اہم خبریں


ڈونلڈ ٹرمپ کو ایران سے جوہری معاہدہ ختم کرنا مہنگا پڑگیا،
  19 جولائی 2018
صوفیہ(ویب ڈیسک) ایران پر پابندیوں کے معاملے پر یورپی یونین نے امریکی فیصلے کی مخالفت کردی جس کے بعد روایتی حلیف آمنے سامنے آ کھڑے ہوئے ہیں۔بلغاریہ میں ہونے والے اجلاس میں یورپی یونین کے 28 رکن ممالک کے سربراہان نے ایران سے ہوئے جوہری معاہدے کو برقرار رکھنے پر مکملاتفاق رائے کیا۔ یورپی کونسل کے چیئرمین ڈونلڈٹسک کا کہنا تھا کہ ایٹمی معاہدے کے متعلق امریکہ کے فیصلے کے خلاف یورپی یونین کو ڈٹ جانے کی ضرورت ہے۔ڈونلڈ ٹسک نے یقین دہانی کرائی کہ جب تک ایران ایٹمی معاہدے کی پاسداری کرے گا، یورپی ممالک


لاہور (ویب ڈیسک) بلدیہ ٹاون کراچی اور کارساز کی نیول کالونی میں ایک کمرے کے مکان میں سادہ زندگی گزارنے والے فخر زمان کی زندگی میں اس وقت حیران کن تبدیلی آئی جب انہیں پاکستان ٹیم میں کھیلنے کا موقع ملا۔مردان سے تعلق رکھنے والا یہ اوپنر راتوں رات شہرت کی بلندیوں پر پہنچ گیا ہے اور اس کا شمار اس وقت دنیا کے بہترین اور صف اول کےاوپننگ بیٹسمینوں میں ہوتا ہے۔ایک سال پاکستان کرکٹ ٹیم کے ساتھ رہنے کی وجہ سے ان کی مالی حالت بھی کافی مستحکم ہوچکی ہے۔ قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ بڑے بیٹسمین کی نشانی ہے کہ وہ بڑے میچوں میں میچ وننگ اننگز کھیلتا ہے۔فخر زمان اب بڑی ٹیموں کو بھی خاطر میں نہیں لارہے، ان کا کہنا ہے کہ وہ پاکستان ٹیم میں آنے سے قبل بہت ساری فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل چکے ہیں اور اب ٹیسٹ کرکٹ کھیلنے کی خواہش ہے۔پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کہتے ہیں کہ پاکستان ٹیم میں فخر زمان کو پورا موقع دیا گیا اور انہوں نے موقع سے بھرپور فائدہ اٹھایا اور پھر پلٹ کر پیچھے نہیں دیکھا، فخر زمان تیزی سے ورلڈ کلاس بیٹسمینوں کی صف میں شامل ہورہے ہیں اور ہم انہیں مستقبل میں ٹیسٹ ٹیم میں شامل کرنا چاہتے ہیں، ہوسکتا ہے کہ آسٹریلیا کے خلاف وہ اپنے ٹیسٹ کیریئر کا آغاز کریں۔سرفراز احمد نے جیو کو خصوصی انٹرویو میں بتایا میں فخر زمان میں یہ کوالٹی ہے کہ وہ بڑے میچ کا کھلاڑی ہے، گزشتہ سال جون میں اوول میں بھارت کے خلاف آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کا فائنل ان کے کیریئر میں ٹرننگ پوائنٹ تھا، بھارت کے خلاف فائنل میں سنچری نے انہیں بلندیوں پر لاکھڑا کیا۔28 سالہ فخر زمان کی کہانی بہت دلچسپ ہے۔ وہ ملازمت کی تلاش میں کراچی آئے، کے سی سی اے کے زون چھ کی جانب سے انڈر 19 اور زون سات کے پاکستان کرکٹ کلب کی جانب سے قسمت آزمائی۔اسی دوران اعظم خان نے ان کی ملاقات ناظم خان سے کرائی جنہوں نے انہیں گریڈ ٹو کی ٹیم نیوی میں موقع دیا۔ فخر زمان اپنے خاندانی مسائل کی وجہ سے واپس ایبٹ آباد چلے گئے جس کے بعد انہوں نے حبیب بینک کی جانب سے فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلی۔ فخر زمان کا پہلا فرسٹ کلاس



شاندارخدمات كادورانیه مكمل،ابن عباس23جولائی كوپاكستان واپس جائینگے
لندن( ا وصا ف نیو ز )برطانیہ میں پاکستان کے ہائی کمشنر سید ابن عباس اپنی ڈیوٹی کا دورانیہ مکمل ہونے پر 23 جولائی کو پاکستان واپس جا رہے ہیں۔ اپنی تعیناتی کے دوران ہائی کمشنر نے برطانیہ کے ساتھ دوطرفہ تعلقات بہتر بنانے کے لئے متعدد کاوشوں کا آغاز کیا اور کمیونٹی کے لئے قونصلر خدمات بہتر بنانے کے لئے شاندار اصلاحات متعارف کرائیں۔ اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے ہائی کمشنر نے کہا کہ برطانیہ میں پاکستان کے ہائی کمشنر کے طور پر خدمات انجام دینا میرے لئے اعزاز و افتخار کی بات رہی۔ اس دوران پاکستان اور برطانیہ کے درمیان سیاسی تعلقات کو مستحکم بنانا، تجارتی و معاشی روابط میں اضافہ، عوامی خدمات کی عمدہ فراہمی اور کمیونٹی کے ساتھ مختلف سرگرمیاں میری ترجیحات میں شامل رہیں اور اللہ کے فضل سے میں نے ان تمام مقاصد کو عملی جامہ پہنایا۔ ہائی کمشنر کی تعیناتی کے دوران پاکستان اور برطانیہ کے درمیان تعلقات شاندار رہے۔ دونوں ملکوں نے عالمی امن کے مشترکہ مقصد کے حصول کے لئے مل کر کام کیا۔ سیاسی، پارلیمانی اور کاروباری تبادلوں اور تعاون کی سرگرمیاں باہمی سودمند رہیں۔ گزشتہ چند سال کے دوران ہونے والے اعلیٰ سطح کے دوروں سے بھی ظاہر ہوتا ہے کہ دوستانہ تعلقات میں مسلسل بہتری آ رہی ہے۔ تجارتی و معاشی روابط کے حوالے سے ہائی کمشنر کا کہنا تھا کہ دورحاضر کی سفارت کاری میں مضبوط تجارتی و معاشی روابط پر انحصار کیا جاتا ہے اور مجھے خوشی ہے کہ گزشتہ دو سال کے دوران برطانیہ کے لئے ہماری برآمدات میں 8 فیصد کی متاثرکن افزائش دیکھنے میں آئی جس کی بدولت ہماری دوطرفہ تجارت دو ارب پائونڈ سالانہ تک پہنچ گئی۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں میری ایک اہم کامیابی پاکستان کے لئے برطانوی وزیراعظم کے خصوصی تجارتی نمائندے کی تعیناتی ہے۔ چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) پر عملدرآمد میں بھی برطانیہ پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنے میں دلچسپی رکھتا ہے جبکہ بریگزٹ کے بعد پاکستان کو برطانوی کاروباری اداروں اور سرمایہ کاروں کے لئے ترجیحی ملک کی حیثیت حاصل ہو جائے گی۔ ہائی کمشنر کی حیثیت سے سید ابن عباس نے قونصلر خدمات کی عمدہ فراہمی میں درپیش متعدد مشکلات کو دور کیا۔ ان کی تعیناتی کے دوران تمام قونصلیٹس نے ’’مشین ریڈیبل پاسپورٹ‘‘ (ایم آر پی) سروس شروع کی، برمنگھم اور بریڈفورڈ کے قونصلیٹس کو پرانی عمارتوں سے جدید سہولیات سے لیس نئی عمارتوں میں منتقل کیا گیا، نادرا کی اپائنٹمنٹس کے لئے طویل انتظار کا سلسلہ ختم ہوا اور مشن کے ساتھ ساتھ چاروں قونصلیٹس میں بھی آن لائن بکنگ سسٹم متعارف کرایا گیا۔ اس کے علاوہ کام کرنے والے افراد اور طلبہ کی سہولت کے لئے مشن اور اس کے قونصلیٹس مہینے کے ہر دوسرے ہفتے کے دن قونصلر خدمات کی فراہمی کے لئے کھلے ہوتے ہیں۔ بارہ لاکھ سے زائد پاکستانی کمیونٹی سے رابطہ و رسائی کے سلسلے میں ہائی کمشنر نے ایک پروگرام کا آغاز کیا جس کے تحت طلبہ کنونشن، کونسلرز کنونشن، سماجی ثقافتی و ادبی تقریبات کا اہتمام کیا گیا جبکہ ہر سال کمیونٹی کے لئے عید اوپن ہائوس کا انعقاد اس پروگرام کی قابل ذکر بات رہی۔ عید اوپن ہائوس اب ہائی کمیشن کی ایک نمائندہ تقریب کی شکل اختیار کر چکا ہے جسے کمیونٹی کی طرف سے بھرپور انداز میں سراہا گیا ہے۔ ویلز میں اعزازی قونصل کی تقرری ویلز کی کمیونٹی کے ساتھ روابط بہتر بنانے کی ایک اور مثال ہے۔ سید ابن عباس کے دور تعیناتی میں ثقافتی سفارت کاری پر بھی بھرپور توجہ دی گئی۔ گزشتہ سال ہائی کمیشن نے ’’ایمرجنگ پاکستان‘‘ کے مرکزی عنوان کے تحت پاکستان کے 70 ویں یوم آزادی کے سلسلے میں ثقافتی رابطہ ورسائی کے پروگراموں کا بھرپور اہتمام کیا۔ پورا سال پاکستان کو ایک جدید اور اعتدال پسند ملک کے طور پر اجاگر کرنے کے لئے مختلف سرگرمیاں کی گئیں جن میں بس کیمپین، فیشن شو، سٹیج ڈرامے، لنکنز ان میں قائداعظم کے مجسمے کی تنصیب قابل ذکر رہیں اور ان تمام سرگرمیوں میں کمیونٹی نے بھرپور طریقے سے حصہ لیا۔ملکی حالات کا ایک جائزہ پیش کرتے ہوئے ہائی کمشنر نے کہا کہ سکیورٹی کی بہتر صورتحال، سی پیک پر تیزرفتار عملدرآمد اور اس کی بدولت سرمایہ کاری کے بہائو اور جمہوری حکومتوں کی منتقلی کے عمل سے پاکستان میں غیرملکی سرمایہ کاروں کے لئے شاندار مواقع پیدا ہو چکے ہیں۔ دونوں ملکوں کے مستقبل کے تعلقات پر اظہار خیال کرتے ہوئے ہائی کمشنر نے کہا کہ جلد ہی میں اس ملک سے رخصت ہو جائوں گا لیکن پاکستان برطانیہ تعلقات کے فروغ کے ساتھ میری پختہ وابستگی میں کوئی تبدیلی نہیں آئے گی اور مجھے پورا یقین ہے کہ آنے والا کل انشاء اللہ اس سے بہتر ہو گا۔


گوگل کو چھ کھرب روپے جرمانہ کردیا گیا
واشنگٹنبرسلز(مانیٹرنگ ڈیسک )امریکی انٹرنیٹ کمپنی گوگل کو یورپی یونین کی جانب سے 4.3ارب یورو کا جرمانہ عائد کر دیا گیا ہے،گوگل کو کیے جانے والے اس جرمانے کیوجہ سے امریکا اور یورپی یونین کے مابین پہلے سے کشیدہ تعلقات مزید کشیدہ ہو سکتے ہیں۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یورپی یونین کی جانب سے گوگل کو یہ جرمانہ اس کی جانب سے اپنے کاروباری غلبے کو غلط استعمال کرنے اور اینڈروئڈ موبائل فون سسٹم کے حریف اداروں کیخلاف اقدامات کیوجہ سے کیا گیا ہے،یورپی یونین کی صحت مند کاروباری مقابلے سے متعلقہ امور کی نگران کمشنر مارگریٹے ویسٹاگر نے امریکا میں گوگل کے سربراہ سندر پچائی سے ٹیلی فون پر گفتگو بھی کی تھی،جس دوران پچائی کو یورپی یونین کے اس ممکنہ فیصلے سے تنبیہی طور پر قبل از وقت آگاہ بھی کر دیا گیا۔جمعرات کو ویسٹاگر کا برسلز میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ گوگل کو 4.3 ارب یورو جرمانہ کیا گیا ہے،اور اس جرمانے کا فیصلہ اس لیے کیا گیا کہ اس امریکی کمپنی نے عالمی مارکیٹ میں اپنی غالب پوزیشن کو غلط استعمال کرتے ہوئے ان موبائل فون کمپنیوں کیساتھ ملی بھگت کی،جو اینڈروئڈ آپریٹنگ سسٹم والے موبائل فون بناتی ہیں۔ان کمپنیوں میں سے دو اہم ترین نام جنوبی کوریا کے سام سنگ اور چین کے ہْواوے نامی اداروں کے ہیں۔یورپی یونین کے ضوابط کے مطابق گوگل کو اس کی مالک کمپنی الفابیٹ کی سالانہ آمدنی کے 10 فیصد کے برابر تک جرمانہ کیا جا سکتا تھا۔ الفابیٹ کو گزشتہ برس 111 ارب امریکی ڈالر کی آمدنی ہوئی تھی۔یورپی یونین کی جانب سے اس جرمانے کی بنیاد اس بات کو بنایا گیا کہ یونین کے اینٹی ٹرسٹ شعبے کے مطابق گوگل پر الزام تھا کہ اس نے نہ صرف باقاعدہ نیت کیساتھ اس مبینہ جرم کا ارتکاب کیا بلکہ اس کے ذریعے صحت مند کاروباری مقابلے کے تقاضوں کے برعکس حریف اداروں کو مقابلے سے باہر رکھنے کی کوشش بھی کی۔28ممالک پر مشتمل یورپی یونین کی کمشنر ویسٹاگر کا تعلق ڈنمارک سے ہے،جو یونین کی اینٹی ٹرسٹ چیف کے طور پر اپنے عہدے کی 4سالہ مدت میں اب تک امریکا میں ’سیلیکون ویلی‘ کی کئی بڑی بڑی کمپنیوں کیخلاف کئی اقدامات کر چکی ہیں۔ان کے ان فیصلوں کو یورپی یونین تو سراہتی ہے مگر واشنگٹن کی جانب سے ان پر شدید تنقید کی جاتی ہے۔گوگل کو کیا جانے والا اربوں یورو کا یہ جرمانہ اس لیے بھی ایک بہت بڑی پیش رفت ہے کہ یوں یورپ اور امریکا کے مابین پہلے ہی سے تجارتی جنگ کیوجہ سے پائی جانیوالے کشیدگی میں اب اور اضافہ ہو جائیگا۔گوگل کو اب جس الزام میں جرمانہ سنایا گیا ہے،اس میں اہم ترین شکایت یہ تھی کہ اس امریکی کمپنی نے اینڈروئڈ آپریٹنگ سسٹم والے موبائل فون بنانے والی جنوبی کوریائی کمپنی سام سنگ اور چینی کمپنی ہْواوے کیساتھ یہ طے کر لیا تھا کہ ان کمپنیوں کے موبائل فونز میں گوگل کا براؤزر کروم پہلے ہی سے انسٹال کیا گیا ہو اور ساتھ ہی سرچ انجن کے طور پر بھی گوگل ہی ایسے فونز کی کمپنی سیٹنگز کا حصہ ہو۔ اس طرح یورپ میں ان


کلونجی کا نام تو آپ نے سنا ہی ہوگا جسے مختلف کھانوں کا ذائقہ بڑھانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے جبکہ سنت نبوی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم میں بھی اس کے استعمال کے فوائد ملتے ہیں۔مگر کیا آپ واقعی اس کے فوائد سے واقف ہیں جو آپ معمولی محنت سے حاصل کرسکتے ہیں؟کھانوں کو ذائقہ اور مہک دینے سے ہٹ کر بھی یہ سیاہ بیج متعدد طبی فوائد کے حامل ثابت ہوتے ہیں جس کی وجہ ان میں موجود وٹامنز، امینیو ایسڈز، پروٹینز، فیٹی ایسڈز ، آئرن، پوٹاشیم، کیلشیئم اور متعدد دیگر اجزاء کی موجودگی ہے۔ یہاں آپ یہ جان سکتے ہیں کہ روزانہ ان سیاہ دانوں کو کھانا آپ کو کن کن امراض سے بچانے میں مدد دے سکتا ہے۔ بال گرنے سے روکے کلونجی کا تیل بالوں کے گرنے سے روکنے میں مدد دے کر گنج پن سے بچاتا ہے جبکہ بالوں کی نشوونما بھی تیز کرتا ہے۔ یہ بالوں کو وہ نمی فراہم کرتا ہے، جس کی اسے ضرورت ہوتی ہے خصوصاً بالوں کی جڑوں کو مضبوط کرتا ہے۔ کچھ مقدار میں کلونجی کے تیل کو گرم کرکے بالوں کی جڑوں میں اس کی مالش کریں اور پھر ایک گھنٹے بعد سر دھولیں۔ یہ عمل ہفتے میں 2 سے 3 بار دہرائیں۔ قبض سے نجات قبض ہاضمے کے عام ترین امراض میں سے ایک ہے اور دنیا بھر میں ہر عمر کے افراد اس کا شکار ہوتے ہیں۔ اس مقصد کے لیے کلونجی کے تیل کی کچھ مقدار کو بغیر دودھ کی چائے میں مکس کرکے پی لیں، فوری ریلیف ملے گا۔ یرقان پر قابو پانے میں مدد دے یرقان کا درست علاج نہ ہو تو یہ جان لیوا مرض ثابت ہوسکتا ہے، تاہم اس ٹوٹکے سے آپ صحت یابی کی رفتار تیز کرسکتے ہیں۔ اجوائن کی کچھ مقدار کو رات بھر پانی میں بھگو کر رکھیں، صبح اسے چھان لیں اور پھر اس میں آدھا چائے کا چمچ کلونجی کا تیل شامل کردیں۔ اس سلوشن کو دن میں ایک دفعل پینا یرقان سے صحت یابی کی رفتار بڑھانے میں مدد دیتا ہے۔ کیل مہاسوں سے نجات لیموں کے عرق اور کلونجی کے تیل کو مکس کرکے استعمال کرنے سے متعدد جلدی مسائل پر قابو پایا جاسکتا ہے، ایک کپ لیموں کے عرق میں آدھا چائے کا چمچ کلونجی کا تیل ملائیں اور اس مکسچر کو دن میں دو مرتبہ چہرے پر لگائیں اور کیل مہاسوں اور داغ وغیرہ کو جادوئی انداز سے غائب ہوتے دیکھیں۔ کلونجی کا خالص تیل ایڑیاں پھٹنے کے مسئلے سے نجات دلانے کے لیے بھی مددگار ثابت ہوتا ہے۔ ذیابیطس کو دور رکھیں اگر تو آپ ذیابیطس کے شکار ہیں تو کلونجی کے تیل کے ذریعے اسے کنٹرول میں رکھا جاسکتا ہے، ایک چائے کا چمچ تیل ایک کپ سیاہ چائے میں ملا کر صبح پی لیں اور چند ہفتوں میں آپ نمایاں فرق دیکھ سکیں گے۔ یاداشت بہتر بنائیں اور دمہ سے بچیں کلونجی کے بیج پیس کر انہیں شہد کی معمولی مقدار میں شامل کرکے استعمال کرنا یاداشت کو بہتر بناتا ہے، اگر اس مکسچر کو گرم پانی میں ملا کر پیا جائے تو اس سے سانس کے امراض جیسے دمہ وغیرہ سے نجات میں بھی مدد ملتی ہے، مگر یہ عمل کم از کم ڈیڑھ مہینہ دہرانا ہوگا اور اس کے دوران ٹھنڈے مشروبات اور ٹھنڈی تاثیر والی غذاؤں سے پرہیز کرنا ہوگا۔ سردرد سے نجات سردرد کا مسئلہ آج کل بہت زیادہ عام ہوچکا ہے تو اس سے بچنے کے لیے کوئی دوا نگلنے سے بہتر ہے کہ اپنی پیشانی پر کلونجی کے تیل سے مالش کرکے آرام کریں، سردرد جلد ہی غائب ہوجائے گا۔ جسمانی وزن میں کمی گرم پانی، شہد اور لیموں کے عرق کے امتزاج میں چٹکی بھر کلونجی کو شامل کرکے مکس کریں اور اسے کچھ عرصے تک روز پینا عادت بنالیں، یہ بہت جلد کئی کلو جسمانی وزن گھٹانے میں مددگار مشروب ثابت ہوگا۔ جوڑوں کے درد میں کمی کچھ مقدار میں کلونجی کو لیں اور اسے مسٹرڈ آئل کے ساتھ گرم کریں، جب تیل سے دھواں اٹھنے لگے تو چولہا بند کرکے اسے کچھ ٹھنڈا کرلیں، اس کے بعد انگلی کو تیل میں ڈبو کر متاثرہ حصے میں مالش کریں۔ بلڈ پریشر کنٹرول کریں اگر تو آپ ہائی بلڈ پریشر کے شکار ہیں تو آدھا چائے کا چمچ کلونجی کا تیل گرم پانی میں ملا پر پینا عادت بنالیں، اس سے بلڈ پریشر کو کنٹرول میں لانے میں مدد


ملک کو بچانے کی امید کی آخری کرن عمران ہیں،ریاض اکبر
  19 جولائی 2018
ڈونگی (نمائندہ اوصاف)تحریک انصاف حلقہ کھوئی رٹہ کے رہنما ریاض اکبر نے کہا کہ تحریک انصاف کی الیکشن کمپین زور و شور سے جاری ہے مختلف جماعتوں کے کارکنان اپنی جماعتوں کو خیر آباد کہہ کر تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں عوام اب جان چکے ہیں کہ ملک کو بچانے کی امید کی آخری کرن عمران خان ہیں


گلگت (اوصاف نیوز) چیف سیکریٹری گلگت بلتستان بابر حیات تارڑ نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ گلگت بلتستان کے عوام کی ترقی کیلئے مختص فنڈز کے غلط استعمال کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن کیا جائے گا اور عوام کا پیسہ عوام کے فلاح بہبود پہ ہی خرچ کیا جائے ۔ترقیاتی منصوبہ کوہل بالا اور زیریں میں ھونے والے بے قاعدگی، سکوپ سے ھٹ کر کام کرنے، ٹھیکداروں کو ایڈوانس ادائیگیوں کے


آج کا مکمل اخبار پڑھیں


ad

روزانہ کی 12بڑی خبریں حاصل کریں بزریعہ ای میل



تازہ ترین خبریں

کالم /بلاگ


مقبول ترین

دلچسپ و عجیب





     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved