12:52 pm
آئی ایم ایف، نیا مطالبہ بجلی25 روپے یونٹ، پٹرول 292 روپے لٹر!

آئی ایم ایف، نیا مطالبہ بجلی25 روپے یونٹ، پٹرول 292 روپے لٹر!

12:52 pm

٭قدموں پر گر گئے، ساری شرائط منظور کرنے کا اعلان، آئی ایم ایف کا سفاک ادارہ پھر بھی مطمئن نہ ہوا، پٹرول کی قیمت 283 روپے کرنے کا مطالبہ پورا کرنے کا اعلان کیا گیا ہے مگر آئی ایم ایف مزید9 روپے لٹر مطالبہ کر رہا ہے۔ بجلی کو گیارہ روپے یونٹ سے 25 روپے یونٹ کرنے کا مطالبہ بھی تسلیم کرلیا ہے مگرآئی ایم ایف کو یہ بھی منظور نہیں۔ قومی اسمبلی کی اکائونٹس کمیٹی میں بتایا گیا کہ 80 لاکھ صارفین کو سستی بجلی دی جا رہی ہے جب کہ واپڈا کے ہزاروں ملازمین کو کروڑوں کی بجلی مفت ملتی ہے۔ دوسری طرف پٹرول کی قیمت 283 روپے لٹر تک بڑھانے کا مطالبہ منظور کر لیا گیا ہے مگر مزید 9 روپے لِٹر کا مطالبہ آ گیا ہے۔ وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل (اربوں کی کمپنی کے مالک) نے افسوس کا اظہار کیا ہے کہ آئی ایم ایف کی ساری شرائط پوری کر دی ہیں مگر انہیں پھر بھی اطمینان نہیں ہو رہا ہے۔ اس کا کہنا یہ ہے کہ پاکستان کی حکومتیں قابل اعتبار نہیں ہیں، عمران خان کی حکومت نے آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ پر عمل کرنے کی بجائے کھلی خلاف ورزی کی۔ دریں اثنا سابق وزیرخزانہ شوکت ترین نے انکشاف کیا ہے کہ آئی ایم ایف نے مزید چار ارب 90 کروڑ کے نئے ٹیکسوں کا مطالبہ کیا ہے اس پر حکومت نیا بجٹ لا رہی ہے۔
٭یہ انتہائی وحشت ناک خبریں ہیں۔ پڑھنے سے دِل گھبراتا ہے، تجزیہ کرتے اور لکھتے وقت سر پر وحشت سوار ہو جاتی ہے۔ اب بھی سردرد شروع ہوا تو دوا کھانی پڑی مگر کوئی ایک خبر ہو تو نام بھی لیا جائے۔ نیب کو ایک قانون کے ذریعے جس طرح بے اختیار اور مفلوج کر دیا گیا ہے، اس پر حیرت اور دکھ کا اظہار درست۔ اس ترمیمی قانون کی بعض باتوں پر سخت اعتراض کیا جا سکتا ہے مگر بعض باتوں کی حمائت بھی کر رہا ہوں مثلاً یہ کہ محض شُبہ کی بنیاد پر کسی بھی شخص کو گرفتار کرنے، گھر پر چھاپہ مارنے کی ممانعت کر دی گئی ہے۔ بالکل درست فیصلہ ہے۔ آئین اور قانون کے مطابق کسی بھی شخص کو عدالتی فیصلہ کے بغیرمجرم قرار نہیں دیا جا سکتا نہ سزا دی جا سکتی ہے مگر نیب والے محض شبہ پراہم لوگوں کو جیل میں بند کر کے اس سے ’’ڈِیل‘‘ کرتے تھے، یہ انتہائی غیر قانونی حرکت تھی! اعتراض یہ ہے کہ نیب کو بالکل معذور اور بے بس کر کے شریف، زرداری اوردوسرے بڑے خاندانوں کے خلاف اربوں کھربوں کی لوٹ مار اور منی لانڈرنگ وغیرہ کے مقدمے ختم کرنے کی راہ ہموار ہو رہی ہے۔ ریمنڈ ڈیوس قاتل تھا۔ مقدمہ عدالت میں تھا، پھر وہ کیسے رہا ہو کر چلا گیا، عدالت دیکھتی رہ گئی۔ سادہ سی بات ہے کہ شریف خاندان کی 29 فیکٹریاں اور زرداری خاندان کے اندرون بیرون ملک 87 اثاثے، ان لوگوں کے اقتدارکے زمانے میں پیدا ہوئے۔ حکومت اوراقتدار کے بغیر دولت اور اثاثوں کے یہ انبار کیسے لگ سکتے ہیں؟ قارئین جان چکے ہیں کہ آصف زرداری کے خلاف کرپشن کے سات سنگین مقدمات ان کے برسراقتدار آنے پرکیسے باری باری ختم ہو گئے! نگران وزیراعظم مصطفی جتوئی نے سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو کے خلاف سنگین بدعنوانیوں کے ساتھ سنگین ریفرنس ہائی کورٹ میں داخل کئے (سپیشل ریفرنس جج) بے نظیر کے وزیراعظم بنتے ہی سارے ریفرنس پراسرار طور پر ’خود بخود‘ ختم ہو گئے۔ ٭ذوالفقار علی بھٹو نے اصلاحات کے نام پر شریف خاندان کی اتفاق فونڈری سرکاری تحویل میں لے لی، جنرل ضیاء الحق نے بحال کر دی، شریف خاندان نے اس میں دوبارہ دلچسپی نہ لی، پیپلزپارٹی کے ارکان اس بڑی فیکٹری کی ساری مشینری اور پُرزے تک لے جا چکے تھے۔ اب وہاں خاک اُڑ رہی تھی۔ تاہم ضیاء الحق کے ’سنہری‘ سایہ تلے اور پھر خود اقتدار میں آ کر شریف خاندان نے 29 بڑی بڑی فیکٹریاں قائم کر دیں۔ بھاری سرمایہ سے لندن میں چار فلیٹس خرید لئے، بچوں کو عالمی سطح پر پراپرٹی ڈیلنگ پر لگا دیا، اربوں کما رہے ہیں، شریف خاندان نے عرب امارات میں بڑے پیمانے پرسٹیل ملز قائم کی۔ اسے سعودی عرب منتقل کر دیا وہاں شریف خاندان کا جدہ میں بہت بڑا گھر اب بھی موجود ہے۔ وسیع پیمانہ پر کاروبار بھی چل رہا ہے اور عمران خان!! کیسے کیسے الزامات، انکشافات! توشہ خانے سے قیمتی گاڑیاں، کروڑوں روپے قیمت کی گھڑیاں اور دوسرے بیش بہا تحائف اپنے ہی حکم پر 15 فیصد رعائت پر خرید کر 100 فیصد سے زیادہ قیمت پر عرب امارات میں فروخت کرکے اک دم کروڑوں کمانے کا الزام، کیس چل رہا ہے! اپنے خلاف بھاری غیر ملکی فنڈز کے مقدمات رکوا دیئے، آٹھ سال کے بعد اب فیصلہ کا امکان!! یہ تو ریکارڈ کی باتیں ہیں۔ ایک اور پہلو دیکھئے۔ عجیب بات ہے ہر حکمران دور میں کسی نہ کسی خاتون کا سکینڈل ابھر آتا ہے۔ بھٹو اورنواز کے دور میں بھی سامنے آئے وہ تو پرانی باتیں ہوئیں مگر عمران خان!! یہ فرح گوگی کیا چیز ہے؟ عمران خان کے دور میں اسے مہارانیوں جیسی حیثیت کب اور کیوں حاصل ہوئی؟ یہ الزام ثابت کرنے کی ذمہ داری تو بلاول زرداری اور مریم نواز اور راجہ ریاض کی ہے کہ فرح گوگی کے حکم پر بڑے افسروں کے عہدوں کے تقرر اور تبادلوں کے لئے فرح تین تین کروڑ روپے وصول کر کے ’اندر‘ پہنچاتی تھی۔ راجہ ریاض نے گزشتہ الزام لگایا کہ گوجرانوالہ، فیصل آباد وغیرہ کے اضلاع میں ڈپٹی کمشنر لگانے کے لئے تین تین کروڑ روپے رشوت وصول کی (فرح!) اب ایک اور نیاانکشاف کہ فرح نے (وزیراعظم ہائوس سے) فیصل آباد میں تقریباً 10 ایکڑ کا ایک پلاٹ حاصل کیا۔ راجہ ریاض کے مطابق اس پلاٹ پر 1000 کروڑ (10 ارب)روپے کی سرمایہ کاری ہو سکتی ہے! یہ خاتون کون ہے؟ کہاں سے آئی؟ وزیراعظم ہائوس میں کیسے اور کیوں جاتی تھی؟ معمولی انکشاف پر دبئی بھاگ گئی، اب ہولناک انکشافات شروع ہو گئے ہیں۔ مگر کوئی نوٹس،کوئی ایکشن؟ آصف زرداری کے صدارتی دور والی آیان علی کی کروڑوں کی سمگلنگ کا کیس کہاں گیا؟ ریحام خان نے وزیراعظم ہائوس کو کس طرح استعمال کیا؟ علیمہ خاتون پر کروڑوں کے ٹیکس جرمانہ عائد کیا گیا تھا، وصول ہوا؟ وصول تو پتہ نہیں ہوا یا نہیں ایف بی آر کے جرمانہ کرنے والے چیئرمین کو ہی فارغ کر دیا گیا!! کس کس بات کا ماتم؟؟ ٭پنجاب کے زیرو سطح سے ہیرو سطح پر آنے والے سابق لکھ لٹ! بلکہ اربوں لٹ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو اقتدار سے فارغ کیا گیا تو بڑی کرسی اور بڑے افسروں کے روزانہ تبادلوں کے کُشتے پُشتے لگانے کی یادیں اعصاب پر سوارہوگئیں۔ ہائی کورٹ میں سابق مراعات کی درخواست دائرکر دی مگر تقدیرمسکرا رہی تھی! درخواست تو زیر سماعت ہے، ایف آئی اے نے موصوف کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے کہ اس نے بھائیوں سے مل کر راجن پور میں 900 ایکڑ سرکاری اراضی پر قبضہ کرلیا تھا۔ بزدار اور بھائیوں کے گھر پر چھاپہ مارا، کوئی بھی ہاتھ نہ آیا!!؟ یہ قبضہ جب کیا گیا تھا، اس وقت ایف آئی اے، ضلعی انتظامیہ سوئی ہوئی تھی اب ڈپٹی کمشنر جاگ پڑاہے! ویسے بے چارے معمولی ڈپٹی کمشنروں کی کیا جرأت کہ ایسے چھاپے ماریں، ظاہر ہے رسی اوپر سے ہلی ہو گی! کل بزدار کے حکم پر مخالفین کے گھروں پر چھاپے، آج اپنے گھرپر چھاپہ! مکافات عمل!! ان باتوں پر تین حرف (د ف ع) بھیجیں: شعر سنئے: ’’اُس نے جھٹکائیں زلفیں تو اُمڈ آئے بادل دوستو! اس کو ’مکافاتِ عمل کہتے ہیں‘‘ (قتیل شفائی)


تازہ ترین خبریں

شیخ رشید گرفتاری،صرف قانون پر عمل ہوا ہے پسلیاں تونہیں تڑوائیں, وفاقی وزیر داخلہ

شیخ رشید گرفتاری،صرف قانون پر عمل ہوا ہے پسلیاں تونہیں تڑوائیں, وفاقی وزیر داخلہ

پنجاب میں آٹے کا بحران، چکی آٹے کی قیمت میں اضافے کے تمام ریکارڈ ٹوٹ گئے

پنجاب میں آٹے کا بحران، چکی آٹے کی قیمت میں اضافے کے تمام ریکارڈ ٹوٹ گئے

چین کےجنگی خطرات سے نمٹنے کیلئے ایشیائی ملک امریکہ کو اڈے دینے کیلئے تیار

چین کےجنگی خطرات سے نمٹنے کیلئے ایشیائی ملک امریکہ کو اڈے دینے کیلئے تیار

تمام سرکاری افسران کے اثاثے ، جائیدادیں ضبط، آئی ایم ایف کا بڑا مطالبہ سامنے آگیا

تمام سرکاری افسران کے اثاثے ، جائیدادیں ضبط، آئی ایم ایف کا بڑا مطالبہ سامنے آگیا

مسلم لیگ ق کے لیگل ایڈوائزر پرویز الٰہی سے ملاقات کیلئے جاتے ہوئے اغوا

مسلم لیگ ق کے لیگل ایڈوائزر پرویز الٰہی سے ملاقات کیلئے جاتے ہوئے اغوا

عظمیٰ بخاری کوبڑا جھٹکا ، عظمیٰ کاردار کو مسلم لیگ ن میں اہم ذمہ داریاں مل گئیں

عظمیٰ بخاری کوبڑا جھٹکا ، عظمیٰ کاردار کو مسلم لیگ ن میں اہم ذمہ داریاں مل گئیں

شیخ رشید کی گرفتاری پر عمران خان برہم، الیکشن کمیشن کے کردار پر سوال اٹھادیا

شیخ رشید کی گرفتاری پر عمران خان برہم، الیکشن کمیشن کے کردار پر سوال اٹھادیا

شیخ رشید تھانہ سیکرٹریٹ منتقل، گرفتاری کے بعد اہم بیان سامنےآگیا

شیخ رشید تھانہ سیکرٹریٹ منتقل، گرفتاری کے بعد اہم بیان سامنےآگیا

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کو گرفتار کر لیا گیا

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کو گرفتار کر لیا گیا

الیکشن کمیشن کو دھمکانے کا کیس، فواد چوہدری کی ضمانت منظور

الیکشن کمیشن کو دھمکانے کا کیس، فواد چوہدری کی ضمانت منظور

خود کش حملہ آور پولیس لائنز میں کیسے داخل ہوا؟حیران کن انکشافات سامنے آگئے

خود کش حملہ آور پولیس لائنز میں کیسے داخل ہوا؟حیران کن انکشافات سامنے آگئے

متحدہ عرب امارات  کو پاکستان کے 5 سرکاری اداروں کے شیئرز خریدنےکی پیشکش

متحدہ عرب امارات کو پاکستان کے 5 سرکاری اداروں کے شیئرز خریدنےکی پیشکش

سپریم کورٹ کا بڑا ایکشن، نیب ترامیم کے ذریعے ختم کئے جانیوالے کیسز کا ریکارڈ طلب

سپریم کورٹ کا بڑا ایکشن، نیب ترامیم کے ذریعے ختم کئے جانیوالے کیسز کا ریکارڈ طلب

ترجمان کی شاہدخاقان عباسی کے استعفے کی خبروں کی تردید

ترجمان کی شاہدخاقان عباسی کے استعفے کی خبروں کی تردید