12:21 pm
سیاست دانوں کو فوج کا ایک اور انتباہ

سیاست دانوں کو فوج کا ایک اور انتباہ

12:21 pm

٭ایک ہفتے میں فوج کا دوسرا انتباہ، فوج کو سیاست میں ملوث نہ کیا جائے، ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آرO انتباہ کے بعد فوج پر تنقید مزید بڑھ گئی!!O’’فوری الیکشن ہونے چاہئیں، فوج کے چیف کو نقل کرنے سے گریز کرنا چاہئے‘‘ مریم نوازO عمران خان کے لانگ مارچ کو سختی سے کچل دیا جائے گا، وزیرداخلہ رانا ثناء اللہ کی لندن سے دھمکیO انتخابات اگلے برس مقررہ وقت پر ہوں گے (اکتوبر2023ء) نواز شریفO پیپلزپارٹی (پنجاب اسمبلی میں7 نشستیں) خزانہ، زراعت، مواصلات کی وزارتیں مانگ لیںO خواجہ آصف کا یو ٹرن، جلد انتخابات کے بارے بیان واپس، آصف زرداری کی حمائتO آج سنٹرل سپیشل جج کی عدالت میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز پر فرد جرم عائد کئے جانے کے لئے طلبی، ایف آئی اے کے افسروں کے تبادلےO آصف زرداری، نواز شریف اور مریم نواز کے خلاف مقدمات ختم کئے جا رہے ہیں۔پی ٹی آئی۔
٭ایک طرف سے آئی ایس پی آر کے انتباہی بیانات آ رہے ہیں کہ فوج کو سیاست میں ملوث کیا جائے مگر ایسے ہر بیان کے بعد سیاسی راجوں مہاراجوں کی فوج پر تنقید بڑھ جاتی ہے۔ گزشتہ روز بھی یہی ہوا، مسلح افواج کے تعلقات عامہ کے مشترکہ ادارے آئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل بابر افتخار نے ایک ہفتے میں دوسری بار پریس کانفرنس میں بڑی سنجیدگی سے افسوس کا اظہار کیا کہ سیاست دان بدستور فوج کو سیاست میں ملوث کئے جا رہے ہیں۔ یہ موضوع بہت حساس اور نازک ہے۔ میں اس پر بعد میں بات کروں گا۔ پہلے پاکستان کے آئین کی دفعہ 63۔ شق نمبر8 پڑھئے:
٭دفعہ63، عنوان: پارلیمنٹ کی رکنیت کے لئے نااہلیت: ’’کوئی شخص پارلیمنٹ کی رکنیت کے رکن کے طور پرمنتخب ہونے یا چُنے جانے اور رکن رہنے کے لئے نااہل ہو گا۔
٭شق نمبر8: ’’اگر وہ کسی ایسی رائے کی تشہیر کر رہا ہو یا کسی ایسے طریقے پر عمل کر رہا ہو جو نظریہ پاکستان یا پاکستان کے اقتدار اعلیٰ، اسکی  سالمیت، سلامتی یا اخلاقیات، یا امن عامہ کے قیام کے خلاف یا پاکستان کی عدلیہ کی دیانت داری یا آزادی کے لئے نقصان کا باعث ہو، یا جو پاکستان کی مسلح افواج یا عدلیہ کو بدنام کرے یا اس کی تضحیک کا باعث ہو…‘‘
٭قارئین محترم! دفعہ 63 اوراس کی شق کو باربارپڑھئے، کوئی ابہام یا پیچیدگی نہیں۔ سادہ الفاظ میں سیدھی بات!! مگر…مگر اب تک کیا ہوتا آیا ہے اور اب بھی کیا ہو رہا ہے! صدر، وزیراعظم اور وزرا تو ایک طرف، چھوٹے چھوٹے گُل مُچھے بونے سیاست دان کھلے عام فوج کی مسلسل تضحیک کئے جا رہے ہیں! کبھی کسی وزارت قانون (موم کی ناک، جدھرچاہو موڑ لو) نے، کسی وزارت داخلہ نے ایسی باتوں یا چلئے خود فوج کے کسی ادارے نے آرمی ایکٹ کے تحت کوئی کارروائی کی؟ آرمی ایکٹ کے تحت فوج کے خلاف ایسے کسی توہین آمیز بیان پر فوج سول باشندوں کے خلاف خود کورٹ مارشل تک کی کارروائی کر سکتی ہے۔ مگر آج تک کیا ہوا؟ کسی سول یا فوجی ادارے نے فوج اور عدلیہ کے خلاف بیانات پر کسی شخص کے خلاف کوئی ایکشن لیا! پہلے دن سے ایسا کیا گیا ہوتاتو آج  یہ نوبت نہ آتی بلکہ نوازشریف، آصف زرداری، عمران خان، مریم نواز، فضل الرحمان، خواجہ آصف، بے نظیر بھٹو حتیٰ کہ ذوالفقار علی بھٹو پارلیمنٹ کی رکنیت کے لئے نااہل قرار پاچکے ہوتے۔ ذرا مختصر طور پر ان لوگوں کے بیانات پڑھئے۔
٭ذوالفقار علی بھٹو نے 10 جرنیل برطرف کرنے کے بعد خود لیفٹیننٹ جنرل گل حسن کو پاک  فوج کا چیف آف سٹاف مقرر کیا اس کی ان الفاظ میں تعریف کی کہ ’وہ بہت اچھا سپاہی ہے‘ (He is a Fine Soldier) اور صرف چند ماہ بعد بھٹو کے حکم پر مصطفی کھر پستول دکھا کر ایک دوسرے وزیرکے ساتھ اس چیف آف آرمی سٹاف، گل حسن کو وزیراعظم ہائوس سے ایک پرائیویٹ گاڑی میں بند کر کے لاہور کے گورنر ہائوس میں لے گئے اور ذوالفقار علی بھٹو نے اس کی برطرفی کا حکم جاری کر دیا۔ پاک فضائیہ کے سربراہ ایئرمارشل چودھری کو خود مقرر کیا اور اس بنا پر برطرف کر دیا کہ اس نے فضائیہ کے افسروں کے خلاف کارروائی کے لئے بھٹو کے حکم کی تعمیل نہیں کی تھی! یہی نہیں بھٹو نے قومی اسمبلی میں ہائی کورٹوں میں رٹ درخواستوں کی سماعت پر سخت تنقید کی، پانچویں آئینی ترمیم کے ذریعے پابندی عائد کر دی کہ حکومت کے کسی حکم یا کارروائی کے خلاف کسی ہائی کورٹ یا سپریم کورٹ میں رٹ درخواست دائر نہیں کی جا سکتی (بعد میں خود گرفتار ہو جانے پر لاہور ہائی کورٹ میں رٹ درخواست دائر کی تو عدالت نے ان سے کہا کہ مسٹر بھٹو! آپ ہی کی ترمیم کے باعث ہم آپ کی درخواست نہیں سُن سکتے!)
٭بات کو مختصر کرتا ہوں۔ آرمی چیف جنرل کرامت جہانگیر نے تجویز پیش کی کہ ملک میں تمام اداروں پر مشتمل قومی سلامتی کمیٹی ہونی چاہئے۔ نوازشریف جلال میں آ گئے، جنرل کرامت کو وزیراعظم ہائوس طلب کر کے اس سے استعفالے لیا۔ وہ شریف آدمی تھا۔ استعفا دے کر گھرچلاگیا۔ اسمبلی اورحکومت کی بحالی کے لئے سپریم کورٹ نے بے نظیربھٹوکے خلاف فیصلہ دیا تو بے نظیر نے پریس کانفرنس میں پاکستان کی عدالتوں کو کنگرو کورٹس (زیر دبائو عدالتیں) قرار دیا (عمران خان بھی یہی کچھ کہہ رہا ہے) موجودہ سیاسی مہاراجوں میں آصف زرداری نےکہا ’’میں جرنیلوں کی اینٹ سے اینٹ بجا دوں گا‘‘ عمران خان نے اپنے دھرنے میں فخر کے ساتھ اعلان کیا کہ ہفتہ کی شب میرے حق میں امپائر (فوج) کی اُنگلی اُٹھ جائے گی۔ نواز شریف نے لندن سے براہ راست گوجرانوالہ کے پی ڈی ایم جلسہ میں تقریرکرتے ہوئے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا بار بار نام لے کر ان پر عوام دشمن سرگرمیوں کا الزام لگایا۔ مریم نواز نے تو انتہا کر دی۔ فوج کو عمران خان کی بطور وزیراعظم ’سلیکشن‘ کا ذمہ دار قرار دیا۔ ’’ووٹ کو عزت دو‘‘ براہ راست فوج کے خلاف نعرے لگاتی رہی۔ یہی نعرے بلاول بھی لگاتا رہا (اب فوج کی خوشامدیں!) یہ باتیں پہلے تفصیل سے چھاپ چکا ہوں اب مولانا فضل الرحمان بھی میدان میں اُتر آئے ہیں۔ فرمایا ہے کہ ’’فوج کا ایک حصہ اب بھی عمران خان کی حمائت  کر رہا ہے۔‘‘ گزشتہ ایک دو دنوں میں پشاور کے کور کمانڈر کو سیاسی حاشیہ آرائی کا موضوع بنا لیا گیا ہے۔ عمران خان اور اس کے کارندے مسلسل عدلیہ پر برس رہے ہیں۔ عمران خان نے کھلے الفاظ میں سپریم کورٹ اور ہائی کورٹوں کو شریف خاندان کے حامی فریق قرار دیا ہے۔ ان ساری باتوں کا اب تک فوج یا عدلیہ نے صبر، شکر اور تحمل کے الفاظ کے سوا اور کیا کارروائی کی ہے!! ایسا کچھ نہ ہوا، نہ ہی کچھ ہو گا، بقول فیض احمد فیض شاعر لوگ شاعری کرتے رہیں گے مگر سب کچھ یونہی چلتا رہے گا۔ کسی طرف کوئی کارروائی ہوتی تو موجودہ بڑے بڑے سیاست دانوں میں سے بیشتر جیلوں میں یا اسمبلیوں کے لئے  نااہل قرار پا کر گھروں میں بند چوٹیں سہلا رہے ہوتے!!
٭اس بدقسمت ملک سے اس سے زیادہ بے وفائی اور کیا ہو گی کہ الطاف حسین، حسین حقانی،جنرل پرویز مشرف، نواز شریف، اسحاق ڈار اور ان کی اولادیں پاکستان کی عدالتوں سے مفرور قرار پاچکی ہیں۔ نوازشریف اور عمران خان کے بچے پاکستان کیوں نہیں آتے؟14 سال سندھ پر سوار سابق گورنر عشرت العباد دبئی میں کیوں روپوش ہے۔ آصف زرداری کے دور میں امریکی کمانڈرز دن دہاڑے پاکستان سے اسامہ بن لادن اورعافیہ صدیقی کو اور فاروق لغاری کے دور میں ایمل کانسی اور یوسف رضوی کو اٹھا کرلے گئے، کیا کارروائی کی ان لوگوں نے امریکہ کے خلاف!! نوازشریف نے تیسری بار وزیراعظم کی حلف برداری کے بعد اعلان کیا کہ عافیہ صدیقی کو پاکستان لایاجائے گا، لائے؟؟ معذرت! ذہن ملک کے حالات کی پریشانی میں ادھرادھر بھٹک رہا ہے!
٭عربی کی کہاوت ہے کہ فضول باتیں کر کے خوار ہونے سے بہتر ہے کہ انسان خاموش رہے! رانا ثناء اللہ نے پتہ نہیں یہ کہاوت پڑھی یا نہیں! گزشتہ روز کہا ہے کہ پاکستان میں صرف دو جھوٹے اشخاص ہیں، عمران خاں اور شیخ رشید!! خود اپنے بارے میں کچھ نہیں کہا شائد اقبال کا مرد مومن، بن چکے ہوں! نہائت سچا، دیانتدار انسان!!

تازہ ترین خبریں

پی ٹی آئی میں واپسی کیلئے پرویز الٰہی نے کتنے کروڑ روپے کی پیشکش کی؟ نعمان لنگڑیال کا تہلکہ خیز دعویٰ

پی ٹی آئی میں واپسی کیلئے پرویز الٰہی نے کتنے کروڑ روپے کی پیشکش کی؟ نعمان لنگڑیال کا تہلکہ خیز دعویٰ

جولائی میں موجودہ حکومت کے خاتمے کی پیشنگوئی کر دی گئی

جولائی میں موجودہ حکومت کے خاتمے کی پیشنگوئی کر دی گئی

شدید گرمی کے بعد بارشیں ہی بارشیں، محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی خبر سنا دی

شدید گرمی کے بعد بارشیں ہی بارشیں، محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی خبر سنا دی

قیمتوں میں اضافہ ، پیٹرول اور ڈیزل کی فروخت میں واضح کمی ہو گئی ، رپورٹ جاری

قیمتوں میں اضافہ ، پیٹرول اور ڈیزل کی فروخت میں واضح کمی ہو گئی ، رپورٹ جاری

پیٹرول کی قیمت میں 50روپے مزید اضافہ، پاکستانیوں کو ایک اور بڑا جھٹکا دینے والی خبر آگئی

پیٹرول کی قیمت میں 50روپے مزید اضافہ، پاکستانیوں کو ایک اور بڑا جھٹکا دینے والی خبر آگئی

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کو سعودی عرب نے اہم اعزاز سے نواز دیا

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کو سعودی عرب نے اہم اعزاز سے نواز دیا

گھریلو حالات سے دلبرداشتہ خاتون خاتون کاایسااقدام جس سے علاقہ میں کہرام مچ گیا

گھریلو حالات سے دلبرداشتہ خاتون خاتون کاایسااقدام جس سے علاقہ میں کہرام مچ گیا

لکھ کردیتاہوں جولائی میں حکومت کاخاتمہ ہوجائے گااگر۔۔۔سابق وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے بڑادعویٰ کردیا

لکھ کردیتاہوں جولائی میں حکومت کاخاتمہ ہوجائے گااگر۔۔۔سابق وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے بڑادعویٰ کردیا

تحریک انصاف میں کس کے کہنے پرشامل ہوئی ،ڈاکٹریاسمین راشد نے بڑے راز سے پردہ اٹھادیا

تحریک انصاف میں کس کے کہنے پرشامل ہوئی ،ڈاکٹریاسمین راشد نے بڑے راز سے پردہ اٹھادیا

بڑی عید سے قبل ملازمین اور پنشنرز کیلئے بڑی خوشخبری

بڑی عید سے قبل ملازمین اور پنشنرز کیلئے بڑی خوشخبری

جن بیٹیوں کو ساری عمر پالا انہوں نے ہی بے گھر کر ڈالا ، ایک ماں کی دل دکھا دینے والی داستان

جن بیٹیوں کو ساری عمر پالا انہوں نے ہی بے گھر کر ڈالا ، ایک ماں کی دل دکھا دینے والی داستان

میں اور عمران خان ساتھ بیٹھ کر چائے پیتے ہیں ۔۔ رات ہی نہیں دن میں بھی خوابوں میں عمران خان کو دیکھنے والی یہ لڑکی کون ہے؟

میں اور عمران خان ساتھ بیٹھ کر چائے پیتے ہیں ۔۔ رات ہی نہیں دن میں بھی خوابوں میں عمران خان کو دیکھنے والی یہ لڑکی کون ہے؟

سوناایک مرتبہ پھرسستاہوگیا،فی تولہ قیمت میں کتنی کمی ہوگئی ،جان کرخوش ہوجائیں گے

سوناایک مرتبہ پھرسستاہوگیا،فی تولہ قیمت میں کتنی کمی ہوگئی ،جان کرخوش ہوجائیں گے

سپرٹیکس کے نفاذ کے بعدکپتان کاحکومت کےخلاف بڑااعلان ۔۔۔2جولائی کوکیاہونیوالاہے ،تفصیلات جانیں اس خبرمیں

سپرٹیکس کے نفاذ کے بعدکپتان کاحکومت کےخلاف بڑااعلان ۔۔۔2جولائی کوکیاہونیوالاہے ،تفصیلات جانیں اس خبرمیں