03:41 pm
عرب ممالک اگلے 15 ماہ میں کیسے تباہ ہو جائیں گے

عرب ممالک اگلے 15 ماہ میں کیسے تباہ ہو جائیں گے

03:41 pm

لاہور (ویب ڈیسک ) معروف کالم نگار وسینئر تجزیہ نگار مظہر برلاس اپنے حالیہ کالم ” سوا سال ” میں اپنے ایک دوست کا ذکر کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ انہوں نے میرے سامنے آنے والے سال اور رواں سال کے باقی رہ جانے والے مہینوں میں رونما ہونے والی کئی تبدیلیوں سے متعلق انکشاف کیا ہے۔مظہر برلاس لکھتے ہیں کہ دنیا کا نقشہ تبدیل ہو رہا ہے۔آنےوالے برس اس سے بھی کئی زیادہ خطرناک ہوں گے۔حالیہ دنوں میں نریندر مودی کو جو ایوارڈ دئیے گئے وہ بھی اسرائیلوں اور امریکیوں کے کہنے پر دئیے گئے۔ تم صحافی بنے پھرتے ہو تمہیں نہیں
معلوم کہ اسرائیل بھارت میں ایک ائیر بیس قائم کر رہا ہے۔مظہر برلاس مزید لکھتے ہیں کہ بھارت بھی پانچ ملکوں میں تقسیم ہو گا۔2020ء خالصتان کے لیے بہت اہم ہے۔2020ء مشرق وسطیٰ کے لیے بھی بہت اہم ہے۔خلیج کے بادشاہوں کی حکومت بھی خطرے میں ہے۔اس سلسلے میں کام جاری ہے۔بادشاہتوں کے خلاف تیزی سے ہونے والا کام سوا سال میں بادشاہتیں کھا جائے گا مگر اسرائیل مضبوط رہے گا۔اسرائیل کی مضبوطی میں مسلمان ملکوں کے باہمی اختلافات مرکزی کردار ادا کریں گے،اگلے دو سالوں میں کسی بھی وقت ایک بڑی جنگ چھڑ سکتی ہے،یہ جنگ ساری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لی گی۔امریکا 2025ء تک کمزور ہوتا ہوا دکھائی دے رہا ہے۔اگر روس کے حصے ہو سکتے ہیں تو امریکا کے بھی ہو سکتے ہیں۔عروج و زوال کی نئی داستانیں قائم ہو سکتی ہیں۔مگر یہ سارا قصہ تھوڑے عرصے کے انتظار میں ہے۔خیال رہے کہ خلیجی ملک کی جانب سے بھارت کے وزیراعظم نریندر مودی کو اعلیٰ سول ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔مودی کو ایسے وقت میں ایوارڈ سے نوازا گیا جب بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر دی۔قابل غور بات یہ ہے کہ خلیجی ممالک نے کھل کر مسئلہ کشمیر پر پاکستان کا ساتھ بھی نہیں دیا۔پاکستان کے سینئیر صحافی اس کام کے پیچھے اسرائیل اور امریکا کا ہاتھ قرار دے رہے ہیں۔

تازہ ترین خبریں