12:41 pm
 حکمرانوں کے لئے قربانی دینے کا وقت آن پہنچا

 حکمرانوں کے لئے قربانی دینے کا وقت آن پہنچا

12:41 pm

غیر یقینی سیاسی و معاشی صورتحال میں سب سے زیادہ  نقصان عوام برداشت کر رہی ہے اور ویسے بھی یہ حقیقت ہے کہ قیام پاکستان سے اب تک عوام کبھی
غیر یقینی سیاسی و معاشی صورتحال میں سب سے زیادہ  نقصان عوام برداشت کر رہی ہے اور ویسے بھی یہ حقیقت ہے کہ قیام پاکستان سے اب تک عوام کبھی خوشحال نہیں ہوسکی۔ عوام سے مراد نچلا اور درمیانہ طبقہ ہے جبکہ بالائی طبقہ یعنی اشرافیہ پر کبھی مشکل وقت نہیں آیا۔ جب بھی ملک کو مشکل پیش ہوئی عوام سے قربانیاں مانگی گئیں۔ دہشت گردی میں ایک لاکھ سے زائد جانیں ضائع ہوچکی ہیں۔ چند کے سوا بنیادی قربانیاں عوام نے پیش کیں۔ لاکھوں گھرانے متاثر ہوئے۔ معاشی مشکلات بھی ہمیشہ حکمرانوں نے عوام پر مسلط کیں۔ تازہ ترین صورتحال دیکھ لیں۔ گزشتہ 9 ماہ کے دوران جب سے عمران خان کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک کامیاب ہوئی ہے اور پی ڈی ایم نے حکومت سنبھالی ہے۔ عوام کی مشکلات میں کئی گنا اضافہ ہوگیا ہے۔ مہنگائی روزانہ کے حساب سے بڑھ رہی ہے۔ حالانکہ موجودہ حکومت عوام کو عمران حکومت کے دوران ہونے والی مہنگائی سے نجات دینے کے لئے آئی تھی مگر اس دور میں انتہا ہوچکی ہے۔ لوگوں کے پاس دو وقت کی روٹی کے پیسے نہیں۔ غربت، افلاس اور بھوک کے سائے پھیل چکے ہیں۔ حد تو یہ ہوچکی ہے کہ بنیادی استعمال کی اشیاء مارکیٹ سے غائب ہیں اور اگر دستیاب ہیں تو قوت خرید نہیں ہے۔
آٹے کے بحران کو ہی دیکھ لیں۔ عیاشی قیمت پر ملنے والے آٹے کے حصول کے لئے ہر شہر اور قصبے میں بے چارے غریب لوگوں کی لمبی لمبی قطاریں دیکھنے کو ملتی ہیں۔ سستے آٹے کی خرید کے لئے کئی جانیں  ضائع ہوچکی ہیں۔ گزشتہ دور حکومت میں مہنگائی بڑھ رہی تھی اور یہی اندیشہ تھا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت اگر مہنگائی پر قابو نہ پاسکی تو آئندہ عام انتخابات میں شکست اس کا مقصد ہوگی مگر بھلا ہو پی ڈی ایم کا جس نے عمران خان کو نئی سیاسی زندگی دے دی۔ اب عوام اس دور کی مہنگائی کو بھول چکے ہیں کیونکہ شہباز حکومت نے مہنگائی کے تمام ریکارڈ توڑ ڈالے ہیں۔ میں نے اپنی چالیس سالہ ہوش و حواس کی زندگی میں مہنگائی کو اس تیز رفتاری سے بڑھتے ہوئے نہیں دیکھا۔ آپ مارکیٹ جائیں ایک  چیز کی قیمت پوچھیں  ایک روز بعد اسی چیز کی قیمت کچھ اور ہوگی۔ ہم سب اس کا عملی مشاہدہ کر چکے ہیں۔
ایک طرف عوام کی یہ حالت ہے اور دوسری طرف حکمران عیش و عشرت میں مست ہیں۔ گویا انہیں عوام کی حالت زار کی ذرہ بھر پر واہ نہیں۔ وہ اپنا اپنا کھیل کھیل رہے ہیں۔ حکمران طبقے کی ایک قیادت لندن میں موج مستی میں مصروف ہے۔ عوام کن مشکلات کا شکار ہے انہیں رتی بھر فکر نہیں۔ انہیں اگر فکر ہے تو بس یہی کہ کسی طرح ہم مدت پوری کریں یا پھر اسی اسمبلی کی مدت میں ایک سال توسیع کریں تاکہ ہماری عیاشیاں جاری رہ سکیں۔ تباہ حال معیشت اور کم ترین زرمبادلہ کی موجودگی کے باوجود وفاقی کابینہ میں مسلسل توسیع کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔ اب وفاقی کابینہ کی تعداد بڑھ کر 77ہوچکی ہے۔ ملک معاشی طور پر کنگال ہوچکا ہے۔ ہم ڈیفالٹ کی طرف جارہے ہیں۔ صنعتیں بند ہوچکی ہیں۔ لاکھوں  بے روزگار ہوچکے ہیں۔ برآمدات خطرناک حد تک گھٹ چکی ہیں۔ ہم بھیک مانگ رہے ہیں۔ مگر بھیک بغیر شرائط کے دینے کو تیار ہیں۔ ان تمام مسائل کا ادراک ہونے کے باوجود کابینہ میں تسلسل توسیع سمجھ سے بالاتر ہے۔ بلال بھٹو جب سے وزیر خارجہ بنے ہیں مسلسل غیر ملکی دوروں پر ہیں۔ غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق اب تک ان کے ان غیر ملکی دوروں پر پونے دو ارب روپے خرچ ہوچکے ہیں۔ اگرچہ پاکستان پیپلزپارٹی کا موقف ہے کہ بلاول بھٹو نے یہ اخراجات اپنی ذاتی جیب سے ادا کئے ہیں۔ لندن میں  بیٹھے ہوئے شریف خاندان کو دیکھ لیں۔ ان کی جب مرضی ہوتی ہے وزیراعظم یا کابینہ کے دیگر افراد کو لندن بلا لیتے ہیں۔ لندن آنے جانے کے اخراجات کا تخمینہ کیا ہوگا؟ کروڑوں کے یہ اخراجات کون ادا کر رہا ہے۔ عوام کے دئیے گئے ٹیکسوں سے ان حکمرانوں کے اخراجات کی ادائیگی ہو رہی ہے۔
کیا اب وقت نہیں آیا کہ حکمران طبقہ قربانی دینے کے لئے خود کو پیش کرے۔ ان لوگوں کے اربوں ڈالر کے اثاثے ہیں۔ اگر یہ حکمران ملک سے مخلص  ہوتے اور حقیقی معنوں میں عوام کے وفادار ہوتے تو کسی بھی ملک یا ادارے سے  بھیک یا قرضہ مانگنے کی ضرورت نہیں تھی۔ کیا آج تک انہوں نے اپنی جائیداد کا ایک فیصد بھی ملک کو دینے کی پیشکش کی ہے؟ کیا کبھی ان کی زبانی یہ الفاظ سننے کو ملے ہیں کہ پہلے ہم قربانی دیتے ہیں اور پھر عوام سے مانگیں گے۔ اب پھر آئی ایم ایف کی شرائط  کو من و عن تسلیم کرنے کا اشارہ دے دیا گیا  ہے اور یہ بھی وعید سنا دی گئی ہے کہ عوام مزید مشکلات برداشت کرنے کے لئے تیار رہے۔ حکمرانوں کو خدا کا خوف رکھنا چاہیے۔ اگر ان کے دل اللہ کے خوف سے خالی ہوچکے ہیں یا اللہ  تعالیٰ نے ان سے یہ توفیق سلب کرلی ہے تو اللہ سے نہیں پھر عوام سے ڈریں۔ سری لنکا کے حالات ہم سب کے سامنے ہیں۔ حکمرانوں نے بھی وہ کلپ ضرور دیکھے ہوں گے جب میں عوام طبقہ اشرافیہ کی دھنائی کر رہا ہے۔ خدانخواستہ اگر ہمارے وطن عزیز میں سری لنکا جیسی صورتحال پیدا ہوگئی تو عوام نے ان کو بیرون ملک فرار  سے قبل پکڑ لینا ہے اور پھر جو انجام ہوگا پوری دنیا دیکھے گی۔ حالات کو آہستہ آہستہ اسی طرف لے جایا جارہا ہے جوکہ انتہائی خطرناک علامت ہے اور خاص طور پر ایٹمی طاقت کے حامل ملک پاکستان کے لئے اور بھی زی


تازہ ترین خبریں

ممنوعہ فنڈنگ کیس، عمران خان نے بڑا قدم اٹھا لیا، مخالفین کی نیند یں حرام

ممنوعہ فنڈنگ کیس، عمران خان نے بڑا قدم اٹھا لیا، مخالفین کی نیند یں حرام

حکومت کے آئی ایم ایف کو راضی کرنے کیلئے ترلے، وفاقی ترقیاتی بجٹ میں بڑی کٹوتی کا امکان

حکومت کے آئی ایم ایف کو راضی کرنے کیلئے ترلے، وفاقی ترقیاتی بجٹ میں بڑی کٹوتی کا امکان

پاکستان میں 42 فیصد بچے اسٹنٹنگ کا شکار ،اقوام متحدہ نے خطرے کی گھنٹی بجادی

پاکستان میں 42 فیصد بچے اسٹنٹنگ کا شکار ،اقوام متحدہ نے خطرے کی گھنٹی بجادی

فیس بک پر گاڑی برائے فروخت کے اشتہار نے پاکستانی پولیس افسر کی زندگی چھین لی

فیس بک پر گاڑی برائے فروخت کے اشتہار نے پاکستانی پولیس افسر کی زندگی چھین لی

سپیکر میری مانیں تو اپوزیشن لیڈر بدل لیں ، فواد چوہدری کا پرویز اشرف کو مشورہ

سپیکر میری مانیں تو اپوزیشن لیڈر بدل لیں ، فواد چوہدری کا پرویز اشرف کو مشورہ

ساڑھے 5 سال بعد سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو قتل کیس کی اپیلیں سماعت کیلئے مقرر

ساڑھے 5 سال بعد سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو قتل کیس کی اپیلیں سماعت کیلئے مقرر

آل پارٹیز کانفرنس کیلئے حکومتی سنجیدگی حیران کن ، شاہ محمود قریشی

آل پارٹیز کانفرنس کیلئے حکومتی سنجیدگی حیران کن ، شاہ محمود قریشی

ضمنی الیکشن،چوہدری نثار کا اپنے بیٹےتیمور علی خان کو میدان میں اتار نے کا فیصلہ

ضمنی الیکشن،چوہدری نثار کا اپنے بیٹےتیمور علی خان کو میدان میں اتار نے کا فیصلہ

میگا ایونٹ میں شریک ٹیموں ،آفیشلز کو اسٹیٹ گیسٹ کا درجہ مل گیا،غیر ملکی کمنٹیٹرز ، مبصرین وی آئی پی قرار

میگا ایونٹ میں شریک ٹیموں ،آفیشلز کو اسٹیٹ گیسٹ کا درجہ مل گیا،غیر ملکی کمنٹیٹرز ، مبصرین وی آئی پی قرار

سابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کے گریبان پرہاتھ ڈالیں گے، شاہدخاقان عباسی کی دھمکی

سابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کے گریبان پرہاتھ ڈالیں گے، شاہدخاقان عباسی کی دھمکی

بھارتی اداکارہ راکھی ساونت کے شوہر عادل درانی گرفتار

بھارتی اداکارہ راکھی ساونت کے شوہر عادل درانی گرفتار

لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ،  43پی ٹی آئی ا یم این ایز کے استعفےمنظور کرنے کا حکم معطل

لاہور ہائیکورٹ کا بڑا فیصلہ، 43پی ٹی آئی ا یم این ایز کے استعفےمنظور کرنے کا حکم معطل

ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلہ، اموات آٹھ ہزار کے قریب ، بارش کے باعث امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا

ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلہ، اموات آٹھ ہزار کے قریب ، بارش کے باعث امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا

آئی ایم ایف اور پی ڈی ایم حکمرانوں نے پاکستانی عوام کے حقوق پامال کرنے کی تیاری کرلی، ہیومن رائٹس واچ کا انکشاف

آئی ایم ایف اور پی ڈی ایم حکمرانوں نے پاکستانی عوام کے حقوق پامال کرنے کی تیاری کرلی، ہیومن رائٹس واچ کا انکشاف