09:14 am
اگر آپ سمارٹ ہیں تو بھی روزانہ ایکسرسائز کرنا اپنا معمول بنالیں

اگر آپ سمارٹ ہیں تو بھی روزانہ ایکسرسائز کرنا اپنا معمول بنالیں

09:14 am

بچے کی پیدائش خواہ نارمل ہویا بذریعہ آپریشن، وزن کم کرنے کے لئے کبھی بھی فوری طور پر ایکسرسائز شرو ع نہیں کرنی چاہیے۔ بچے کی پیدائش نارمل طریقے سے ہوئی ہو تو بھی ایک ماہ کے بعد ایکسرسائز شرو کریں اور اگر بچہ آپریشن سے پیدا ہوا ہے تو 6 ماہ بعد ایکسرسائز شروع کریں ورنہ کئی پیچیدگیاں ہو جاتی ہیں۔ اس دوران آپ کم کیلوریز(Calories) والی خواک لیں اور کھانے کے بعد چہل قدمی ضرور کریں ۔آج کل ایکسرسائز کرنا بہت ضروری ہو گیا ہے کیونکہ نہ چاہتے ہوئے بھی خواتین برگر چپس اور کولڈ ڈرنک لے ہی لیتی ہیں۔نہ صرف موٹاپا کم کرنے کیلئے ایکسر سائز کی جائے بلکہ اگر آپ سمارٹ ہیں تو بھی روزانہ کم ازکم ایک گھنٹہ ایکسرسائز ضرور کریں تاک وزن بڑھنے نہ پائے اور آپ کی ”فٹنس“ بر قرار رہے ۔
 
ویسے بھی ایکسرسائز کرنے والے بہت سی بیماریوں سے محفوظ رہتے ہیں۔ خاص طور پر یوگا میں تو مکمل میڈیکیشن (Madication) موجود ہے۔ ایکسرسائز کرتے وقت جب آپ ناک کے ذریعے سانس باہر نکالتی ہیں یعنی (Exhale) کرتی ہیں تو یہ عمل خون کی صفائی میں مدد کرتا ہے اور گردوں کے ذریعے زہریلے مادوں کا اخراج ہوتا ہے۔ دیکھا جائے تو یوگا (Yoga) اور ایروبکس (Aerobics) وغیرہ کسی ”میڈیکل ٹریٹمنٹ“ سے کم نہیں۔وہ تمام ورزشیں جو فرش پر بیٹھ کر یا لیٹ کر کی جاتی ہیں وہ جسم کے نچلے حصے مثلاََ پیٹ ،تھائز او کولہوں وغیرہ کو سڈول بنانے اور ”کیلوریز“ کم کرنے میں معاون ہوتی ہیں اورجو ورشیں کھڑے ہو کرکی جاتی ہیں وہ کندھوں ، بازووٴں اور کمر کے لئے بہترین ہوتی ہیں۔ ”ایروبکس میں زُمباایروبکس(Zumba Aerobics) ایک نئی چیز ہے جو ڈانس کے سٹیپس (Steps) پر مبنی ہے ۔ بہت تیزی سے کی جانے والی ”زُمباایروبک“ خاص طور پر پیٹ اور تھائز کیلئے ہے۔ اس ایکسرسائز کے کرنے سے چونکہ کیلوریز فوری طور پر استعمال ہو جاتی ہیں اس لئے وزن بھی تیزی سے کم ہوتا ہے

تازہ ترین خبریں