بھارت میں بغاوت پھوٹ پڑی۔۔ سپریم کورٹ کے خلاف ملکی تاریخ کا سب سے بڑا قدم اٹھا لیا گیا
  12  جنوری‬‮  2018     |     دنیا

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں سپریم کورٹ کے ججز نے ملک کی تاریخ میں پہلی بار ملک کے چیف جسٹس کے خلاف ایک پریس کانفرنس کر ڈالی ہے۔بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سپریم کورٹ کےچار ججز نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے عدلیہ کے امور درست انداز میں نہ چلائےجانے کا الزام عائد کر دیا ہے۔ پریس کانفرنس کرنے والے چار ججز نے کہا ہے کہ اگر عدلیہ کو تحفظ نہ ملا تو بھارت میں جمہوریت کوخطرہ لاحق ہو جائے گا۔

چیف جسٹس کوشکایتی خط لکھ دیا ہے۔بھارتی ججز نے پریس کانفرنس میں کہا ہے کہ آزاد عدلیہ کے بغیر بھارت میں جموری نظام نہیں رہے گا۔چیف جسٹس مواخذہ کرنے والے ہم نہیں ہوں گے۔ انھوںنے کہا کہ پسندیدہ ججز کو مخصوص کیسز دیے جارہے ہیں۔ ہم نہیں چاہتے کہ ہم پر ضمیر بیچنے کا الزام لگایا جائے۔ نہیں چاہتے کہ الزام لگایا جائے کہ عدلیہ کےلئے آواز نہیں اٹھائی گئی۔مزید برآں مزید دو ججز ان احتجاجی ججز سے آملے۔دوسری جانب بھارتی میڈیا نے سپریم کورٹ کی ججز کی پریس کافرنس کو بغاوت قرار دے دیا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

دنیا

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved