01:59 pm
گریز کے نوجوان انصاف کے منتظر

گریز کے نوجوان انصاف کے منتظر

01:59 pm

مقبوضہ کشمیر کی وادی گریز سے گلگت بلتستان کے علاقہ استور ہجرت کرنے والے دو کشمیری نوجوانوں فیروز احمد لون اور نور محمد وانی کو گلگت بلتستان کی عدالت کی طرف سے غیر ملکی قرار دے کر انہیں واپس مقبوضہ کشمیر بھیجنے کے فیصلے پر عوامی حلقے سخت ردعمل ظاہر کر رہے ہیں۔یہ دونوں نوجوان 2018ء میں گریز سے استور میں داخل ہوئے۔ انہیں گرفتار کیا گیا۔ پہلے دونوں کو بھارتی جاسوس قرار دیا گیا۔ پھر عدالت نے انہیں بے گناہ قرار دے کر واپس بھیجنے کا فیصلہ سنا دیا۔
گریز مقبوضہ کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ سے تقریباً85کلو میٹر کی دوری پر ہمالیہ کے عقب میں واقع ہے۔ دریائے کشن گنگا جسے آزاد کشمیر کے علاقہ تائو بٹ سے خطے میں داخل ہونے پر دریائے نیلم کا نام دیا جاتا ہے، یہاں سے ہی بہتا ہے۔ گریز اصل میں تین علاقوں میں منقسم ہے۔ تائوبٹ سے شاردا کا حصہ آزاد کشمیر میں شامل ہے۔ جو ضلع نیلم کا حصہ ہے۔ کمری سی منی مرگ تک کا علاقہ استور ضلع کا حصہ ہے جو گلگت بلتستان میں شامل ہے۔ تائو بٹ سے تلیل تک کا علاقہ تحصیل گریز ہے جو مقبوضہ کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ کا حصہ ہے۔ یو ں گریز آزاد کشمیر، مقبوضہ کشمیر اور گلگت بلتستان میں منقسم ہے۔ یہ ان تینوں خطوں کا سنگم ہے۔ گریز کے لوگ درد کہلاتے ہیں۔ ان کی زبان’’ شینا ‘‘ہے۔ ان کا تعلق گلگت وادی کے ساتھ ہے۔ یہی ان کا قدرتی مسکن ہے۔ گریز کو شاہراہ ریشم کا گیٹ وے بھی کہا جاتا ہے۔ جو پورے خطے کو وسط ایشیا سے ملاتی ہے۔ منقسم کشمیر کی وجہ سے یہ مرکزی علاقے تھے جن کی تعمیر و ترقی منجمد ہو کر رہ گئی ہے۔ یہ اب سرحدی اور دور افتادہ خطے بن چکے ہیں۔جب کہ دریائے نیلم کے آر پار کا خطہ کبھی دنیا ئے علم و ادب کا گہوارہ تھا۔ شاردی یونیورسٹی دنیا کی قدیم ترین یونیورسٹی یہاں ہی قائم تھی۔ جس کے کھنڈرات شان وعظمت رفتہ کی یاد دلاتے ہیں۔ 1947ء سے پہلے مقبوضہ کشمیر کے لوگ اسی گریز وادی کے راستے سے گلگت بلتستان ، چین اور وسط ایشیا کے ساتھ تجارت کرتے تھے۔ دنیا کے بڑے تجارتی قافلوں کی یہ وادی راہ گزر تھی۔ مقبوضہ کشمیر کے یہ دو نوجوان بھی شائد ماضی کی یاد میں انسانوں کی جانب سے قائم نفرت کی دیوار کو عبور کرنے کی جسارت کر بیٹھے۔ یہ دیوار جنگ بندی لکیر کہلاتی ہے۔ اسے پاکستان اور بھارت کے درمیان مستقل سرحد بنانے کی کوششیں ہو رہی ہیں۔ یا اس دیوار کو عارضی اورجوں کی توں رکھنے کی بھی ضد کی جا رہی ہے تا کہ پاکستان اور بھارت کی فوج آمنے سامنے کھڑی رہے۔ ان دونوں کے درمیان جنگ جاری رہے یا جنگی حالات ہوں تا کہ دنیا کے اسلحہ خانے چلتے رہیں۔ دنیا کے جنگی ہتھیاروں کو زنگ نہ لگ جائے۔ دنیا کی ترقی کے لئے کشمیر کی قربانی دی جا رہی ہے۔ دو کشمیری نوجوانوں کو گلگت کی عدالت نے بھارتی شہری قرار دے دیا۔ ایک متنازعہ خطے کے مہاجرین کو گلگت بلتستان کی عدالت کس طرح بھارتی شہری قرار دے سکتی ہے۔ یہ عدالت کس کے احکامات پر ایسے فیصلہ صادر کرنے کی جرات کر سکتی ہے۔ گلگت بلتستان ابھی تک آغا خان کی ریاست نہیں نہ ہی یہ پاکستان کا صوبہ ہے۔گلگت بلتستان ابھی بھی اقوام متحدہ کی دستاویزات میں منقسم ریاست جموں و کشمیر کا اٹوٹ انگ ہے۔ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق جموں و کشمیر و گلگت بلتستان کے مستقبل کا فیصلہ رائے شماری کے ذریعے ہونا ہے اور رائے شماری تک ان علاقوں میں بسنے والے تمام باشندے ہندوستان یا پاکستان کی بجائے متنازعہ خطے کے باشندے ہیں۔ ہندوستان اور پاکستان نے بھی یہ قراردادیں تسلیم کی ہوئی ہیں۔ قانونی طور پہ اس متنازعہ خطے کے باشندے جہاں چاہیں رہائش اختیار کر سکتے ہیں۔ 2018ء میں حدِمتارکہ عبور کر کے استور میں داخل ہونے والے مقبوضہ کشمیر کے رہائشی فیروز احمد لون اور نور محمد وانی کو گلگت بلتستان پولیس کی جانب سے بھارتی جاسوس قرار دے کر گرفتارکیا گیا۔ اٌن پہ تشدد کیا گیا ۔ جون 2020ء میں ان نوجوانوں سے تشدد کے ذریعے اقرار کروایا گیا کہ وہ بھارتی جاسوس ہیں اور اس اقرار کی ویڈیو بھی جاری کی گئی۔ بعد ازاں انہیں گلگت کی مناور جیل میں بند کیا گیا۔ ان نوجوانوں کے وکیل ظفر اقبال کہتے ہیں کہ اٌن سے 40 بھارتی روپے، ایک موبائل فون اور ہائی سکول گریز کے سٹوڈنٹ کارڈ کے علاوہ کوئی چیز برآمد نہ ہوئی۔ اپریل 2022ء کو گلگت کی عدالت نے دونوں نوجوانوں کو بے گناہ قرار دیتے ہوئے اٌنہیں رہا کر کے غیر ملکی باشندوں کی حیثیت سے واپس مقبوضہ کشمیر بھیجنے کا حکم نامہ جاری کردیا۔ فیروزاحمد لون اور نور محمد وانی نے درخواست کی کہ انہیں قابض ہندوستانی انتظامیہ کے حوالے نہ کیا جائے کیونکہ گلگت بلتستان پولیس کی جانب سے تشدد کے ذریعے بھارتی جاسوس ہونے کی اعترافی ویڈیو کی وجہ سے مقبوضہ کشمیر واپسی پر ایک بار پھر انہیں گرفتاری اور تشدد کے مراحل سے گزرنا پڑے گا۔ مقبوضہ کشمیر سے ہجرت کرکے آزاد خطے میں آنے والے جو لوگ واپس گئے اٌنہیں وہاں سختیوں کا سامنا کرنا پڑا ۔ کسی مہاجر کشمیری کو واپس بھیجنا اسے ہندوستانی مظالم میں جھونکنے کے مترادف ہو گا۔ گلگت کی عدالت سے ’’پشت بیک‘‘ فیصلے پہ نظرثانی کرنے کا صائب مشورہ دیا جا رہا ہے۔ کشمیری نوجوان جو ایک گھر سے دوسرے گھر میں آئے، انہیں غیر ملکی یا بھارتی شہری قرار نہ دیا جائے۔ویسے بھی کوئی مسلمان پناہ لینے والے کو ظالم کے حوالے کرنے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔ گلگت بلتستان کی عدالت نے پناہ گزینوں کو ظالم کفار کے حوالے کرنے کا فیصلہ کیسے کر لیا۔

تازہ ترین خبریں

جنرل باجوہ نے مجھے کہا کہ ہم چار جرنیل پی ٹی آئی پر قربان ہوگئے،عاصمہ شیرازی کے دعوے پرسوشل میڈیاصارفین نے کیاکہا؟جانیں

جنرل باجوہ نے مجھے کہا کہ ہم چار جرنیل پی ٹی آئی پر قربان ہوگئے،عاصمہ شیرازی کے دعوے پرسوشل میڈیاصارفین نے کیاکہا؟جانیں

روپےکے دن گئے، اب صرف ڈیجیٹل کرنسی چلےگی،حکومت کا بڑا اعلان،

روپےکے دن گئے، اب صرف ڈیجیٹل کرنسی چلےگی،حکومت کا بڑا اعلان،

سونے کی فی تولہ قیمت میں حیر ن کن تبدیلی،سستاہوایامہنگا۔۔تفصیلات جانیں اس خبرمیں

سونے کی فی تولہ قیمت میں حیر ن کن تبدیلی،سستاہوایامہنگا۔۔تفصیلات جانیں اس خبرمیں

میرے بیٹے پیارے ہیں کیونکہ میں اصلی گھی والی روٹی کھاتی ہوں۔۔ کرینہ کپور نے روٹی پر گھی لگا کر کھانے کے کون سے حیرت انگیز فائدے بتائے؟

میرے بیٹے پیارے ہیں کیونکہ میں اصلی گھی والی روٹی کھاتی ہوں۔۔ کرینہ کپور نے روٹی پر گھی لگا کر کھانے کے کون سے حیرت انگیز فائدے بتائے؟

ایک وقت میں 60 روٹیاں کھالیتا ہوں ۔۔ جانیں اس شخص کے زیادہ کھانا کھانے کی وجہ سے بہنیں اسے اپنے گھر نہیں بلاتیں

ایک وقت میں 60 روٹیاں کھالیتا ہوں ۔۔ جانیں اس شخص کے زیادہ کھانا کھانے کی وجہ سے بہنیں اسے اپنے گھر نہیں بلاتیں

عام انتخابات،الیکشن کمیشن کےلیے کتنے ارب روپے کی گرانٹ منظور ہوگئی ،شہراقتدار سے بڑی خبرآگئی

عام انتخابات،الیکشن کمیشن کےلیے کتنے ارب روپے کی گرانٹ منظور ہوگئی ،شہراقتدار سے بڑی خبرآگئی

علاقے میں مسجد بنوائی، ابو کے اسکول میں ہی پڑھائی کی ۔۔ آرمی چیف عاصم منیر کا چھوٹا سا گھر کیسا دکھتا ہے؟

علاقے میں مسجد بنوائی، ابو کے اسکول میں ہی پڑھائی کی ۔۔ آرمی چیف عاصم منیر کا چھوٹا سا گھر کیسا دکھتا ہے؟

معروف پاکستانی اداکارہ کے گھرخوشیاں ہی خوشیاں ،ہرطرف سے مبارکبادوں کاسلسلہ جاری

معروف پاکستانی اداکارہ کے گھرخوشیاں ہی خوشیاں ،ہرطرف سے مبارکبادوں کاسلسلہ جاری

معروف بھارتی ہدایتکار کا بالی وُڈ سے متعلق چونکا دینے والا انکشاف؛ بھارت میں نیا ہنگامہ کھڑا ہوگیا

معروف بھارتی ہدایتکار کا بالی وُڈ سے متعلق چونکا دینے والا انکشاف؛ بھارت میں نیا ہنگامہ کھڑا ہوگیا

تصویر میں سے اپنا پسندیدہ کیک منتخب کرکے اپنی شخصیت سے متعلق اہم راز جانیں

تصویر میں سے اپنا پسندیدہ کیک منتخب کرکے اپنی شخصیت سے متعلق اہم راز جانیں

گاڑی پر انجیکشن اور گولیاں سجا کر بارات لے جائیں گے۔۔ ڈاکٹر دولہا کی عجیب و غریب کار ! ویڈیو وائرل

گاڑی پر انجیکشن اور گولیاں سجا کر بارات لے جائیں گے۔۔ ڈاکٹر دولہا کی عجیب و غریب کار ! ویڈیو وائرل

کمان کی تبدیلی لیکن اس وقت سابق آرمی چیف جنرل (ر) اشفاق پرویز کیانی کہاں تھے؟

کمان کی تبدیلی لیکن اس وقت سابق آرمی چیف جنرل (ر) اشفاق پرویز کیانی کہاں تھے؟

ان کی پوری فیملی عجیب حرکتیں کرتی ہے ۔۔ جویریہ سعود کی بیٹی جنت کی بھنویں چھیدوانے کی ویڈیو پر صارفین غصہ ہوگئے

ان کی پوری فیملی عجیب حرکتیں کرتی ہے ۔۔ جویریہ سعود کی بیٹی جنت کی بھنویں چھیدوانے کی ویڈیو پر صارفین غصہ ہوگئے

’گورنرراج لگ سکتا ہے نہ ہی تحریک عدم اعتماد آسکتی ہے‘

’گورنرراج لگ سکتا ہے نہ ہی تحریک عدم اعتماد آسکتی ہے‘