بریکنگ نیوز بھارت ، 2100مسلمان لڑکیوں کی ہندوؤں سے شادی کروانے کا فیصلہ۔۔ عالم اسلام میں ہلچل
  5  دسمبر‬‮  2017     |     دنیا

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت میں مسلمانوں کے ساتھ ہندؤانتہا پسند جو سلوک روا رکھے ہوئے ہیں وہیں پاکستانیوں کے لئے نصیحت کے لئے کافی ہے ۔بھارتی میڈیا تفصیلات کے مطابق ہندؤانتہا پسند جماعت راشٹر سوئم سیوک سنگھ (آر ایس ایس ) کی ذیلی جماعت ہندؤ جگران منچھ کی ریاست اترپردیش یونٹ نے 2100مسلمان لڑکیوں کی ہندؤ لڑکوں کے ساتھ شادیاں کروانے کا اعلان کر دیا ہے ،ان شادیوں کا سلسلہ آئندہ ہفتے سے شروع ہو گا ۔ اس پروگرام کے تحت نو بیا ہتا جوڑوں کو مالی

و سماجی تحفظ بھی فراہم کیا جائے گا اور شادیاں ہندومذہب رسومات کے مطابق کروائی جائیں گی ۔اجو چوہان کا کہنا ہے کہ لو جہاد میں صرف ہندو لڑکیاں ہی مسلمان لڑکوں کا نشانہ بن رہی ہیں اب ہم ان کو انہی کی زبان میں سبق سکھائیں گے ۔مسلمان لڑکیوں کی شادی ہندوؤں سے کروانے کا یہ بھی فائدہ ہو گا کہ ملک میں مسلمانوں کی تعداد کم ہو گی۔اگر ہم ہندوؤں لڑکوں کی شادی مسلمان لڑکوں کے ساتھ کروائیں گے تو ان کو زیادہ بچے پیدا نہیں کرنے دیں گے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
100%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

دنیا

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved