02:35 pm
 جرمنی میں دائیں بازو کے گروہ کے ذریعے 200سیاستدانوں کے قتل کا منصوبہ فاش

جرمنی میں دائیں بازو کے گروہ کے ذریعے 200سیاستدانوں کے قتل کا منصوبہ فاش

02:35 pm

برلن(آن لائن) جرمنی کے خفیہ سکیورٹی ادارے نے انکشاف کیا ہے کہ ملک کے دائیں بازو کا ایک انتہا پسند گروہ جس کے زیادہ تر عناصر پہلے فوج یا پولیس میں رہ چکے ہیں، ملک کے دو سو سیاستدانوں کو قتل کرنے کا منصوبہ بنا رہا تھا۔ جرمنی کی داخلی سلامتی کے خفیہ ادارے نے دائیں بازو کے انتہا پسند گروہ نورڈ کرویٹس سے متعلق ثبوت و شواہد پارلیمنٹ میں پیش کر دیے ہیں
اور یہ بتا دیا ہے کہ اس گروہ کے بیشتر ارکان ماضی میں فوج اور پولیس میں خدمات انجام دے چکے ہیں۔جرمنی کی انٹیلی جینس ایجنسیوں نے اعلان کیا ہے کہ یہ افراد پولیس کے کمپیوٹر سے جرمنی کی سیاسی جماعتوں سوشل ڈیموکریٹک پارٹی، کرسچین ڈیموکریٹک الائنس، گرین پارٹی اور لیفٹسٹ پارٹی کے دو سو سیاستدانوں کے ناموں اور ان کے ایڈرس کی فہرست تیار کر لی تھی،اس گروہ نے ایسے 25 ہزار افراد کی بھی فہرست تیار کر لی تھی جو پناہ گزینوں کی مدد کرتے ہیں۔ جرمنی کے ذرائع ابلاغ نے دائیں بازو کے انتہا پسند گروہ کے اس اقدام کو این ایس یو گروہ کے انڈر گراؤنڈ نیٹ ورک جیسا ہی ایک اقدام قرار دیا ہے

تازہ ترین خبریں