01:15 pm
پاکستان اورآئی ایم ایف کادباؤ

پاکستان اورآئی ایم ایف کادباؤ

01:15 pm

بیک وقت کئی محاذکھل گئے ہیں۔عالمگیریت میں ایساہی ہوناتھا۔جب تمام معاملات جڑے ہوئے ہوتے ہیں تب کسی ایک چیزکے خراب ہونے پردوسری بہت سی چیزوں کاخراب ہوجانابھی فطری امرہے۔اس وقت یہی ہورہاہے۔امریکہ اوریورپ مل کرجوکچھ کرتے ہیں وہ کئی ممالک ہی نہیں،بلکہ خطوں کوبھی ہلاکررکھ دیتاہے۔امریکہ اوریورپ کے لئے بہت کچھ تبدیل ہو رہا ہے۔تبدیلیاں توخیرپوری دنیامیں آ رہی ہیں، مگر امریکہ و یورپ کے لئے معاملہ بہت اہم ہے۔سبب اس کایہ ہے کہ عالمی سیاست ومعیشت کامرکزاب ایشیاء کی طرف منتقل ہو رہاہے۔چین،جاپان،روس اورترکی کی معیشت غیرمعمولی رفتارسے مستحکم ہورہی ہیں۔جنوبی کوریااورملائیشیاء وغیرہ کااستحکام بھی اس معاملے میں روشن مثال کادرجہ رکھتا ہے ۔امریکہ چاہتاہے کہ عالمی سیاست ومعیشت میں اس کی فیصلہ کن حیثیت برقرار رہے۔
ڈھائی عشروں کے دوران چین تیزی سے ابھراہے،جس نے امریکہ اوریورپ دونوں ہی کے لئے خطرے کی گھنٹی بجائی ہے۔چینی معیشت کافروغ تیز رفتا ر رہاہے۔امریکہ نے محسوس کرلیاہے کہ یورپ اپنی راہ بدل رہاہے اورہرمعاملے میں اس کاساتھ دینے کوتیارنہیں ۔ یورپ وہی کررہاہے،جوعقل کاتقاضاہے۔یورپ کی بیشتر قوتیں افریقہ اورایشیاء کے حوالے سے اپنی پالیسیاں تبدیل کرچکی ہیں۔وہ اب سوفٹ پاورپریقین رکھتی ہیں۔انہیں اچھی طرح اندازہ ہے کہ ہرمعاملے کوہارڈپاورکے ذریعے درست کرنانہ صرف یہ کہ ممکن نہیں بلکہ بہت سی خرابیوں کی راہ بھی ہموارکرتاہے۔ گزشتہ8برس کے دوران چین نے باقی دنیا سے اپنامعاشی رابطہ بہتربنانے کی بھرپور تیاریاں کی ہیں۔اس حوالے سے بیلٹ اینڈروڈ منصوبہ تیارکیا گیا ہے۔انہی خطوط پرچین نے پاکستان کے ساتھ مل کرچین پاک اقتصادی راہداری منصوبہ(سی پیک)شروع کیاہے۔یہ منصوبہ پاکستان کی بھرپور ترقی کی راہ بھی ہموار کرسکتاہے۔سی پیک کی مجموعی مالیت کم و بیش 60ارب ڈالرسے تجاوزکرچکی ہے۔ امریکہ اوریورپ کے لئے سی پیک واضح طورپر خطرے کی گھنٹی ہے۔یہی سبب ہے کہ اس کے خلاف پروپیگنڈہ بھی تیز کر دیاگیاہے۔ امریکہ چاہتا ہے کہ پاکستان سی پیک پرنظرثانی کرے اورجہاں تک ممکن ہوسکے،اس منصوبے کوایسابنادے کہ اس سے پاکستان میں کوئی مثبت تبدیلی آئے نہ خطے میں۔اس مقصدکے حصول کے لئے بھارت کے ساتھ ساتھ بنگلادیش کوبھی متحرک کیا گیا ہے۔ بھارت کواس بات پراعتراض ہے کہ سی پیک سے جڑے ہوئے منصوبے کشمیرمیں بھی شروع کیے گئے ہیں، جومتنازع علاقہ ہے۔ عمران خان نے وزیراعظم بننے سے قبل کئی باریہ کہاتھاکہ وہ آئی ایم ایف یاکسی بھی عالمی ادارے سے قرضوں کاپیکیج لیناپسندنہیں کریں گے مگروزیراعظم کامنصب سنبھالتے ہی انہوں نے اس حوالے سے بھی یوٹرن لے لیااورصاف کہہ دیاکہ آئی ایم ایف سے بیل آوٹ پیکیج لیے بغیربات نہیں بنے گی کیونکہ قومی خزانے میں کچھ نہیں۔ملک کوبڑے پیمانے پرترقیاتی اقدامات کی ضرورت ہے۔آئی ایم ایف سے بیل آوٹ پیکیج لینے کے اعلان پرعمران خان کواندرونِ ملک توخیر تنقید کاسامناکرناہی پڑا،بیرونی محاذپرباضابطہ مورچہ کھول لیاگیا۔امریکہ کواسی موقع کی تلاش تھی۔ پاکستان کے لئے آئی ایم ایف سے قرضوں کاحصول ناگزیرہے اور دوسری طرف امریکاچاہتاتھاکہ آئی ایم ایف کے ذریعے پاکستان پرایسی شرائط نافذ کرادے کہ جنہیں پوراکرنے میں اس کی ساری ترقی دھری کی دھری رہ جائے۔ایک طرف چین سی پیک کے حوالے سے پہلے مرحلے میں کم و بیش 19ارب ڈالرکے منصوبوں کوپایہ تکمیل تک پہنچانے کی منزل کے بہت نزدیک تھااوردوسری طرف عمران خان سی پیک پرنظرثانی کاعندیہ دے رہے تھے۔یہ سب کچھ چین کے لئے غیرمعمولی تشویش کا باعث بن گیاکیونکہ سی پیک سے متعلق تمام معاہدے ریاستی سطح پرہوئے ہیں اورنظرثانی کے ذریعے ان میں کوئی بڑی تبدیلی غیرمعمولی منفی نتائج بھی پیداکرسکتی ہے۔ امریکہ چاہتاہے کہ سی پیک میں غیرمعمولی تبدیلیوں کی راہ ہموارکی جائے۔اس کے لئے اس نے دوڈھائی سال سے یہ راگ تواترکے ساتھ الاپاہے کہ چین نے کئی ممالک کوقرضوں کے جال میں جکڑلیاہے اوراب پاکستان کوبھی قرضوں کے شکنجے میں کسنا چاہتاہے۔ امریکہ ویورپ کے اس زہریلے پروپیگنڈے کے جواب میں بالآخر15اکتوبر2018ء کوچینی وزارتِ خارجہ کے ترجمان لوکانگ نے میڈیاکو بریفنگ کے دوران بتاناپڑگیاکہ چین آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستان کوبیل آوٹ پیکیج دیے جانے کے حوالے سے سی پیک اوردیگر امور کاجائزہ لینے کاحامی ہے۔ترجمان کے مطابق پاکستان کوقرضوں کا پیکیج دینے سے قبل بہترہے کہ سی پیک اورپاکستانی قرضوں کابھرپورجائزہ لیا جائے،تاہم یہ سب کچھ حقیقت پسندی کے ساتھ ہوناچاہیے تاکہ پاک چین تعلقات کونقصان نہ پہنچے ۔ لوکانگ نے کہاکہ سی پیک دوممالک کے درمیان طویل مشاورت کے بعدطے پانے والامعاہدہ ہے،جسے آسانی سے ختم یاتبدیل نہیں کیاجاسکتا۔ اس میں کسی بھی بڑی تبدیلی کے لئے غیر معمولی دانش مندی کامظاہرہ کرناہوگا۔ چینی دفترخارجہ کی بریفنگ اس بات کا مظہر ہے کہ چین سی پیک کوغیرمعمولی اہمیت دیتاہے اوراس پرنظرثانی سے متعلق خبروں کا سنجیدگی سے نوٹس لیاگیالیکن امریکانے عالمی مالیاتی اداروں کے توسط سے سی پیک پرنظرثانی کرنے کے لئے دباجاری رکھاکہ اس سے جڑے تمام منصوبوں کوایسے مقام پرپہنچایاجائے جہاں یہ کسی کام کے نہ رہیں۔یہ پاکستان کے لئے بھی بہت مشکل مرحلہ تھا۔ایک طرف اسے آئی ایم ایف سے بیل آوٹ پیکیج بھی لیناتھااوردوسری طرف چین سے اپنے خصوصی تعلق کوبھی سنبھال رکھناتھا،گویادو دھاری تلوا ر سے بچنے کامعاملہ درپیش رہا۔اس سلسلے میں آئی ایم ایف نے پاکستان کی مشکیں کسنے کے لئے سٹیٹ بینک پاکستان پراپنا ایجنٹ بٹھانے کے لئے عمران حکومت کو قومی اسمبلی سے بل پاس کروانے پر مجبورکردیا جس کے مضمرات نے پاکستان کی معاشی حالت کومزید ابتر کر دیا ہے۔ امریکہ کی مرضی بظاہریہ ہے کہ اس مرحلے پرچین اورپاکستان کے تعلقات زیادہ بارآورثابت نہ ہوں اوردونوں ممالک مل کرروس اور ترکی کے اشتراک سے ایشیاء کوعالمی سیاست و معیشت کامرکزبنانے کے حوالے سے زیادہ کامیاب نہ ہوں۔اس مقصدکاحصول یقینی بنانے کے لئے امریکہ جوکچھ کرسکتاہے وہ کررہا ہے ۔ اب ایک واضح اعلان کاوقت آگیاہے کہ پاکستان کسی بھی ملک کے دبائوکوایک خاص حد تک ہی برداشت کرسکتاہے۔


تازہ ترین خبریں

شیخ رشیدکی درخواست ضمانت مستردکردی گئی

شیخ رشیدکی درخواست ضمانت مستردکردی گئی

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہیں،بار بار انتخابات سے ملک انتشار کا شکار ہوگا،خواجہ سعد رفیق

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ترکی ،شام تباہ کن زلزلے سے ہونے والی ہلاکتیں اور مناظر دماغ کو سن کر رہے ہیں، شہباز شریف

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

ملک کے بالائی علاقوں میں مزید برفباری کا امکان

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے انتخابات، اہم فیصلہ آج ہو گا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان   حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا

توشہ خانہ کیس ، عدالت نے عمران خان حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا   اجلاس آج  ہوگا

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس آج ہوگا

ترکیہ   میں زلزے  نے تباہی مچا دی ،  سات روزہ سوگ کا اعلان

ترکیہ میں زلزے نے تباہی مچا دی ، سات روزہ سوگ کا اعلان

ترکیہ اور شام میں زلزلے سے تباہی، ہلاکتیں 1300 سے زائد، ترکیہ میں ایمرجنسی نافذ

ترکیہ اور شام میں زلزلے سے تباہی، ہلاکتیں 1300 سے زائد، ترکیہ میں ایمرجنسی نافذ

اے پی سی کیلئے پی ٹی آئی کو دعوت نامہ نہیں ملا، فواد چوہدری

اے پی سی کیلئے پی ٹی آئی کو دعوت نامہ نہیں ملا، فواد چوہدری

مشکل وقت میں  درکار  انسانی امداد پیش کرنے کیلئے تیار ہیں، عمران خان  کا  ترکیہ ،شام زلزلے پر افسوس کا اظہار

مشکل وقت میں  درکار  انسانی امداد پیش کرنے کیلئے تیار ہیں، عمران خان  کا  ترکیہ ،شام زلزلے پر افسوس کا اظہار

کل جماعتی کانفرنس کی تاریخ تبدیل کردی گئی ،7 کی بجائے 9فروری کو ہوگئی

کل جماعتی کانفرنس کی تاریخ تبدیل کردی گئی ،7 کی بجائے 9فروری کو ہوگئی

عمران خان پہلےخود جیل جائیں پھرتحریک شروع کریں، مریم نواز کا مشورہ

عمران خان پہلےخود جیل جائیں پھرتحریک شروع کریں، مریم نواز کا مشورہ

شیخ رشید راہداری ریمانڈ کی استدعا ایک بار پھرمسترد ،کراچی پولیس  اڈیالہ جیل میں ہی تفتیش کرے،عدالت

شیخ رشید راہداری ریمانڈ کی استدعا ایک بار پھرمسترد ،کراچی پولیس اڈیالہ جیل میں ہی تفتیش کرے،عدالت