01:10 pm
تحریک انصاف،غیرقانونی فنڈز ثابت، الیکشن کمیشن

تحریک انصاف،غیرقانونی فنڈز ثابت، الیکشن کمیشن

01:10 pm

٭الیکشن کمیشن کا دھماکہ، تحریک انصاف پر بھاری تعداد میں (تقریباً 55 کروڑ روپے) ممنوعہ غیر ملکی فنڈز کی وصولی ثابت! فنڈز ضبط کرنے کا اظہار وجوہ کا نوٹس، کمیشن کے پاس جھوٹا حلف نامہ جمع کرایا گیا، 13 پوشیدہ اکائونٹس بھی نکل آئے، ممنوعہ فنڈز امریکہ، آسٹریلیا، عرب امارات، برطانیہ سے آئے۔ قانون کے مطابق الیکشن کمیشن صرف فنڈز ضبط کر سکتا ہے، نااہل قرار نہیں دے سکتا! نااہلی بارے حکومت سپریم کورٹ میں جائے گیO بلوچستان میں فوجی ہیلی کاپٹر کا حادثہ، کور کمانڈر سرفراز علی، پانچ دوسرے بڑے افسر سوار تھےO بلوچستان مکمل اجڑ گیا، تباہ شدہ گھر کے لئے 20 لاکھ روپے دیئے جائیں گےO ایف آئی اے کی عدالت میں رپورٹ: شہباز شریف کے اشتہاری بیٹے سلمان شہباز کے پاس 200 کنال اراضی، 29 بنکوں میں اکائونٹس، تین کروڑ70 لاکھ روپے نقد، 13 کاروباری کمپنیوں میں 19 کروڑ کے حِصص!!O امریکی فوج نے ایمن الظواہری افغانستان میں مار دیاO آئو صلح کر لیں، پرویز الٰہی سے شجاعت کی پریس کانفرنس میں اپیل۔
٭چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا اور کمیشن کے دو ارکان پر مشتمل تین رکنی کمیٹی نے آٹھ سال بعد تحریک انصاف کے غیر ملکی فنڈز کا متفقہ فیصلہ سنا دیا۔ فیصلہ کے مطابق تحریک انصاف نے 34 غیر ملکی افراد اور 351 غیر ملکی اداروں سے تقریباً 55 کروڑ روپے کے لگ بھگ ممنوعہ فنڈز لئے۔ سٹیٹ بینک کے مطابق 21 غیر ملکی اکائونٹس سے کروڑوں ڈالر موصول ہوئے مگر عمران خان نے انتخابی گوشوارے میں صرف آٹھ اکائونٹس دکھائے، 13 اکائونٹس کا ذکر نہیں کیا۔ فیصلہ کے مطابق تحریک انصاف کو امریکہ، آسٹریلیا، عرب امارات اور برطانیہ سے متعدد پاکستانی افراد کے علاوہ 340 غیر ملکی باشندوں سے بھی فنڈز وصول کئے گئے۔ فیصلہ کی تفصیل اخبارات میں موجود ہے۔ ٭ایک اہم بات کہ الیکشن کمیشن کسی پارٹی کا غیر قانونی فنڈ ضبط کر سکتا ہے، نااہلی وغیرہ کی کوئی سزا نہیں دے سکتا۔ کمیشن متعلقہ پارٹی کو اظہار وجوہ کا نوٹس جاری کرے گا کہ کیوں نہ یہ فنڈز ضبط کر لئے جائیں۔ اس پارٹی کی سماعت کے بعد اور الزام ثابت ہونے پر الیکشن کمیشن وفاقی حکومت کو اس پارٹی کے خلاف فیصلہ بھیج دے گا۔ وفاقی حکومت 15 روز کے اندر اس پارٹی کے خلاف سپریم کورٹ میں ریفرنس دائر کرے گی۔ سپریم کورٹ ریفرنس کی سماعت میں طویل وقت لے سکتی ہے۔ ذوالفقار علی بھٹو نے ’نیپ‘ نیشنل عوامی پارٹی (اب عوامی نیشنل پارٹی، اے این پی) کے خلاف اسی طرح شواہد کے ساتھ سپریم کورٹ میں ریفرنس بھیجا تھا۔ سپریم کورٹ نے ریفرنس منظور کر لیا۔ اس کے بعد بھٹو نے نیپ کے سربراہ خان ولی خان اور دوسرے عہدیداروں (حبیب جالب کو بھی) گرفتار کرکے حیدرآباد کے قلعہ میں سازش کیس کی سماعت شروع کرا دی جو کئی ماہ جاری رہی، اس دوران جنرل ضیاء الحق نے مارشل لا لگا کر نیپ کے تمام افراد رہا کر دیئے۔ اس دوران سردار شیر بازمزاری نے نیشنل عوامی پارٹی کا نام تبدیل کر کے عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی رکھ دیا اور وہی پارٹی اسی ترتیب، منشور اور انہی عہدیداروں کے ساتھ پھر سے سرگرم ہوگئی۔ ٭چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کو 20 جنوری 2020ء کو خود عمران خان نے اپوزیشن سے اتفاق رائے کے بعد اس عہدہ پرمقرر کیا تھا۔ سکندر راجہ ریلوے، ہوا بازی، پٹرولیم اور دوسری اہم وزارتوںکے سیکرٹری، پنجاب کے ایڈیشنل چیف سیکرٹری رہ چکے ہیں۔ 22 ویں سکیل میں ریٹائر ہوئے۔ سعید مہدی ان کے سُسر ہیں۔ سکندر سلطان کی شہرت ایک قابل باصلاحیت اور صاف گو افسر کی رہی ہے دلچسپ بات یہ ہے کہ ان کے پاس اس وقت پیپلزپارٹی، ن لیگ اور جے یو آئی (ف) کے خلاف بھی غیر ملکی فنڈز وصول کرنے کی درخواستیں زیرغور ہیں۔ ٭حسب توقع وفاقی حکومت اور پی ڈی ایم کی 13 پارٹیوں نے عمران خان کے خلاف تند و تیز بیانات دیئے ہیں۔ تحریک انصاف کے ترجمان حسب معمول جھوٹ اور جارحانہ قرار دے رہے ہیں۔ اب یہ بات طے ہے کہ وفاقی حکومت اور سپریم کورٹ کے پاس اس ریفرنس کی سماعت بہت وقت لے سکتی ہے۔ تحریک انصاف نے کل بروز جمعرات اس فیصلہ کے خلاف الیکشن کمیشن کے باہر مظاہرے کا بھی اعلان کیا ہے۔ ٭پاک فوج کے ہیلی کاپٹر کا حادثہ نہائت غم ناک حادثہ کی شکل اختیار کر گیا ہے۔ ہیلی کاپٹر میں کور12 کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل سرفراز علی، کوسٹ گارڈز کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل امجد، بریگیڈیئر خالد، پائلٹ میجر سعید، کو پائلٹ میجر طلحہ اور چیف نائیک مدثر سوار تھے۔ یہ ہیلی کاپٹر رات 9 بجے سیلاب زدہ علاقوں کے معائنہ کے بعد صبح 6 بجے کراچی پہنچنا تھا مگر پرواز کے تھوڑی ہی دیر بعد کنٹرول آفس سے رابطہ ٹوٹ گیا۔ گزشتہ روز فوج، پولیس اورایف سی کے عملے کے ارکان کثیر تعداد میں تلاش کرتے رہے مگر سخت تاریکی اور دشوار گزار پہاڑی سلسلے کے باعث تادم تحریر (ایک بجے دوپہر) ہیلی کاپٹر کا سراغ نہیں مل سکا تھا۔ ویسے اتنی دیر تک کسی کا ایسے حادثہ میں بچ جانا معجزہ ہی ہو سکتا ہے۔ اس خبر سے پورے ملک پر سکتہ کا عالم ہے۔ حکومت، اپوزیشن، ہر شخص کی دعائیں! کالم چھپنے تک پوری خبر آ چکی ہوگی۔ خدا کرے اچھی خبر ہو! ملک کی تاریخ میں ضیاء الحق کے طیارہ کے حادثہ کے بعد یہ دوسرا بڑا الم ناک حادثہ ہوگا! ٭وفاقی حکومت کیا بچگانہ چالیں چل رہی ہے۔ تحریک انصاف کے قومی اسمبلی کے 133 ارکان نے استعفے دیئے جو کئی ماہ سے سپیکر کے پاس لٹکے ہوئے ہیں۔ اب اچانک سپیکر نے صرف گیارہ استعفے منظور کرکے الیکشن کمیشن کو بھجوائے ہیں۔ باقی 122 اپنے پاس رکھ لئے ہیں۔ یہ ساری کارروائی آئین کے منافی ہے۔ سپیکر کو کسی رکن کا استعفا منظور یا مسترد کرنے کا کوئی اختیار نہیں۔ اس نے صرف یہ دیکھنا ہوتا ہے کہ مستعفی ہونے والے رکن نے خود اپنے ہاتھ سے استعفا لکھا ہے اور دستخط کئے ہیں۔ یہ ثابت ہونے پر استعفا خود بخود منظور ہو جاتا ہے، سپیکر کا کام صرف ڈاکیہ کا ہوتا ہے وہ یہ استعفا الیکشن کمیشن کو بھیج دیتا ہے اور وہ یہ نشست خالی قرار دے کر ضمنی انتخاب کا اعلان کر دیتا ہے۔ آئین کی دفعہ 64 بالکل واضح ہے کہ ’’کوئی رکن سپیکر یا چیئرمین سینٹ کے نام اپنی دستخطی تحریر کے ذریعے اپنی نشست سے مستعفی ہو سکے گا اور اس کے بعد اس کی نشست خالی ہو جائے گی‘‘ اس میں سپیکر کی منظوری کا کوئی ذکر نہیں۔ ٭ق لیگ باقاعدہ دو حصوں میں بٹ گئی۔ پارٹی کے بانی اور تقریباً 35 برسوں سے مسلسل ق لیگ کے صدر چودھری شجاعت حسین نے گزشتہ روز تسلیم کرلیا کہ پارٹی میں اتحاد باقی نہیں رہا۔ اس وقت چودھری صاحب کی عمر78 برس ہے۔ فالج کے باعث زبان لڑکھڑا جاتی ہے اور باتیں سمجھ میں نہیں آتیں۔ بینائی کے علاوہ قوت سماعت بھی بہت کم ہو گئی ہے۔ دل کے دیرینہ مریض ہیں۔ کچھ عرصہ قبل انہیں نازک حالت میں لاہور کے سروسز ہسپتال میں لایا گیا۔ حالت اتنی خراب تھی کہ ایک موقع پر ان کے انتقال (خدانخواستہ) کی خبریں چل پڑیں۔ چودھری پرویز الٰہی نے تردید کی۔ اب وہ بہت کمزور ہو چکے ہیں، چل پھر نہیں سکتے۔ ضُعف کے باعث وہ گردن بھی سیدھی نہیں رکھ سکتے اور وہ دائیں طرف ڈھلکی رہتی ہے۔ ان حالات کے باوجود وہ ق لیگ کی صدارت نہیں چھوڑنا چاہتے۔ گزشتہ پریس کانفرنس میں انہوں نے زبانی بات کرنے کی بجائے بڑی مشکل سے رک رک کر ایک بیان پڑھا حاضرین کو ان کی آواز سے توکچھ سمجھ نہ آ سکا، البتہ اس بیان کی نقول سے ان کا بیان سامنے آ گیا۔ عالم یہ تھا کہ ساتھ بیٹھے ہوئے ق لیگ کے سیکرٹری جنرل طارق بشیر چیمہ بار بارمائیک اپنے ہاتھ میں لے کر چودھری صاحب کی باتوں کی تشریح کرتے رہے۔ اس بیاننن کی تفصیل اخبارات میں موجود ہے۔ خاص بات کہ ’’میرا اور پرویز الٰہی کا گھر ایک ہی ہے اور آمنے سامنے کمرے ہیں۔ وہ گھر واپس آ کر اس میں رہیںاور صلح کرلیں‘‘ صلح کے لئے کوئی شرط بیان نہیں کی گئی۔ طارق بشیر چیمہ نے ایک بات بار بار کہی کہ پارٹی کا کوئی عام عہدیدار چودھری صاحب کو صدارت سے نہیں ہٹا سکتا! جب کہ یہ بات بھی ہے کہ پارٹی کی مجلس عاملہ کے 83 ارکان نے انہیں اس عہدہ سے ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ معمولی تعداد نہیں۔ ایک مثال کہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کو ہٹانا نہائت مشکل بات ہے مگر کوئٹہ میں چند ججوں نے مل کر ایک عدالت میں چیف جسٹس سجاد علی شاہ کے خلاف فیصلہ سنا دیا اور چیف جسٹس کو سپریم کورٹ سے فارغ ہونا پڑا تھا۔

تازہ ترین خبریں

محکمہ موسمیات نے گرمی سےپریشان شہریو ں کو مزیدبارشوں کی نوید سنا دی

محکمہ موسمیات نے گرمی سےپریشان شہریو ں کو مزیدبارشوں کی نوید سنا دی

کامن ویلتھ گیمز میں گولڈ میڈل جیتنے کے بعد ارشد ندیم کیلئے 50لاکھ روپے انعام کا اعلان

کامن ویلتھ گیمز میں گولڈ میڈل جیتنے کے بعد ارشد ندیم کیلئے 50لاکھ روپے انعام کا اعلان

پرویز الٰہی تو چوہدری شجاعت کا نہ ہو سکا آپکا کیا ہو گا،کس نے عمران خان پر طنز کر دیا؟

پرویز الٰہی تو چوہدری شجاعت کا نہ ہو سکا آپکا کیا ہو گا،کس نے عمران خان پر طنز کر دیا؟

پاک فوج کیخلاف ہرزہ سرائی ، وزیر دفاع خواجہ آصف سے استعفیٰ طلب

پاک فوج کیخلاف ہرزہ سرائی ، وزیر دفاع خواجہ آصف سے استعفیٰ طلب

پنجاب میں احساس راشن پروگرام شروع کرنیکی منظوری،ماہانہ کتنے پیسے ملیں گے ،غریبوں کے لیے خوشی کی خبرآگئی

پنجاب میں احساس راشن پروگرام شروع کرنیکی منظوری،ماہانہ کتنے پیسے ملیں گے ،غریبوں کے لیے خوشی کی خبرآگئی

ارب پتی تاجرکی نئی سستی ایئر لائن نے سروس کا آغاز کر دیا

ارب پتی تاجرکی نئی سستی ایئر لائن نے سروس کا آغاز کر دیا

دلہن کے لباس میں اس پیاری بچی کو پہچان سکتے ہیں؟ 99 فیصد چاہنے والے بھی اس معصوم بچی کو پہچان نہیں سکیں گے

دلہن کے لباس میں اس پیاری بچی کو پہچان سکتے ہیں؟ 99 فیصد چاہنے والے بھی اس معصوم بچی کو پہچان نہیں سکیں گے

سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کاملکی حالات کے متعلق بڑادعویٰ

سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کاملکی حالات کے متعلق بڑادعویٰ

مہنگائی کے ستائے عوام کیلئے ایک اور بری خبر

مہنگائی کے ستائے عوام کیلئے ایک اور بری خبر

پیپلزپارٹی کا فواد چودھری کے الزامات پر ردعمل ، بڑا چیلنج دیدیا

پیپلزپارٹی کا فواد چودھری کے الزامات پر ردعمل ، بڑا چیلنج دیدیا

شہرقائد میں بادل ایک مرتبہ پھربرس پڑے ،کیامزیدبارش کاامکان ہے ،محکمہ موسمیات نے بتادیا

شہرقائد میں بادل ایک مرتبہ پھربرس پڑے ،کیامزیدبارش کاامکان ہے ،محکمہ موسمیات نے بتادیا

حکومت پی ٹی آئی کے خلاف اقدامات کیوں اٹھارہی ہے ،فواد چوہدری نے وجہ بتادی

حکومت پی ٹی آئی کے خلاف اقدامات کیوں اٹھارہی ہے ،فواد چوہدری نے وجہ بتادی

کامن ویلتھ گیمز، کس ملک کے 9 ایتھلیٹ اور منیجر روپوش ہوگئے ،کھیل کے میدان سے بڑی خبرآگئی

کامن ویلتھ گیمز، کس ملک کے 9 ایتھلیٹ اور منیجر روپوش ہوگئے ،کھیل کے میدان سے بڑی خبرآگئی

عمران خان توشہ خانہ سےکچھ تحائف مفت میں بھی لےگئے تھے، الیکشن کمیشن میں دائر ریفرنس میںبڑا دعویٰ کردیاگیا

عمران خان توشہ خانہ سےکچھ تحائف مفت میں بھی لےگئے تھے، الیکشن کمیشن میں دائر ریفرنس میںبڑا دعویٰ کردیاگیا