسٹریٹجک گہرائی رکھتے تعلقات کا ادراک تھا، نہ علم، اسی لئے بچوں جیسی غلط بات بھی کرلیتا تھا، اس کی غلطیاں، اس سے وابستہ شخصیات کی غلطیاں میں خود بھی بار بار لکھ چکا ہوں۔ محمد بن سلمان کے ساتھ جو کچھ امریکہ کرنا چاہتا ہے کیا وہ اس سے مختلف ہوگا جو عمران خان کے ساتھ ہوچکا ہے۔
جمال خاشقجی قتل کا بہت الجھا ہوا معاملہ یقینا اپنے اندر سی آئی اے کی سازش بھی رکھتا ہے، مگر یہ بھی حقیقت ہے کہ سی آئی اے نے یہ سازش سعودی شخصیات کے ذریعے سعودی سفارت خانے میں مکمل کروائی، اس عمل سے اب خود محمد بن سلمان بلکہ پوری آل سعود اور  پوری سعودی ریاست بھی یرغمال بن گئی ہے جبکہ سعودی سفارت کاری کو مستقل ’’داغ‘‘ یہ لگ گیا ہے کہ اب سعودی عرب پر تنقید کرنے والے، تنقید لکھنے والے سعودی سفارت کاروں سے نہ صرف محتاط رہیں گے بلکہ ان پر بھروسہ اور اعتماد نہ کریں گے اور سعودی سفارت خانوں میں جاتے ہوئے بہت زیادہ خوفزدہ بھی رہیں گے۔ کیا یہ نقصان ازالہ کا مستحق نہیں؟ کیسے یہ ازالہ ہوسکے گا؟
 

تازہ ترین خبریں

آنٹی سنا ہے آپ کی بیٹی شعر بہت اچھے پڑ ھتی ہے۔ میں بھی سننا چاہتا ہوں

آنٹی سنا ہے آپ کی بیٹی شعر بہت اچھے پڑ ھتی ہے۔ میں بھی سننا چاہتا ہوں

پاکستانیوں کیلئے اچھی خبر ، ملک سے لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ، حکومت نے بڑا قدام اٹھا لیا

پاکستانیوں کیلئے اچھی خبر ، ملک سے لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ، حکومت نے بڑا قدام اٹھا لیا

مسافروں کا بڑا جھٹکا ، پاکستان پبلک ٹرانسپورٹ اونرز فیڈریشن نے پٹرول کی قیمت بڑھنے پر پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کر دیا

مسافروں کا بڑا جھٹکا ، پاکستان پبلک ٹرانسپورٹ اونرز فیڈریشن نے پٹرول کی قیمت بڑھنے پر پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کر دیا

ہاتھ دھوتے ہوئے بس ایک بار یہ کہ دیں لاکھوں کاقرض دنوں میں اُترجائے گا،ایک بڑے محدث کا آزمایا ہوا عمل

ہاتھ دھوتے ہوئے بس ایک بار یہ کہ دیں لاکھوں کاقرض دنوں میں اُترجائے گا،ایک بڑے محدث کا آزمایا ہوا عمل

پاکستانی تیاری کر لیں ، اگلے تین روز مسلسل موسلا دھار بارشوں کی پیش گوئی ، کہاں کہاں بادل برسیں گے ؟ جانیں 

پاکستانی تیاری کر لیں ، اگلے تین روز مسلسل موسلا دھار بارشوں کی پیش گوئی ، کہاں کہاں بادل برسیں گے ؟ جانیں 

یا اللہ خیر ، اگلے 3دن خطرناک ، پاکستان میں کیا ہونے والا ہے ؟ ہنگامی الرٹ جا ری کر دیا گیا

یا اللہ خیر ، اگلے 3دن خطرناک ، پاکستان میں کیا ہونے والا ہے ؟ ہنگامی الرٹ جا ری کر دیا گیا

پاکستانی فلم ساز محمد علی نقوی بطوررکن آسکرمیں مدعو شاندارکارگردگی دستاویزی فلموں کو عالمی سطح پرپزیرائی کی بدولت فلم سازکورکنیت دی گئی

پاکستانی فلم ساز محمد علی نقوی بطوررکن آسکرمیں مدعو شاندارکارگردگی دستاویزی فلموں کو عالمی سطح پرپزیرائی کی بدولت فلم سازکورکنیت دی گئی

سورہ اخلاص کا خاص وظیفہ رزق کے 300دروزاے کھلتے ہیں 7نسلوں تک رزق کی کمی نہیں ہوگی

سورہ اخلاص کا خاص وظیفہ رزق کے 300دروزاے کھلتے ہیں 7نسلوں تک رزق کی کمی نہیں ہوگی

فرح گوگی کے خلاف گھیرا تنگ،10 ایکڑ پلاٹ کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے معاملے پر 2 افراد گرفتار

فرح گوگی کے خلاف گھیرا تنگ،10 ایکڑ پلاٹ کی غیر قانونی الاٹمنٹ کے معاملے پر 2 افراد گرفتار

پنجاب میں 300یونٹ بجلی مفت دینے کا اعلان کر دیا گیا

پنجاب میں 300یونٹ بجلی مفت دینے کا اعلان کر دیا گیا

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں واپس۔۔۔ لاہورہائی کورٹ سے بڑی خبر

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں واپس۔۔۔ لاہورہائی کورٹ سے بڑی خبر

افغانستان کے بعد ایران بھی لرز اٹھا، شدیدزلزلہ 3 افراد جاں بحق، 22 زخمی

افغانستان کے بعد ایران بھی لرز اٹھا، شدیدزلزلہ 3 افراد جاں بحق، 22 زخمی

دعا زہرہ ایک بار پھر تحویل میں ،لاہور سے کراچی منتقل کر دیا گیا

دعا زہرہ ایک بار پھر تحویل میں ،لاہور سے کراچی منتقل کر دیا گیا

ایک دن پہلے ہی کپتان کڑی تنقید کرنے والے ایاز امیر پر حملہ کس نے کیا ؟ عمران خان میدان میں آگئے ، بڑا انکشاف کر ڈالا

ایک دن پہلے ہی کپتان کڑی تنقید کرنے والے ایاز امیر پر حملہ کس نے کیا ؟ عمران خان میدان میں آگئے ، بڑا انکشاف کر ڈالا